: تازہ ترین

تازہ ترین ویڈیو

سندھ حکومت کا صوبے میں ٹڈی دل کے خاتمے کیلیے عید کے روز بھی کئی علاقوں میں اسپرے جاری


locusts May 26, 2020 | 9:40 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) سندھ حکومت کی جانب سے صوبے میں ٹڈی دل کے خاتمے کیلیے عید کے روز بھی کئی علاقوں میں اسپرے کیا گیا.وزیرزراعت سندھ محمد اسماعیل راہو نے اپنے جاری کردہ بیان میں مزید کہاہے کہ سندھ کے دو نہیں بلکہ 9 اضلاع ٹڈی دل سے متاثر ہوئے ہیں, عید کہ دوسرے دن بھی محکمہ زراعت کی ٹیموں نے مختلف اضلاع میں ٹڈی دل کے خاتمے کیلیے خیرپور, سانگھڑ, شہید بینظیر آباد, کشمور کند ھکوٹ, دادو, قمبرشھدادکوٹ, مٹیاری, جامشورو, حیدرآباد, تھرپارکر اور بدین میں 1408 ایکڑ اسپرے کیا گیا. انہوں نے کہا کہ وفاق کی طرف سے سندھ میں ابھی تک کوئی فضائی اسپرے شروع نہیں کیا گیا, موسم گرما کی فصلوں میں ٹڈی دل کے حملوں سے 451 ارب کا نقصان ہونے کا خدشہ ہے, ٹڈی دل سے انسانوں کو کوئی خطرہ نہیں فصلیں تباھ کردیتی ہے, اس وقت بڑی تعداد میں ٹڈی دل بلوچستان سے سندھ اور جنوبی پنجاب میں داخل ہورہی ہے. اسماعیل راہو نے وفاق پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ٹڈی دل اتنا بڑا قومی مسئلہ ہے ابھی تک وفاق کی عدم توجہ کا شکار ہے, کاش وزیراعظم صاحب نتھیا گلی گھومنے کے بجائ جہاز حادثہ، کورونا اور ٹڈی دل کے مسائل پر تھوڑا غور کر لیتے, موجودہ حکومت کی نااہلی کی وجہ سے ٹڈی دل سے ملک ایک نئے بحران کا شکار ہوگا.صوبائی وزیر نے کہا کہ زراعت تباہ ہوئی تو قحط اور غذائی قلت جیسے بڑے مسائل سر اٹھائینگے,عوام نے نتھیا گلی گھومنے کے بجائے، کورونااورٹڈی جیسی مصیبتوں کاسامناکیا,ٹڈی دل کوئی بیماری نہیں پھیلاتی اورنہ ہی جانوروں پرحملے کرتی ہے یہ صرف فصلوں پر حملہ کرتی ہے, ٹڈی دل سندھ میں صوبے کی سالیانی 70 فیصد بجٹ جتنا فصلوں کو نقصان پہنچا سکتی ہے. اسماعیل راہو نے کہا کہ ٹڈی دل سندھ کی ریگستا نی 7 اضلاع سمیت 10 اضلاع میں فصلیں مکمل تباہ کرسکتی ہے.

ملک بھر میں آج عید الفطر منائی جارہی ہے


eid ul azha in pakistan May 24, 2020 | 11:33 AM

کراچی:(نیوزآن لائن) ملک بھر میں عیدالفطر آج سادگی سے منائی جا رہی ہے۔ تفصیلات کے مطابق ملک کے تمام چھوٹے بڑے شہروںمیں عید الفطر کی نماز کے اجتماعات منعقد کیے گئے،جس میں ملک کی سلامتی، ترقی، خوشحالی، پی آئی اے طیارہ حادثہ اور کرونا سے جاں بحق افراد کے لیے مغفرت اور بلندی درجات کی دعائیں مانگی گئیں، اس موقع پر ملکی سلامتی اور استحکام کے لیے خصوصی دعائیں مانگی گئیں۔گورنر سندھ عمران اسماعیل نے عید الفطر کی نمازگورنر ہاس کے لان میں ادا کی۔اراکین صوبائی اسمبلی،چیف سی پی ایل سی نے بھی نماز عید ادا کی۔گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے گورنر ہائوس لاہور میں نماز عید ادا کی۔اس موقع پر چوہدری محمد سرور کا کہنا تھا کہ اللہ پاکستان سے کرونا جیسی وبا کاجلدخاتمہ کرے،کرونا سے بچا کے لیے عوام احتیاطی تدابیر پرعمل کریں۔وزیراعلی خیبرپختونخوا محمود خان،چیف سیکرٹری اور دیگر شخصیات نے گورنر ہاس پشاور میں نماز عید ادا کی۔وزیراعلی بلوچستان جام کمال خان نے عیدکی نماز وزیراعلی سیکریٹریٹ میں ادا کی۔عیدالفطر کے موقع پر خصوصی پیغام ٹوئٹ کرتے ہوئے وزیر اعظم پاکستان عمران خان کا کہنا تھا کہ میں چاہتا ہوں کہ اس مرتبہ قوم روایت سے ہٹ کر عید الفطر کی خوشیاں منائے۔

سندھ بھر میں وبائی امراض ترمیمی ایکٹ نافذ ہوگیا ہے ، بیرسٹر مرتضی وہاب


murtuza wahab May 15, 2020 | 11:14 PM

وبائی امراض ایکٹ کی خلاف ورزی پر بھاری جرمانے ہونگے،ترجمان سندھ حکومت
کر اچی(نیوزآن لائن )ترجمان سندھ حکومت بیرسٹر مرتضی وہاب نے ایک ویڈیو بیان میں کہا ہے کہ گورنر سندھ کی منظوری کے بعد سندھ بھر میں وبائی امراض ترمیمی ایکٹ نافذ ہوگیا ہے شہریوں، دکانداروں اور فیکٹری مالکان سمیت ہر فرد پر اب احتیاطی تدابیر پر عمل لازم ہے وبائی امراض ایکٹ کی خلاف ورزی پر بھاری جرمانے ہونگے۔ بیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا کہ شہریوں سمیت تمام ادارے محکمہ داخلہ کے کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے تمام ایس او پیز پر عمل کریں ایس او پی کی خلاف ورزی پر دس لاکھ روپے تک جرمانہ ہوگا انہوں نے کہا کہ اس قانون کا مقصد شہریوں میں احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد کا شعور پیدا کرنا ہے سندھ حکومت کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے سنجیدہ اقدامات لے رہی ہے۔بیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا کہ فیزیکل فاصلہ، ماسک کا استعمال، کارخانوں و مارکیٹوں کی ایس او پیز پر اس قانون کا اطلاق ہوگا اجتماعات، مذہبی و سماجی تقاریب، لاک ڈاو ن کی پابندیوں پر بھی اس قانون کا اطلاق ہوگا ہم سب نے وبائی امراض ترمیمی ایکٹ پر عمل کرنا ہے۔بیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا کہ پابندی والے کاروبار کھولنے پر بھی یہ قانون حرکت میں آئیگا انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ آئیے اس وباکے خاتمے کے لئے قانون پسند شہری ہونے کا ثبوت دیں۔

موجودہ صورتحال میں ہوٹلز/ریسٹورنٹز کھولنے کا خطرہ مول نہیں لے سکتے۔ جام اکرام اللہ دھاریجو


hotel and resturnt close in karachi May 15, 2020 | 11:07 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)صوبائی وزیر برائے صنعت وتجارت اور محکمہ امداد باہمی و انسداد بدعنوانی جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا ہے کہ یہ بات باعث تشویش ہے کہ کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی لوکل ٹرانسمیشن کی تعداد میں خطرناک حد تک اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے اور موجودہ صورتحال کے پیشِ نظر ہوٹلز/ ریسٹورنٹز کھولنے کا خطرہ مول نہیں لے سکتے۔ یہ بات آج انہوں نے کورونا وائرس کی صورتحال پر نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشنز کے تحت ہونے والے وڈیو لنک اجلاس میں حصہ لیتے ہوئے کہی۔ وفاقی وزیر برائے صنعت وتجارت حماد اظہر نے اجلاس کی صدارت کی۔سندھ کے وزیر برائے صنعت وتجارت جام اکرام اللہ دھاریجو کی صوبہ سندھ کی نمائندگی کی ۔ اجلاس میں سیکریٹری صنعت وتجارت سندھ عبدالغنی سہتو نے بھی شرکت کی۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر برائے صنعت وتجارت جام اکرام اللہ دھاریجو نے مزید کہا کہ شاپنگ مالز ایس او پیز کے مطابق کھلنے چاہیں۔ ہمیں کورونا وائرس کی وبا کو پھیلنے سے روکنے کے لئے بہت احتیاط سے کام لینا ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ صورتحال میں ہوٹلز کھولنے کا خطرہ مول نہیں لے سکتے جبکہ ایس او پیز کے تحت آٹو موبائل انڈسٹری کھولی جاسکتی ہے۔ صوبائی وزیر جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ انسانی جانوں کو اولیت دیتے ہوئے روزگار کے مواقع مہیا کئے جائیں۔ کورونا وائرس کے باعث طرز زندگی میں تبدیلی لانے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت سندھ ہر سطح پر عوام کی بہتری کے لئے وفاقی حکومت سے تعاون کررہی ہے۔ کورونا وائرس کو مل کر ہی شکست دے سکتے ہیں۔ صوبائی وزیر صنعت وتجارت نے کہا کہ حکومت سندھ نے ایس او پیز کے تحت مخصوص صنعتوں کو کھولنے اور کاروبار چلانے کی اجازت دی ہے۔ اگر
ایس او پیز پر عمل نہیں کیا جائے گا تو عمل نہ کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ کاروباری طبقے کو چاہیے کہ وہ خود بھی ایس او پیز پر عمل کریں اور اپنے عملے اور گاہکوں کو بھی ایس او پیز پر عمل کروائیں۔

حضرت علی کی زندگی ہم سب کے لیے نمونہ عمل ہے۔ نائب صدر بابر حمید


iso flag May 15, 2020 | 11:00 PM

دشمن آج بھی حضرت علی کی راہج کردہ عدالت سے خوفزدہ ہیں۔ نائب صدر بابر حمید آئی ایس او پاکستان کراچی ڈویژن نائب صدر بابر حمید
یوم القدس خالص اسلام محمدیۖ اور امریکی اسلام میں فرق کو ظاہر کرنے کا دن ہے۔ نائب صدر بابر حمید
کراچی: (نیوزآن لائن) امام علیہ السلام کی زندگی ہم سب کے لیے نمونہ عمل ہے۔ ان خیالات کا اظہار نائب صدر آئی ایس او پاکستان کراچی ڈویژن بابر حمید نیاجلاس سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔آج لشکریزیدی امریکہ کے پرچم تلے جمع ہورہاہے،امریکہ اسرائیل اور آلِ سعودکے گٹھ جوڑ سے بننے والا اتحاد دراصل اس دنیا کیسب سے بڑے دہشت گرد اسرائیل کو تحفظ دینے کے لیے بنایا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ شیعہ نوجوانوں کی غیر قانونی گرفتاریاں شرمناک فعل ہے،اب تک پورے پاکستان سیسینکڑوں کی تعداد میں نوجوان لاپتہ ہیں،یہ کیسا اندھا قانون ہے کہ ظلم بھی ہم پر ہو، ہمارے،مقدسات کو نشانہ بنایا جائے اور گرفتاریاں اور پابند سلاسل بھی ہمیں کیا جائے۔اس ملک کو تباہ کرنے والے دہشت گرد دندناتے پھر رہے ہیں اور محب وطن شیعہ نوجوانوں کو گرفتار کیا جارہا ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ فلفور بے گناہ جوانوں کی گرفتاریوں کو ظاہر کر کے انہیں عدالت میں پیش کیا جائے،وگرنہ ہم اس کے خلاف احتجاج کو سڑکوں پر لانے کا حق رکھتے ہیں. یمن،بحرین،فلسطین، کشمیر میں چلنے والی عوامی تحریکوں کی حمایت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم جمعتہ الوداع یوم القدس مظلوم عوام کی ظالم کے خلاف اور خالص اسلام محمدیۖ اور امریکی اسلام میں فرق کو ظاہر کرنے کا دن ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ملک بھر میں ایام شہادت مولا علی علیہ السلام کی مناسبت سے مجالس عزا کا سلسلہ اپنے رویتی انداز سے جاری و ساری رہے گا۔ کرونا وائرس کی وباء کی وجہ سے مکمل طور احتیاطی تدابیر کو مدنظر رکھا جا رہا ہے۔ اس سلسلے میں نمائش پر مرکزی جلوس علی علیہ السلام ایس او پیز کے مطابق مجلس منعقد ہوئی، مجلس عزا سے حجت الاسلام علامہ سید شہنشاہ نقوی نے خطاب کیا۔

سندھ میں لاک ڈان مکمل طور پر ختم کرنے کا تاثر غلط ہے، ناصر حسین شاہ


nasir hussain May 10, 2020 | 10:17 PM

سندھ حکومت کاروباری برادری کی خدمات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے سید ناصر حسین شاہ
کراچی :( نیوزآن لائن)صوبائی وزیر اطلاعات، بلدیات، جنگلات و مذہبی امور سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ سندھ حکومت کو تاجر برادری کی قربانیوں اور خدمات کا احساس ہے۔ ان کی مشکلات کو کم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ اس سلسلہ میں ان کے ساتھ مل کر ایس او پیز بنارہے ہیں اور جن کاروباری سرگرمیوں میں وفاق نے نرمی کا اعلان کیا ہے وہ مقررہ طریقہ کار کے تحت کھل جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے وفاقی حکومت کو خط لکھا ہے کہ وہ تاجروں کی فوری طور پر امداد کرے اس وقت ان کو سودی قرضوں کی بجائے امداد کی اشد ضرورت ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اس طرح تاجروں کو لاک ڈاون کے دوران ہونے والے خسارے کا مداوا ہوسکے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نیج اپنے جاری ہونے والے ایک بیان میں کیا۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ ملکی معیشت اور روزگار کی فراہمی میں تاجر برادری کا انتہائی اہم کردار ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ ہم نے لاک ڈاون خوشی سے نہیں کیا بلکہ انتہائی مجبوری میں اور عوام کی صحت کی خاطر یہ سخت فیصلے کرنے پڑے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے وژن کے تحت وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ کی جانب سے کئے جانے والے فیصلے عوام کے وسیع تر مفاد کے لئے ہیں۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ ہم وفاقی حکومت کے فیصلوں کے ساتھ ہیں اور ان کا احترام بھی کرتے ہیں۔ تاہم حکومت سندھ کورونا کے حوالے سے حالات دیکھ کر ہی لاک ڈاون میں سختی یا نرمی کا فیصلہ کرتی ہے، اور جو وہ بھی فیصلہ کرتی ہے لوگوں کی بہتری اور جانوں کی حفاظت کے لئے کرتی ہے۔وزیر اطلاعات سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ سندھ میں لاک ڈاون کے مکمل خاتمے کا تاثر غلط ہے۔ اگر صوبہ سندھ میں کورونا کے مریضوں کی تعد اد بڑھتی ہے تو ہوسکتا ہے کہ حکومت سندھ کو دوبارہ مکمل لاک ڈاون کی طرف جانا پڑے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ وزیراعظم کے ساتھ تمام وزرا اعلی اور دیگر متعلقین کے ساتھ اجلاس میں جو فیصلے کئے گئے ہیں جن میں ہفتہ اور اتوار کے روز مکمل لاک ڈاون کا فیصلہ کیا گیا ہے، سندھ حکومت اس کی مکمل پابندی کر ے گی۔ جو لسٹ اورایس او پی وفاقی حکومت کی جانب سے آئی ہیں، ان میں بہت سی وضاحت طلب ہیں، وفاقی حکومت کی جانب سے لائحہ عمل پر عمل کرتے ہوئے ہم لاک ڈاون کو مزید سخت کریں گے۔انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت کورونا وائرس کے حوالے سے ٹیسٹوں کی استعداد میں دن بدن اضافہ کررہی ہے، اور کورونا وائرس کے مریضوں کے علاج و دیکھ بھال کے حوالے سے سہولیات و معیار میں مزید اضافہ کیا جارہا ہے۔
دریں اثنا صوبائی وزیر اطلاعات نے معروف کامیڈین اطہر شاہ خان کے انتقال پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا اور انہیں خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم کے فن اور خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔

پاکستان کو لاک ڈان پر سخت عمل درآمد کی ضرورت ہے ۔ صوبائی وزیر اطلاعاتسید ناصر حسین شاہ


syed nasir hussain shah May 7, 2020 | 11:52 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) صوبائی وزیر اطلاعات ، بلدیات، ہاسنگ ٹان پلاننگ ، مذہبی امور، جنگلات و وائلڈ لائف سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ اس وقت دنیا کے حالات و واقعات اور طبی ماہرین کی رائے کے مطابق مئی کا مہینہ اس وائرس کے پیش نظر بہت زیادہ خطرناک ہے اور اس کے پیش نظر سب ماہرین کا مشورہ یہی ہے کہ مئی کے ماہ میں لاک ڈان کو جاری رہنا چاہئے انہوں نے کہا کہ عالمی ادارہ صحت کے سربراہ نے بھی لاک ڈان کرنے والے ممالک کو خبردار کیا ہے کہ وہ لاک ڈان کو مزید موثر کریں ورنہ یہ وائرس ایسے پھیلے گا کہ اس کا کنٹرول کرنا مشکل ہوجائے گا۔ انہوں نے کہا کہ حال ہی میں صوبہ بلوچستان میں بھی لاک ڈان میں 19مئی تک توسیع کردی ہے ۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اس سب کے باوجود کسی نے بھی بلوچستان حکومت پر کوئی تنقید نہیں ہوئی نہ ہی کسی وفاقی وزیر نے کوئی بیان دیا لیکن اگر صوبہ سندھ عوام کی جان بچانے کے لئے لاک ڈان کرتا ہے تو ہر طرف سے تنقید اور شورہ گا کا سلسلہ شروع ہوجاتا ہے کہ سندھ حکومت عوام دشمن ہے سندھ حکومت کاروبار کو تباہ کرنا چاہتی ہے لیکن اگر کسی دوسرے صوبہ کی طرف سے اسی طرح کا قدم اٹھایا جاتا ہے تو کوئی تنقید نہیں ہوتی اور نہ ہی کوئی نوٹس لیا جاتا ہے یہ دہرا معیار ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بڑے افسوس کی بات ہے کہ ہدف تنقید کا نشانہ سندھ حکومت ہی بنتی ہے انہوں نے کہا کہ ہم یہ کہتے ہیں کہ مئی کا پورا مہینہ موثر اور سخت لاک ڈان ہونا چاہئے اور عوام کی صحت اور زندگی کو سب سے مقدم رکھنا چاہئے ۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ اس وقت بھی جو لاک ڈان ہے وہ وفاقی حکومت کے فیصلے کے مطابق 9 مئی تک کا ہے اور اس کا فیصلہ وفاقی حکومت نے کیا اور ایک وفاقی وزیر نے اس کا اعلان کیا تھا آج وہ خود ہی کہ رہے ہیں کہ لاک ڈان غلط ہورہا ہے یہ دہرا معیار ہے اور عوام کو سمجھنا ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت کو کاروبار دشمن اور غریب لوگوں کا دشمن بنا پر پیش کیا جارہا ہے جبکہ پورے ملک میں یکساں پالیسی نافذالعمل ہے ۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ سارے فیصلے وفاقی حکومت اور صوبوں کے مابین اجلاس میں ہوتے ہیں اور ہم وہی بات نافذ کرتے ہیں جس کا فیصلہ وفاقی حکومت کے ساتھ اجلاس میں اتفاق رائے کے ساتھ ہوتا ہے اور اس کے بعد اچانک ہم پر بلا جواز تنقید شروع ہو جاتی ہے جو کہ ہماری سمجھ سے بالا تر ہے ۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ ہمیں یہ سمجھنے کی ضرورت ہے کہ ملک میں یہ وباتیزی سے پنجے گاڑ رہی ہے اور لوگ اس میں مبتلا ہو رہے ہیں اور مر رہے ہیں اور ہمیں اپنی پوائنٹ اسکورنگ کی پڑی ہے اور اس حساس معاملے میں بھی سیاست کی جارہی ہے جو کہ بڑے ہی افسوس کی بات ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم یہ چاہتے ہیں کہ جو بھی فیصلے ہیں وہ وفاقی حکومت کرے کیونکہ اگر ہم کچھ کہیں گے تو خدشہ ہے کہ ہماری تنقید برائے تنقید کی پالیسی میں اس کا مخالفانہ فیصلہ نہ کرلیا جائے اور اس کا نقصان صرف اور صرف عوام کو ہی ہوگا ۔ صوبائی وزیر اطلاعات سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ چیف جسٹس سپریم کورٹ نے بھی کہا ہے کہ اس اہم معاملے پر پورے ملک میں ایک طرح کی پالیسی بنائی جائے اس لئے ہم بھی یہی چاہتے ہیں کہ جو بھی فیصلہ ہو وہ پورے ملک میں یکساں اور عوام کے مفاد میں ہو ۔ انہوں نے کہا کہ ہم صرف یہ چاہتے ہیں کہ ماہرین کی رائے کے مطابق مئی کے مہینے میں اس لاک ڈان پر پوری طرح عمل ہونا ضروری ہے ۔

ٹنڈو محمد خان میں خصوصی افراد اور بچوں میں راشن بیگز کی تقسیم


tando muhammad khan news May 7, 2020 | 11:48 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) وزیر اعلی سندھ کے معاون خصوصی برائے محکمہ بحالی خصوصی افراد سندھ سید قاسم نوید قمر کی ہدایت پر غیر سرکاری تنظیم نا ڈی پی ڈی نے ٹنڈو محمد خان سٹی میں خصوصی افراد اور خصوصی بچوں میں راشن کے 240 بیگز تقسیم کئے۔ اس پر نا ڈی پی ڈی کے عمیر اور وزیر اعلی سندھ کے معاون خصوصی سید قاسم نوید قمر کے میڈیا کوآرڈینیٹر علی رضا گدی بھی موجود تھے۔ راشن بیگز ملنے پر خصوصی افراد اور بچوں نے وزیر اعلی سندھ کے معاون خصوصی سید قاسم نوید قمر اور نا ڈی پی ڈی کا شکریہ ادا کیا۔

تحریک انصاف کے رہنما تاجر برادری کو حکومت سندھ کے خلاف اکسانے کی ناکام کوشش کررہے ہیں۔ جام اکرام اللہ دھاریجو


jam akram shah May 7, 2020 | 11:45 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)صوبائی وزیر برائے صنعت وتجارت اور محکمہ امداد باہمی و انسداد بدعنوانی جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا ہے کہ تحریک انصاف سندھ کے رہنما عوام کے درمیان شہری و دیہی بنیادوں پر تفریق پیدا کرنے اور کراچی کے تاجروں کو حکومت سندھ کے خلاف اکسانے کی گھنانی سازش کررہے ہیں لیکن سندھ کے باشعور عوام ان کے مذموم مقاصد کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ انہوں نے جمعرات کو جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا کہ تحریک انصاف سندھ کے رہنما سوائے پریس کانفرنس اور الزام تراشیوں کے دوسرا کوئی کام نہیں کررہے ہیں اور خاص کر کراچی سے حادثاتی طور پر منتخب ہونے والے تحریک انصاف کے صوبائی و قومی اسمبلی کے اراکین صرف حکومت سندھ پر تنقیدی بیانات دینے کے لئے رہ گئے ہیں۔ صوبائی وزیر جام اکرام اللہ دھاریجو نے مزید کہا کہ کورونا وائرس ایک عالمی وبا ہے اور اس سے نمٹنے کے لئے دنیا بھر کے ممالک میں لاک ڈان ہے۔ صرف کراچی میں لاک ڈان پر ان رہنماں کو اعتراض کیوں ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت سندھ کو اندازہ ہے کہ لاک ڈان کے باعث عام آدمی، تاجر برادری اور صنعت کاروں کو مشکلات کا سامنا ہے لیکن معیشت کو تو سہارا مل جائے گا لیکن انسانی جانوں کو واپس لانا ممکن نہیں ہے۔ ہمارے نزدیک انسانی جانوں کی اہمیت زیادہ ہے۔ صوبائی وزیر برائے صنعت وتجارت اور انسداد بدعنوانی جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ تحریک انصاف کے رہنما انسانی جانوں پر سیاست نہ کریں اور کورونا وائرس کے خلاف جنگ میں حکومت سندھ کا ساتھ دیں۔ انہوں نے کہا کہ ایس او پیز کے تحت متعدد صنعتوں کو کام کرنے کی اجازت دی گء ہے ۔ اس کے علاوہ بتدریج مختلف تجارتی سرگرمیوں کو بھی بحال کیا جارہا ہے تاہم ہمیں ہر صورت کورونا وائرس کے پھیلا کو روکنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت سندھ کے کورونا وائرس کے خلاف اٹھائے گئے اقدامات کی عالمی سطح پر پذیرائی ہوئی ہے لیکن تحریک انصاف سندھ کے رہنما پاکستان پیپلز پارٹی کی دشمنی میں اندھے ہوکر بلاوجہ تنقید میں مصروف ہیں اور اپنے مذموم مقاصد لئے عوام کے درمیان نفرتوں کو اجاگر کررہے ہیں۔ صوبائی وزیر جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ رمضان المبارک کے مقدس مہینے میں محبتوں اور ایثار کے جذبے کو فروغ دینے کی ضرورت ہے نہ کہ عوام کے درمیان تفریق پیدا کی جائے۔

پیر 9مئی سے مارکیٹیں اور کاروبار کھلے گا سندھ حکومت روکاوٹ نہ ڈالے آل کراچی تاجر کنونشن کا اعلان


Convantion pic (1) May 7, 2020 | 11:39 PM

دوکانیں نہ کھولنے دی گئیں تو حالات کی ذمہ دار سندھ حکومت پر ہوگی ، کنونشن سے حافظ نعیم الرحمن محمود حامدودیگر کاخطاب
جب وزیر اعظم نے اعلان کردیا ہے تو پھر اس کے مطابق9مئی سے تمام دوکانیں اور مارکیٹیں کھل جانی چاہیئے تاجر رہنماؤں کا خطاب
کنونشن سے عبد الرزاق خان ،جاوید شمس ،مدثر سعید ،محمد ایاز ،اسلم ،حنیف خان،سید فرازاحمد ،عبد الصمد،مینا بازارکی خاتون دوکاندار ثریا ودیگر کاخطاب
کراچی:(نیوزآن لائن)جماعت اسلامی کراچی کے تحت ادارہ نورحق میں ہونے والے ”آل کراچی تاجر کنونشن ”میں کراچی کے تاجروں نے متفقہ طور پر اعلان کیا ہے کہ پیر 9مئی سے کراچی کی مارکیٹیں اور کاروبار کھلے گا،سندھ حکومت نے روکاوٹ ڈالی تو حالات کی ذمہ داری وہ خود ہوگی،کنونشن کے مقررین نے کہاہے کہ جب وزیر اعظم نے اعلان کردیا ہے تو پھر اس کے مطابق9مئی سے تمام دوکانیں اور مارکیٹیں کھل جانی چاہیئے، تاجر احتیاطی تدابیر اختیار کریں ،اگر سندھ حکومت نے کاروباری سرگرمیوں میں روکاوٹ ڈالنے کی کوشش کی تو امن و امان کی ذمہ دار سندھ حکومت ہوگی ۔حکومت تاجروں کے راستے میں روکاوٹیں نہ کھڑی کرے۔کنونشن سے امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن ،سابق رکن سندھ اسمبلی و ڈپٹی سکریٹری کراچی عبد الرزاق خان ، اسمال ٹریڈرز آرگنائزیشن اینڈ کاٹیج انڈسٹریز کے صدر محمود حامد،انجمن تاجران سندھ کے رہنما جاوید شمس ،رئیل اسٹیٹ کے مدثر سعید ،لیاقت مارکیٹ کے رہنما محمد ایاز ،پینورامہ سینٹر کے رہنما اسلم ،فرنیچر ڈیلر ایسوسی ایشن کے حنیف خان،حیدری صرافہ بازار کے سید فرازاحمد ،کارشوروم ایسوسی ایشن کے عبد الصمد،مینا بازارکی خاتون دوکاندار ثریا ،حیدر ی مارکیٹ کے رہنما سید اختر شاہد ،لیاقت آباد ٹریڈرز الائنس کے صدر بابر خان بنگش ،گلبہار سینٹری مارکیٹ کے صدر مظفر الاسلام ،ایس ایم عالم ،حیدر ی مارکیٹ کے صدر سید سعید احمد ،مینا بازارکریم آباد کے جمیل اختر،پلازہ الیکٹرونک مارکیٹ کے صدر سید نوید احمد ،ایم اے جناح روڈ اسپورٹس مارکیٹ کے صدر سلیم ملک ودیگر نے بھی خطاب کیا ۔کنونشن میں مینا بازار کریم آباد کی خواتین دوکاندار وں نے بھی شرکت کی ۔حافظ نعیم الرحمن نے کہاکہ آج ایک مشترکہ مسئلے اور مؤقف پر تمام مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے کراچی کے تمام تاجر یہاں جمع ہوئے ہیں کیونکہ یہاں آنے کا ایک ہی مقصد ہے کہ کراچی کے کاروبار اور تاجر طبقے کو تباہی سے بچائے جائے ، ہم چاہتے ہیں کہ 46دن کے لاک ڈاؤن سے جو صورتحال اور مسائل پیدا ہوئے ہیں اب انہیں ہر حال میں حل کیا جائے ۔تاجر طبقہ اور چھوٹے کاروباری افراد اور خواتین سخت پریشان اور سب سے زیادہ متاثر ہیںان کے مسائل کو حل کیا جائے ۔کرونا کے حوالے سے سائنسی بنیادوں پر تحقیق اور اعدادوشمار سامنے آنے کے بعد دنیا بھر میں لاک ڈاؤن ختم کیا جارہا ہے تو کراچی میں کاروباراور دوکانوں کو کیوں نہیں کھولاجارہا ہے ؟۔حکومت خود لاک ڈاؤن پر عملدرآمد کرانے میں ناکام ہوچکی ہے صرف دفاتر ،اسکولز اور کاروبار بند کر کے کرونا وائرس ختم نہیں کیا جاسکتا ۔عوام میں خوف پیدا کر کے حالات بہتر نہیں کیے جاسکتے ، آج معاشرتی اور سماجی سطح پر مسائل پیدا ہورہے ہیں ،سفید پوش طبقہ کس طرح کسی سے راشن مانگے ؟اس لیے اب صرف واحد راستہ یہ ہے کہ مارکیٹیں کھولی جائیں اور اس حوالے سے تاجر ،عوام اور حکومت سب کی ذمہ داری ہے کہ وہ احتیاطی تدابیراختیار کریں ، حکومت ایس او پیز ضرور بنائے لیکن اپنی ذمہ داری بھی پوری طرح ادا کرے ۔تاجر ایس اوپیز پر عمل کر نے کے لیے تیار ہیں لیکن اس کے لیے ضروری ہے کہ قابل عمل ایس اوپیز بنائے جائیں ۔انہوں نے کہاکہ افسوس ہے کہ پیپلز پارٹی 10سال سے سندھ میں حکومت کررہی ہے لیکن اس کے پاس کوئی ڈیٹا تک نہیں ہے ،کراچی میں ایک لاکھ 80ہزار دوکاندار ہیں جو مختلف کاروبار سے وابستہ ہیں،ایک اندازے کے مطابق 70لاکھ افراد ان کاروباری اور تاجر طبقے سے وابستہ ہے ۔کاروبارکی بندش سے لاکھوں عوام شدید متاثر ہورہی ہے ۔احتیاطی تدابیراختیار کرنا ہم سب کی ذمہ د اری ہے ۔یہ وبا اللہ کی طرف سے ایک تنبیہ ہے اور اس کے موقع پر ہم سب کو اجتماعی طور پر اللہ سے رجوع کرنا چاہیئے ،اللہ کی طاقت سب سے بڑی ہے جس کے سامنے آج کی جدید دنیا اور ترقی یافتہ ممالک بے بس ہیں ۔عبد الرزاق خان نے کہاکہ اگر تاجروں میں اتحاد و اتفاق قائم رہے توکوئی طاقت انہیں مطالبات منظور کروانے سے نہیں روک سکتی ، جماعت اسلامی نے کرونا کے مسئلے پر سندھ حکومت کا ساتھ دینے کا اعلان کیا تھا مگر ڈیڑھ ماہ میں حکومت کی نا اہلی اور بے حسی کھل کرسامنے آگئی ہے ،آج ہم تاجروں کے ساتھ ہیں ، کراچی کے کاروبار کو تباہ نہیں ہونے دیں گے ۔پولیس دوکانداروں کے ساتھ تذلیل آمیز رویہ فورا ختم کرے ۔ محمود حامد نے کہاکہ ضلع وسطی کی مارکیٹوں کی تنظیموں نے تاجروں کی جانب سے مارکیٹیں کھلوانے کی جدوجہد شروع کی اور جماعت اسلامی سے رابطہ کیا ، آج یہ پورے کراچی کی تحریک بن چکی ہے ، سندھ حکومت بوکھلاہٹ کا شکار ہے ، وزیر اعظم نے بھی چھوٹے دوکانداروں کو کاروبار کرنے کی اجازت دے دی ہے ، اگر اب صوبائی حکومت نے وفاقی حکومت کے اعلان کے بعد روکاوٹ کھڑی کی تو ہم بھرپور احتجاج کریں گے اور ہر حال میں مارکیٹیں کھولیں گے ۔جاوید شمس نے کہاکہ لاک ڈاؤن اور کاروبار کی بندش نے تاجروں کو حکمرانوں کے سامنے بھیگ مانگنے پر مجبور کردیا ہے ،وزیر اعلیٰ سندھ ہم پر رحم کریں۔مدثر سعید نے کہاکہ وزیر اعلیٰ سندھ سے اپیل کرتے ہیں کہ آپ اپنی شرائط کے مطابق ہی صحیح لیکن خدارا ہمیں چند گھنٹوں کے لیے کاروبار کھولنے کی اجاز ت دی جائے ۔محمد ایاز نے کہاکہ ایسا لگتا ہے کہ ہم منشیات فروش ہیں اور پولیس ہمارے پیچھے لگی ہوئی ہے ،خدارا تاجروں کے اہلخانہ اور ان کے ورکروں کے گھرانوں پر رحم کریں ،اگر ہمارے مطالبات نہ تسلیم کیے گئے تو ہم ہر طرح کا احتجاج کریں گے ۔محمد اسلم نے کہاکہ سندھ حکومت کو یہ بات سمجھنی چاہیئے کہ اگر ہمارے کاروبار نہ کھلے تو ہمارے اور ہمارے ورکرز کے گھروں کے چولہے کس طرح جلیں گے۔حنیف خان نے کہاکہ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ حکومت چاہتی ہے کہ کرونا کے کیسز بڑھتے جائیں تاکہ کاروبار بند رہے اگر حکومت شروع کے 15دنوں میں ہی سخت لاک ڈاؤن کا نفاذ کرتی تو آج یہ صورتحال نہ ہوتی۔سید فرازاحمد نے کہاکہ خدارا سوچیے کہ آج سونے کاروبا ر کرنے والے سخت پریشان ہیں تو دیگر کاروبار ی طبقہ کتنا پریشان ہوگا، کرونا کے نام پر آج صرف کاروباری طبقے کو نشانہ بنایا جارہا ہے ۔عبد الصمد نے کہاکہ جماعت اسلامی نے شہر کے مسائل کے حل کے لیے ہمیشہ قدم آگے بڑھا یا ہے اور آج بھی تاجروں کے مسائل کے حل کے لیے صرف جماعت اسلامی ہی میدان عمل میں موجود ہے۔ مینا بارزارکی خاتون دوکاندارثریا نے کہاکہ ہمارے لیے ایک دن کے کھانے کا انتظام کرنا مشکل ہورہا ہے ،ہم 50دنوں سے بے روزگار ہیں ،وزیر اعلیٰ سندھ خدارا خواتین دوکانداروں پر تو رحم کریں اور ہمیں دوکانیں کھولنے دیں ۔سید اختر شاہد نے کہاکہ ہم نے کاروباری بندش کے حوالے سے حافظ نعیم الرحمن سے رابطہ کیا ،ہمیں خوشی ہے کہ جماعت اسلامی نے اقتدار میں نہ ہونے کے باوجود تاجروں کی نمائندگی کی جب کہ جنہوں نے عوام سے ووٹ لیے اور اقتدار میں موجود ہیں انہوں نے کراچی کے تاجروں کو مشکل حالات میں تنہا چھوڑیا۔بابر خان بنگش نے کہا کہ وفاقی حکومت ہو صوبائی حکومت دونوں ایک دوسرے پر الزامات لگارہے ہیں ،حقیقت میں تاجروں کے مسائل کے حوالے سے کوئی سنجیدہ نہیں ، سندھ حکومت تاجروں کو ڈرا دھمکارہی ہے ، تاجروں کے حقیقی نمائندوں کے بجائے غیر نمائندہ لوگوں کے ذریعے فیصلے کروائے جارہے ہیں ۔آ ن لائن کاروبار ایک مذاق کے سوائے کچھ نہیں شہر میں کہیں لاک ڈاؤن نظر نہیں آتا،صرف دوکانیں بند کرنے سے کرونا وائرس کا مسئلہ حل نہیں ہوگا۔مظفر الاسلام نے کہاکہ حقیقت یہ ہے کہ تاجر کاروبار کی بندش سے خود ضرورت مند بن گئے ہیں ، آج ہم اعلان کرتے ہیں کہ اپنے کاروبار ہر صورت کھولیں گے خواہ اس کے لیے کچھ بھی کرنا پڑے ۔ایس ایم عالم نے کہاکہ لاک ڈاؤن نے کاروبار کو تباہ کردیا ہے ، دینے والے ہاتھوں کو لینے والا بنادیا ہے ، آج تاجر اور دوکانداروں کے پاس اپنے ملازمین کو تنخواہیں دینے کے لیے پیسے نہیں ہے ۔شہر میں مختلف مارکیٹیں کھولی گئیں ہیں کیا وہاں کورونا وائرس نہیں پھیلتا ۔سید سعید احمد نے کہاکہ جماعت اسلامی نے تاجروں کے ہمراہ سڑکوں پر احتجاج کیا اور تاجروں کے ترجمان بنی ، امید ہے کہ ان کی قیادت میں تاجروں کا مسئلہ حل ہوجائے گا۔جمیل اختر نے کہا کہ مینا بازار میں پانچ ہزار خواتین دوکاندار رزق حلال کماتی ہیں ، جو ڈیڑھ ماہ سے مکمل بے روزگارہوگئی ہیں اور فاقوں پر مجبور ہیں ،حکمران ہمارے گھروں کے چولہے چلنے دیں ۔سید نوید احمد نے کہاکہ حکمرانوں نے تاجروں کے احتجاج کے باوجود ہوش کے ناخن نہیں لیے ہمارا روزگار تباہ ہورہا ہے ۔صدر سلیم ملک نے کہاکہ اگر سندھ حکومت نے مارکیٹیں کھولنے کی اجاز ت نہ دی تو ہم بھی اپنی دوکانوں کے آگے گروسری کا سامان رکھ کر کاروبار شروع کردیں گے ،خدارا رمضان المبارک میں ہمیں بے روزگاری اور فاقوں سے بچایا جائے ۔

کرونا وائرس کے باعث آئی ایس او پاکستان کراچی ڈویژن رمضان المبارک میں سوشل میڈیا پر درسی نشست کا انعقاد کررہی ہے۔ نائب صدر بابرحمید


iso May 7, 2020 | 10:57 PM

کراچی:  (نیوزآن لائن) امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کراچی ڈویژن رمضان المبارک کے پہلے میں جوانوں کی تربیت کے حوالے سے آن لا?ن دوری قرآن فہمی کا انعقاد کررہی ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے رمضان المبارک کے حوالے سے منعقدہ خصوصی اجلاس سے  گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ آئی ایس او پاکستان کراچی ڈویژن ماہ رمضان المبارک میں سوشل میڈیا کے ذریعے مختلف اسلامی موضوعات پر درسی نشست منعقد کرے گی۔ اسلامی مہینوں میں ماہ مبارک رمضان کو بڑی منزلت حاصل ہے۔ یہ خدا کے ایک بابرکت مہینوں میں سے ایک ہے, جس میں اللہ تعالی کی رحمت عروج پر ہوتی ہے، روزہ صرف بھوکا رہنے کا نہیں بلکہ صبر، ہمدردی اورانسانیت کا نام ہے۔ ڈویژن نائب صدر بابر حمید کا مزید کہنا تھا کہ پوری دنیا کو کرونا وائرس جیسی وباء کے باعث آزمائش کا سامنا ہے۔ ہمیں بحیثیت مسلمان اور پاکستانی اس ماہ رمضان اْن لوگوں کا بھی احساس کرنا چاہیے جو ان حالت میں کسی قسم کی مشکلات کا شکار ہیں اور اْن کی جس حد تک ہو مدد کرنی چاہیے۔فرصت کے ان لمحات کو پروردگار سے منسوب کرکے دعا و مناجات کے سلسلہ کو جاری رکھنا چاہیے۔

سندھ حکومت نے تاجروں کے الزامات پر مبنی سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی مبینہ آڈیو کی تحقیقات کے لیے ایف آئی اے کے سائبر کرائم کو خط لکھ دیا: سید ناصر حسین شاہ


nasir shah April 26, 2020 | 6:27 PM

کراچی :( نیوزآن لائن) صوبائی وزیر اطلاعات سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ آ ج کل سوشل میڈیا پر تاجر رہنماں کی جانب سے وزیر اعلی سندھ اور ان کے خلاف جو بیان چل رہا ہے اس کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں ہے اور اس طرح کی مہم سندھ حکومت کے خلاف ایک سازش کے تحت چلائی جارہی ہے جس کا مقصد صوبے میں انتشار پھیلا نا ہے۔ انہوں نے کہا اس طرح کے بیانات کی تاجر رہنماں نے بھی تردید کردی ہے اور انہوں نے بھی اس کو ایک سازش قرار دیا ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ شر پسند عناصر کو سندھ حکومت کی عوام دوست پالیسی پسند۔ نہیں آ رہی ہے اس لیے وہ اس طرح کی مذموم حرکتیں کر رہے ہیں کیونکہ ان کو عوام کی جان کی کوئی پروا نہیں ہے اور ان کا مقصد ملک میں انتشار پھیلا نا ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اس سلسلہ میں ایف آئی اے سایبر کرائم سرکل کو خط لکھ دیا گیا ہے کہ وہ اس طرح کے عناصر جو کہ جھوٹی من گھڑت اور بے بنیاد خبریں اور آ ڈیو پھیلا رہے ہیں ان کو بے نقاب کرکے قانون کے مطابق قرار واقعی سزا دلوائی جائے ۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اس بیماری سے بچا کے لیے سندھ حکومت ہر وہ قدم اٹھائے گی جو کہ عوام کی صحت کے لیے ضروری ہوگا۔ اس بیماری سے بچا کی ایک ہی صورت ہے کہ احتیاط کی جائے اور مکمل لاک ڈان کیا جائے اور غیر ضروری طور پر گھروں سے نہ نکلا جائے۔ ہم سب مل کر ایک دوسرے کے تعاون سے ہی اس وبا پر قابو پا سکتے ہیں۔

وفاقی حکومت لاک ڈان کے باعث متاثر ہونے والی صنعتوں اور تاجروں کے لئے ریلیف پیکج کا اعلان کرے۔ جام اکرام اللہ دھاریجو


jam ikramullah April 26, 2020 | 6:23 PM

کراچی۔ :( نیوزآن لائن) وبائی وزیر برائے صنعت و تجارت اور محکمہ امداد باہمی اور انسداد بدعنوانی جام اکرام اللہ دھاریجو نے وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ لاک ڈان کے باعث متاثر ہونے والی صنعتوں اور تاجروں کے لئے وہ فوری طور پر ریلیف پیکج کا اعلان کرے تاکہ یہ لوگ سکھ کا سانس لے سکیں۔ اتوار کو جاری ہونے والے ایک بیان میں صوبائی وزیر جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ پاکستان کی تاریخ کی پہلی وفاقی کابینہ ہے جس میں منتخب اراکین سے غیر منتخب لوگ زیادہ تعداد میں ہیں۔ وفاقی حکومتی کابینہ میں 25 غیرمنتخب لوگ شامل ہیں جو حیرت انگیز بات ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سلیکٹیڈ وزیراعظم کا اپنی کابینہ ممبران کو 18 سے 20 تک محدود رکھنے کی باتیں آج جھوٹ کا پلندہ ثابت ہورہی ہیں۔وفاقی کابینہ کے ممبران کی تعداد 49 تک پہنچاکر سلیکٹیڈ حکومت نے ” کفایت شعاری ” اور ” سادگی ” کی مثال قائم کردی ہے۔ اور یہ سب معیشت کے لئے سفید ہاتھی ہیں۔ صوبائی وزیر جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ تبدیلی حکومت کی سب باتیں جھوٹی نکلیں ۔ لگتا ہے کہ وزرا ، وزرا مملکت، معاونین خصوصی، اور مشیروں کی فوج کو صرف اور صرف سندھ حکومت پر تنقید کرنے پر مامور کردیا گیا ہے۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ تبدیلی کے بھیانک نتائج قوم کو مل رہے ہیں ۔ قوم سے انتخابات سے قبل جھوٹ پر جھوٹ بولا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کے اثرات کے باعث ایک طرف آمدنی میں کمی ہورہی ہے تو دوسری جانب وسیع کابینہ کا بوجھ بھی ملکی معیشت پر ڈالا گیا ہے۔ سلیکٹیڈ وزیراعظم کی کراچی کی ٹیم سندھ حکومت پر تنقید کرنے کے بجائے، اعلامیہ کراچی پیکیج و دیگر اعلانات پر عمل کروائے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت نے صنعتکاروں اور تاجروں کو آن بورڈ لیا ہے اور ہم سب ایک پیج پر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ صنعتکاروں اور تاجروں سے رقم وصولی کی جھوٹی باتوں کا پول صنعتکاروں اور تاجروں نے ہی کھولا دیا ہے اور منفی پروپئگنڈہ کرنے والوں کو ناکامی نصیب ہوئی۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ وفاقی حکومت نے صنعتکاروں کو کوئی ریلیف نہیں دیا ۔ سخت لاک ڈاون کی وجہ سے انڈسٹریز اور تاجر متاثر ہوئے ہیں ۔وفاقی حکومت ان کے لئیے پیکیج کا اعلان کرے ۔انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کے خلاف جہاد میں سندھ سب سے آگے ہے ۔ وفاقی حکومت سمیت دیگر صوبوں نے بھی کورونا وائرس جنگ میں سندھ کے اقدامات کی کاپی کی ہے کیونکہ سندھ حکومت باقاعدہ حکمت عملی کے تحت عوام کو ریلیف دے رہی ہے اور کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے موثر اقدامات بھی کررہی ہے۔

سندھ حکومت کا منافع خوروں کے خلاف سخت کریک ڈاؤن کا فیصلہ


sindh information  logo April 26, 2020 | 5:31 PM

منافع خوروں اور ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کے خلاف دفعہ 2008 سیکشن 7 اے کے تحت کارروائی ہوگی.اسماعیل راہو
صوبے کے تمام ڈپٹی کمشنرز، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرز، اسسٹنٹ کمشنرز اور مختیارکارز بطور پرائز میجسٹریٹس اپنے فرائض انجام دینگے, اسماعیل راہو
کراچی :( نیوزآن لائن) سندھ حکومت نے منافع خوروں کے خلاف سخت کریک ڈاؤن کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ منافع خوروں اور ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کے خلاف دفعہ 2008 سیکشن 7 اے کے تحت کارروائی ہوگی. وزیرزراعت محمد اسماعیل راہو نے مزید کہا ہے کہ صوبے میں تمام ذمہ دار افسران کومنافع خوروں اورذخیرہ اندوز ی کرنے والوں کے خلاف فوری کارروائی کا حکم جاری کردیا گیا ہے, صوبے کے تمام ڈپٹی کمشنرز، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرز، اسسٹنٹ کمشنرز اور مختیارکارز بطور پرائز میجسٹریٹس اپنے فرائض انجام دینگے,تمام پرائز میجسٹریٹس کو ناجائز قیمتیں وصول کرنے والوں کے خلاف چھاپے مارنے کے اختیار ہونگے, صوبے بھر میں سپلائی پرائسزکے افسران تمام پرائزمیجسٹریٹ کے ساتھ کارروائی کریں گے. صوبائی وزیر نے کہا کہ صوبے میں پرائز بیورو کے 119 انسپیکٹرز کی ڈیوٹی لگائی ہے, کراچی میں 28 سپلائی بیورو کے افسران پرائس میجسٹریٹس کے ساتھ منافع خوروں کے خلاف کارروائی کریں گے, صوبے بھر میں ضلعی سطح پر مانیٹرنگ روم قائم کردیے گئے ہیں. انہوں نے کہا کہ ماہ رمضان کے پہلے دن ہی منافع خوروں اور ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کے خلاف شکایتیں موصول ہوئی ہیں, اگر کسی دکاندار,فروٹ یا سبزی والے کے پاس پرائز لسٹ نہیں ہوگی تو اسکے خلاف کارروائی ہوگی۔

وزیراعظم کو کرونا وائرس کے پھیلائو کے حوالے سے صحیح اعداد و شمار نہیں بتائے جا رہے ہیں ۔سید ناصر حسین شاہ


syed nasir hussain shah April 19, 2020 | 8:35 PM

کراچی(نیوزآن لائن): سندھ کے وزیر اطلاعات و بلدیات، ہاسنگ و ٹان پلاننگ، مذہبی امور، جنگلات و جنگلی حیات سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ سندھ حکومت کرونا وائرس کے مسئلے کو لے کر پہلے دن سے ہی انتہائی سنجیدہ ہے اور پیپلز پارٹی کا کوئی بھی لیڈر کرونا وائرس کی وبا کے مسئلہ کو لے کر پوائنٹ سکورنگ کرنے کا سوچ بھی نہیں سکتا. صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری کی بھی سندھ کے وزیر اعلی سید مراد علی شاہ سمیت سندھ کی پوری کابینہ کے لیے یہ واضح ہدایت شروع دن سے ہی تھیں کہ کرونا وائرس کے مسئلے کو سیاسی نہ بنایا جاے۔ انہوں نے کہا کہ ہم یہ سوچ بھی نہیں سکتے کہ ایک وبا اور انسانی جانوں کے مسئلہ پر سیاست کریں. سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے وزیراعظم عمران خان کو بھی پہلے دن کہہ دیا تھا کہ ہم اس عالمی وبا کے مسئلے پر آپ کے ساتھ ہیں اور آپ کے ساتھ مل کر کام کرنا چاہتے ہیں صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ جب یہ کرونا وائرس کا مسئلہ صوبے اور ملک بھر میں اٹھا تو ہم نے اسی دن سے ہی پوائنٹ سکورنگ اور سیاست کو قر نطینہ میں ڈال دیا تھا اور آج دن تک یہ قرنطینہ میں ہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان سمیت تمام صوبائی وزرا اس بات کا خاص خیال رکھتے ہیں کہ وہ کوئی بھی ایسا بیان نہ دیں جس سے کوئی تنازعہ جنم لے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اگر وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ کے کہنے پر 26 فروری کو ہی جیسے انھوں نے کہا تھا کہ ہمیں اس مسئلے پر سنجیدگی اختیار کرنی چاہیے اگر اس وقت سب لوگ سنجیدہ ہوگئے ہوتے تو آج صورتحال مختلف ہوتی۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ ہم اپنے لوگوں کو اندھیرے میں نہیں رکھنا چاہتے. انہوں نے کہا کہ اس وقت کسی کو بھی کرونا وائرس کے پھیلا کے صحیح حجم کا اندازہ نہیں ہے لیکن سب آکر اس پر باتیں کر رہے ہیں۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اگر وزیراعظم عمران خان کی بات مان لی جائے کہ سب کچھ ٹھیک ہے تو پھر یہ لوک ڈاون کیوں کیا گیا ہے، ریلوے اور فضائی آپریشن کیوں معطل ہے۔کیا یہ سب وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ کے حکم پر بند ہوا ہے؟ سید ناصر حسین شاہ نے مزید کہا کہ کیا دیگر صوبوں میں جو لوک ڈاون کیا گیا ہے وہ بھی سندھ حکومت کے کہنے پر کیا گیا ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ ہمارے خیال میں حالات اس وقت بالکل ٹھیک نہیں ہے اور وزیراعظم عمران خان کو صحیح اعداد و شمار نہیں بتائے جا رے اسی لئے اس میں ان کا قصور نہیں ہے. انہوں نے کہا کہ جب ایک جانب سے مسلسل یہ کہا جائے گا کہ لوک ڈاون کی وجہ سے لوگ بھوک سے مر جائیں گے لوگ مختلف مسائل کا شکار ہو جائیں گے تو کس طرح پھر سندھ حکومت ایک موثر لوگ ڈون کروانے میں کامیاب ہوسکے گی۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ لاک ڈاون کو لے کے وفاقی حکومت کی جانب سے دیئے جانے والے بیانات کے بعد سندھ کے لوگ ہماری ذہنی حالت پر شک کر رہے ہیں کہ جب وفاقی حکومت کہتی ہے کہ سب کچھ ٹھیک ہے تو سندھ حکومت کو کیا پڑی ہے کہ وہ مسلسل لاک ڈاون کے لیے اصرار کر رہی ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ سندھ میں اب کاروباری حضرات کو سندھ حکومت کی جانب سے بنائے گئے ضابطہ کار پر عمل کرکے ہی کاروبار کرنے کی اجازت دی جائے گی اس کے علاوہ انہیں اجازت نہیں ہوگی کہ وہ اپنا کاروبار کریں. انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت کو صوبے کے کاروباری طبقے کا بے حد خیال ہے اور اسی سلسلے میں انہیں ایس آربی اور ایکسائز کے ٹیکس کی مد میں بھی چھوٹ دی جا رہی ہے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ ضابطہ کار طے ہونے کے بعد کاروبار کو بتدریج کھولا جائے گا. سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اگرچہ سو فیصد تو نہیں لیکن سندھ حکومت نے حکومت کی سطح پر بھی اور ہمارے لوگوں نے انفرادی سطح پر بھی اور فلاحی اداروں کی مدد سے بھی لاکھوں گھرانوں کو راشن پہنچایا ہے اور اب تک یہ عمل جاری ہے. صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ سیاسی جماعتوں کے نمائندوں نے بھی اپنے اپنے حلقوں میں راشن پہنچایا ہے. احساس پروگرام کے حوالے سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں وفاقی حکومت کو چاہیے کہ وہ زیادہ مراکز بناے تاکہ ایک جگہ لوگوں کی بھیڑ نہ جمع ہو کیونکہ جہاں زیادہ لوگ جمع ہوں گے وہاں پہ ان کا کرونا وائرس سے متاثر ہونے کا چانس بڑھ جاتا ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اللہ کا شکر ہے صوبے میں بھوک کی وجہ سے ابھی تک کسی کی وجہ سے ابھی تک کسی کی جان نہیں گئی ہاں احساس پروگرام کے حوالے سے جب لوگ کیش لینے کے لیے جمع ہوئے تو اس میں ایک خاتون کی جان چلی گئی تھی اسی لئے ہم کہتے ہیں کہ پیسے اس طرح کی تقسیم کیے جائیں کہ بھیڑ نہ لگے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ ملکی معاملات پر سب کو مل کر فیصلے کرنے چاہییں تبھی وہ زیادہ اثر انداز ہو سکتے ہیں۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ سندھ حکومت نے جو بھی اب تک صوبے میں کیا ہے وہ اپنے بل بوتے پہ کیا ہے لیکن ہم وفاقی حکومت کے ساتھ مل کر کام کرنا چاہتے ہیں۔

وفاق موت کا کھیل دیکھنے والے اقدامات سے باز رہے۔ مہاجر نیشنل موومنٹ


HYDERABAD SINDH April 19, 2020 | 8:04 PM

سندھ حکومت کے اقدامات کی تائید کرتے ہیں ۔ کچھ نرمی کے ساتھ لاک ڈائون برقرار رکھا جائے۔ مہاجر نیشنل موومنٹ
رمضان المبارک میں لاک ڈائون میں صرف نماز اور خریداری کی نرمی ہونی چاہئے۔ کرونا سے ہلاکتیں بڑھ رہی ہیں ۔ عبادات ہی اس سے نجات کا ذریعہ ہیں۔ ڈاکٹر انور و ایڈھاک کمیٹی مہاجر نیشنل موومنٹ
کراچی:(نیوزآن لائن)مہاجر نیشنل موومنٹ کے عارضی کنوینر ڈاکٹر انور اور ایڈھاک کمیٹی مہاجر نیشنل موومنٹ نے وزیر اعظم عمران خان سے کہا ہے کہ وہ لیڈر بنیں وفاقی وزراء کے کہنے میں آکر سندھ میں تعصب کی فضاء کو جنم نہ دیں۔ انکی غلط پالیسیوں کی وجہ سے انکے کراچی کے ایم این اے نجیب ہارون نے استعفی دے دیا۔ وفاق موت کا کھیل دیکھنے والے اقدامات سے باز رہے۔سندھ حکومت کے اقدامات کی تائید کرتے ہیں ۔ کچھ نرمی کے ساتھ لاک ڈائون برقرار رکھا جائے۔ مہاجر نیشنل موومنٹ وزیر اعلی سندھ کے انسانیت دوست اقدامات کی تعریف کرتی ہے۔ رمضان المبارک میں لاک ڈائون میں صرف نماز اور خریداری کی نرمی ہونی چاہئے۔ کرونا سے ہلاکتیں بڑھ رہی ہیں ۔ عبادات ہی اس سے نجات کا ذریعہ ہیں۔ ڈاکٹر انور و ایڈھاک کمیٹی مہاجر نیشنل موومنٹ نے راشن اور خدمت خلق کے حوالے سے انتظامات کو موثر بنانے کی بھی اپیل کی ہے۔

وزیر اعلی سید مراد علی شاہ نے تمام متعلقہ اداروں کو سختی سے ہدایت دی ہے کہ وہ راشن کی تقسیم کے وقت لوگوں کی عزت نفس کا خیال رکھیں: سید ناصر حسین شاہ


nasir hussain shah April 12, 2020 | 9:43 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) سندھ کے وزیر اطلاعات و بلدیات، ہاسنگ و ٹان پلاننگ، مذہبی امور، جنگلات و جنگلی حیات سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری کی ہدایت کے مطابق سندھ کے وزیر اعلی سید مراد علی شاہ نے ان تمام افسران کو جو کہ راشن کی تقسیم کے حوالے سے کام کر رہے ہیں کو یہ ہدایات جاری کردی ہیں کہ وہ راشن کی تقسیم کے کام کو کسی بھی قسم کی شہرت کے لیے استعمال نہ ہونے دیں۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ وزیر اعلی سندھ نے تمام متعلقہ ڈپٹی کمشنروں کو یہ ہدایت بھی جاری کر دی ہے کہ وہ راشن کی تقسیم کے وقت لوگوں کی عزت نفس کا مکمل خیال رکھیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر کوئی بھی افسر کسی مستحق کی عزت نفس کی پامالی میں ملوث پایا گیا تو اس کے خلاف سخت ایکشن لیاجائے گا۔ سید ناصر حسین شاہ نے مزید بتایا کہ صوبائی اسمبلی کے بہت سے ممبران بھی اپنے طور پر اپنے اپنے حلقوں میں ضرورت مند مستحقین میں راشن تقسیم کر رہے ہیں۔ صوبائی وزیر اطلاعات کے مطابق وزیراعلی سندھ کی ہدایت پر یہ راشن صبح کے وقت تقسیم کیا جاتا ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ فی الحال سندھ حکومت کی پوری توجہ اپنے لوگوں کی زندگی کو کرونا وائرس سے بچانے پر مرتکز ہے اور اسی لیے سندھ حکومت اپنی صحت کی سہولیات کو ہر طرح سے تیار کر رہی ہے تاکہ کوئی بھی کرونا وائرس سے متاثرہ شخص ان صحت کی سہولیات میں جن میں تمام ہسپتال اور دیگر سہولیات شامل ہیں آئے تو اس کو مکمل توجہ کے ساتھ تمام ضروری علاج معالجے کی سہولیات میسر ہوں۔
صوبائی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ اس کے ساتھ ساتھ مختلف طریقوں سے لوگوں میں کرونا وائرس سے خود کو بچانے کے لیے آگاہی بھی پیدا کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اپنے ماحول کو صاف ستھرا رکھ کر اور ایک دوسرے سے کچھ عرصے کے لے سماجی دوری کے اصول کو اپنا کر ہم خود کو کرونا وائرس سے محفوظ رکھ سکتے ہیں۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اگر لوگ صفائی ستھرائی کا خیال نہیں رکھیں گے اور سماجی دوری کو نہیں اپنائیں گے تو وہ اپنے ساتھ ساتھ بہت سے دوسرے لوگوں کی زندگیاں خطرے میں ڈال دیں گے۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ سندھ حکومت یہ چاہتی ہے کہ صوبے کا ہر فرد حکومت کی جاری کردہ صحت سے متعلق ہدایات پر عمل کرتے ہوئے اپنا بھرپور کردار ادا کرے اور صوبے کے تمام دوسرے لوگوں کی زندگیوں کو بچائے۔ سید ناصر حسین شاہ نے جہاں ایک طرف ان تمام لوگوں کا شکریہ ادا کیا کہ جو حکومت کی جاری کردہ ہدایات پر عمل کرتے ہوئے سماجی دوری کو مکمل طور پر اپنائے ہوئے ہیں تو انہوں نے دوسری طرف اس امر پر افسوس کا اظہار کیا کہ حکومت کی ہدایات کو مسلسل نظرانداز کرتے ہوئے اپنے سمیت بڑے بوڑھوں اور دیگر بیمار افراد کی زندگیاں خطرے میں ڈال ر ہے ہیں۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ حکومت کو اس بات کا اندازہ ہے کہ لوگوں میں کرونا وائرس کے متعلق حکومت کی ہدایات کو لے کر بڑی بے چینی اور بے قراری پائی جاتی ہے خاص طور پر جب انہیں اپنا طرز زندگی بدلنے سے متعلق کوء ھدایت دی جاتی ہے تو، لیکن انہوں نے کہا کہ اگر ہمیں کرونا وائرس جیسی وابا سے مکمل نجات حاصل کرنی ہے تو ہمیں یہ سب کرنا ہی پڑے گا اپنا طرز زندگی بدلنا ہی پڑے گا۔ انہوں نے لوگوں سے کہا کہ وہ گھبرائیں نہیں مضبوط بنیں اپنا اپنے پیاروں کا اور تمام لوگوں کا خیال رکھیں وہ وقت دور نہیں ہے کہ جب ہم سب اس وبا سے مکمل طور پر نجات حاصل کر لیں گے۔
دریا اثنا وزیراطلاعات سندھ سید ناصر حسین شاہ نے اتوار کے روز سینئر صحافی و دانشور احفاظ الرحمن کے انتقال پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔ اپنے تعزیتی پیغام میں سید ناصر حسین شاہ کا کہنا تھا کہ احفاظ الرحمن آزادی اظہار کے بڑے داعی تھے اور صحافت کے لیے ان کی خدمات ہمیشہ یاد رکھی جائیں گی۔صوبائی وزیر اطلاعات نے مرحوم کی مغفرت اور ایصال ثواب کی دعا کے علاوہ مرحوم کی اہل خانہ کے لئے صبر جمیل کی دعا کی۔

وفاقی حکومت عملی اقدامات کے بجائے بیانات پر یقین رکھتی ہے۔ جام اکرام اللہ دھاریجو


jam akram shah April 12, 2020 | 9:41 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)صوبائی وزیر اینٹی کرپشن، صنعت، تجارت و محکمہ کوآپریٹو سوسائٹیز جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کے بحران نے وفاقی حکومت کی کارکردگی کا پول کھول دیا ہے۔ یوں لگتا ہے کہ وفاقی حکومت اور اس کے وزرا عملی اقدامات کے بجائے صرف بیانات دینے پر یقین رکھتے ہیں۔ صوبائی وزیر جام اکرام اللہ دھاریجو نے اپنے ایک بیان میں سلیکٹیڈ حکومت کے وزرا کو مبارکباد پیش کی کہ بالآخر دو ماہ کے بعد منظرعام پر آئے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ سلیکٹیڈ حکومت کے سلیکٹیڈ وزرا اپنی حکومت کی نااہلی سندھ صوبہ پر اچھالنے کی ناکام کوششوں میں مصروف ہیں۔جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ سلیکٹیڈ حکومت کے وزرا کو پتہ ہونا چاہئیے کہ حکومتیں بیانات سے نہیں کارکردگی، منصوبہ بندی اور ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل سے چلتی ہیں۔ صوبائی وزیر جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ موجودہ وفاقی حکومت نے ابھی تک کوئی جامع منصوبہ شروع نہیں کیا البتہ دوسری حکومتوں کے منصوبوں پر اپنا نام آویزاں کرنے میں مصروف عمل ہے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وبا کے خطرات سے سلیکٹیڈ وزیراعظم کو صوبہ سندھ نے سب سے پہلے آگاہی دی تھی۔ انہوں نے کہا کہ سلیکٹیڈ وزرا کو پتہ ہی نہیں دیگر صوبوں کے لوگ علاج کے لئیے سندھ آتے ہیں۔جام اور اگر وزرا کو منفی پروپئگینڈہ سے فرصت ملے تو اندرون سندھ کا دورہ کریں تو ہم انہیں دیگر ہسپتالوں کے ساتھ قومی ادارہ برائے امراض قلب کیہسپتال بھی دکھائینگے۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کی حکومت نے کراچی، سکھر، سیوھن، شہید بے نظیر آباد، لاڑکانہ، حیدرآباد، ٹنڈومحمد خان، خیرپور میں امراض قلب کے علاج کے لئے جدید ہسپتال کا قیام عمل میں لا کر دکھایا ہے۔انہوں نے کہا کہ صوبے کے باقی اضلاع میں بھی امراض قلب کے علاج کے لئے جدید ہسپتالوں کے قیام کا منصوبہ پائپ لائن میں ہے۔ صوبائی وزیر برائے انسداد بدعنوانی، صنعت وتجارت اور امداد باہمی جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی قیادت نے کبھی دوسری حکومت کے منصوبوں اپنے نام سے منسلک نہیں کئے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ عوامی خدمت میں سب سے آگے ہے اور سندھ کے لوگ تعصب سے پاک ہیں۔ مشکل وقت میں ایک دوسرے کے شانہ بشانہ کھڑا ہونا ان کا شیوہ ہے۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ سندھ حکومت کے ساتھ ساتھ مخیر حضرات راشن کی تقسیم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہے ہیں۔ حکومت سندھ کے ساتھ کھڑی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی چیئرمین بلاول بھٹو زرادری کی ہدایات پر سندھ حکومت کورونا سے جنگ لڑ رہی ہے اور اس جنگ میں سندھ حکومت کے اقدامات کو دنیا نے سراہا ہے۔ پتہ نہیں سلیکٹیڈ حکمرانوں سے حکومت سندھ کی تعریف کیوں ہضم نہیں ہو رہی ہے۔

ٹڈی دل بھی کوروناکی طرح خطرناک ہیوفاق صورتحال کو سمجھے,محمد اسماعیل راہو


ismail rahu April 12, 2020 | 9:36 PM

سندھ حکومت کا ٹڈی دل کے خاتمے کہ لئے وفاق کی جانب سے فضائی اسپرے نہ کرنے پر تشویش کا اظہار
ٹڈی دل بھی کوروناکی طرح خطرناک ہیوفاق صورتحال کو سمجھے,محمد اسماعیل راہو
ضلعہ گھوٹکی میں ٹڈی دل آچکی ہے,لیکن وفاق کی جانب سے فضائی اسپرے شروع نہ ہوسکا,وزیر زراعت اسماعیل راہو
کراچی:(نیوزآن لائن) سندھ حکومت نے ٹڈی دل کے خاتمے لئے وفاق کی جانب سے فضائی اسپرے نہ کرنے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹڈی دل بھی کورونا کی طرح خطرناک ہے وفاق صورتحال کو سمجھے. صوبائی وزیر زراعت محمد اسماعیل راہو نے مزید کہا کہ ضلعہ گھوٹکی میں ٹڈی دل آچکا ہے,لیکن وفاق کی جانب سے فضائی اسپرے شروع نہ ہوسکا, گھوٹکی میں ٹڈی دل کے خاتمے کہ لئے محکمہ زراعت کے جانب سیاسپریجا ری ہے, سندھ کا پورا ریگستانی علاقہ ٹڈی دل کی لپیٹ میں ہے. انہوں نے کہا کہ لاکھوں ایکڑ کے رقبے میں ٹڈی دل کے بچے اور انڈے موجود ہیں,پاکستان کو کورونا وائرس کے ساتھ ساتھ ٹڈی دل کا بھی سامنہ کرنا پڑیگا. وزیرزراعت نے کہا کہ ٹڈی دل کا خاتمہ فضائی اسپرے سے ہی ممکن ہے, ڈیزرٹ لوکسٹ اور فضائی اسپرے فقط وفاقی حکومت کا مینڈیٹ ہے, منسٹری آف فوڈ سکیور ٹی نے وزیراعظم کی موجودگی میں واعدہ کیاتھاوفا نہ ہوا,6 مارچ کے اجلاس میں اعلان کیا گیا کہ اپریل کے پہلے ہفتے میں فضائی اسپرے شروع ہو چکا ہوگا. انہوں نے کہاکہ سب سے پہلے بلوچستان اور سندھ میں اسپرے ہونا تھا, ٹڈی دل مکئی اور کپاس سمیت غذائی اجناس کی فصلو ں پرحملہ آور ہوگی, ناقابل تلافی نقصان ہوسکتا ہے, سندھ میں بارشوں کی وجہ سے ٹڈی دل کے لئے موسم سازگارہوگا, وفاق کی لاپرواہی کی وجہ سے گزشتہ سال بھی فصلوں کونقصان پہنچا تھا, محکمہ پلانٹ پرو ٹیکشن اگر کام نہیں کرسکتا تو اسے بند کر دیا جائے. صوبائی وزیر نے کہا کہ پلانٹ پروٹیکشن کی چند پرانی گاڑیاں کچھ نہیں کرسکتی, ٹڈی دل کے ممکنہ تباھ کاری کو نظراندازن نہیں کیا جاسکتا, ٹڈی دل سے نمٹنے کے لئے وفاق تیاری کرے ورنہ کاشتکا روں کی فصلیں تباھ ہوجائیں گی. انہوں نے کہا کہ اس بار اگر فصلوں کو نقصان پہنچا تو اس کی ذمہ دار بنی گالا سرکارہوگی.

مہاجر نیشنل موومنٹ کی تنظیم توڑ دی گئی۔عارضی کنوینر ڈاکٹر انور نامزد


Karachi-Sindh April 12, 2020 | 9:16 PM

عارضی کمیٹی قائم ۔ شبلی، یونس میمن ، عبدالقیوم ، نفیس فاطمہ، اقبال کامریڈ،سمیت بیس افراد کی رکنیت کا خاتمہ۔ تنظیم کے انتخابات کا اعلان ۔ سات رکنی منشور کا اعلان کل کریں گے۔ ڈاکٹر انور
کراچی:(نیوزآن لائن)مہاجر نیشنل موومنٹ کی تنظیم توڑ دی گئی۔سپریم کونسل کی اجازت سے ڈاکٹر انور کو عارضی کنوینر نامزد کردیا گیا۔ جبکہ عارضی ایڈھاک ورکنگ کمیٹی میں عادل شفیق، روبینہ یاسمین، انصر اقبال ، سجاد مہدی اور فرحین کنول شامل ہیں ۔ مہاجر نیشنل موومنٹ کی سپریم کونسل نے ۔ شبلی، یونس میمن ، عبدالقیوم ، نفیس فاطمہ، اقبال کامریڈ،سمیت بیس افراد کی رکنیت کا خاتمہ کردیا ہے۔ جبکہ تنظیم کے انتخابات کا اعلان جلد منعقد کرنے کے لئے الیکشن انچارج افشاں اور مسرت جبیں کو بنایا گیا ہے ۔ سات رکنی منشور کا اعلان کل کریں گے۔ ڈاکٹر انور نے کہا ہے کہ مہاجر نیشنل موومنٹ کو بہت سی سازشوں کا سامنا تھا۔ ہم نے بلدیاتی انتخابات سے پہلے پارٹی کو منظم اور مہاجر منشور پر صحیح سمت میں لے جانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ہم پر بی ٹیم کا الزام لگتا رہا۔ ہم اب کسی کا چارہ کار نہیں بنیں گے۔ مہاجر اتحاد کے لئے کسی کے بھی پاس جانے میں حرج نہیں ۔ افسوس کرونا جیسے حالات میں فیصلہ لینا پڑا۔

ہیلپ کیئر انٹر نیشنل فاونڈیشن سفید پوش مستحق افراد کی مدد کیلئے میدان میں


Karachi-Sindh April 5, 2020 | 10:33 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) ہیلپ کیئر انٹر نیشنل فاونڈیشن کے جنرل سیکرٹیری سراج نگریا کا کہنا ہے کہ کوررونا وائرس کے باعث سفید پوش افراد بھی لاک ڈاون کیوجہ سے تنگ آچکے ہیں۔ہیلپ کیئر انٹر نیشنل فاونڈیشن کے جنرل سیکرٹیری کا کہنا ہیکہ غریبوں کے مشکل حالات کو مد نظر رکھتے ہوئے انکے گھروں پر راشن دینے کے ساتھ ساتھ پھل سبزیاں اور دیگر ضروری سامنا مہیا کررہیہیں۔تاہم کراچی کے 6 اضلاع میں 10 ہزار سے زائد راشن بیگ تقسیم کرچکے ہیں جبکہ مزید تیار کیے جارہیہیں۔مستحق و غریب افراد ہندو اور مسحی برادری سمیت بلاتفریق خدمت کے مشن کو جاری رکھا ہواہے جبکہ اس مہلک وبا کوررونا وائرس کے باعث سفید پوش افراد بھی لاک ڈاون کی وجہ سے تنگ آچکے ہیں ضرورت اس بات کی ہے کہ حکومت ذمہ داری کا ثبوت دے کہ یہ افراد اپنا روزگار شروع کرسکیں۔ سراج نگریا نے مزید کہا کہ موجودہ صورتحال میں مستحقین کی زندگی آسان بنانے کی بھرپور جدوجہد کررہیں ہیں لیکن حکومت کو بھی انکے احساسات و جذبات کا خیال کرنا انکے گھروں پر نقد رقوم اور ضروریات زندگی کو پورا کرنا ہوگا اس سلسلے میں میں غریبوں و مستحقین کیلئے حکومت کے ساتھ تعاون کرنے کیلئے تیار ہیں۔

وزیراعلی سندھ روزانہ کی بنیاد پر کرونا وائرس کے پھیلا کو صوبے میں روکنے کے حوالے سے بنائی گئی ٹاسک فورس کی صدارت کرتے ہیں ۔ سید ناصر حسین شاہ


PIX SINDH MINISTER FOR INFORMATOIN April 5, 2020 | 5:52 PM

کراچی:) نیوزآن لائن)سندھ کے وزیر اطلاعات و بلدیات، ہاسنگ و ٹان پلاننگ، مذہبی امور، جنگلات و جنگلی حیات سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ وزیراعلی سندھ روزانہ کی بنیاد پر کرونا وائرس کے پھیلا کو صوبے میں روکنے کے حوالے سے بنائی گئی ٹاسک فورس کی صدارت کرتے ہیں جس میں صحت، ڈیزاسٹرمنیجمنٹ اور دیگر متعلقہ اداروں کے حکام شرکت کرتے ہیں۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ یہ ٹاسک فورس اسی دن بنا دی گئی تھی جس دن صوبے میں کرونا وائرس کا پہلا مریض سامنے آیا تھا۔ اپنے ویڈیو پیغام میں سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ صوبے میں کرونا وائرس کے پھیلا کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال کے بعد جو بھی فیصلہ لیتے ہیں جس میں لاک ڈان کا فیصلہ بھی شامل ہے یہ تمام فیصلیصحت اور دیگر شعبوں کے ماہرین سے طویل مشاورت کے بعد کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی سندھ کی ٹاسک فورس دن رات کرونا وائرس کے پھیلا کو روکنے کے لیے کام کر رہی ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ طب کے شعبے کے ماہرین کے مطابق کرونا وائرس سے متاثر ہونے والے لوگوں کی تعداد 25 اپریل تک پچاس ہزار تک جا سکتی ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ وفاق نے کرونا وائرس کے پھیلا کو روکنے کے لیے بہت دیر سے اقدامات لینا شروع کیے۔ ان تمام ڈاکٹرز، نرسز اور پیرا میڈیکس جوکہ کرونا وائرس کے متاثرہ مریضوں کو براہ راست دیکھ رہے ہیں کی حفاظت کے حوالے سے بات کرتے ہوئے سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اب تک جتنی بھی سیفٹی کیٹس حکومت کو موصول ہوئی تھی وہ ڈاکٹرز نرسز اور پیرا میڈیکس کو فراہم کر دی گئی ہیں جبکہ مزید سیفٹی کٹس بھی منگوالی گء ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ صوبے میں کرونا وائرس کے مزید 12 مریض صحت یاب ہوگئے ہیں اس طرح صحت یاب ہونے والے مریضوں کی کل تعداد 86 ہوگئی ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ کو ہدایت کی ہے کہ وہ کرونا وائرس کے پھیلا کو روکنے کے حوالے سے جو بھی اقدام لیں اس سے وفاقی حکومت کو بھی آگاہ رکھیں۔ انہوں نے کہا کہ چیئرمین پی پی پی کی یہ واضح ہدایت ہے کہ وفاقی حکومت کے ساتھ مل کر کام کیا جائے۔ سید ناصر حسین شاہ نے ایک دفعہ پھر واضح کیا کہ صوبے بھر میں یا بارڈر پر گڈز ٹرانسپورٹ کے چلنے پر کسی بھی قسم کی کوئی پابندی نہیں لگائی گئی ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ کھانے پینے کی ضروری اشیا فراہم کرنے والی گاڑیوں پر لوگ ڈاون کے پہلے دن سے کسی بھی قسم کی کوئی پابندی نہیں ہے اور وہ روزانہ کی بنیاد پر کھانے پینے کا ضروری سامان شہر میں دکانوں پر فراہم کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تاریخ کے اس مشکل وقت میں ہمیں ایک دوسرے پر الزام تراشی سے گریز کرتے ہوئے پوری دلجمعی کے ساتھ ضرورت مندوں کی مدد کرنی چاہیے۔
دریں اثنا صوبائی وزیر اطلاعات و بلدیات سندھ سید ناصر حسین شاہ سے اوورسیز ڈاکٹرز والنٹیرز ٹیم کے ارکان نے میںکارونا کے خلاف حکومت سندھ کی جدوجہد میں اپنا حصہ ڈالنے کی گزارش ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات سید ناصر حسین سے اورسیز ڈاکٹرز والنٹیر ٹیم کے وفد نے علی ہاوس کراچی میں ملاقات کی۔ وفد میں کنور محمد علی،محمد ساجد خان اور عاطف علی خان شامل تھے۔ وفد کے شرکا کی جانب سے صوبائی وزیر کو کارونا کے خلاف موثر اور بہترین حکمت عملی اختیار کرنے پر مبارک باد پیش کرتے ہوئے کارونا کے خلاف کام کرنے والے ڈاکٹروں کے لئے خاص طور پر تیار کئے گئے ڈیڑھ سو لباس پیش کئے گئے۔ناصر حسین شاہ نے وفد کے شرکا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کارونا کی وبا کے خلاف حکومت سندھ کی جدوجہد روز بروز تیز ہورہی ہے اور مخیر اداروں، فلاحی تنظیموں کا اس حوالے سے اہم کردار ہے اور حکومت سندھ انسانی خدمات کے ان اقدامات کی تہ دل سے قدر کرتی ہے۔وزیر اطلاعات نے وفد کے شرکا کو حکومتی اقدامات کے حوالے سے بتایا کہ کارونا کی وبا کے نمودار ہوتے ہی وزیر اعلی سندھ نے تمام اسٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لیکر جامع اور مربوط حکمت عملی کے نفاذ کا مرحلہ وار آغاز کردیا تھا جس کی بدولت سندھ میں یہ مرض بڑی تباھی پھیلانے میں کامیاب نہیں ہوسکا۔ناصر حسین شاہ نے کہا کہ ملک کی موجودہ صورت حال پر قابو پانے کے لئے مرکز اور صوبائی حکومتوں کا ایک پیج پر ہونا ضروری ہے اورحکومت سندھ وفاقی حکومت کے کارونا کے خلاف کئے جانے والے تمام اقدمات کی غیر مشروط حمایت کرتی ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات و بلدیات کے مطابق حکومت سندھ کارونا کے خلاف برسر پیکار ڈاکٹروں کو حفاظتی لباس کی فراہمی کے لئے باقاعدہ بجٹ بھی مختص کرچکی ہے اور وزیر اعلی سندھ کی ہدایت پر حفاظتی لباس تیار کرنے والے اداروں سے بھی ترجیحی بنیادوں پر لباس تیار کرنے کی درخواست کی گئی ہے۔ ناصر حسین شاہ نے بطور خاص حکومت چائنہ کا بھی شکریہ ادا کیا جنہوں نے کارونا کے خلاف فرنٹ لائن پر کام کرنے والے ڈاکٹروں اور پیرا میڈیکل اسٹاف کے بچاوکے لئے حفاظتی لباس تیار کرکے بھیجے اور مخیرحضرات کو بھی خراج تحسین پیش کیا جن کی مدد سے حکومت سندھ اس قدرتی آزمائش سے نبٹنے کے لئے جدوجہد کر رہی ہے۔

وزیر اعلی سندھ کراچی کے بلدیاتی اداروں کو بھی سندھ کا حصہ سمجھیں ابتک نہ تنخواہیں دی گئیں ہیں نہ اضافی تنخواہیں۔ رباب جعفری۔ غلام مصطفی


karachi April 5, 2020 | 1:56 PM

کرونا وائرس سے کراچی کے بلدیاتی ادارے بھی متاثر ہیں ۔یوسیز کے ملازمین کو بلا لیا گیا لیکن راشن کی تقسیم سے محروم رکھا گیا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
کراچی:(نیوزآن لائن) آل پاکستان آفیسرز ایکشن کمیٹی سندھ کی سینئر وائس چیئرپرسن رباب جعفری ، وائس چیئرمین غلام مصطفی نے وزیر اعلی سندھ کی توجہ مبذول کراتے ہوئے کہا ہے کہ وزیر اعلی سندھ کراچی کے بلدیاتی اداروں کو بھی سندھ کا حصہ سمجھیں ابتک نہ تنخواہیں دی گئیں ہیں نہ اضافی تنخواہیں۔انکے ٢٥ مارچ تک تنخواہوں کی ادائیگی کے دعوی ہوا ہو چکے ہیں۔ کرونا وائرس سے کراچی کے بلدیاتی ادارے بھی متاثر ہیں ۔یوسیز کے ملازمین کو بلا لیا گیا لیکن راشن کی تقسیم سے محروم رکھا گیا ہے۔ملازمین و افسران شدید مشکلات کا شکار ہیں۔میئر کراچی نے ابتک جون کی اضافی تنخواہیں نہ دیکر ظلم کی حد کی ہوئی ہے۔ نا اہل افسران اور کمیشن مافیا ملازمین کے لئے رقوم نہیں ہونے دیتی۔ مرجانے والوں کو معاوضہ نہیں دیا جاتا۔ افسران کو اداروں کے سپرد کرکے انکے ہارٹ اٹیک کا بندوبست کردیا جاتا ہے۔ میئر ، ڈپٹی میئر اقتدار اور آسائشوں کے مزے لے رہے ہیں۔ وزیر اعلی سندھ ، وزیر بلدیات خصوصی توجہ دیں اور تنخواہیں ادا کرائیں ۔

ضرورت پڑنے پر پبلک اسکول ٹنڈو محمد خان کو آئسولیشن وارڈ میں تبدیل کیا جاسکتا ہے۔ سید قاسم نوید قمر


syed qasim naveed qamar ppp March 29, 2020 | 8:34 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی برائے محکمہ بحالی خصوصی افراد سندھ سید قاسم نوید قمر نے کہا ہے کہ ضرورت پڑنے پر پبلک اسکول ٹنڈو محمد خان کو کورونا وائرس کے مریضوں کے لئے آئسولیشن وارڈ میں تبدیل کیا جاسکتا ہے۔ یہ بات انہوں نے آج پبلک اسکول ٹنڈو محمد خان کا دورہ کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر ڈپٹی کمشنر یاسر بھٹی ، رکن سندھ اسمبلی سید ایاز حسین شاہ بخاری ، ضلعی جنرل سکریٹری خرم کریم سومرو اور ضلع کے صحت کے افسران بھی موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ ہم کورونا وائرس کے خطرے کی وجہ سے کسی بھی ہنگامی صورتحال کو سنبھالنے کے لئے ہر ممکن اقدامات اٹھا رہے ہیں کیونکہ کورونا وائرس کے مریضوں کے لئے تنہائی ہی بہترین علاج ہے۔ اپنے دورے کے دوران انہوں نے مقامی اور صحت انتظامیہ کے ساتھ پبلک اسکول کو آئسولیشن وارڈ میں تبدیل کرنے کے امکان پر تبادلہ خیال کیا۔
سید قاسم نوید قمر نے افسران سے کہا کہ وہ کسی بھی چیلنج کا مقابلہ کرنے کے لئے تیار رہیں ، انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں عوام کی توقعات پر پورا اترنا ہوگا۔ وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی برائے محکمہ بحالی خصوصی افراد سندھ سید قاسم نوید قمر نے کہا کہ سندھ حکومت صوبے کے عوام کو کورونا وائرس سے محفوظ رکھنے کے لئے تمام تر کوششیں کر رہی ہے اور ان کوششوں میں کامیابی کے لئے عوام کا تعاون بہت ضروری ہے۔

سندھ میں کرونا وائرس کے نام پر فنڈز کی تحقیقات کی جائے: ڈاکٹر سلیم حیدر


dr saleem haider MIT March 29, 2020 | 8:19 PM

پندرہ سال سے پیپلزپارٹی کی حکومت صوبے کے وسائل کو لوٹ رہی ہے
جو حکومت ایڈز اور ہیپاٹائٹس کے مریضوں کا علاج نہیں کراسکی اس سے کوئی امید نہیں کی جاسکتی
کراچی:(نیوزآن لائن)مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کے نام پر سندھ میں خرچ کئے جانے والے فنڈز کو مانیٹر کرنے کیلئے ہائیکورٹ کے اعلیٰ سطح ججز پر مشتمل کمیٹی بنائی جائے جو اس بات کا تعین کرے کہ اربوں روپے کے یہ فنڈز وفاقی اور صوبائی حکومتیں کس طرح خرچ کررہی ہیں کیونکہ سندھ میں پیپلزپارٹی کی کرپٹ حکومت 15 سال سے سندھ کے وسائل کو لوٹ رہی ہے اور اب یہ قدرتی آفات پر ملنے والے فنڈز بھی لوٹنے کیلئے سرگرم ہوگئی ہے۔ انہوں نے کہاکہ سندھ کے شہری علاقوں میں 10 روز سے کاروبار بند اور نظام زندگی مفلوج ہے ۔ غریب مزدور جوکہ پہلے ہی معاشی بدحالی کا شکار تھے اب فاقہ کشی میں مبتلا ہورہے ہیں لیکن یہ حکومت اب تک نہ تو کسی ایک شخص کو راشن دے پائی ہے اور نہ ہی ان کی ضرورت کا سامان، جس کے بعد یہ اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ کرونا وائرس کے نام پر اربوں روپے کے یہ فنڈز کس کی جیب میں جائیں گے ۔ پیپلزپارٹی جو زکوٰة و خیرات کی رقم بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کے نام پر اعلیٰ افسران اور جیالوں میں تقسیم کرتی ہے اس سے یہ توقع نہیں کی جاسکتی کہ وہ سندھ کے شہری علاقوں کی کچی آبادیوں اور غریب افراد میں راشن تقسیم کرے گی اس کا اندازہ اس بات سے بھی لگایا جاسکتا ہے کہ حیدرآباد میں شرجیل انعام میمن جیسے مستند نیب زدہ اور کرپٹ شخص کو فوکل پرسن بناکر انتظامیہ کو ان کے ماتحت کردیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ پیپلزپارٹی کی حکومت جو لاڑکانہ اور سندھ کے دیگر اضلاع میں ایڈز میں مبتلا ہوجانے والے سینکڑوں افراد کو علاج کے لئے دوا دینے کو تیا رنہیں جو ہیپاٹائٹس کنٹرول پروگرام کے نام پر اربوں روپے کی کرپشن کررہی ہو ، ملیریا ، ٹی بی کنٹرول پروگرام کے نام پر وڈیرے او رمن پسند افسران عیاشیاں کررہے ہوں ان سے کرونا جیسی آفت سے نمٹنے کے نام پر غریب عوام کی مدد کی کس طرح توقع کی جاسکتی ہے۔

سندھ حکومت نے عوام کے مفاد اور حفاظت کی خاطر صوبے میں22 مارچ رات 12 بجے سے لاک ڈاؤن کرنے کا اعلان کیا ہے۔سید ناصر حسین شاہ


syed nasir hussain shah March 22, 2020 | 9:30 PM

کراچی : (نیوزآن لائن ) سندھ کے وزیر اطلاعات ، بلدیات، جنگلات و جنگلی حیات سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ سندھ حکومت نے عوام کے مفاد اور حفاظت کی خاطر صوبے میں22 مارچ رات 12 بجے سے لاک ڈاؤن کرنے کا اعلان کیا ہے۔صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ اس لاک ڈاؤن کو کرفیو نہ سمجھا جائے یا کہا جائے ، اس کے بجائے اسے کیئر فور یو کہا جائے۔ انہوں نے کہا کہ یہ فیصلہ اتوار کے روز وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیر صدارت ہونے والے ایک اہم اجلاس کے دوراں لیا گیا۔اجلاس میں سندھ کابینہ کے تمام اراکین کے علاوہ چیف سیکریٹری سندھ، ڈائریکٹر جنرل رینجرز سندھ ، انسپیکٹر جنرل پولیس سندھ ، کور ہیڈ کوارٹر کے برگیڈیئر وسیم کے علاوہ تمام متعلقہ افسران شریک ہوئے۔سید ناصر حسین شاہ نے اپنے بیان میں اجلاس میں کئے گئے مزید فیصلوں کے بارے میں آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ اس لاک ڈاؤن کے بعد بلاوجہ گھر سے باہر نکلنے والوں کے خلاف ایکشن لیا جائے گا۔ صوبائی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ عوام کو حکومت سندھ کی صحت کے مطابق جاری کی گئی ہدایات پر سختی سے عمل کرنا چاہیے ۔انہوں نے کہا کہ صرف زیادہ سے زیادہ احتیاطی تدابیر اختیار کرکے ہی لوگ خود کو اور اپنے آس پاس کے لوگوں کو کرونا وائرس سے محفوظ رکھ سکتے ہیں۔سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اس لاک ڈاؤن کو کرفیو کے بجائے کیئر فار یو کہیں۔صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ وزیر اعلیٰ سندھ کا یہ خیال تھا کہ ہر وہ فیصلہ اور قدم اٹھایا جائے جو عوام کی صحت اور زندگی کے مفاد میں ہو۔ انہوں نے کہا کہ تمام سخت فیصلے عوام کو کورونا وائرس سے متاثر ہونے سے بچانے کے لئے کئے گئے ہیں۔سید ناصر حسین شاہ نے واضح کیا کہ اس بات کو بھی یقینی بنایا جائے گا کہ اس لاک ڈاؤن کے دوران عوام کو تمام ضروری سہولیات جن میں پانی، بجلی، گیس اور دیگر سہولیات جن میں پانی ، بجلی، گیس اور دیگر سہولیات بلا تعطل ملتی رہیں۔سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ لاک ڈاؤن کے بعد غیر ضروری طور پر کسی کو بھی گھر سے باہر نہیں دیا جائے گا ۔وزیر اطلاعات سندھ نے کہا کہ اگر کسی کو ضروری طور کہیں جانا ہوا تو وہ سیکیورٹی اہلکاروں کو بتا کر جاسکے گا۔ایک گاڑی میں دو افراد سے زیادہ لوگ نہیں بیٹھ سکیں گے۔سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اس لاک ڈاؤن کے دوران مہنگائی اور ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے گا۔صوبائی وزیر اطلاعات اجلاس میں کئے گئے مزید فیصلوں کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ جس کسی کا بھی بجلی کا بل 4 ہزار روپے تک ہوگا وہ معاف کردیا جائے گا اس طرح کسی کا گیس کا بل اگر دو ہزار روپے ہوگا تو وہ بھی معاف کردیا جائے گا۔صوبائی وزیر اطلاعات نے مزید بتایا کے اس دوران ہر قسم کے اجتماع پر پابندی ہوگی اور عبادت گاہیں بھی بند ہوں گی۔اور عبادت گاہیں بھی بند ہوں گی۔انہوں نے کہا کہ اگر کوئی شخص بیمار ہوا تو اسے اسپتال لے جانے کی اجازت ہوگی۔سید ناصر حسین شاہ نے عوام سے درخواست کی کے وہ سندھ حکومت کی جانب سے لئے گئے سخت فیصلوں پر مکمل عملدرآمد کریں کیونکہ یہ ان کے مفاد میں کئے گئے ہیں۔

٢٣ مارچ یوم پاکستان کا دن ہر سال اہل پاکستان کو اس جذبے کی یاد دلاتا ہے ،مسلم اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کراچی ڈویژن


Muslim Student Organization Karachi March 22, 2020 | 3:21 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)٢٣ مارچ یوم پاکستان کا دن ہر سال اہل پاکستان کو اس جذبے کی یاد دلاتا ہے جو قیام پاکستان کا باعث بنا، پاکستان کا قیام ان اکابرین کی لازوال قربانیوں کا نتیجہ ہے جنہوں نے قائد اعظم کی قیادت میں قیام پاکستان کی انتھک جدوجہد کی اور بر صغیر کے مسلمانوں کو آزادی دلوا کر آزاد ملک کا تحفہ دیا۔ یوم پاکستان کے اس موقع پر ہم تحریک پاکستان کے اکابرین کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں اور اس عزم کا اظہار کرتے ہیں کہ مملکت خداداد پاکستان کے دفاع اور تحفظ کے لیے کوئی کسر نہیں چھوڑیں گے۔ ان خیالات کا اظہار مسلم اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کراچی ڈویژن کے ناظم عادل انصاری، ناظم عمومی دانش کمال، ناظم اطلاعات انعام الحق رحمانی، معاون ناظم شیر جہان و دیگر نے 23 مارچ یوم پاکستان کے موقع پر کراچی میں مسلم میڈیا سیل سے جاری بیان میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے قیام کے لیے لاکھوں افراد نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کر کے اس ملک کا معرض وجود میں آنا ممکن بنایا، جنہیں مسلم اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن سلام پیش کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی نظریاتی اور جغرافیائی سر حدوں کی حفاظت کے لیے ایم ایس او کے نوجوان ہمہ وقت تیار ہیں۔

کرو نا وا ئر س سے بچا کا واحد حل احتیا ط ہے ۔وزیر اطلا عا ت سید نا صر حسین شا ہ


nasir shah March 20, 2020 | 6:24 PM

عا لمی وبا سے مل جل کر مقا بلہ کر نا ہو گا عوام سنجیدگی کا مظا ہرہ کر یں ۔
مختلف علا قو ں کے دور ے کے دورا ن گفتگو
کرا چی (نیوزآن لائن)سندھ کے وزیر اطلا عا ت ،بلدیا ت ،ہا سنگ و ٹا ن پلا ننگ ،مذہبی امو ر اور جنگلات و جنگلی حیا ت سید نا صر حسین شاہ نے آج کرونا وائرس کے حوالے سے آگاہی کے لئے شہر کے مختلف علاقوں کا دورہ کیا اور صفا ئی ستھرا ئی کے حوالے سے مختلف مقا ما ت پر قا ئم کیمپ کا معا ئنہ کیا جن میں،بلاول چورنگی ودیگر مقامات شامل ہیں۔ انہو ں نے بتا یا کہ سا لڈ ویسٹ مینجمنٹ کی جا نب سے شہر بھر کے 88مقا ما ت پر اس طرح کے سینیٹا ئزرز اور صفا ئی کیمپ قا ئم کئے جا ئینگے آج 25مقا ما ت پر کیمپ قا ئم کر دیئے گئے ہیں جبکہ مزید کیمپ کل تک فنکشنل کر دیئے جا ئینگے ۔اس مو قع پر صوبائی وزیر نے وہاں موجود افراد سے بات کرتے ہوئے انہیں سندھ حکومت کی جانب سے کرونا وائرس کے حوالے سے کئے جانے والے اقدامات اورمحکمہ صحت سندھ اورعا لمی ادار ہ صحت کی جانب سے جاری ہدایات کے حوالے سے آگاہ کیا۔ صوبائی وزیر نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ اس حوالے سے آگاہی کے لئے حکومت کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات میں سندھ حکومت کا ساتھ دیں او رکرونا وائرس سے آگاہی اور اس سلسلے میں سندھ حکومت کی جانب سے جاری ہدایات پر عمل پیرا ہوں صوبائی وزیر نے کہا کہ اس وقت پوری دنیا میں کرونا وائرس کی وبا کے باعث شدید اضطراب ہے اس وقت صوبہ سندھ جس طرح اس وباکے حوالے سے عملی طو ر پر نبر د آزما ہو نا او ر جس طرح کے انتظامات کئے گئے ہیں وہ قابل ستائش ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ ایک عالمی وباہے اور ہم سب کو مل جل کر اس میں اپنا کردار ادا کرنا ہوگا اور اس وباسے جان چھڑانی ہوگی انہوں نے کہا کہ اس وباسے بچا کا واحد حل احتیاط اور ڈاکٹرز اور حکومت کی جانب سے دی جانے والی ہدایات پر عمل کرنا ہے ہماری بھرپور کوشش ہے کہ صوبہ سندھ اور پورا ملک اس وباسے محفوظ رہے اور اس حوالے سے سندھ حکومت نے تمام وہ اقدامات کئے ہیں جس کے ذریعے اس وباسے بچا جا سکے انہوں نے بتایا کہ ہماری پاک فوج سمیت قانون نافذ کرنے والے تمام ادارے ہمارے شانہ بشانہ کام کر رہے ہیں ایکسپو سینٹر میں پاک فوج کے تعاون سے آئسولیشن سینٹر قائم کیا جا رہا ہے جو کہ آخری مراحل میں ہے ۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ میری عوام سے اپیل ہے کہ وہ خود کو اور اپنے اہل خانہ کو بچانے کے لیے صرف اور صرف احتیاط کریں سینیٹائزر کا استعمال کرتے رہیں سید ناصر حسین شاہ نے بتایا کہ سندھ حکومت نے عوام کی رہنمائی کے لئے ہیلپ لائن بھی قائم کردی ہے تاکہ عوام بروقت آگاہی حاصل کرسکیں انہوں نے کہا کہ اس وباسے پیدا صورتحال کے باعث عوام کو درپیش مسا ئل سے آگا ہ ہیں اس سلسلے میں ہم نے یو میہ اجر ت پر کا م کر نے والے افرا د کے لئے را شن بیگز تقسیم کر نے کا بھی اہتما م کیا ہے جبکہ پیپلز پا ر ٹی کے چیئر مین بلا ول بھٹو زر دا ر ی اور وزیر اعلی سندھ کی خصو صی ہدایت پر صوبائی وزرا اور ارا کین اسمبلی اپنے مختلف علاقوں میں عوا م کے در میا ن مو جو د ہیں اور کسی بھی صو ر تحا ل سے نپٹنے کیلئے اعلی حکا م سے را بطے میں ۔انہو ں نے کہا کہ شہر بھر میں جرا ثیم کش ادوا یا ت کے اسپرے کر نے کا بھی اہتمام کیا جا رہا ہے ۔ اس مو قع پر صو با ئی وزیر نے وہا ں مو جو د عوام کے سامنے اپنے ہا تھ دھو کر عملی مظا ہر ہ کیا اور کہا کہ صفا ئی ستھرا ئی کا سبق ہما ر ے دین اسلا م نے بھی دیا ہے اور اس پر عمل پیرا ہو کر ہم اس وبا ئی مر ض پر قا بو پا سکتے ہیں ۔بعد ازا ں صو با ئی وزیر نے کینٹ اسٹیشن پر محکمہ بلد یا ت کی جا نب سے جا ر ی اسپرے مہم کا بھی جا ئزہ لیا اور اس مو قع پر میڈیا سے با ت چیت کر تے ہو ئے صو با ئی وزیر سید نا صر حسین شا ہ نے کہا کہ اسپرے مہم شہر بھر میں جاری ہے میری عوام سے اپیل ہے کہ جن علا قو ں میں اسپرے نہیں کیا گیا متعلقہ حکا م سے اور محکمہ بلدیا ت کی ہیلپ لا ئن پر رابطہ کریں ۔

وفاق شہریوں سے دو ماہ کے بجلی اور گیس کے بل نہ لے,سندھ سرکار کا مطالبہ


ismail raho March 20, 2020 | 5:53 PM

وفاقی حکومت عوام سے 2 ماہ تک تین سو یونٹ بجلی اورایک ہزارروپے تک کے گیس بل وصول نہ کرے,اسماعیل راہو
شہری گھروں تک محدود ہیں اور تمام کاروبار بند ہے اسی لیے عوام کو رلیف ملنا چاہئے،صوبائی وزیر
کراچی:(نیوزآن لائن) ملک میں کورونا وائرس کا معاملہ، سندھ سرکارنے وفاق سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ وفاقی حکومت شہریوں سے دو ماہ کے بجلی اور گیس کے بل نہ لینے پر سنجیدگی سے غورکرے. صوبائی وزیرزراعت اسماعیل راہو نے مزید کہا کہ وفاقی حکومت عوام سے 2 ماہ تک تین سو یونٹ بجلی اورایک ہزارروپے تک کے گیس بل وصول نہ کرے, شہری گھروں تک محدود ہیں اور تمام کاروبار بند ہے اسی لیے عوام کو رلیف ملنا چاہئے، چھوٹے کاروباری، ملازمین اور دہاڑی مزدورکا گذر مشکل وقت سے ہورہا ہے، اس مشکل صورتحا ل سے صوبائی حکومت اپنے محدود وسائل سے نبرد آزما ہو رہی ہے. صوبائی وزیر نے کہا کہ خان صاحب بھلے سندھ کو کوئی فنڈ نہ دیں مگر عوام کو تو رلیف دیں, وفاقی حکومت پنجاب، بلوچستان اور کے پی کے تک محدود نہ رہے، سندھ بھی ملک کا حصہ ہے.

سید ناصر حسین شاہ اور صوبائی وزیر تعلیم و محنت سعید غنی کا اتوار کے روز مختلف مکاتب فکر کے علماء کرام سے ملاقات


nasir shah and saeed gani March 15, 2020 | 7:30 PM

کراچی: (نیوزآن لائن) سندھ کے وزیر برائے اطلاعات ، بلدیات، جنگلات و جنگلی حیات سید ناصر حسین شاہ اور صوبائی وزیر تعلیم و محنت سعید غنی نے اتوار کے روز مختلف مکاتب فکر کے علماء کرام سے ملاقات کی۔اور ان کو سندھ حکومت کی جانب سے کرونا وائرس کے حوالے سے اٹھائے جانے والے اقدامات اور کئے گئے فیصلوں سے تفصیلاََ آگاہ کیا۔جن علماء کرام سے سید ناصر حسین اور سعید غنی نے ملاقات کی ان میں معروف عالم دین مفتی منیب الرحمان، مولانا بشیر فاروقی اور دعوت اسلامی کراچی کی رابطہ مجلس کے اراکین شامل تھے۔مفتی منیب الرحمان سے دارالعلوم نعیمیہ میں ہونے والی ملاقات کے دوران سندھ کے وزیر اطلاعات سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ سندھ حکومت صوبے میں کرونا وائرس سے بچاؤ کے لئے تمام اقدامات بروئے کار لا رہی ہے۔انہوں نے اس سلسلے میں وزیراعلیٰ سندھ کی جانب سے لئے جانے والے فیصلوں سے مفتی منیب الرحمان کو تفصیلاََ آگاہ کیا۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے سندھ کے وزیر تعلیم نے کہا کہ وزیر اعلیٰ کی قائم کردہ ٹاسک فورس سے فیصلوں کے نتیجے میں صوبے کے تمام تعلیمی ادارے بند کردیئے گئے ہیں۔سعید غنی نے کہا کہ مدارس کیلئے بھی یہی احکامات ہیں۔ مفتی منیب الرحمان نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے نہ صرف سندھ حکومت کے فیصلوں کی تائید کی بلکہ صوبائی وزراء کو اپنے مکمل تعاون کی یقین دہانی بھی کروائی ۔انہوں نے بتایا کہ سندھ حکومت کے فیصلے کے مطابق تمام مدارس میں درس و تدریس معطل کردی گئی ہے۔مفتی منیب الرحمان نے دعا کی کہ سندھ حکومت کی کوشش کامیاب ہوں اور نہ صرف صوبہ سندھ بلکہ پورا ملک اس وبا سے محفوظ رہے۔دعوت اسلامی کے مجلس رابطہ کے اراکین سے گفتگو کرتے ہوئے سید ناصر حسین شاہ اور سعید غنی نے کہا کہ وہ چاہتے ہیں کہ مولانا الیاس قادری صاحب ایک ویڈیو بیان جاری کریں جس میں عوام کو حکومت سندھ کی جانب سے جاری کردہ ہیلتھ ایڈوائزری سے متعلق آگاہی دیں۔مجلس رابطہ دعوت اسلامی کے اراکین نے اس سلسلے میں اپنے تعاون کا یقین دلاتے ہوئے کہا کہ جلد ہی اس سلسلے میں مولانا الیا س قادری کا بیان جاری کردیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ وہ سندھ حکومت کے تمام اقدامات کی مکمل حمایت کرتے ہیں۔صوبائی وزراء نے سیلانی ویلفیئر کے سربراہ مولانا بشیر فاروقی نے بھی ان کے مرکزی دفتر میں ملاقات کی اور انہیں کرونا وائرس پر قابو پانے کے حوالے سے لئے جانے والے حکومتی اقدامات سے آگاہ کیا۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ سندھ حکومت چاہتی ہے کہ زندگی کے تمام شعبوں سے تعلق رکھنے والے لوگ مشکل کی اس گھڑی میں حکومت کا ساتھ دیں تاکہ اس وبا سے نجات حاصل کی جا سکے۔مولانا بشیر فاروقی نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جس طرح پہلے دن سے سندھ حکومت نے کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے اقدامات کئے ہیں وہ قابل ستائش ہیں۔انہوں نے بتایا کہ سیلانی ویلفیئر نے بھی سندھ حکومت کے اقدامات کے تحت اپنے تمام مراکز پر حکومت کی جاری کردہ صحت کی اصلاحات جاری کردی ہیں۔مولانا بشیر نے کہا کہ وہ حکومت سندھ کا ہر ممکن ساتھ دیں گے تاکہ اس وباء سے جلد نجات کو ممکن بنایا جا سکے ۔ صوبائی وزراء نے ان کے کردار کو سراہتے ہوئے ان کے تعاون پر ان کا شکریہ ادا کیا۔

موجودہ نااہل حکومت عوام دشمن پالیسیوں پر عمل پیرا ہے۔ انور بلتی


pml n sukkur March 15, 2020 | 7:16 PM

سکھر( نیوزآن لائن) پاکستان مسلم لیگ ن کے قائد میاں نواز شریف کے پرسنل فوٹو گرافر انور بلتی نے کہا ہے موجودہ حکومت کے پاس نا تو ملک کی تعمیر و وترقی کیلئے کچھ ہے اور ناہی اس ملک کی غریب اور مظلوم عوام کیلئے پی ٹی آئی حکومت ن لیگ کے دور اقتدار میں ملک اور عوام کے منصوبوں اور پروگراموں پر اپنی تختیاں لگا سیاست چمکانے کی ناکام کوشش کررہی ہے پاکستان کی حالیہ مہنگائی نے دنیا کے تمام ممالک کے نا صرف ریکارڈ توڑے ہیں بلکہ عوام سے جینے کی امنگ اور دو وقت کی روٹی تک چھین لی ہے ،موجودہ نااہل حکومت عوام دشمن پالیسیوں پر عمل پیرا ہے آج ملک کا ہر طبقہ پریشان حال نظر آرہا ہے اشا اللہ وطن عزیز ایک بار پھر ن لیگ کے قائد میاں نواز کی قیادت میں بحرانوں سے نکال کر خوشحالی کی جانب گامزن ہوگا ان خیالات کا اظہار انہوں نیگذشتہ روز پاکستان مسلم لیگ ن ڈسٹرکٹ سکھر کے صدرخورشید احمد میرانی، جنرل سیکریٹری محمداعظم خان ، سینئر نائب سعید حسین مغل، نائب صدر آغا عارف درانی، شیخ نظام جان ، سکھر سٹی کے آرگنائزر خالد آرائیں، سلیم راجپوت، رب نواز مری تعلقہ روھڑی کے صدر فھیم گرگیج ،اخلاق ھاشمی، بابو کھوسو، وزیر علی شیخ. عبدالفتاح ابڑو.، ایڈووکیٹ عبدلحسیب کھوڑو،انفارمیشن سیکریٹری گل حسن کھوسو ، ڈپٹی انفارمیشن سیکریٹری چوہدری عبدالمجیب کمبوہ سٹی سکھر کے آرگنائزر خالد آرائیں، ربنوازمری ، سلیم ،مظفرمنگی کے ہمراہ سکھر اور اسکے گردنواح کے مختلف علاقوں کا دورہ کرتے ہوئے ریڑھی بانوں،دکانداروں سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا ،دورے کے موقع پر انہوں نے شہر سکھر کے مختلف تفریحی پوائنٹ کی سیر کی اور شہر کی حالت زار پر دکھ کا اظہار بھی کیا ،بعد ازیں انہوں نے ن لیگ ضلع سکھر کے عہدے داروں کے ہمراہ سنئیر رہنماں اور کارکنان سے ملاقات کیں ۔

ریلوے رشید کے سبب ٹرین میں سفر کرنے والوں کے سر پر موت منڈلاتی رہے گی’ عاجز دھامراہ


PPPsaysitlost23activiststorecentviolence_567-349x238 March 1, 2020 | 8:33 PM

سلیکٹڈ وزیراعظم عمران نیازی کو عوام سے زیادہ اپنے رٹے رٹائے طوطے عزیز ہے’ وقاص شوکت ‘ جانی میمن ‘مشترکہ بیان
کراچی:(نیوزآن لائن) پاکستان پیپلز پارٹی سندھ کے سیکریٹری اطلاعات عاجز دھامراہ، ضلع شرقی کے سیکریٹری اطلاعات وقاص شوکت اور ضلع کورنگی کے سیکریٹری اطلاعات جانی میمن نے اپنے مشترکہ بیان میں دن بہ دن بڑھتے ریلوے حادثات پر انتہائی دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اسے وزارت ریلوے کی نااہلی اور نالائقی قرار دیتے ہوئے کہا کہ شیخ رشید صرف باتیں کرنے والے طوطے کے سوا کچھ نہیں ہے جسے رٹا رٹایا سبق ملنے کے بعد صرف باتوں کے تیر سے اپنی وزارت اور اپنے آپ کو چلا رہے ہیں۔معزز عدالت کے سامنے اپنی کارکردگی کا جھوٹ بول کر انسانی جانوں سے کھیلنے کا سلسلہ نہیں روک سکا ہے گزشتہ روز سکھر میں اورآج جامشورو ڈسٹرکٹ سیہون کے قریب ٹرین اور چنگچی میں حادثات پر شیخ رشید کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ انہوں نے کہا کہ سلیکٹڈ وزیراعظم عمران نیازی کو عوام سے زیادہ اپنے طوطے عزیز ہے کیونکہ جب تک وزارت ریلوے کے ساتھ شیخ رشید کا نام جوڑا ہے ٹرین میں سفر کرنے والوں کے سر پر موت منڈلاتی رہے گی۔ پی پی پی رہنمائوں نے کہا کہ نالائق حکومت کے آنے کے بعد ملک کو آئی ایم ایف کے پاس گروی رکھ دیا گیا ہے معاشی پالیسی ورلڈ بینک چلا رہا ہے زرعی پالیسی سلیکٹڈ وزیراعظم کے اے ٹی ایم کنٹرول کررہے ہیں اور اب انسانی زندگیوں پر ریلوے رشید مسلط کر کے غریب مٹائوں پروگرام پر عملدرآمد کیاجارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی نااہل حکومت کے دن گنے جا چکے ہیں اور بہت جلد عوام ان نااہل اور نالائقوں کو ایوانوں سے اٹھا کر گھر کا راستہ دکھائے گی۔

ملک میں پیٹرو ل مصنوعات کی قیمت میں معمولی کمی وفاقی حکومت کا ڈرامہ ہے,محمد اسماعیل راہو


ismail rahu March 1, 2020 | 8:24 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)سندھ حکومت نے پیٹرول مصنوعات کی قیمت میں 5 روپے معمولی کمی کو ڈرامہ قرار اور 15 روپے کمی کا مطالبہ کردیا.وزیرزراعت محمد اسماعیل راہو نے جاری کردہ بیان میں کہاہے کہ سندھ حکومت وفاق سے پیٹرول مصنوعات میں 15 روپے کمی کا مطالبہ کرتی ہے,ملک میں پیٹرو ل مصنوعات کی قیمت میں معمولی کمی وفاقی حکومت کا ڈرامہ ہے,کوروناوائرس کے باعث عالمی منڈی میں پیٹرول مصنو عات کی قیمتوں میں بہت زیادہ کمی ہوئی ہے.صوبائی وزیر نے کہا کہ عالمی منڈی میں تیل کے نرخ گرنے کے حساب سے بیس روپے کمی کرنی چاہئے تھی,مگر وزیراعظم نے پیٹرول مصنوعات میں محض 5 روپیکمی کرکے قوم پربڑا احسان کیاہے,وفاقی حکومت مدینہ ریاست کا نام استعمال کرکے عوام کو بیوقوف بنارہی ہے.انہوں نے کہا کہ حکو مت پہلے ہی پیٹرول مصنوعات پے بے پناہ ٹیکس کی صورت میں کھربوں روپے عوام سے لوٹ رہی ہے,اب کم از کم قیمتوں میں کمی کا فائدہ تو عوام کو دے,عوام کو فقط 5 روپے کا لولی پوپ دیکراصل فائدہ لاڈ لی کابینہ نے بٹور لیا.اسماعیل راہو نے کہا کہ وفاق 5 روپے کی جگہ پیٹرول مصنوعات کی قیمتوں میں 15روپے کمی کرے, موجودہ حکومت کی یہ لْوٹ کھسْوٹ اسے جلد لے ڈْوبے گی, قوم کیٹیکس کے پیسوں سیتیل خرید کرقوم کو ہی مہنگا دے کر کیا خدمت ہورہی ہے؟ عمران خان ملک چلانے میں ناکام ثابت ہوئے ہیں

موجودہ حکومت کی عوام دشمن اور ناقص پالیسیوں سے پاکستانی شہری بخوبی واقف ہوچکا ہے، خورشید میرانی


pml sukur March 1, 2020 | 8:01 PM

سکھر:( نیوزآن لائن) پاکستان مسلم لیگ (ن) ڈسٹرکٹ سکھر کے صدر خورشید میرانی نے کہا ہے نااہل سیلیکٹیڈ عمران حکومت کے دن گنے جا جاچکے ہیں موجودہ حکومت کی عوام دشمن اور ناقص پالیسیوں سے پاکستانی شہری بخوبی واقف ہوچکا ہے ن لیگ نے ہمیشہ پاکستان کی سلامتی و ملک کی خوشحالی سمیت عوام کے حقوق فراہمی کیلئے دن رات کوشش کی ہے ن لیگ کے قائدین نے ہمیشہ حق اور سچ کی آواز بلند کی اور عوام کے سامنے مخالفین کے جھوٹے ہتھکنڈوں کے باوجود سرخرو ہوئی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی ایم ایل (ن) سکھر سٹی کی آرگنائیزنگ کمیٹی کے عھدیداران خالد آرائیں اور عدنان راجپوت کی طرف سے ڈسٹرکٹ عہدیداروں اور کارکنوں کے اعزاز میں منعقد تقریب سے خطاب کے دوران کیا تقریب میں پاکستان مسلم_لیگ ن ڈسٹرکٹ سکھر کے صدر خورشید احمد میرانی سمیت سینیئر نائب صدر سعیدحسین مغل، جنرل سیکریٹری محمداعظم خان،نائب صدر احمد حسین بھئی،جوائنٹ سیکریٹری یونس راجپوت،جوائنٹ سیکریٹری شیخ نظام جان، انفارمیشن سیکریٹری گل حسن کھوسو،ڈپٹی انفارمیشن سیکریٹری چوہدری عبدالمجیب کمبوہ ،کوآرڈینیٹر عبدالفتاح ابڑو ،خالد آرائیں،عدنان راجپوت ،بابوکھوسو اور دیگر عہدے داروں سمیت کارکنان نے شرکت کی ،تقریب میں شرکا نے ن لیگ کے قائد میاں نواز شریف کی صحت یابی کیلئے دعا سمیت ن لیگ کے عوامی مشن کو گھر گھر پہنچانے کیلئے اپنا کردار ادا کرنے کے عزم کا اظہار کیا ۔

پاکستان میں ہمیشہ سے آباد تمام مذاہب سے تعلق رکھنے والے لوگوں کو نہ صر ف ہر قسم کی مکمل مذہبی آزادی حاصل ہے۔سید ناصر حسین شاہ


3 (1) February 23, 2020 | 8:00 PM

کراچی:(نیوزآن لائن ) سندھ کے وزیر برائے اطلاعات ، بلدیات، ہاؤسنگ ٹاؤن پلاننگ ، مذہبی امور ، جنگلات و جنگلی حیات سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ پاکستان میں ہمیشہ سے آباد تمام مذاہب سے تعلق رکھنے والے لوگوں کو نہ صر ف ہر قسم کی مکمل مذہبی آزادی حاصل ہے بلکہ ان کے حقوق کا مکمل تحفظ بھی کیا جاتا ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ یہی قائد اعظم محمد علی جناح کی سوچ تھی اور اسی سوچ کو بعد میں شہید ذوالفقار علی بھٹو ، شہید محترمہ بینظیر بھٹو نے اپنی ہر پالیسی کا حصہ بنایا۔اور اب پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا ویثرن بھی یہی ہے۔اور اس سلسلے میں ان کی واضح ہدایات ہیں۔انہوں نے یہ بات اتوار کے روز سوامی نارائن مندر میں جاری چار روزہ میلے میں شرکت کے دوران کہی۔سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی وہ واحد پارٹی ہے جس نے ہمیشہ اقلیتوں کو سب سے زیادہ نمائندگی دی ہے۔صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری اور وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نہ صر ف خو د اقلیتوں کے مذہبی تہواروں میں شرکت کرتے ہیں بلکہ وہ کا بینہ کے اراکین کو بھی ان تہواروں میں شریک ہونے کی ہدایت کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کی حکومت نے اقلیتی برادری سے تعلق رکھنے والے لوگوں کے حقوق کے تحفظ کے لئے سب سے زیادہ قانون سازی کی ہے۔انہوں نے اس سلسلے میں چھوٹی عمر کی شادی پر پابندی اور دیگر قوانین کی مثال دی۔ سید ناصر حسین شاہ نے اس موقع پر سندھ حکومت کی جانب سے ہندو برادری کے لئے ہندؤں کی مقدس کتاب بھگوت گیتا کی دس ہزار کاپیاں دینے کا بھی اعلان کیا۔صوبائی وزیر اطلاعات نے مزید کہا کہ ہندوستان اور پاکستان میں اقلیتوں سے برتاؤ میں واضح فرق ہے ، ہندوستان میں اقلیتیں مودی حکومت کے کالے قوانین کی وجہ سے سخت پریشانی میں مبتلا ہیں۔اس کے علاوہ بھی وہاں آئے دن اقلیتوں کے ساتھ نا انصافی کا سلوک برتاؤ کیا جاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہندوستان کا تعلیم یافتہ طبقہ اب اس با ت کو سمجھ چکا ہے کہ مودی حکومت اقلیتوں کے ساتھ ذیادتی مرتکب ہو رہی ہے۔سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اس کے برعکس پاکستان میں اقلیتوں کے ساتھ نا صرف برابر ی کا سلوک روا رکھا جاتا ہے بلکہ انہیں ہر قسم کی مکمل مذہبی آزادی حاصل ہے۔سوامی نارائن مندر پہچنے پر ہندو برادری کے اراکین نے سید ناصر حسین شاہ کا پرتپاک استقبال کیا اور انہیں اجرک اور پھولوں کا تحفہ پیش کیا۔اس موقع پر صوبائی وزیر کے ہمراہ وزیراعلیٰ سندھ کے معاون خصوصی شہزاد میمن، ڈاکٹر لال چند اکرانی، ، چیئرمین ڈی ایم ساؤتھ ملک فیاض بھی موجود تھے۔ اس موقع پر آ سٹریلیا سے آئے ہوئے پنڈت شیام نند اور رام یوگا داس نے صوبائی وزیر اطلاعات سید ناصر حسین شاھ اور ان کے ہمراہ آئے ہوئے وفد سے ملاقات کی اور انہیں مندر کا دورہ کروایا۔ دریں اثناء صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے عوام کو مہنگائی اور بیروزگاری کے سواء کچھ نہیں دیا۔صوبائی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ تبدیلی سرکار نے آکر لوگوں کی مشکلات میں کئی گنا اضافہ کردیا ہے۔انہوں نے کہا کہ لوگ پی ٹی آئی سے تنگ ہوگئے ہیں۔ اور جلد اس نااہل حکومت سے چھٹکارا حاصل کر نا چاہتے ہیں۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اسد عمر اور پی ٹی آئی کے دیگر اراکین محض مگرمچھ کے آنسو ں بہا رہے ہیں ۔ ایک سوال کے جواب میں صوبائی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ پنجاب میں بلدیاتی نمائندوں کو وقت سے پہلے ہی فارغ کردیا گیا ، بلکہ نئے الیکشن بھی نہیں کروائے جا رہے۔ انہوں نے کہا کہ خیبرپختونخواہ میں بھی بلدیاتی الیکشن نہیں کروائے جا رہے ہیں ۔ سندھ صرف واحد صوبہ ہے جہاں نہ صرف بلدیاتی نمائندے موجود بلکہ وہ اپنا کام انتہائی خوش اسلوبی سے انجام دے رہے ہیں۔سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کی واضح ہدایات میں بلدیاتی نمائندوں کو مزید اختیارات دے جائیں تاکہ ان کے ذریعے عوام کو زیادہ سے زیادہ سہولیات مہیا کی جا سکیں۔

دوہزار بیس کے بلدیاتی انتخابات میں پاکستان پیپلز پارٹی کامیاب ہوگی۔سہیل انور سیال


sohail anwar siyal February 23, 2020 | 7:39 PM

بلاول بھٹو زرداری کی ہدایت پر بلدیاتی انتخابات کی تیاریاں بھرپور انداز میں جاری ہیں۔صوبائی وزیر
بلدیاتی انتخابات میں تاخیر کی باتیں کرنے والے جمہوریت دشمن ہیں۔ صوبائی وزیر برائے آبپاشی
کراچی:(نیوزآن لائن) سندھ کے وزیر برائے آبپاشی، زکوٰة و عشر اور اوقاف سہیل انور سیال نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے نوجوان قائد بلاول بھٹو زرداری کی ہدایت پر سندھ بھر میں بلدیاتی انتخابات کی تیاریاں بھرپور انداز میں جاری ہیں۔سال 2020 کے بلدیاتی انتخابات میں پاکستان پیپلز پارٹی کامیابی حاصل کرے گی۔پاکستان پیپلز پارٹی کی مزاحمتی اور نظریاتی سیاست نے محروم طبقات کی محرومی کے خاتمے کیلئے ہمیشہ عملی اقدامات کئے ہیں۔جاری کردہ ایک بیان میں سہیل انور سیال نے کہا کہ بلدیاتی انتخابات میں تاخیر کی باتیں کرنے والے جمہوریت دشمن ہیں۔ جمہوریت اختیارات کی منصفانہ تقسیم کا نام ہے۔بااختیار اداروں سے جمہوریت مزید مضبوط ہوگی۔انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی نے نچلی سطح پر عوام سے رابطہ و رشتہ بحال رکھا ہوا ہے۔یہی وجہ ہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی آج پہلے سے زیادہ مضبوط و مستحکم ہے۔صوبائی وزیر سہیل انور سیال نے مزید کہا کہ ملک میں سلیکٹڈ احتساب ہو رہا ہے اور سیاسی حریفوں کو انتقام کا نشانہ بنانے والوں سے عوام اچھی طرح آگاہ ہیں۔عوام” نیا پاکستان” کے کھوکھلے نعروں کے بھیانک نتائج دیکھ چکی ہے۔لوگوں کو بیروزگار کرنے والوں اور قوم کے معاشی قاتلوں کو عوام بلدیاتی انتخابات میں مسترد کر دے گی۔

)حکومت چین میں پھنسے پاکستانی طلبہ کو تحفظ فراہم کرے۔مسلم اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن


Muslim Student Organization Karachi February 23, 2020 | 7:30 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)حکومت چین میں پھنسے پاکستانی طلبہ کو تحفظ فراہم کرے۔اعلیٰ تعلیم کے حصول کے لیے چین جانے والے طلبہ ہمارا مستقبل ہیں۔جو قومیں اپنے مستقبل کے معماروں کی قدر نہیں کرتیں وہ کامیاب نہیں ہوسکتیں۔کورونا وائرس پھیلنے کے باعث 170 پاکستانی طلبہ ووہان یونیورسٹی میں پھنسے ہیں۔طلبہ کو اعلی تعلیمی مواقع فراہم کرنا حکومت کا آئینی اور اخلاقی فریضہ ہے۔ان خیالات کا اظہار مسلم اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کراچی ڈویژن کے ناظم ملک اشتیاق،ناظم عمومی شیرجہان،ناظم اطلاعات عدیل اعوان ،ملک اسامہ و دیگر نے مسلم میڈیا سیل سے جاری ایک بیان میں کیا ۔انہوں نے کہا کہ ایم ایس او طلبہ حقوق کی علمبردار طلبہ تنظیم ہے۔جو علاقائی،لسانی،گروہی اور مسلکی تعصبات سے بالاتر ہوکر ملا اور مسٹر کو غلبہ اسلام اور استحکام پاکستان کے لیے ایک پلیٹ فارم پر جمع کرتی ہے۔پاکستانی حکومت چین میں پھنسے پاکستانی طلبہ کو طبی تحفظ فراہم کرے۔

سندھ حکومت متعلقہ اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ مل کر صحت کی سہولیات مہیا کررہی ہے۔ مرتضی بلوچ


Karachi-Sindh February 16, 2020 | 8:00 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) صوبائی وزیر برائے انسانی بستیوں غلام مرتضی بلوچ نے کہا ہے کہ حکومت سندھ متعلقہ اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ مل کر صوبے کے عوام کو صحت کی بہتر سہولیات فراہم کرنے کے لیے کوشاں ہے اور ترجیحی بنیادوں پر اس شعبے میں بہتری لائی جارہی ہے۔ یہ بات انہوں نے
سندھ حکومت اور آغا خان یونیورسٹی ہسپتال کے مشترکہ تعاون سے “پاکستان لائف سیورز پروگرام ” کے عنوان پر منعقد ہونے والے ایک سیمینار میں خطاب کرتے ہوئے کہی۔
سیمینار میں پارلیمانی سیکریٹری بلدیات رکن سندھ اسمبلی سلیم بلوچ ، آغا خان یونیورسٹی کے پروفیسرز سمیت ڈاکٹرز کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ سیمینار میں زندگی بچانے (پیشنٹ لائف سیونگ) مریض کو فرسٹ ایڈ دینے کے لئے سندھ سمیت پورے پاکستان کے میڈیکل کالجز اور یونیورسٹیز میں تربیت دینے پر بریفنگ دی گئی۔ صوبائی وزیر برائے انسانی بستیوں غلام مرتضی بلوچ نے مذید کہا کہ سندھ حکومت صوبے بھر کی عوام کے لئے صحت کے شعبے میں نمایاں کام کر رہی ہے، آغا خان سمیت دیگر اداروں سے معاونت کرتے ہوئے سندھ حکومت صحت کے شعبے میں عوام کی خدمت میں مصروف عمل ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت کی ہر ممکن کوشش ہے کہ صوبے کے کم ترقیاتی علاقوں میں بھی صحت کی سہولیات مہیا کی جائیں اور اس مقصد کے حصول کے لئے حکومت سندھ متعدد غیر سرکاری تنظیموں کے ساتھ مل ان سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنارہی ہے۔

سندھ حکومت متعلقہ اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ مل کر صحت کی سہولیات مہیا کررہی ہے۔ مرتضی بلوچ


murtuza baloch February 16, 2020 | 7:47 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) صوبائی وزیر برائے انسانی بستیوں غلام مرتضی بلوچ نے کہا ہے کہ حکومت سندھ متعلقہ اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ مل کر صوبے کے عوام کو صحت کی بہتر سہولیات فراہم کرنے کے لیے کوشاں ہے اور ترجیحی بنیادوں پر اس شعبے میں بہتری لائی جارہی ہے۔ یہ بات انہوں نے سندھ حکومت اور آغا خان یونیورسٹی ہسپتال کے مشترکہ تعاون سے “پاکستان لائف سیورز پروگرام ” کے عنوان پر منعقد ہونے والے ایک سیمینار میں خطاب کرتے ہوئے کہی۔ سیمینار میں پارلیمانی سیکریٹری بلدیات رکن سندھ اسمبلی سلیم بلوچ ، آغا خان یونیورسٹی کے پروفیسرز سمیت ڈاکٹرز کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ سیمینار میں زندگی بچانے (پیشنٹ لایف سیونگ) مریض کو فرسٹ ایڈ دینے کے لئے سندھ سمیت پورے پاکستان کے میڈیکل کالجز اور یونیورسٹیز میں تربیت دینے پر بریفنگ دی گئی۔ صوبائی وزیر برائے انسانی بستیوں غلام مرتضی بلوچ نے مذید کہا کہ سندھ حکومت صوبے بھر کی عوام کے لئے صحت کے شعبے میں نمایاں کام کر رہی ہے، آغا خان سمیت دیگر اداروں سے معاونت کرتے ہوئے سندھ حکومت صحت کے شعبے میں عوام کی خدمت میں مصروف عمل ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت کی ہر ممکن کوشش ہے کہ صوبے کے کم ترقیاتی علاقوں میں بھی صحت کی سہولیات مہیا کی جائیں اور اس مقصد کے حصول کے لئے حکومت سندھ متعدد غیر سرکاری تنظیموں کے ساتھ مل ان سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنارہی ہے۔

سندھ حکومت کشمیری بھائیوں کی آزادی کی جد وجہد میں ان کے ساتھ ہے۔ غلام مرتضی بلوچ۔


Ghulam-Murtaza February 5, 2020 | 5:53 PM

کراچی۔ (نیوزآن لائن )صوبائی وزیر برائے انسانی بستیوں اور خصوصی ترقی غلام مرتضی بلوچ نے کہا ہے کہ سندھ حکومت اور عوام آزادی کی جد وجہد میں اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ کھڑے ہیں اور کشمیری بیگناہ مسلمانوں پر قابض بھارتی فوج کے ظلم و ستم کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہیں اور اقوام عالم سے اس ظلم و بربریت کا نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہیں۔ یہ بات آج انہوں نے آزاد کشمیر میں کوہلو کے مقام پر یوم کشمیر کے سلسلے میں منعقد ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ واضح رہے کہ سندھ کے وزیر برائے انسانی بستیوں غلام مرتضء بلوچ سندھ کی نمائندگی کرنے کے لئے آزاد جموں کشمیر کوہلو پہنچے ہیں۔ انہوں نے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اور وزیر اعلء سندھ سید مراد علی شاھ کی ہدایت پر یوم یکجہتی کشمیر پروگرامز میں شرکت کی۔ صوبائی وزیر غلام مرتضی بلوچ نے کوہلو برج پوائنٹ پر کشمیری بھائیوں سے اظھار یکجہتی کے طور پر انسانی زنجیر سمیت ریلی میں بھی شریک ہوئے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر غلام مرتضی بلوچ نے کہا کہ سندھ حکومت کشمیری بھائیوں کے ساتھ ہے ، وزیر اعلء سندھ سید مراد علی شاھ کا یوم کشمیر پر پیغام لے کر کوہلو آیا ہوں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ کشمیر ہماری شہہ رگ ہے مسئلہ کشمیر پر سندھ سمیت پورے ملک کی عوام یک زبان اور متحد ہے ۔۔ صوبائی وزیر غلام مرتضی بلوچ نے کہا کہ مودی حکومت نہتے کشمیریوں پر جتنے بھی ظلم کر لے بہت جلد آزاد کشمیر کے لوگوں کی طرح جموں کشمیر کے بہن بھائی بھی آزاد فضا میں سانس لیں گے۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی جارحیت سے کشمیریوں کے حوصلے پست نہیں ہو سکتے, کشمیر جنت ہے اور جنت کبھی کسی کافر کو نہیں ملی گی ۔ صوبائی وزیر غلام مرتضی بلوچ نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کا کشمیر پر موقف بلکل واضع ہے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کشمیر کی آواز بن کر کھڑے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مسلسل بھارتی ظلم و جبر کا مقابلہ کرنے پر کشمیری بھائیوں کی تحریک آزادی کو سلام پیش کرتے ہیں کشمیر بن کر رہے گا پاکستان ۔ صوبائی وزیر غلام مرتضی بلوچ نے کہا کہ کشمیریوں پر ہونے والے ظلم و ستم پر عالمی برادری کو جاگنا ہوگا اور بھارتی ظالم حکومت کو کشمیریوں کو ان کا حق دینا ہوگا۔

عالمی طاقتوں اور عالمی اداروں کی مسئلہ کشمیر پر مجرمانہ خاموشی اور متعصبانہ روش پر شدید مذمت کرتے ہیں: مولانا ناصر خالد محمود سومرو


jui February 5, 2020 | 5:42 PM

کشمیر میں مظلوم کشمیریوں پر بدترین ظلم پر اقوام متحدہ خاموش تماشائی کا کردار ادا کر رہی ہے: محبت علی کھڑو
لاڑکا نہ:(نیوزآن لائن ) جمعیت علمائے اسلام ضلع لاڑکانہ کے امیر مولانا ناصر خالد محمود سومرو اور محبت علی کھڑو نے کہا ہے کہ کشمیر کے مظلوم مسلمانوں پر بھارت کے بدترین ظلم اور تشدد پر عالمی طاقتوں اور عالمی اداروں کی مسئلہ کشمیر پر مجرمانہ خاموشی اور متعصبانہ روش اختیار کرنے پر شدید دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہم کشمیری مظلوم مسلمانوں کے ساتھ شابہ بشانہ کھڑے ہیں، پاکستانی عوام کشمیر کی آواز بن کر دنیا کو بھارت کی بربریت سے آگاہ کیا ہے، کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے، انہوں نے کہا کہ کشمیر کی سرزمین پر بھارت کی درندہ صفت فوجیں اتنی بڑی تعداد میں نہتے کشمیریوں کی نسل کشی پر مامور ہیں، کہ اس کی کوئی مثال دنیا کی تاریخ میں نہیں ملتی، اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ اظہار یکجھتی کرتے ہوئے نہتے کشمیری بھائیوں اور بہنوں سمیت بچوں اور بوڑھوں کو بیگناہ شہید کیا جارہا ہے، کشمیریوں کا خون رائیگان نہیں جائیگا، انہوں نے مزید کہا کہ ہم بھارت کو بتادینا چاہتے ہیں کہ تمہارے ناپاک ارادے خاک میں مل جائینگے، جبر کا دور ختم ہوجائیگا، اور وہ دن دور نہیں کہ کشمیر پاکستان کا حصہ بن جائیگا۔

ہماری جدوجہد ناانصافی کی چکی میں پسے نیم طبی عملے کیلئے ہے’ نیاز احمد خاصخیلی


all sindh peoples paramedical February 5, 2020 | 5:33 PM

ہم نے شہید ذوالفقار علی بھٹو، شہید محترمہ بینظیر بھٹو کے فلسفے اور سوچ کے مطابق مریضوں کی خدمت کا بیڑہ اٹھایا
طبی سہولتوں کی فراہمی میں سندھ حکومت دوسرے صوبوں سے بہتر کام کررہی ہے ، پنجاب سے آئے وفد سے گفتگو
کراچی: (نیوزآن لائن) طبی سہولتوں کی فراہمی میں سندھ حکومت دوسرے صوبوں سے بہتر کام کررہی ہے ، حکومت سندھ نے” صحت سب کے لیے ”کے نعرے کے تحت عوام کو سستے یا مفت علاج کی سہولیات فراہم کرنے کے لیے کئی عشرے پہلے سے عملدرآمدی منصوبہ تشکیل دیا اور ضلعی سطح پر سول اسپتال ، تعلقہ سطح پر تعلقہ اسپتال سے لے کر یونین سطح تک بنیادی صحت مراکز (بیسک ہیلتھ یونٹس)قائم کئے ۔قومی ادارہ برائے امراض قلب(این آئی سی وی ڈی)،ایس آئی یو ٹی، گمبٹ انسٹیٹویوٹ آف میڈیکل سائنسز، سائبر نائف روبوٹک سرجری و دیگر بین الاقوامی طرز کے ہسپتال قائم کرنے کے بعد سندھ حکومت نے صوبے کے پہلے سرکاری بون میرو یونٹ کا افتتاح بھی ہو چکا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے دفتر میں پنجاب سے آئے کل پاکستان خضری برادرز تنظیم کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ سید منیر شاہ، جاوید اختر شیخ، قادر اقبال چنہ، احسان کلہوڑو، عباس مہر، انور شیخ، ممتاز میمن ودیگر بھی موجود تھے۔ نیاز احمد خاصخیلی کا کہنا تھا کہ ہماری تنظیم نے گزشتہ کئی سالوں سے شہید ذوالفقار علی بھٹو، شہید محترمہ بینظیر بھٹو کے فلسفے اور سوچ کے مطابق مریضوں کی خدمت کا بیڑہ اٹھایا اور ناانصافیوں کی چکی میں پسے نیم طبی عملے کے حقوق کی آواز اٹھائی اور ہماری جدوجہد کے پیش نظر گاؤ ی ویکسینٹرز کو مستقل کیا گیا ، پیرامیڈیکل کے ہیلتھ الاؤنس کی سمری پروسیس میں ہے جلد یہ معاملہ بھی حل ہوجائے گا۔ شہاب الدین غوری کی صدارت میں وفد نے آل سندھ پیپلز پیرامیڈیکل اسٹاف کراچی کے قائد کی خدمات کو سراہا اور نیک خواہشات کا اظہار کیا۔

پاکستان مسلم لیگ ن ڈسٹرکٹ سکھر کے زیر اہتمام یوم کشمیر کے موقع پر کارکنان کی کثیر تعداد نیسکھر پریس کلب تک کشمیر بنے گا پاکستان ریلی نکالی


pml n  sukkur February 5, 2020 | 5:23 PM

سکھر:(نیوزآن لائن )پاکستان مسلم لیگ ن ڈسٹرکٹ سکھر کے زیر اہتمام یوم کشمیر کے موقع پر کارکنان کی کثیر تعداد نے ڈسٹرکٹ سکھر کے صدر خورشید میرانی و دیگر کی قیادت میں مظلومین کشمیر سے اظہار یکجہتی کیلئے انور پراچہ تا سکھر پریس کلب تک کشمیر بنے گا پاکستان ریلی نکالی اور پریس کلب کے سامنے مظاہرہ کرتے ہوئے بھارتی جارحیت کے خلاف شدید نعریبازی کی کارکنان نے ہاتھوں میں پاکستانی اور کشمیری پرچم ، پلے کارڈ اور بینرز اٹھا رکھے تھے مظاہرے میں پاکستان مسلم لیگ ن ڈسٹرکٹ سکھر کے سینیئر نائب صدر سعید حسین مغل، جنرل سیکریٹری محمد اعظم خان ، نائب صدر آغا عارف درانی، نائب صدر احمد حسین بھٹی، کوآرڈینیٹر عبدالفتاح ابڑو ، انفارمیشن سیکریٹری گل حسن کھوسو ، جوائنٹ سیکریٹری شیخ نظام جان، تعلقہ روھڑی کے صدر فھیم گرگیج ، سینیئر نائب صدر بابو کھوسو، نائب صدر اخلاق ھاشمی، جنرل سیکریٹری الاھی بخش سولنگی ، انفارمیشن سیکریٹری وزیرعلی شیخ ، سکھر سٹی کے رھنما خالد آرائیں، عدنان راجپوت ، چوہدری مجاھد، کاشف عباسی اور دیگر عھدیداران بھی شریک تھے،کارکنان سے خطاب کرتے ہوئے پی ایم ایل ن ڈسٹرکٹ سکھر کے صدر خورشید میرانی و دیگر رہنماں کا کہنا تھا کہ آج پوری پاکستانی قوم نے بھرپور طریقے سے یومِ یکجہتی منا کر دنیا کو بتا دیا ہے کہ وہ کل بھی اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ تھے اور ہمیشہ رہے گے، حکومت پاکستان کشمیر کے مسئلے پر بھرپور طریقے سے مسلمان ممالک کے ساتھ بات چیت کرے تاکہ تمام مسلمان ممالک یکجا ہوکر کشمیر سمیت دیگر مسلمان ممالک میںہونیوالے ظلم و ستم کے خلاف بھرپور آواز بلند کر سکیں بھارتی درندے جس قدر کشمیروں پر ظلم و ستم کرتے ہیں اسی قدر جذبہ آزادی اور شوق شہادت بڑھتا جا رہا ہے۔پاکستانی قوم کشمیریوں کی اخلاقی اور سفارتی حمایت جاری رکھے گی اور پوری قوم کشمیری بھائیوں کیساتھ کھڑی ہے۔

ادارہ شماریات کی جاری کردہ مہنگائی کی تفصیلات وفاقی حکومت کے منہ پے طماچہ ہے, اسماعیل راہو


ismail raho February 2, 2020 | 5:09 PM

ملک میں مہنگائی کا طوفان برپا کرنیوالے صوبوں کو کہتے ہیں کہ مہنگائی پر کنٹرول کریں, اسماعیل راہو
ملک میں مہنگائی میں اضافے کا اعلی عدلیہ نوٹس لیاور حکو مت سے جواب مانگیں. اسماعیل راہو
کراچی:(نیوزآن لائن)سندھ سرکار کا صوبوں کو مہنگائی پر کنٹرول کرنے والے بیان پر وزیراعظم کو جواب۔وزیرزراعت سندھ اسماعیل راہو نے مزید کہا ہے کہ ادارہ شماریات کی جاری کردہ مہنگائی کی تفصیلات وفاقی حکومت کے منہ پے طما چہ ہیں,ملک میں مہنگائی کا طوفان برپا کرنیوالے صوبوں کو کہتے ہیں کہ مہنگائی پر کنٹرول کریں, ملک میں مہنگائی کے طوفان میں روز بہ روز شدید اضافہ ہو رہا ہے,وزیرا عظم نے مہنگائی کے سابقہ تمام رکارڈ توڑکر مہنگا ئی کپ بھی اپنے نام کرلیا.انہوں نے کہا کہ عمران خان صوبوں میں مہنگائی کا سیلاب لاکرکہتے ہیں کہ تیرنے کا بندو بست بھی خود کریں,ادویات، سبزیاں، پھل،آٹا،دال، چینی، تیل،گیس، دودھ ہر چیز عوام کی پہنچ سے دور کردی گئی, ملک میں مہنگائی کے ذمہ دار وفاقی حکومت کے لاڈلے وزرائ ہیں,خان صاحب کی کچن کابینہ نے پوری قوم کے کچن بند کرا دیے,وزیراعظم کو مہنگائی میں اضافہ کرنیوالیوزرا اور افسروں کو بے نقاب کرنا چاہیے, اگر مہنگائی کے ذمہ داروں کو ظاہر نہ کیا گیا تو پھر وزیراعظم خود ملوث ہیں,وزیراعظم نے مہنگائی کم کر کے عوام کو رلیف نہ دیا تو حکومت کو گھر جانا پڑے گا. اسماعیل راہو نے کہا کہ وفاقی ادارہ شماریات کی مہنگائی کے اعداد شمار کی رپورٹ نے بنی گالا حکومت کی قلعی کھول دی ہے,وزیراعظم جب بھی مہنگائی کانوٹس لیتے ہیں یا اجلاس بلاتے ہیں تو مہںگائی مزید بڑھ جاتی ہے,ایسے فضول نوٹس لینا بند کریں جو اور عوام پر بوجھ بڑہا دیں,کیا وزیراعظم نہیں جانتے کہ مہنگائی کیوں اور کس کی وجہ سے بڑہی ہے,وفاق منافع خوروں کیخلاف کوئی کارروائی نہیں کررہا,ایک سال میں آٹا 25, سبزیاں 104, پیاز 137 فیصد, ٹماٹر 211, آلو 111فیصد مہنگے ہوئے,ان کا فائدہ کس کو پہنچا, صوبائی وزیر نے کہا کہ ایک سال میں سب سے زیاہ چینی کی قیمت میں اضافہ ہوا, جس کا فائدہ نااہل کو پہنچا,ملک میں مہنگائی میں اضافے کا اعلی عدلیہ نوٹس لے اورحکومت سے جواب مانگیں۔

عالم کفر مسلمانوں کے خلاف دہشتگردی کا بازار گرم کر رکھا ہے،جمعیت علمائے اسلام ضلع لاڑکانہ


jui January 12, 2020 | 5:39 PM

لاڑکانہ:(نیوزآن لائن)جمعیت علمائے اسلام ضلع لاڑکانہ کے امیر مولانا ناصر خالد محمود سومرو، محبت علی کھہڑو، مولانا حمیداللہ سیال، مولانا محمد الیاس چنہ، آصف علی مگسی نے اس موقع پر جمعیت علمائے اسلام کے عہدیداروں نے بار ایسوسیئیشن کے نئے منتخب صدر اطہر عباس سولنگی اور مکمل باڈی کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ ملک دشمن قوتیں پھر متحرک ہوچکی ہیں، عالم کفر مسلمانوں کے خلاف دہشتگردی کا بازار گرم کر رکھا ہے، قائد جمعیت حضرت مولانا فضل الرحمن قومی اداروں کی خودمختاری اور آئین کی بالادستی کی جنگ لڑ رہا ہے، انہوں نے مزید کہا کہ کشمیر، فلسطین اور بھارت میں مسلمانوں پر ظلم وستم ڈھائے جارہے ہیں ، کشمیر میں کئی دنوں سے مظلوم کشمیریوں کا قتل عام ہورہا ہے، انہوں نے کہا کہ مسلم دنیا ایک ہو اور اپنے دشمن کو پہچانے، اسلام دشمن قوتیں مسلمانوں کو تقسیم کرکے اپنے ناپاک عزام کے تکمیل کیلئے کام کر رہی ہیں، افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکمران امریکی مفادات کے محافظ بنے ہوئے ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ تبدیلی سرکار عوام کی زندگی میں تبدیلی نہیں لاسکی ملک میں مہنگائی، بیروزگاری عروج پر ہے لوگ دو وقت روٹی کیلئے پریشان ہیں، بجلی، گیس اور ضروریات زندگی کی اشیا کی قیمتیں آسمانوں سے باتیں کر رہی ہیں، حکمران عوام دشمنی پالیسیاں بنا رہے ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ تبدیلی سرکار غریبوں سے زندگی چھین رہی ہیں، تبدیلی سرکار مسلسل قوم کے ساتھ جھوٹ بول رہی ہے،موجودہ سلیکٹیڈ حکمران مہمان ہیں، عوام دشمن حکومت کسی بھی دن ختم ہوسکتی ہے۔

جامعہ کراچی: ڈاکٹر اے کیوخان انسٹی ٹیوٹ آف بائیوٹیکنالوجی اینڈ جینیٹک انجینئرنگ میں بدست ڈاکٹرعبدالقدیر خان حج وعمرہ کمپیوٹرائز قرعہ اندازی


Final for Publication KIBGE January 12, 2020 | 5:21 PM

پانچ سالہ پیپر پڑھ کر صرف پاس ہونے کے بجائے سخت محنت کریںاور زیادہ سے زیادہ مطالعے کو یقینی بنائیں۔ڈاکٹرعبدالقدیر خان
تعلیم وتحقیق کو فروغ دیئے بغیر ہم عصر حاضر کے جدید تقاضوں سے ہم آہنگ نہیں ہوسکتے۔ہمیں جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کرتے ہوئے تحقیق کے رجحان کو فروغ دینے کی ضرورت ہے۔ڈاکٹر خالد عراقی
کراچی:(نیوزآن لائن)معروف ایٹمی سائنسدان ڈاکٹر عبدالقدیر خان نے کہا کہ کراچی کے لوگوں کی خواہش تھی کہ میں کراچی والوں کے لئے بھی کچھ کروں جس پر میں نے اپنی مادرعلمی جامعہ کراچی میں جدید تقاضوں سے ہم آہنگ ڈاکٹر اے کیوخان انسٹی ٹیوٹ آف بائیوٹیکنالوجی اینڈ جینیٹک انجینئرنگ قائم کیا اورمجھے خوشی ہے کہ آج انسٹی ٹیوٹ ہذا میں صرف کراچی کے نہیں بلکہ پورے ملک کے مختلف حصوں سے طلبہ یہاں پر حصول علم کے لئے آتے ہیں اور عصر حاضر کے جدید تقاضوں سے ہم آہنگ ہورہے ہیں۔انہوں نے طلبہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ تعلیم پر توجہ مرکوزرکھیں اور محنت کریں کسی کی بھی محنت رائیگاں نہیں جاتی اور محنت کے ہمیشہ اچھے نتائج نکلتے ہیں،آپ لوگ خوش نصیب ہیں کہ آپ کو اتنا اچھا انسٹی ٹیوٹ اور اساتذہ ملے ہیں اب یہاں پر ہونے والی تدریسی وتحقیقی سرگرمیوں سے استفادہ کرنا آپ کاکام ہے۔میں ہمیشہ تعلیم کے حصول اور فروغ کے لئے کوشاں رہتاہوں۔پانچ سالہ پیپر پڑھ کر صرف پاس ہونے کے بجائے سخت محنت کریںاور زیادہ سے زیادہ مطالعے کو یقینی بنائیںکیونکہ آپ جتنا زیادہ مطالعہ کریں گے اتناہی زیادہ نالج میں اضافہ ہوگا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈاکٹر اے کیوخان انسٹی ٹیوٹ آف بائیوٹیکنالوجی اینڈ جینیٹک انجینئرنگ کے زیر اہتمام منعقدہ چارروزہ ففتھ ڈاکٹر اے کیوخان ونٹراسکول ورکشاپ بعنوان: ”ٹولز اینڈ تکنیکس اِن بائیوٹیکنالوجی” کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ڈاکٹر عبدالقدیر خان نے مزید کہا کہ یہاں سے ایم فل کرنے بعد بیرون ممالک جاکر پی ایچ ڈی اور پی ایچ ڈی کرنے والے طلبہ پوسٹ ڈاکٹر یٹ کریں اور تعلیم کے سلسلے کو جاری رکھیں،ان دو تین سالوں میں خوب محنت کریں کیونکہ یہ محنت پھر زندگی بھر کام آئے گی اور اپنی پڑھائی مکمل کرنے کے بعد وطن واپس آکر ملک کی خدمت کریں اور جو سیکھا ہے وہ دوسروں کو منتقل کریں ۔ آلات کا استعمال، ان پر عبوراوراصولوں کے بارے میں معلومات ہونی چاہیئے یہی کامیابی کا راستہ ہے۔تعلیم کا نعم البدل نہیں آپ کی تعلیم کبھی بیکار نہیں جائے گی،ہمت نہیں ہارنی چاہیئے ۔ہمارے خاندان میں میں پہلافردہوں جس نے باہر جاکر تعلیم حاصل کی اور اس کے بعد میری بیٹیوں،بھتیجوں اور بھانجیوں نے باہر سے تعلیم حاصل کی ۔خاندان کا کوئی ایک بھی فرد تعلیم حاصل کرتاہے توپھر پورا خاندان اس طرف راغب ہوجاتاہے۔انہوں نے انسٹی ٹیوٹ ہذا کے ڈائریکٹر جنرل پروفیسر ڈاکٹر عابد اظہر کی قیادت کو سراہتے ہوئے کہا کہ ان کی قیادت میں انسٹی ٹیوٹ ہذا ترقی کے منازل بہت تیزی سے طے کررہاہے جو لائق تحسین اور قابل تقلید ہے۔اس موقع پرشیخ الجامعہ پروفیسر ڈاکٹر خالد محمود عراقی،ڈاکٹر سرداریاسین ملک ،ڈاکٹر محمد اسماعیل ،پروفیسر ڈاکٹر ضابطہ خان شنوای ،پروفیسر ڈاکٹر عابد اظہر،پروفیسر ڈاکٹر شمشاد زرینہ اور دیگر بھی موجودتھے۔
جامعہ کراچی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر خالد محمود عراقی نے کہا کہ تعلیم وتحقیق کو فروغ دیئے بغیر ہم عصر حاضر کے جدید تقاضوں سے ہم آہنگ نہیں ہوسکتے۔ہمیں جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کرتے ہوئے تحقیق کے رجحان کو فروغ دینے کی ضرورت ہے۔میں محسن پاکستان معروف ایٹمی سائنسدان ڈاکٹر عبدالقدیر خان کابیحد مشکور ہوں کہ جنہوںنے جامعہ کراچی کوڈاکٹر اے کیوخان انسٹی ٹیوٹ آف بائیوٹیکنالوجی اینڈجینیٹک انجینئرنگ کی صورت میں بہترین تحفہ دیا۔انہوں نے طلبہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ مجھے امید ہے کہ آپ نے اس چارروزہ ورکشاپ میں بہت کچھ سیکھا ہوگا ،لیکن سیکھنے کا عمل ہمیشہ جاری رہتاہے اور آپ نے جو کچھ سیکھا ہے اسے دوسروں کو سکھائیں اور معاشرے کی فلاح وبہبود کے لئے استعمال کریں۔آپ نوجوانوں کو ہی اس ملک کی تعمیر و ترقی میں بھی سب سے اہم کردار ادا کرنا ہے۔ڈاکٹر خالد عراقی نے مزیدکہا کہ اس وقت جامعہ کراچی میں 19 انسٹی ٹیوٹس اور ریسرچ سینٹر زموجودہیں جس میں ڈاکٹر اے کیوخان انسٹی ٹیوٹ آف بائیوٹیکنالوجی اینڈجینیٹک انجینئرنگ بھی شامل ہے جو اپنی اعلیٰ تدریسی وتحقیقی سرگرمیوں کی بدولت نہ صرف پاکستان بلکہ پوری دنیا میں اپنی ایک الگ شناخت رکھتا ہے۔اس سال جامعہ کراچی میں 10 ہزار سے زائد طلباوطالبات کوداخلے دیئے گئے،طلباوطالبات کو بہترسے بہتر سہولیات فراہم کرنا میری اولین ترجیح ہے ۔اس سال ہم نے اسٹوڈنٹس ایڈمیشن فنڈ(ایس اے ایف) کا اعلان کیا ہے جس کے تحت جو طلبہ مالی مشکلات کی وجہ سے داخلہ فیس دینے سے قاصر ہیں ان کی داخلہ فیس مذکورہ فنڈ سے فراہم کی جائے گی اور امسال ایسے کافی مستحق طلبہ کی فیس کی ادائیگی اس فنڈسے کردی گئی ہے۔مذکورہ انسٹی ٹیوٹ میں صرف کراچی کے نہیں بلکہ پورے پاکستان سے طلبہ حصول علم کے لئے آتے ہیں ،انسٹی ٹیوٹ ہذا ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی ہدایات کے مطابق اورپروفیسر ڈاکٹر عابد اظہر کی قیادت میں تیزی سے ترقی کے منازل طے کررہاہے۔ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر اے کیو خان انسٹی ٹیوٹ آف بائیوٹیکنالوجی اینڈ جینیٹک انجینئرنگ جامعہ کراچی پروفیسر ڈاکٹر عابد اظہر نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ ہم اپنے طلبہ کو وہ تمام سہولیات اور تربیت فراہم کریں کہ دنیا بھر میں کہیں بھی وہ سر اُٹھاکرکھڑے ہوسکیں۔مذکورہ ادارہ صرف کراچی کا نہیں بلکہ پورے ملک سے یہاں پر طلبہ حصول علم کے لئے آتے ہیں،یہاں پر طلبہ کو ان کی قابلت اور میرٹ کے مطابق خواہ اس کا تعلق کہیں سے بھی ہو داخلہ دیا جاتاہے۔ڈائریکٹر نیشنل سینٹر فارپروٹیومکس جامعہ کراچی پروفیسر ڈاکٹر شمشاد زرینہ نے کہا کہ وہ قومیں زندہ رہتی ہیں جو اپنے مشاہیر،اپنے اساتذہ،مفکرین اور اپنے محسنوں کو ہمیشہ یادرکھتی ہیں۔ہم بہت خوش نصیب ہیں کہ آج ہمارے درمیان ڈاکٹر عبدالقدیر خان موجود ہیں اور یہ ادارہ بھی ان ہی کے نام سے وابستہ ہے ۔ڈاکٹر عبدالقدیر خان کا پاکستان پر جواحسان ہے وہ ہم مرتے دم تک نہیں بلاسکتے جب تک پاکستان قائم ہے جب تک یہ ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ میں نیشنل سینٹر فارپروٹیومکس کو سابق وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر ظفرایچ زیدی کے نام سے موسوم کرنے پر شیخ الجامعہ پروفیسر ڈاکٹر خالد محمود عراقی کی بیحد مشکورہوں۔تقریب کے اختتام پر شرکاء میں سرٹیفیکٹ تقسیم کئے گئے اوربدست ڈاکٹرعبدالقدیر خان حج وعمرہ کمپیوٹرائز قرعہ اندازی کی گئی جس میں حج کے لئے غلام فرید گبول اور عمرے کے لئے محمد حسین اور ڈاکٹرسطوت زہرہ کے ناموں کا اعلان کیا گیا۔

بے باک صحافت ہی جمہوریت کی اصل طاقت ہے’ نیاز احمد خاصخیلی


all sindh peoples paramedical December 29, 2019 | 7:54 PM

امید ہے کراچی پریس کلب کے نومنتخب عہدیدار صحافیوں کے مسائل کے حل کیلئے جدوجہد کرینگے، صدر کراچی ڈویژن
اتنے یخ بستہ موسم میں بی بی کی برسی میں شرکت کرنے کیلئے دور دراز سے آنیوالے جیالوں کو سلام پیش کرتا ہوں’ گفتگو
کراچی: (نیوزآن لائن) آل سندھ پیپلز پیرا میڈیکل اسٹاف کراچی کے صدر نیاز احمد خاصخیلی نے کراچی پریس کلب کے الیکشن میں ڈی ڈیموکریٹس پینل کی کامیابی سمیت تمام منتخب عہدیداران کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ صحافی صحت مند معاشرہ کی تعمیر میں ایک اہم کردار ادا کرتے ہیں۔ جری اور بے باک صحافت اور نظامِ عدل ہی جمہوریت کی اصل طاقت ہیںامید ہے پریس کلب کے تمام نو منتخب اراکین صحافیوں کے مسائل کے حل کیلئے جدوجہد کریں گے۔ سوشل میڈیا پر جس طرح حقائق کو منفی اور توڑ مروڑ کر پیش کیا جاتا ہے ایسے میں صحافیوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ اصل حقائق سامنے لائیں۔ وہ بی بی شہید کی برسی میں شرکت کے بعد راولپنڈی سے کراچی روانگی کے وقت میڈیا سے گفتگو کررہے تھے۔عباس مہر، فرمان علی سولنگی، سید منیر شاہ، ممتاز میمن، فرحان چھیپا ودیگر بھی اس موقع پر موجود تھے۔ نیاز احمد خاصخیلی کا کہنا تھا کہ میڈیا کا بنیادی کام اپنے قارئین کو اطلاع پہنچانا اور پوری دنیا کے احوال سے انہیں باخبر رکھنا ہے دنیاکے کون سے حصے میں کیا واقعات ظہور پذیر ہورہے ہیں۔ کیا تبدیلیاں آرہی ہیں اور مختلف شعبوں میں کیا ترقیات ہورہی ہیں یہ معلومات بہتر طور پرمیڈیا کے ذریعہ ہی لوگوں تک پہنچتی ہے۔ آل سندھ پیپلز پیرا میڈیکل اسٹاف نیم طبی عملے کے حقوق کی نمائندہ جماعت ہے لیکن اس کے ساتھ ہم معاشرے میں سماجی و فکری شعور اجاگر کرنے کیلئے مختلف پروگرامز کا انعقاد کرتے رہتے ہیں۔ گزشتہ دنوں سندھ کلچر ڈے پریس کلب میں منانے کا مقصد یہ تھا کہ صحافیوں کیساتھ مل کر سندھ کلچر ڈے کو اجاگر کریں۔انہوں نے بی بی شہید کی برسی کے موقع پر انتظامات کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کیا کہ لاکھوں کے مجمے کو جس طرح سے سنبھالا گیا وہ قابل تحسین ہے ۔میں بی بی کی برسی میں شرکت کرنے کیلئے دور دراز سے آنیوالے جیالوں کو سلام پیش کرتا ہوں جو کہ اتنے سرد موسم میں بھی اپنی محبوب قائد سے عہد وفا نبھانے آئے۔ ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ کراچی پہنچ کر ورکنگ کمیٹی کا اجلاس بلائیں گے اور نیم طبی عملے کے مسائل پر گفتگو کے بعد آگے کا ایجنڈا میڈیا کے سامنے رکھیں گے۔

وفاقی حکومت آزادی صحافت پر حملہ آور ہے ۔سہیل انور سیال


sohail anwar siyal December 29, 2019 | 7:47 PM

پاکستان پیپلزپارٹی صحافت اور صحافی کے ساتھ ہے۔
صوبائی وزیر کی جانب سے کراچی پریس کلب کے نومنتخب عہدیداران کو مبارکباد
کراچی:(نیوزآن لائن) سندھ کے وزیر برائے انسداد بدعنوانی آبپاشی اور زکوٰت وعشر سہیل انور سیال نے کہا کہ وفاقی حکومت آزادی صحافت پر حملہ آور ہے۔نام نہاد وفاقی حکومت نے میڈیا کی آزادی کو صلب کیا ہوا ہے۔پاکستان پیپلزپارٹی آزادی اظہار رائے اور آزادی صحافت پر مکمل طور پر یقین رکھتی ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی پریس کلب کے نومنتخب عہدیداران کو مبارکباد دیتے ہوئے اپنے ایک بیان میں کیا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی صحافت کے پیچھے قربانی وخدمات کی ناقابل فراموش تاریخ ہے۔ماضی میں صحافیوں کو آمریت کے خلاف آواز اٹھانے پر کوڑوں تک کی سزائیں دی گئیں۔صوبائی وزیر سہیل انور سیال نے مزید کہا کہ بحالی جمہوریت کے سفر میں صحافت اور صحافی کا اہم کردار رہا ہے اور پاکستان پیپلزپارٹی صحافی برادری کے ساتھ ہے . ۔

بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام سے 8 لاکھ افراد کا نام نکالنا افسوسناک ہے۔ جام اکرام اللہ دھاریجو۔


jam akram shah December 25, 2019 | 5:48 PM

شیخ رشید کی نحوست سلیکٹڈ حکومت کو بھی لے ڈوبے گی۔ صوبائی وزیر صنعت و تجارت
کراچی :( نیوزآن لائن) صوبائی وزیر برائے صنعت و تجارت اور امداد باہمی جام اکرام اللہ دھاریجو نے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام سے 8 لاکھ افراد کے نام نکالنے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ مستحق افراد کے نام نکالنا ایک ظالمانہ عمل ہے اور ظالموں کو اپنا انجام یاد رکھنا چاہیے۔ یہ بات آج انہوں نے بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح کے مزار پر حاضری کے موقع پر میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ سلیکٹیڈ حکومت کے نادان وزرا اپنی پارٹی کے لیے جگ ہسائی کا باعث بن ہو چکے ہیں اور تبدیلی حکومت کا بھیانک چھرا پاکستانی عوام سمیت دنیا کے ممالک کے سامنے ہے۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے مزید کہا کہ سلیکٹیڈ حکومت یہ ھرگز نہ بھولے کہ اپنا کیا بھگتنا بھی پڑتا ہے اور پی ٹی آئی کی نااہل سلیکٹیڈ حکومت نے مفلس اور غریب خاندانوں پر حملہ کردیا ہے ۔ صوبائی وزیر جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام سے 8 لاکھ افراد کے نام نکالنا 8 لاکھ خاندانوں کو مشکل سے دوچار کرنے کے مترادف ہے جبکہ غریبوں کو لاکھوں گھر اور کروڑوں نوکریاں فراہم کرنے کے دعوے کرنے والے جھوٹے، فریبی، مکار ثابت ہوچکے ہیں ۔ انہوں نے 8 لاکھ افراد کے نام بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام سے نکالنے کا چیف جسٹس آف پاکستان سے سوموٹو لینے کی درخواست بھی کی۔ علاوہ ازیں صوبائی وزیر برائے صنعت و تجارت اور امداد باہمی جام اکرام اللہ دھاریجو نے وفاقی وزیر برائے ریلوے شیخ رشید کے خطاب پر رد عمل کرتے ہوئے کہا ہے کہ آمروں کی گود میں پلنے والے کے نصیب میں لاڑکانہ کہاں ہے۔ سندہ کے عوام شیخ رشید کا لاڑکانہ آنے کا بے چینی سے انتظار کررہے ہیں ۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے مزید کہا کہراولپنڈی میں ملک اور عوام کی خاطر پیپلز پارٹی قیادت نے اپنے خون کا نذرانہ دیا ۔ملک اور جمہوریت کے لیے پیپلز پارٹی کی قربانیاں کسی تعارف کی محتاج نہیں ۔ صوبائی وزیر جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ بلاول بھٹو پر تنقید کرنے والا شیخ رشید خود آمریت کی پیداوار ہے ۔شیخ رشید کا استقبال لوگ گندے انڈوں اور نازیبا الفاظ سے کر رہے یے جو شیخ رشید کی زبان کا رد عمل ہے ۔ انہوں نے کہا کہ شیخ رشید چڑھتے سورج کے پجاری ہیں۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ شیخ رشید جس چلتی گاڑی میں سوار ہوتے ہیں اس کو منحوسیت گھیر لیتی ہے یہ ان کے ریکارڈ کا حصہ ہے اور شیخ رشید کی منحوسیت ریلوے کو تو لے ڈوبی ہے لیکن سلیکٹیڈ وزیراعظم کا پیچھا بھی نہیں چھوڑ رہی ہے۔

کراچی میں غیر قانونی تعمیرات کو ختم کرکے دم لیں گے، سندھ حکومت کی جانب سے ویجیلنس کمیٹی قائم، وزیر بلدیات سید ناصر حسین شاہ کا آباد میں بلڈرز اینڈ ڈیولپرز سے خطاب


nasir shah December 25, 2019 | 5:45 PM

کراچی : (نیوزآن لائن) وزیربلدیات سندھ ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ کراچی میں غیرقانونی تعمیرات کو ختم کرکے دم لیں گے اس ضمن میں سندھ حکومت نے رواں ہفتے ہی ایک ویجیلینس کمیٹی قائم کردی ہے جسے قانون نافذ کرنے والے اداروں کا تعاون حاصل ہوگا، شہرمیں 72 سال پرانی اوربوسیدہ پانی کی لائینوں کی تبدیلی سمیت دیگر ترقیاتی منصوبوں کو عالمی بینک کے تعاون سے بہتر کیا جارہا ہے عالمی بینک نے سندھ کو دوپلان کے تحت مجموعی طور پر600 ارب روپے کی فنڈنگ کررہا ہے، یہ بات انہوں نے منگل کو ایسوسی ایشن آف بلڈرز اینڈ ڈیولپرز(آباد) میں بلڈرز اینڈ ڈیولپرز سے خطاب کے دوران کہی۔اس موقع پر آباد کے چیئرمین محسن شیخانی، سیکریٹری لوکل گورنمنٹ سندھ روشن شیخ ،آباد سدرن ریجن کے چیئرمین محمد علی راتاڑیا،ایس بی سی اے کی ڈائریکٹر جنرل ظفر احسن،سابق چیئرمین آباد محمد حسن بخشی،جنید اشرف تالو،انور گاگئی،سعید اشرف اور آباد کے ممبران کی بڑی تعداد شریک تھی۔ انہوں نے کہا کہ شہر میں غیر قانونی تعمیرات کے خلاف سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کام کر ر ہی ہے۔شہر میں غیر قانونی تعمیرات کے خلاف سخت ایشن جاری رہے گا شہر میں ہونے والی تعمیرات کے لیے ایک وجیلنس کمیٹی بنائی ہے یہ شہر میں تمام ہونے والی تعمیرات کی جانچ کرے گی اور کمیٹی قانونی اور غیر قانونی تعمیرات کا جائزہ لے گی اگر اس میں کوئی مسئلہ ہوا تو اس کو روکا جائے گا۔انہونے کہا چھوٹے بڑے نقشوں کی اپروول میں تاخیروہوتی ہے اسے تیز کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ہماری اقتصادی کمیٹی یہ بات زیر غور آئی ہیں کہ کراچی اور سندھ میں اپروول فیس تمان صوبوں سے کم ہے۔ نقشوں کی اپروول کے لیے ون ونڈو آپریشن پر کام ہورہا ہے ماسٹر پلان 2047کے لئے پروپوزل چیف سیکریٹری کے پاس بھیجا ہے۔بہت سی شکایات پر ایس بی سی اے نے کارروائیاں کی ہیں۔جو غیر قانونی تعمیرات جو آپکے حصوں میں ہورہی ہیں ا س میں آپکا تعاون درکار ہے۔
۔اس موقع پر آباد کے چیئرمیں محسن شیخانی نے کہا کہ کراچی شہر کا سب سے بڑا مسئلہ غیر قانونی تعمیرا ت ہے، غیر قانونی اور ناقص تعمیرات سے انسانی المیہ جنم لے سکتا ہے۔انھوں نے کہا کہ غیرقانونی تعمیرات کرنے والے ناقص مٹیریل استعمال کرتے ہیں اور 80/80 گز کے پلاٹ پر 8/8 منزلہ عمارتیں تعمیر کی جاتی ہیں۔سندھ بلڈنگ سے بات ہوئی کہ جب بھی کوئی نقشہ منظوری کےْلیے آئے تو اس کا نوٹس بھیجا جائے اگر نوٹس ملے گا تو ہی پتہ چلے گا کہ اس جگہ پر کوئی مسئلہ تو نہیں۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ پبلک پراجیکٹ اوور سی کمیٹی نے پرائیوٹ سیکٹر سے لوگوں کو شامل کیا جائے۔