: تازہ ترین

تازہ ترین ویڈیو

سینیٹر سرا ج الحق :منصورہ میں خطاب سانحہ ساہیوا ل کے لواحقین سے تعزیت، میڈیا گفتگو


pic Siraj Ul Haq January 20, 2019 | 8:31 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستا ن سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ قوم حکمرانوں سے پوچھ رہی ہے کہ سی ٹی ڈی اور پولیس کو شہریوں کے قتل عام کا کس نے لائسنس دیا ہے ۔اگر لاٹھی گولی کی سرکار کا اقتدار ہے تو پھر عدالتوں کو تالے لگوا دیں ۔ وزیر اعلیٰ چند روپے دے کر بچوں سے ان کے والدین کے ناحق قتل کا سودا کرنا چاہتے ہیں ۔ معصوم لوگوں کے قاتلوں کو سزا دینے کی ذمہ داری کس کی ہے ۔ یہ قتل و غارت گری کب تک چلے گی ۔ عوام ظلم کے اس نظا م کو مزید برداشت نہیں کریں گے ۔ حکومت اب تک ہوائی قلعے تعمیر کر رہی ہے ۔ حکمران کچھ کرنے کی صلاحیت سے محروم ہیں ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے منصورہ میں جاری نیشنل ایسوسی ایشن فار ایجوکیشن (نافع) کے زیراہتمام اساتذہ کی تربیتی ورکشاپ سے خطاب اور ساہیوال واقعہ کے مقتولین کے گھر تعزیت کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر سیکرٹری اطلاعات جماعت اسلامی قیصر شریف بھی موجود تھے ۔
سینیٹر سراج الحق نے تربیتی ورکشاپ کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان ایک نظریاتی مملکت اور دنیا بھر کے مسلمانوں کے لیے اسلام کا قلعہ ہے ۔ حکمرانوں نے پہلے اس کو دولخت کیا اور اب باقی ماندہ پاکستان کی بنیادوں کو کھوکھلا کر رہے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ جو حکومت آتی ہے وہ تمام خرابیوں کاذمہ دار سابقہ حکومت کو قرار دے کر ہاتھ پہ ہاتھ دھرے بیٹھ رہتی ہے سب یہی کہتے ہیں کہ بہت گند ہے اس کو صاف کرناہے مگر دوسروں سے زیادہ گند ڈال کر چلے جاتے ہیں ۔ موجودہ حکومت بھی اب تک یہی کر رہی ہے ۔ پانچ ماہ میں حکومت نے کوئی ایک وعدہ بھی پورا نہیں کیا ۔ انہوں نے کہاکہ ملک کو مسائل کی دلدل سے نکالنے اور عالمی برادری میں اپنا کھویا ہوا وقار دوبارہ حاصل کرنے کے لیے خوف خدا رکھنے والی نظریاتی قیادت کی ضرورت ہے جو آئی ایم ایف ، و رلڈ بنک و امریکہ سمیت عالمی استعمار سے ڈرنے کی بجائے اللہ اور اس کے رسول ۖ کی تعلیمات پر عمل کرنے والی ہو ۔ انہوںنے کہاکہ اس وقت تمام جماعتیں ناکام ہوچکی ہیں تین تین بار اقتدار میں رہنے والی سابقہ حکمران جماعتوں کو بھی عوام نے دیکھ لیاہے اور موجودہ حکومت کو بھی ،جو تبدیلی کے بڑے بڑے دعوئوں اور نعروں کے ساتھ آئی تھی ۔یہ حکومت بھی سابقہ حکومتوں کی طرح اسی استحصالی نظام کو جاری رکھے ہوئے ہے ۔ یہ حکومت بھی انہی مسافروں پر مشتمل ایک قافلہ ہے ان کا بھی وہی ایجنڈاہے جو ان سے پہلے حکمرانوں کا تھا ۔ یہ کسی قومی ایجنڈے پر نہیں ہمیشہ ذاتی مفادات کے ایجنڈے پر آتے ہیں او ر جب تک حکومت میں رہتے ہیں ، عوام کا خون چوستے اور اپنے مفاد کو پورا کرتے ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ چھ ماہ کے اندر ہی عوا م کی تمام امیدیں دم توڑ چکی اور خوش فہمیاں دور ہوگئی ہیں ۔ افراد اور پارٹیاں تبدیل ہو گئی ہیں مگر نظام وہی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ فرق صرف اتناآیاہے کہ بڑے بھائی کی جگہ چھوٹا ،چچا کی جگہ بھتیجا اور ماموں کی جگہ بھانجا حکومت میں آگیاہے اور کوئی فرق نہیں آیا۔
مقتولین کے خاندان سے اظہار تعزیت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ یہ واقعہ رات کے اندھیرے میں نہیں ، دن کی روشنی میں ہواہے سانحہ ساہیوال کھلی دہشتگردی اور بدمعاشی ہے ۔ حکومتی وزراء نے سات بار موقف بدلاہے ۔ سانحہ پر پوری قوم افسردہ ہے ۔ عوام کو حکومت اور اس کی بنائی ہوئی جے آئی ٹی پر اعتماد نہیں ۔ عدالت اس واقعہ کا از خود نوٹس لے اور ذمہ داروں کو قرار واقعی سزا دی جائے ۔ سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ کوئی دہشتگرد اہل خانہ اور بچوں کے ساتھ سفر نہیں کرتا یہ سیاسی نہیں ،انسانی مسئلہ ہے ۔ والدین کو بچوں کے سامنے شہید کر دیا گیاہے ۔ انہوںنے کہاکہ آج پتہ چلاکہ ادارے کیسے کام کر رہے ہیں ۔ معلومات نہ ہونے کے باوجود حملہ کیوں کیا گیا ۔ اپنے لوگوں کو دہشتگرد بناکر آپریشن کرنا ظلم اور دہشتگردی کی بدترین مثال ہے ۔ انہوںنے کہاکہ اس واقعہ سے عام شہریوں کے اندر خوف اور دہشت کی لہر دوڑ گئی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ جماعت اسلامی مظلوم خاندان کے ساتھ ہے جب تک اس خاندان اور معصوم بچوں کو انصاف نہیں مل جاتا ، انہیں اکیلا نہیں چھوڑیں گے ۔

حکمران عوام کے سر سے چھت چھیننے کا خیال دل سے نکال دیں حافظ نعیم الرحمن


Naeem Final copy January 20, 2019 | 8:28 PM

واٹر بورڈ لیاقت آباد ، سکند رآباداور اعظم آباد کے رہائشیوں کو متبادل مکانات دے ورنہ مکانات خالی نہیں کیے جائیں گے ۔احتجاجی کیمپ سے خطاب
جماعت اسلامی نے ہمیشہ عوام کے مسائل پر آواز بلند کی ہے سندھ اسمبلی میںاینٹی انکروچمنٹ مہم کے خلاف تحریک التواء جمع کرادی ہے ۔سید عبد الرشید
کراچی: (نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ واٹر بورڈ اہلیان پرانا غریب آباد، لیاقت آباد ،سکند رآباداور اعظم آباد کو متبادل مکانات فراہم کرے ورنہ مکانات خالی نہیں کیے جائیں گے ، 50سال سے آبادشہریوں کو کسی صورت چھت سے محروم نہیں ہونے دیں گے ، جماعت اسلامی کے پاس بہترین بلدیاتی تجربہ اور قیادت ہے، ہم سے بات کریں متبادل بتائیں گے اگر 48انچ کی پانی کی لائن کا متبادل نہیں تو پہلے متاثرین کو متبادل جگہ فراہم کی جائے ، نعمت اللہ خان نے جب لیاری ایکسپریس وے تعمیر کیا تو عوام کو پہلے متبادل فراہم کیا تھا، عوام کسی کے فریب میں نہ آئیں ، آپس میں متحد رہیں ، جماعت اسلامی آپ کے ساتھ ہے ۔ اہلیان علاقہ کو کسی صورت بے گھر نہیں ہونے دیں گے ۔ان خیالات کا اظہار انہوںنے واٹر بورڈ کی جانب سے سکندر آباد ، پرانا غریب آباد اور اعظم نگر کے مکینوں کو مکانات خالی کرنے کے نوٹس کے خلاف لگائے گئے احتجاجی کیمپ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ کیمپ میں بچے ، بوڑھے ،مرد وخواتین نے بڑی تعداد میں شرکت کی اور شہری و صوبائی حکومت کے خلاف زبردست نعرے بھی لگائے ۔ اس موقع پر رکن سندھ اسمبلی و امیر جماعت اسلامی ضلع جنوبی سید عبد الرشید ، ضلع عبوری امیر گلبرگ و سابق ٹاؤن ناظم گلبرگ فاروق نعمت اللہ ، ناظم حلقہ جاوید احمد خان ، عبید احمد،سابق نائب ناظم لیاقت آباد ٹاؤن شہا ب احمد ،سکریٹری اطلاعات زاہد عسکری و دیگر بھی موجود تھے۔ حافظ نعیم الرحمن نے خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ واٹر بورڈ کے نوٹس نے علاقے کے رہائشیوںمیں بے چینی پیدا کردی ہے ، برسوں سے قائم آبادی جس میں باقاعدہ بجلی کا کنکشن اور گیس کی فراہمی کی گئی ہے لیکن اب واٹر بورڈ نے حکم نامہ جاری کرکے ان کا سکون برباد کردیا ہے ۔انہوں نے کہاکہ عوام نے جن لوگوں کو ووٹ دے کر منتخب کیا آج وہ لوگ ان آبادیوں سے نکل کر ڈیفنس چلے گئے ہیں انہیں یہاں کے لوگوں کا کوئی خیال نہیں ہے ۔ہم واٹر بورڈ سے پوچھنا چاہتے ہیں کہ انہوں نے کراچی کے عوام کے لیے پانی کی فراہمی میں کتنا اضافہ کیا ؟۔کتنے پمپنگ اسٹیشنز کو ٹھیک کیا ؟۔سابق سٹی ناظم نعمت اللہ خان نے کراچی کے عوام کے لیے 100گیلن پانی کااضافہ کیا اور کے تین منصوبہ مکمل کیا اور اس کے بعد کے فورمنصوبہ کا آغازکیا تھا لیکن بدقسمتی سے اس کے بعد آنے والی حکومت نے ایک گیلن پانی کابھی اضافہ نہیں کیا۔کے فور منصوبہ کی لاگت 16ارب روپے جسے 2010میں مکمل ہونا تھا وہ ابھی تک مکمل نہیں ہوسکا اور اب اس کی لاگت کھربوں روپوں تک پہنچ گئی ہے ۔ جماعت اسلامی اس مشکل گھڑی میں متاثرین کے ساتھ ہے ، کسی قیمت میں بھی متاثرین کو بے گھر نہیں ہونے دیں گے ۔انہوں نے کہاکہ وفاقی و صوبائی حکومت کی ذمہ داری ہے کہ اہلیان سکندر آباد ، پرانا غریب آباد اور اعظم نگر کے عوام کو متبادل جگہیں فراہم کریں ورنہ ہم سڑکوں پر آئیں گے اور ضرورت پڑی تو گورنر ہاؤس کا بھی گھیراؤ کریں گے ۔ رکن صوبائی اسمبلی سید عبد الرشید نے کہاکہ جماعت اسلامی نے ہمیشہ عوام کے مسائل کے حل کے لیے آواز بلند کی ہے اور آئندہ بھی عوام کے ساتھ رہیں گے۔سندھ اسمبلی میں امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن کی ہدایت پر اینٹی انکروچمنٹ مہم کے خلاف تحریک التواء جمع کرادی ہے اور اہلیان سکندر آباد ، پرانا غریب آباد اور اعظم نگر سے منتخب ذمہ دارن سے ملاقات کروں گا اور مجھے امید ہے کہ دیگر منتخب عہدیداران بھی اس مسئلے کے حل کے لیے سے میرا ساتھ دیں گے ۔

ساہیوال: مبینہ پولیس مقابلے میں 4 افراد کی ہلاکت میں ملوث سی ٹی ڈی اہلکاروں کیخلاف دہشت گردی کا مقدمہ درج


sahiwal January 20, 2019 | 8:07 PM

ساہیوال:(نیوزآن لائن)ساہیوال میں مبینہ پولیس مقابلے میں جاں بحق افراد کے لواحقین کے پوری رات دھرنے اور شدید احتجاج کے بعد تھانہ یوسف والا پولیس نے مقابلے میں ملوث محکمہ انسداد دہشت گردی (سی ٹی ڈی) کے اہلکاروں کے خلاف دہشت گردی اور قتل کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا۔
ایف آئی آر 16 نامعلوم اہلکاروں کے خلاف درج کی گئی ہے جنہیں گزشتہ روز ہی حراست میں لے لیا گیا تھا۔ مقتول خلیل کے بھائی کی مدعیت میں درج کیا۔گزشتہ شب وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار نے لواحقین سے ملاقات کرکے انہیں تسلیاں تو دی تھیں تاہم مقدمہ درج نہیں کیا گیا جس کے باعث ورثا مطمئن نہیں ہوئے تھے۔واضح رہے کہ تھانہ سی ٹی ڈی لاہور میں واقعے میں جاں بحق افراد پر بھی مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

مہاجر نوجوان اپنی تعلیم پر توجہ دیں: ڈاکٹر سلیم حیدر


dr saleem haider MIT January 20, 2019 | 7:48 PM

علم اور قابلیت مہاجر قوم کی میراث ہے جسے واپس حاصل کرنا ہے
ماضی کی غلط سیاست نے مہاجروں کے تشخص کو نقصان پہنچایا ہے
کراچی(نیوزآن لائن)مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہا ہے کہ مہاجر نوجوان اپنی تعلیم پر خصوصی توجہ دیں کیونکہ مہاجروں کی میراث علم ہی ہے۔ علم کے ذریعے ہی مہاجروں نے قیام پاکستان کے بعد اس ملک کے نظم ونسق کو چلایا اور شہری علاقوں کو ترقی دلوائی۔ وہ کراچی کے مختلف کالجوں ، یونیورسٹیز کے طلباء کے ایک اجتماع سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہاکہ بدقسمتی سے مہاجر نوجوانوں کو ماضی میں تعلیم سے دور کرکے انہیں تشدد اور جرائم کی طرف لگایا گیا جس کے نتیجے میں پوری مہاجر نسل کو نقصان پہنچا۔ انہوں نے کہاکہ مہاجر تہذیب یافتہ اور شاندار ماضی اور ثقافت رکھنے والی قوم ہے ۔ تعلیم ہی مہاجروں کا ورثہ ہے جسے اب ایک بار پھر مہاجر نوجوان اپنے کھوئے ہوئے ورثے کی طرف واپس پلٹ رہے ہیں۔ تعلیم اور تربیت پر توجہ دیں ۔ پروفیشنل اور ٹیکنیکل تعلیم کے علاوہ مقابلوں کے امتحانات میں شریک ہوکر خود بھی مضبوط بنیں اور قوم کو بھی مضبوط کریں۔ انہوں نے کہا کہ مہاجر ایک شاندار ماضی ، حال اور مستقبل رکھنے والی قوم ہے لیکن بدقسمتی سے ماضی کی غلط سیاست نے مہاجروں کے تشخص کو نقصان پہنچایا اور مہاجروں پر بھتے خوری ، ٹارگٹ کلنگ، دہشت گردی جیسے الزامات لگتے رہے ۔ آج بھی مہاجر نام پر سیاست کرنے والے وہی بھروپیے موجود ہیں جن کی وجہ سے پوری مہاجر قوم تباہی سے ودچار ہوئی ۔ مہاجر نوجوانوں کا مستقبل تاریک ہوا اور آج مہاجر نوجوان بند گلی میں لاکھڑے کئے گئے ہیں۔ انہیں ملازمت سے لے کر تعلیمی اداروں میں داخلے تک ظالمانہ رویوں کا سامنا ہے۔

سندھ کا پہلا شہری جنگل( اربن فاریسٹ) کراچی میں قائم کیا جائے گا ۔ صوبائی وزیر جنگلات و جنگلی حیات کی زیر صدارت اعلیٰ سطحی اجلاس میں فیصلہ


selected pic 20-1-19 January 20, 2019 | 4:58 PM

صوبائی وزیر جنگلات و جنگلی حیات سید ناصر حسین شاھ کی زیر صدارت اہم اجلاس پائیدار فاریسٹ مینجمنٹ پالیسی دع دو ہزار انیس کی تیاری کے لئے تفصیلی تبادلہ خیال تمام اسٹیک ہولڈرز کی رائے شامل کی جائے گی۔
کراچی :( نیوزآن لائن ) صوبائی وزیر جنگلات و جنگلی حیات سید ناصر حسین شاھ نے کہا کہ سندھ کے جنگلات کی ترقی اور ان اضافے کے لئے جامع و مربوط اور شفاف پالیسی بنائی جائے گی اور اس سلسلے میں میرٹ و چیک اینڈ بیلنس کا پائدار ٹھوس نظام قائم کیا جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے محکمہ جنگلات کے دفتر میں پائیدار فاریسٹ مینجمینٹ پالیسی 2019 کی تیاری ، ایکٹس ، سالانہ ترقیاتی پروگرام ، سیکریٹریز کمیٹی میٹنگ میں جنگلات کے حوالے سے ایجنڈے ، سپریم اور ہائی کورٹ کے احکامات کی تعمیل کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں سیکریٹری محکمہ جنگلات عبدالرحیم سومرو، چیف کنزرویٹر آف فاریسٹ روینیو اعجاز نظامانی ، چیف کنزرویٹران لینڈ مینگروز ریاض احمد وگن ، کنزرویٹر جنگلات آغا طاہر حسین ، سوشل فاریسٹ سیکریٹری حیدرآباد ذوالفقار علی میمن، سوشل فاریسٹ سیکریٹری سکھر حیدر رضا خان، تمام سرکل کے کنزرویٹرز ، کنزرویٹر کراچی جاوید احمد مہر ، پی پی سی (ایس ایف ایم پروجیکٹ ) عبدالحق کے علاوہ ڈائریکٹر میڈیا مینجمینٹ وزیر جنگلات و جنگلی حیات محمد شبیہ صدیقی نے شرکت کی ۔ صوبائی وزیر نے اس موقع پر کہا کہ موسمیاتی تغیرات ، فضائی آلودگی اور ٹیمپرچر میں اضافہ کے پیش نظر کراچی میں سندھ کا پہلا شہری جنگل (اربن فاریسٹ) قائم کیا جائے گا جس کا دائرہ بتدریج صوبے کے تمام شہروں تک وسیع کیا جائے گا۔ گرین کراچی کے تحت ملیر ندی اور ریلوے لائن کے ساتھ پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت اور متعلقہ اداروں کے تعاون سے ماحول دوست اور پھلدار درخت لگائے جائے گیں اور بھرپور شجر کاری کی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ اربن فاریسٹ قائم کرنے کا مقصد کراچی میں بڑہتی ہوئی آلودگی کو کم کرنا ، شہر کو سرسبز بنانا ، اور ٹیمپریچر میں اضافہ کو کم کرنا ہے۔صوبائی وزیر نے ہدایت کی کہ وہ آنے والے بہار کے موسم میں جنگی بنیادوں پر اپنی تیاری مکمل کرلیں اور اس سلسلے میں شجرکاری کے حوالے سے کام کرنے والی این جی اوز سے رابطہ کرکے انہیں اپنے پروگرام میں شامل کریں۔ صوبائی وزیرنے کہا کہ سندھ کے جنگلات میں اضافہ کے لئے شارٹ ٹرم اور لانگ ٹرم منصوبہ بندی کی جائے۔صوبائی وزیر سید ناصر حسین شاھ نے افسران کو سپریم کورٹ آف پاکستان اور سندھ ہائی کور ٹ کی جانب سے جنگلات کے حوالے سے دیئے گئے احکامات پر من وعن عمل کرنے کی ہدایت کی۔اس موقع پر انہوں نے افسران کو سندھ کے تمام ضلعی ہیڈکوارٹرز اور ڈویثرنل ہیڈکوارٹرز کے لیول پر اربن فاریسٹری شروع کرنے کی ہدایت کی۔سیکریٹری جنگلات نے اس موقع پر مختلف حوالوں سے تفصیلی بریفنگ دی اور بتایا کہ سندھ پائیدار فاریسٹ مینجمینت پالیسی 2019 کے لئے کنسلٹیٹو ورکشاپس ، سییمنارز ، اجلاسوں ، تمام اسٹیک ہولڈرز، اکیڈمیاں اور کمیونٹی کی آراء کو شامل کر کے ایک ڈرافٹ کی صورت میں آئندہ ہفتے پیش کردیا جائے گا۔اجلاس میں صوبائی وزیر نے افسران پر زور دیا کہ جنگلات کی ترقی صوبے میں درختوںکی تعداد میں اضافہ اور ان کی حفاظت کے لئے اپنی تمام تر صلاحیتیں بروئے کار لائیں ۔ انہوں نے کہا کہ جنگلات قومی امانت ہیں اور ہر صورت میں ان کی حفاظت و نشونما کے لئے اقدامات کئے جائیں ۔ انہوں نے کہا کہ چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اور وزیر اعلیٰ سندھ اس سلسلے میں خصوصی دلچسپی رکہتے ہیں اور جنگلا ت کی ترقی و درختوں میں اضافہ کے لئے ان کی خاص ہدایات بھی ہیں۔ سرسبز سندھ ، سندھ حکومت کا عزم بھی ہے۔ اجلاس میں سالانہ ترقیاتی پروگرام کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی گئی اس موقع پر صوبائی وزیر نے تمام افسران کو ہدایت کی کہ وہ تمام جاری اسکیموں کو اعلیٰ معیار کے ساتھ وقت پر مکمل کروائیں۔

انسداد پولیو مہم پیرشروع ہوگی سات روز جاری رہے گی کمشنر کراچی افتخار شالوانی


DSC_2003wwww January 20, 2019 | 4:44 PM

کمشنر کراچی کی زیر صدار ت جائزہ اجلاس منعقد۔
مائکرہ پلان پر غوررہ جانے والے بچوں کی کمی
عالمی ادارہ صحت کا اظہار اطمینان اور تعریف
انسداد پولیو قومی مقصد ہے پولیو کے خاتمہ تک مہم جاری رہے گی کمشنر کراچی افتخار شالوانی
کراچی: (نیوزآن لائن) کمشنرکراچی افتخار شلوانی کی صدارت میںان کے دفتر میں انسداد پولیو کے بارے میں ایک جائزہ اجلاس منعقدہوا اجلاس میں انسداد پولیو کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی گئی ۔ بتایا گیا کہ مہم پیر 21جنوری سے شروع ہوگی ہونے والی این آئی ڈی انسداد پولیو مہم کے انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں۔ مہم سات روز جاری رہے گی ۔ جس میں تیئس لاکھ سے زاید بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے جائیں گے۔مہم 192 یونین کونسلوں میں بیک وقت شروع کی جارہی ہے ۔ سیکورٹی کے خصوصی اقدامات کئے گئے ہیں مہم میں تیرہ ہزار سے زائد پولیو ورکرز اپنے فرائض انجام دیں گے۔ اجلاس میں ایمر جنسی آپریشن سینٹر سندھ کے کوآرڈینٹر عمر فاروق ایڈیشنل کمشنر کراچی ون کمشنر کراچی پولیو ٹاسک فورس کے کوآرڈینٹر ڈاکٹر نصرت علی، پولیس رینجرز ،تمام ٹاون ہیلتھ افسران ،عالمی ادارہ صحت، یونیسیف ، بل گیٹس اینڈ ملنڈا کے نمائندوں اور دیگر نے شرکت کی۔ اجلاس میں عالمی ادارہ صحت کے ٹیم لیڈر سندھ نے انسداد پولیو کی کوششوں کو سراہا انھوں نے کہا کہ رہ جانے اور انکار کر نے والے بچوں میں بتدریج کی ہوئی ہے ۔ بہتر کار کردگی پر انھوں نے انتظامیہ ا،محکمہ صحت کے افسران اور دیگر متعلقہ اسٹیک ہولڈرز کی کوششوں کی تعریف کی۔ کمشنر نے کہا کہ انسداد پولیو قومی مقصد ہے اس سے ملک کا وقار اور بچوں کو مستقبل وابستہ ہے ملک کو پولیو سے پاک کر نے تک یہ کوششیں جاری رہیں گی۔انھوں نے کہا کہ قومی جذبہ سے تمام اسٹک ہولڈرز ملک کر کام کریں انھوں نے ڈپٹی کمشنرز سے کہا کہ وہ انسداد پولیو کے مائکرو پلان پر عملدرآمد کو یقینی بنانے میں اپنا کر دار ادا کریں۔ا نھوں نے رہ جانے والے بچوں کی تعداد میں کمی خوش آئند ہے کوشش کی جائے جلد از جلد سو فیصد بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے کا ہدف حاصل ہو اور پولیو کا خاتمہ ہو ۔

نارووال کے قریب تیز رفتار کار الٹنے سے ایک شخص جاں بحق


narawan city acciddnt car January 6, 2019 | 9:33 PM

نارووال):نیوزآن لائن ) نارووال کے قریب تیز رفتار کار الٹنے سے ایک شخص جاں بحق اور 3 زخمی ہو گئے ،تفصیلات کے مطا بق کار کو حادثہ نیو لاہور روڈ پر اس وقت پیش آیا جب تیزرفتاری کے باعث ڈرایئور نے کنٹرول کھو دیا اور نارووال کے قریب کار قلا بازیاں کھاتی ہوئی الٹ گئی۔ حادثے میں 4 افراد شدید زخمی ہو گئے ،پولیس نے زخمیوں کو قریبی ہسپتال منتقل کر دیا جبکہ جاں بحق ہونے والے شخص کی لاش ورثا کے حوالے کردی۔

چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثارکا پی کے ایل آئی کیس میں ریمارکس


chief justice of pakitsan news January 6, 2019 | 8:42 PM

لاہور:(نیوزآن لائن) چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار نے پی کے ایل آئی کیس میں ریمارکس دیتے ہو ئے کہا کہ پنجاب حکومت کی نااہلی کو تحریری حکم کا حصہ بنا رہے ہیں۔
سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں چیف جسٹس پاکستان ثاقب نثار کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے پاکستان کڈنی اینڈ ٹرانسپلانٹ انسٹی ٹیوٹ (پی کے ایل آئی) سے متعلق ازخود نوٹس کیس کی سماعت کی۔
سپریم کورٹ نے پنجاب حکومت، محکمہ صحت اور وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد پر سخت اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے 22 ارب لگا دیا، پھر بھی یہ اسپتال پرائیوٹ لوگوں کو چلا گیا، لیکن یہ واپس آنا چاہیے۔
چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ پی کے ایل آئی سے متعلق قانون سازی کا کیا بنا؟۔ صوبائی وزیر صحت یاسمین راشد نے جواب دیا کہ قانون سازی کیلئے مسودہ محکمہ قانون کو بہجوا دیا گیا ہے۔
چیف جسٹس نے کہا کہ گزشتہ سماعت پر بہی آپ کی جانب سے یہی کہا گیا تہا، آپ نہیں چاہتے کہ سپریم کورٹ پنجاب حکومت کی مدد کرے، یہ بتائیں کہ جگر کی پیوندکاری کے آپریشن کا کیا بنا؟۔
ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ چیف صاحب آپ فکر نہ کریں، اس پر بہی کام کر رہے ہیں۔ تو چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ یہ فکر آپ نے کرنی ہے بی بی، لیکن آپ کچھ نہیں کر رہیں، ہر سماعت پر آپ اور پنجاب حکومت زبانی جمع خرچ کر کے آجاتی ہیں، اس کیس میں آپ ہر سماعت پر بہانے بنا رہی ہیں۔
چیف جسٹس نے کہا کہ ہم یہ معاملہ ختم کر دیتے ہیں کیونکہ پنجاب حکومت میں اتنی اہلیت نہیں ہے، پنجاب میں نااہلی اور نکما پن اپنی انتہا کو پہنچ چکا ہے، یہ نااہلی ہی ہے کہ پنجاب حکومت سے معاملات نہیں چلائے جا رہے، آپ نے پہلا آپریشن کرنے کیلئے حتمی تاریخ دینی تہی لیکن آج بہی آپ گا گی گے کر رہی ہیں، آپ کی کارکردگی صرف باتوں تک ہے اور کچھ نہیں۔
چیف جسٹس نے پنجاب حکومت کی کارکردگی پر مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آپ کی کارکردگی یہ ہے کہ آپ سے آج تک ایک کمیشن تو بن نہیں سکا، ہم اس کیس میں پنجاب حکومت کی نااہلی کو تحریری حکم کا حصہ بنا رہے ہیں، آپ لوگوں کو علاج کی سہولیات دینے میں ناکام ہیں، لوگ آپ سے خود ہی پوچھ لیں گے، سپریم کورٹ کو آپ سے توقعات تہیں لیکن آپ نے شدید مایوس کیا۔

سینیٹر سراج الحق ، مجلس شوریٰ کے اجلاس سے اختتامی خطاب


siraj ul haq conference January 6, 2019 | 7:39 PM

لاہور:(نیو ز آن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ ملک کے عوام کے مسائل کے سنجیدہ حل کے لیے طرز حکومت میں تبدیلی کی ضرورت ہے ۔ اب تو چیف جسٹس بھی یہ کہنے پر مجبور ہو گئے ہیں کہ حکومتیں کام نہیں کریں گی تو کوئی اور ذمہ داری پوری کرے گا۔ سیاست میں تلخیاں بڑھتی جارہی ہیں جو جمہوریت کے لیے سخت نقصان دہ ہیں ۔ وزراء تحمل اور برد باری کا مظاہرہ کریں اور مسائل کے حل پر توجہ دیں۔ اس وقت پوری قوم معاشی بدحالی سے پریشان ہے ۔ معیشت کو ٹریک پر چڑھانے کے لیے معاشی ڈاکومنٹیشن ، غیر ترقیاتی اخراجات میں کمی اور دیانتدار قیادت کی ضرورت ہے ۔ٹیکسوں کی بھر مار اور ادھار سے ملک نہیں چلتے ۔ ان خیالات کااظہار انہوںنے منصورہ میں ہونے والے مرکزی مجلس شوریٰ کے سہ روزہ اجلاس کے اختتامی سیشن سے خطاب اور کارکنوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ حکومت کے پہلے پانچ ماہ میں کوئی قانون سازی نہیں ہوسکی ۔ حکومت اب تک کوئی جوڈیشل ریفارمز بھی نہیں کر سکی ۔ حکومت نے جنوبی پنجاب اور کراچی کے مسائل حل کرنے کے بڑے دعوے کیے تھے مگر یہ مسائل ابھی تک جوں کے توں ہیں ۔ حکومت نے سماجی خدمات میں انقلاب لانے کا بھی وعدہ کیا تھا ، قوم منتظر ہے کہ حکومت اپنے ان وعدوں پر عمل درآمد کے لیے کب کوئی سنجیدہ قدم اٹھاتی ہے ۔ عوام پہلے کی طرح تھانے کچہری اور پٹوار خانے کے رحم و کرم پر ہیں ۔ لوگوں کو انصاف جیسی بنیادی سہولت میسر نہیں ۔ پڑھے لکھے نوجوان مایوسی کا شکار ہیں حکومت نے کہاتھاکہ ایک کروڑ نوجوانوں کو روزگار دیں گے لیکن ابھی تک اس پر عملدرآمد دور دور تک نظر نہیں آرہا۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ تبدیلی کے نعرے پر آنے والی حکومت کے دور میں ایسی کوئی تبدیلی نظر نہیں آرہی جو عوام کو نظر آئے۔ مہنگائی نے عوام کی چیخیں نکال دی ہیں ۔ پہلے سردیوں میں گیس کی لوڈشیڈنگ ہوتی تھی اب دسمبر اور جنوری میں گیس کے ساتھ ساتھ بجلی کی لوڈشیڈنگ بھی ہورہی ہے ۔ روز مرہ اشیاء کی قیمتوں میں اضافے سے لوگو ں کے لیے ضروریات زندگی حاصل کرنا مشکل ہوگیاہے ۔ حکومت عوام کو کوئی ریلیف نہیں دے سکی ۔ تبدیلی صرف ٹیکسوں اور مہنگائی میں اضافے کی صورت میں آئی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ تعلیم اور علاج کی سہولتوں کی عدم دستیابی مستقل مسئلہ بن چکاہے ۔ لاہور کراچی اسلام آباد اور پشاور جیسے بڑے شہروں کے عوام بھی علاج کی سہولتیں نہ ملنے سے سراپا احتجاج ہیں لیکن وزراء صبح و شام تبدیلی کے دعوے کرتے نہیں تھکتے ۔ انہوںنے کہاکہ دو کروڑ پینتیس لاکھ بچے سکولوں سے باہر ہیں۔ قوم و ملک کی ترقی کے لیے تعلیم بنیادی اہمیت رکھتی ہے ، سابقہ حکومتوں کی طرح موجودہ حکومت بھی تعلیم کی طرف توجہ دینے میں سنجیدہ نظر نہیں آتی ۔

قاضی حسین احمد قومی رہنما ،اتحاد امت کے داعی ، جری اور بہادر دینی، سیاسی اور سماجی رہنما تھے ۔لیاقت بلوچ


Liaqat Baloch final 2 copy January 6, 2019 | 7:36 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ قاضی حسین احمد قومی رہنما ،اتحاد امت کے داعی ، جری اور بہادر دینی، سیاسی اور سماجی رہنما تھے ۔ محنت اور محنت ، کام اور کام ان کی زندگی کا مشن اور غلبہ دین ہمیشہ ان کی جدوجہد کا مرکز و محور رہا ۔ وہ عزیز جہاں تھے ۔ ان کی رحلت پر پور ی قوم نے ذاتی صدمہ محسوس کیا ۔ مولانا سید ابوالاعلیٰ مودودی کی تحریک انمول اور بے مثال رہنما سے محروم ہوگئی ۔ انہوںنے یہ بات قاضی حسین احمد کے یوم وفات پر اپنے پیغام میں کہی ۔
لیاقت بلوچ نے کہاکہ دینی ، سماجی اور جمہوری قوتیں بکھری ہوئی ہیں ۔ قومی قیادت کو ملک کے بدترین حالات کا احساس ہی نہیں ۔ پارلیمنٹ عملاً کھلنڈرے سیاسی ایکٹرز کی یرغمال بنی ہوئی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ تمام جمہوری اور سیاسی قوتیں کرپٹ عناصر کی پرواہ کیے بغیر قومی سلامتی ، عوامی مسائل کے حل اور پاکستان دشمن قوتوں کے مقابلہ میں متحد ہو جائیں ۔ انہوںنے کہاکہ کرپٹ مافیا آئین سے ماورا اقدامات اور غیر ذمہ دارانہ رویوں نے ملک اور عوام کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا ہے ۔ انہوںنے کہاکہ ہر پارٹی کے صالح اور جمہوریت پسند کردار فعال ہوں اور پاکستان کو بحرانوں سے نکالیں ۔
لیاقت بلوچ سے منصورہ میں سندھ اور بلوچستان کے نوجوانوں کے وفد نے ملاقات کی اور سندھ اور بلوچستان کے نوجوانوں کے مسائل سے انہیں آگاہ کیا۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ بے روزگار ی، سفارش، رشوت اور میرٹ کی پامالی نوجوانوں کے لیے بڑا روگ بنادیا گیاہے ۔

سینیٹر سراج الحق کا سیالکوٹ میں(نافع) کے زیر اہتمام ٹیلنٹ ایوارڈ شو کے شرکاء سے خطاب


pic ameer ji December 30, 2018 | 9:15 PM

لاہور :( نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ گیس کا بحران شدت اختیار کر گیا ہے ۔ آج کل ہوا بھی سرد اور چولہے بھی ٹھنڈے ہیں ۔ ایل پی جی کی قیمتوں میں اضافہ اور گیس کی عدم فراہمی کی وجہ سے ہر گھر میں پریشانی ہے ۔ ایل پی جی سرکاری ریٹ پر دستیاب نہیں اور بلیک میں مہنگی بک رہی ہے۔ ای سی ایل میں نام ڈالنے ہیں تو پھر سب کے ڈالیے۔ اگر ملک سے لوٹے ہوئے 375 ارب ڈالر واپس آ جائیں تو کسی سے خیرات لینے کی ضرورت نہ رہے ۔ ہم کسی ایک فرد یا جماعت کا نہیں ، سب کا احتساب چاہتے ہیں ۔ ملک کو لوٹنے والے کسی رعایت کے مستحق نہیں ۔ موجودہ حکومت میں بھی مسلم لیگ اور پی پی کے لوگ شامل ہیں جو لوٹ مار کے نظام کا حصہ رہے ہیں ۔ ملک میں کوئی ہنگامی صورتحال نہیں مگر پھر بھی روزانہ مہنگائی میں اضافہ ہورہاہے ۔ ابھی تک تبدیلی کا کوئی نام و نشان نہیں ۔ تبدیلی صرف ٹیکسوں اور مہنگائی میں اضافہ سے آئی ہے ۔ ان خیالات کااظہار انہوںنے سیالکوٹ میں نیشنل ایسوسی ایشن فار ایجوکیشن (نافع) کے زیر اہتمام جینئس آف سیالکوٹ ٹیلنٹ ایوارڈ شو کے شرکاء سے خطاب اور میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ تقریب سے امیر جماعت اسلامی وسطی پنجاب امیر العظیم نے بھی خطاب کیا ۔ ٹیلنٹ ایوارڈ میں طلبہ و اساتذہ نے سینکڑوں کی تعداد میں شرکت کی ۔ سراج الحق نے مختلف شعبوں میں اعلیٰ کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے طلبہ اوراساتذہ میں انعامات و شیلڈز بھی تقسیم کیں ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ موجودہ حکومت مدینے کی ریاست کا نام لیتی ہے مگر اس کو اختیار کرنے کو تیار نہیں ۔ انہوںنے کہاکہ جب تک نظریہ پاکستان پر ایمان رکھنے والی قیادت ملک کی باگ ڈور نہیں سنبھالتی ، پاکستان اسلامی اور فلاحی ملک نہیں بن سکتا ۔ انہوںنے کہاکہ حکمران قوم سے کیے گئے وعدوں پر عمل کرنے میں ناکام ہوچکے ہیں ۔ الیکشن 2018 ء کے بعد اقتدار میں آنے والوں نے عوام کو کوئی ریلیف نہیں دیا ، مہنگائی اور بے روزگاری میں مسلسل اضافہ ہورہاہے ۔ عوام کو تعلیم اور صحت کی سہولتیں میسر نہیں ۔ دو کروڑ 35 لاکھ بچے سکولوں سے باہر ہیں ۔ حکمران بتائیں کہ ان بچوں کا مستقبل کیوں تاریک کیا جارہاہے ۔انہوںنے کہاکہ احتساب کا موجودہ نظام قوم کو تقسیم کر رہاہے ۔ نیب ، حکومت اور سپریم کورٹ پانامہ لیکس کے دیگر ملزموں کو بھی پکڑیں یہ تاثر نہیں جانا چاہیے کہ حکومت احتساب کو متنازعہ بنارہی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ جماعت اسلامی سب کا احتساب چاہتی ہے ۔ نیب کے پاس 150 میگا کرپشن کے اسکینڈلز ہیں ان کو کھولا جائے ۔ بنکوں سے اربوں روپے کے قرضے لے کر معاف کرانے والوں اور دولت بیرون ملک منتقل کرنے والوں کو پکڑا جائے ۔ جب سب کا احتساب ہو گا تو اس پر کوئی اعتراض نہیں کرسکے گا ۔

بانیان پاکستان کی اولادوں کودیوار سے لگانے کی سازشیں ہورہی ہیں،سید عقیل انجم


Baber Brotheran December 30, 2018 | 6:42 PM

ملک کے سواداعظم اہلسنّت وجماعت کی ذمہ داری ہے کہ اپنے اکابرین کی امانت وطن عزیزپاکستان کی حفاظت کا فریضہ انجام دیں،مفتی بشیرالقادری
وطن عزیز آج تاریخ کے انتہائی نازک ترین دورسے گزررہاہے، شکیل قاسمی، ظہیر خان ٹھیکیدارودیگر کالیاقت آباد میں منعقدہ جشن غوث الوریٰ سے خطاب
کراچی (نیوزآن لائن) جمعیت علماء پاکستان کراچی کے صدرعلامہ سید عقیل انجم قادری نے کہا ہے کہ وطن عزیز آج تاریخ کے انتہائی نازک ترین دورسے گزررہاہے، قتل وغارتگری،دہشتگردی اور لاقانونیت کابازارایک بارپھرگرم ہوچکاہے،بانیان پاکستان کی اولادوں کودیوار سے لگانے کی سازشیں ہورہی ہیں،ایسے میں اہلسنّت وجماعت جواس ملک کے سواداعظم ہیں ان کی ذمہ داری ہے کہ اپنے اکابرین کی امانت وطن عزیزپاکستان کی حفاظت کا فریضہ انجام دیں۔ یہ باتیں انہوں نے سکندرآباد لیاقت آباد میںجے یوپی ضلع وسطی کے زیراہتمام منعقدہ جشن غوث الوریٰ سے خطاب کرتے ہوئے کہیں،اس موقع پر جے یوپی کراچی ڈویژن کے جنرل سیکریٹری مفتی محمدبشیرالقادری،چیف آرگنائزرمحمدشکیل قاسمی،نائب صدر سید جہاں زیب سبزواری،میزبان ضلع وسطی کے ناظم اعلیٰ ظہیر خان ٹھیکیدار ودیگر نے بھی خطاب کیا،جبکہ حبیب بھیا،سیکریٹری لیبرافیئرزغلام عباس لنگاہ، ضلع ملیرکے صدر محمداکبروٹو، طارق مغل،مہتاب نورانی،محمودعسکری، سلمان شیخ، محمدہاشم نورانی،کاشف نورانی،جمیل قادری،جمال انصاری،حافظ شہریارقادری، ایان قادری،نورمحمداشرفی ودیگر نے بھی شرکت کی۔جشن غوث الوریٰ میں عالم اسلام کے معروف ثناء خوان رسول حافظ طلحہ قادری، محمدارسلان نقشبندی، بابرنقشبندی، سلمان قادری، اویس رضا قادری، بلال شاہ بخاری،ابوبکر قادری، زوہیب قادری ودیگر نے ہدیہء نعت ومنقبت پیش کیا۔مقررین نے اپنے خطاب میں کہاکہ پاکستان بچانے کی واحدصورت یہ ہے کہ جن اکابرین نے پاکستان بنایاتھا ان کی اولادیں آگے بڑھیںاور پاکستان کوبچائیں۔انہوںنے کہاکہ حضورغوث الاعظم کے مریدین ومعتقدین نے صلیبی جنگوں میںاسلام کی سربلندی میں اہم کرداراداکیا،حضرت مجددالف ثانی نے اپنے دورمیں انقلاب کی راہ ہموار کی، خانقاہی نظام کااصل مقصدہی مسلمانوں کاتحفظ اور شعائراللہ کی حفاظت ہے ،آج بھی اگرصاحبان طریقت موقع کی نزاکت کوسمجھ لیں توملک میں انقلاب نظام مصطفےٰ ۖ کے نفاذ کی منزل قریب تر ہوگی۔انہوں نے کہاکہ جے یوپی قادریوں، نقشبندیوں، چشتیوں اور سہروردیوں کالشکر ہے ،یہ امام نورانی کے چاہنے اور ماننے والو ں کااصل لشکرہے یہ سرکٹاتوسکتاہے ،سرجھکانہیں سکتا۔انشاء اللہ مشن نورانی کوپوراکریں گے اور یارسول اللہ ۖ کے نعرے پرسب کو متحد کریں گے۔ جمعیت علماء پاکستان موروثی جماعت نہیں ہے ہم سب علامہ شاہ احمدنورانی کے بنائے ہوئے دستور کے پابند ہیں۔انہوں نے مطالبہ کیاکہ وطن پاک میں بے روزگاری کے خاتمے کے لئے توانائی کے نئے ذرائع تلاش کئے جائیںاور روزگارکی فراہمی کے لئے نئے صنعتی یونٹس لگائے جائیں اور وہ تمام بیمارصنعتوں کی بحالی کے لئے عملی اقدامات کئے جائیں اور نوجوان نسل کو بے روزگاری سے بچایاجائے۔ پی ٹی آئی کی قیادت نے انتخابات سے قبل قوم سے وعدہ کیاتھاکہ ملک سے کرپشن کاخاتمہ کریں گے ،بدعنوان عناصر کوسرعام سزادی جائے گی اور وہ لوگ جنہوں نے ملک سے بے شماردولت لوٹی ہے وہ پیسہ واپس لیا جائے گا،مگرمیڈیاپر ٹرائل تو نظرآرہاہے لیکن پیسہ نہیں آرہا،مہنگائی کا طوفان غریبوں کے چولہے ٹھنڈے کررہاہے مگر حکمران اربوں روپے خرچ کرکے نئے سنیماتعمیر کئے جارہے ہیں۔حکمران انتخابی وعدے پورے کریں ، مظلوم قوم نے پی ٹی آئی کوتبدیلی کے نام پر ووٹ دیا تھامگر یہ ہماری بدقسمتی ہے کہ نہ توکوئی تبدیلی آئی اور نہ ہی کرپشن کاخاتمہ ہوا،نہ لوڈشیڈنگ ختم ہوئی نہ ملکی وسائل کی لوٹ مار میں کمی آئی،بلکہ ہر آنے والادن پاکستان کے غریب عوام کی پشت پر مہنگائی کے کوڑے برسارہاہے ۔ بجلی، آٹا،پیٹرول اور بنیادی ضرورت کی اشیاء کی قیمتوں میں روزافزوں اضافہ ہورہاہے ور یہ سب کچھ ورلڈ بینک اور آئی ایم ایف کی پالیسیز کی پابندی کانتیجہ ہے ۔عمران خان اپنے وعدے پورے کریں ،ورلڈ بینک وآئی ایم ایف کے شکنجے سے قوم کو آزادی دلائیںتاکہ قوم واقعی خوشحالی کی راہ پر گامزن ہوسکے۔انہوں نے قائدین اہلسنّت سے مطالبہ کیاکہ حالات کی نزاکت کوسمجھیں اب وقت آچکاہے کہ قائدین آج بھی متحد نہ ہوئے توپھرکب ہونگے،ہم تمام قائدین اہلسنّت سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ خدااور اس کے رسول ۖ کے واسطے اپنے تمام تر ذاتی اور گروہی اختلافات کو بالائے طاق رکھ کر اپنی مادری تنظیم جمعیت علماء پاکستان کے پلیٹ فارم پر متحدومنظم ہوجائیں اور پاکستان کو حقیقی معنوں میں نظام مصطفےٰ کا گہوارابنانے کی تحریک کا آغازکریں۔

کراچی میں مہاجروں کو اقلیت میںتبدیل کیا جارہاہے،ڈاکٹر سلیم حیدر


dr saleem haider mit charimen December 23, 2018 | 8:58 PM

اپنے ہی شہر میں مہاجر نوجوان تعلیم اور روزگار سے محروم کردیئے گئے ہیں
مہاجر قیادت اور مہاجر فکر رکھنے والے تمام افراد کو متحد ہوکر مشترکہ جدوجہد کرنی ہوگی
کراچی:(نیوزآن لائن) مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہا ہے کہ کراچی جوکہ مہاجروں کا سب سے زیادہ اکثریتی شہر ہے اس پر ایک منصوبہ بندی کے تحت مہاجروں کو اقلیت میں تبدیل کیا جارہا ہے۔ اپنے ہی شہر میں مہاجر نوجوانوں پر تعلیم اور روزگار کے دروازے بند کردیئے گئے ہیں۔ وہ طلباء کے وفد سے بات چیت کررہے تھے۔ ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہاکہ کراچی میں مہاجر قوم کو منتشر ہونے کے بعد مہاجر دشمن عناصر مہاجروں کو دیوار سے لگانے کیلئے کمر بستہ ہوگئے ہیں۔ اس صورتحال کا ادراک کرتے ہوئے ہم نے کافی عرصے قبل سے ہی مہاجر جماعتوں اور قائدین کو متحد کرنے کی کوششیں شروع کیں جو اب بھی جاری ہیں جس کا مقصد کراچی سمیت سندھ میں رہنے والے مہاجروں کو ان کے حقوق کے ساتھ ساتھ ان کے تحفظ کو بھی یقینی بنانا ہے۔ انہوں نے کہاکہ پیپلزپارٹی کی حکومت جس کی قیادت سے لے کر اراکین اسمبلی اور وزراء تک کرپشن میں ڈوبے ہوئے ہیں ، وہ کراچی کے وسائل کو اندرون سندھ میں ترقی کے نام پر لے کر جارہے ہیں ، جہاں سے وہ وسائل بھی بدعنوانی کی نذر ہوجاتے ہیں، انہوں نے کہاکہ مہاجر ماضی سے سبق سیکھتے ہوئے مثبت اور بہتر قیادت کو سامنے لے کر آئیں تاکہ مہاجروں کے دیرینہ مسائل اور ان کے حقوق کے حوالے سے جدوجہد کی جاسکے۔ کیونکہ سندھ میں جس طرح کی صورتحال پیدا کردی گئی ہے اس کے بعد اب مہاجروں کیلئے ہر آنے والا دن سخت سے سخت ہوتا جارہا ہے۔

کاروبار اور سرمایہ کاری سے متعلق موجودہ حکومت کی سوچ سابقہ حکومتوں سے مختلف ہے۔وزیراعظم عمران خان


imran khan meeting for stock exchange market December 9, 2018 | 7:28 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ حکومت ملک میں کاروبار اور سرمایہ کاری کے فروغ اور تحفظ کیلئے پرعزم ہے۔وہ پاکستان سٹاک ایکسچینج کے ایک وفد سے گفتگو کررہے تھے جس نے اپنے چیئرمین سلیمان مہدی کی قیادت میں اتوار کے روز کراچی میں ان سے ملاقات کی۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ کاروبار اور سرمایہ کاری سے متعلق موجودہ حکومت کی سوچ سابقہ حکومتوں سے مختلف ہے۔۔ انہوں نے کہا کہ غیر ملکی سرمایہ کار معیشت کے مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری میں دلچسپی ظاہر کررہے ہیں۔وزیراعظم نے ملک میں کاروباری ماحول کی بہتری کیلئے تاجروں سے تجاویز طلب کیں۔ انہوں نے وزیراعظم کو سٹاک مارکیٹ کے بروکرز کے مسائل سے بھی آگاہ کیا۔دونوں فریقوں نے ٹیکس کے دائرے کو وسعت دینے اور سٹاک مارکیٹ میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کے استعمال پر اتفاق کیا۔وزیراعظم نے وفد کی بیشتر تجاویز کی منظوری دے دی۔

جماعت اسلامی اقامت دین کی تحریک ہے ہمارا مقصد رضائے الہیٰ کا حصول ہے سراج الحق


Tanzeem Program copy December 9, 2018 | 6:35 PM

کراچی میں بڑی قربانیاں دی ہیں کٹھن حالات میں بھی دعوت دین اور خدمت کا فریضہ انجام دیا تقریب حلف برداری سے خطاب
تقریب میں 10عبوری امراء اضلاع نے اپنی ذمہ داری کا حلف لیا محمد حسین محنتی ، حافظ نعیم الرحمن نے بھی خطاب کیا
کراچی: (نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سرا ج الحق نے کہا ہے کہ جماعت اسلامی اقامت دین کی تحریک ہے اور ہمارا مقصد اس تحریک اور جدوجہد میں شریک ہوکر رضائے الہیٰ کا حصول ہے، کراچی منی پاکستان اور عالم اسلام کا ایک اہم اور بڑا شہر ہے ،کراچی میں جماعت اسلامی کے کارکنوں نے بڑی قربانیاں دی ہیں ، انتہائی مشکل اور کٹھن حالات میں بھی دعوت دین اور خلق خدا کی خدمت کا فریضہ انجام دیا ہے ، یہ جدوجہد جاری رہے گی ۔ ان خیالات کا اظہارانہوں نے ادارہ نورحق میں جماعت اسلامی کراچی کی تنظیمی تشکیل نو کے بعد مقرر کیے جانے والے 10عبوری امراء اضلاع کی تقریب حلف برداری کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ تقریب سے جماعت اسلامی سندھ کے امیر محمد حسین محنتی ، کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمن اور سکریٹری عبد الوہاب نے بھی خطاب کیا۔ تقریب میں ضلعی امراء محمد اسلام ، ، توفیق الدین صدیقی ،عبد الجمیل خان ، ، محمد یونس بارائی ،سیف الدین ایڈوکیٹ ، سید عبد الرشید ،محمد اسحاق خان ، محمد یوسف ،فاروق نعمت اللہ اورمنعم ظفر خان نے حلف پڑھ کر اپنی ذمہ داری کا حلف لیا ، اس موقع پر نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان اسد اللہ بھٹو و دیگر بھی موجود تھے ۔ سراج الحق نے عبوری امراء کے لیے استقامت اور کامیابی کی دعا کرتے ہوئے کہاکہ رب کریم تمام ذمہ داران کو اس عہد کے تمام تقاضوں کو پورا کرنے کی توفیق عطا فرمائے۔ انہوں نے کہاکہ اقامت دین کا کام ایک عظیم اور مقدس کام ہے ، حضرت آدم سے لے کر نبی کریم ۖ کے زمانے تک تمام انبیاء کرام اقامت دین کا کام کرتے رہے اور آج یہ کام پوری امت پر فرض ہے کہ معاشرے میں اقامت دین کی جدوجہد کی جائے ۔موجودہ دور میں انسان مادہ پرستی کی زندگی اور مال کمانے میں مصروف ہے لیکن غلامان رسول ۖ اور اقامت دین کے مجاہد دین کی اشاعت اور رضائے الہیٰ کے حصول میں لگے رہتے ہیں اور یہی ہمارے نبی ۖ کی شان تھی کہ جو دنیا سے بے نیاز ہوکر مخلوق کو متحد ومتفق کرنے اور دین کے غلبے کی جدوجہد کرتے رہے ۔ انہوں نے کہاکہ ہماری لڑائی کسی کی ذات کے لیے یا صرف اقتدار کے لیے نہیں بلکہ اللہ کے دین کو غالب کرنے کے لیے ہے ، اللہ تعالیٰ ہماری کاوشوں اور جدوجہد کو قبول کرے یہی ہمارے لیے آخرت میں نجات اور جنت کے حصول کا ذریعہ ہے ، انہوں نے کہاکہ معاشرے میں بے شمار لوگ صلاحیت، مال و دولت اور علم کے لحاظ سے موجود ہیں ،لیکن اللہ کی مہربانی ہے کہ اس نے ہمیں اس کام کے لیے منتخب کیا ۔انہوں نے کہاکہ ملکی اور بیرونی سطح پر چیلنجز کا مقابلہ منظم اور متحد ہو کر ہی کیا جاسکتا ہے ، آپ کی صلاحیتیں اللہ کی امانت ہیں ان کو بہتر اور خوب سے خوب تر بنایا جائے ، راتوں کو جاگ کر اللہ کے حضور مدد اور نصرت طلب کریں اور غلطیوں ، کوتاہیوں اور نفرتوں سے درگزر کرنے کی دعا کریں ۔انہوں نے کہاکہ آنے والا کل اللہ کے دین کا ہوگا اور یہ ناممکن نہیں ، اللہ کا وعدہ ہے کہ دین غالب ہوکر رہے گا ۔

مہاجر شہداء کو سلام عقیدت پیش کرتے ہیں ۔ شہداء کے معاملے پر کسی کو سیاست کرنے کی ضرورت نہیں ۔ اگر کچھ کرنا ہے تو اختلافات بھلا کر ایک ہوجائیں ۔ ڈاکٹر محمد انور صدیقی


karachi December 9, 2018 | 6:21 PM

قوم کی مشکلات دن بدن بڑھ رہی ہیں ۔ ایم کیو ایم پاکستان کو کرش کیا جا رہا ہے۔ ہم نے اب کھل کر مہاجر سیاست اور عوامی اجتماعات کا فیصلہ کرلیا ہے۔ چیئرمین ایم این ایم
چاروں طرف سے مہاجر کش آپریشن ہورہا ہے۔ لیکن جنہیں مینڈیٹ دیا گیا وہ خاموشی کا روزہ رکھ کر بیٹھے ہیں۔چیئرمین ڈاکٹر انور کا جلدکنونشن منعقد کرنے کا بھی اعلان
مہاجر نام پر منتخب ہونے والے اسکی کو بٹہ لگا رہے ہیں ۔ فاروق ستار با با نے مہاجر قوم کی پیٹھ پر چھرے گھونپ گھونپ کراسے لہولہان کردیا ہے۔ روبینہ یاسمین سینئر وائس چیئرپرسن
کراچی کے تمام سرکاری اداروں میں مہاجر افسر و ملازمین کو چن چن کر لسانیت کی بنیاد پر نیب اور اینٹی کرپشن نشانہ بنا رہے ہیں ۔ متعدد جیلوں میں ہیں ۔ عقیل انبالوی وائس چیئرمین
آفاق احمد ، فاروق ستار ایک ہی سکے کے دو رخ اور لندن مافیاء مہاجر قوم کو لندن سے بیٹھ کر کچلنے کے لئے متحرک ہے۔ محمد یونس میمن ۔ عارضی جنرل سیکریٹری مہاجر نیشنل موومنٹ
عام انتخابات دھوکہ اور جھرلو تھے۔ ایم کیو ایم کو ہرانے میں خلائی مخلوق پیش پیش تھی۔ محسوس کر رہے ہیں کہ مہاجر سیاست کچل دی گئی ہے۔ شبانہ خانم جوائنٹ سیکریٹری ایم این ایم
مہاجر اشوز پر اب کسی کا انتظار نہیں کرینگے۔ جتنی بھی نشستیں ہیں ایم کیو ایم مہاجر حقوق پر آواز اٹھائے ۔ عادل شفیق سیکریٹری اطلاعات مہاجر نیشنل موومنٹ
تجاوزات کے خاتمے پر وسیم اختر مبارکباد کے مستحق ہیں ۔ سڑکیں کشادہ ہو رہی ہیں ۔ گھروں کے مسمار کرنے پر استعفی کا اعلان مہاجر میئر کا زبردست فیصلہ ہے۔ مرکزی کمیٹی
تحریک انصاف ملک ، قوم ، ایم کیو ایم سے مخلص نہیں ۔ ایم کیو ایم کو اب تک کیا ریلیف ملا جواب دیں ۔ عمرانہ سی ایف ایس جی، فاریہ ، عبدالقیوم ، کرن خان اورناصر خان کا خطاب
کراچی:(نیوزآن لائن) مہاجر نیشنل موومنٹ کے چیئرمین ڈاکٹر محمد انور صدیقی نے کہا ہے کہ مہاجر نام کو کچلنے کی کوششیں ناکام ہوں گیں۔ مہاجر شہداء کو سلام عقیدت پیش کرتے ہیں ۔ شہداء کے معاملے پر کسی کو سیاست کرنے کی ضرورت نہیں ۔ اگر کچھ کرنا ہے تو اختلافات بھلا کر ایک ہوجائیں۔ فاروق ستار ایک دانا سیاست کے بجائے دھوکہ باز مہاجر رہنما کی حیثیت سے سامنے آرہے ہیں جو قبضہ گروپ ہیں ۔ انا کے خول میں بند آمر رہنما کی تقلید میں وہ بند ڈبے میں نظر آرہے ہیں ۔ ڈاکٹر انور نے یہ بات مہاجر نیشنل موومنٹ کے عہدیداران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ چیئرمین ڈاکٹر انور نے جلدکنونشن منعقد کرنے کا بھی اعلان کیا۔ انہوں نے کہا کہ چاروں طرف سے مہاجر کش آپریشن ہورہا ہے۔ لیکن جنہیں مینڈیٹ دیا گیا وہ خاموشی کا روزہ رکھ کر بیٹھے ہیں ۔ ایسے اقتدار سے بہتر ہے کہ عوام کے پاس واپس آکر تحریک چلائی جائے ہم بھی شانہ بشانہ چلنے کو تیار ہیں ۔ ہم نے غیر مشروط حمایت کیں لیکن اب بھی مخالفت برائے مخالفت نہیں کریں گے مخالفت برائے اصلاح کریں گے۔ ہم آفاق احمد ، فاروق ستار ، ندیم احسان ، کی طرح قوم کی تقسیم اور تباہی کے لئے کسی کا ایندھن نہیں بنیں گے۔ لندن کو قوم کا مجرم سمجھتے ہیں وہاں سے تعلق کفر کے برابر ہے جو پاکستان کا نہیں وہ ہمارا نہیں ۔ ڈاکٹر انور نے علاقائی سطح پر ورکرز اجلاس شروع کرنے کا بھی اعلان کیا ۔ اتوار 16دسمبر کو یوم سقوط ڈھاکہ پر گلشن اقبال میں پہلا اجلاس منعقد ہوگا۔ سینئر وائس چیئرپرسن روبینہ یاسمین نے کہا کہ مہاجر نام پر منتخب ہونے والے اسکی کو بٹہ لگا رہے ہیں ۔ فاروق ستار با با نے مہاجر قوم کی پیٹھ پر چھرے گھونپ گھونپ کراسے لہولہان کردیا ہے۔ وائس چیئرمین عقیل انبالوی نے کہا کہ کراچی کے تمام سرکاری اداروں میں مہاجر افسر و ملازمین کو چن چن کر لسانیت کی بنیاد پر نیب اور اینٹی کرپشن نشانہ بنا رہے ہیں ۔ متعدد جیلوں میں ہیں۔ واحد ہم ہیں جس اس پر آواز اٹھا رہے ہیں ۔من مانی نہیں کرنے دیں گے۔ عارضی جنرل سیکریٹری محمد یونس میمن نے کہا کہ آفاق احمد ، فاروق ستار ایک ہی سکے کے دو رخ اور لندن مافیاء مہاجر قوم کو لندن سے بیٹھ کر کچلنے کے لئے متحرک ہے۔جوائنٹ سیکریٹری شبانہ خانم نے کہا کہ عام انتخابات دھوکہ اور جھرلو تھے۔ ایم کیو ایم کو ہرانے میں خلائی مخلوق پیش پیش تھی۔ محسوس کر رہے ہیں کہ مہاجر سیاست کچل دی گئی ہے۔ عادل شفیق نے کہا کہ مہاجر اشوز پر اب کسی کا انتظار نہیں کرینگے۔ جتنی بھی نشستیں ہیں ایم کیو ایم مہاجر حقوق پر آواز اٹھائے۔ تجاوزات کے خاتمے پر وسیم اختر مبارکباد کے مستحق ہیں ۔ سڑکیں کشادہ ہو رہی ہیں ۔ گھروں کے مسمار کرنے پر استعفی کا اعلان مہاجر میئر کا زبردست فیصلہ ہے۔ مرکزی کمیٹی کے دیگر رہنمائوں نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ تحریک انصاف ملک ، قوم ، ایم کیو ایم سے مخلص نہیں ۔ ایم کیو ایم کو اب تک کیا ریلیف ملا جواب دیں ۔ عمرانہ سی ایف ایس جی، فاریہ ، عبدالقیوم ، کرن خان اورناصر خان نے بھی خطاب کیا۔

سینیٹر سراج الحق : منصورہ میں میڈیا اسٹینڈنگ کمیٹی اجلاس سے خطاب


siraj ul dula in lahore news December 2, 2018 | 9:08 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ پاکستان ایک نظریاتی ملک ہے جو نظریے سے ہی مضبوط اور مستحکم ہوگا ۔ اسلامی انقلاب قوم کی منزل ہے ۔ اسلام ہی مسائل کا حل ہے ۔ انسان کے جسم و روح کا سکون اسلام پر عمل پیرا ہونے میں ہے ۔ آئین نے اظہار رائے کی آزادی کا شہریوں کو جو حق دیاہے ، اس پر عمل نہیں ہورہا ۔ میڈیا پر قدغن لگانا اور اسے اپنی مرضی پر چلانا درست طرز عمل نہیں ۔ میڈیا کی آزادی کا نعرہ لگانے والوں کو اپنے وعدوں پر عمل درآمد کا جائزہ لینا چاہیے ۔ پاکستان سمیت عالم اسلام کے ذرائع ابلاغ کو اسلام کی ترویج و اشاعت کے لیے اپنا کردارادا کرنا چاہیے ۔ اسلام کے خلاف مغربی ذرائع ابلاغ کی متعصبانہ مہم کو ناکام بنانے کے لیے ضروری ہے کہ مسلم ممالک کا میڈیا دنیا کے سامنے اسلام کے روشن چہرے کو واضح کرے ۔ جھوٹ ، بہتان بازی اور پروپیگنڈے کے دور میں اسلامی دنیا کے ذرائع ابلاغ کو اپنی الگ پہچان بناناہوگی ۔ جماعت اسلامی صحافیوں کے مسائل کے حل کے لیے ہر فورم پر آواز اٹھائے گی ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے منصورہ میں ہونے والے مرکز ی میڈیا اسٹینڈنگ کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اجلاس سے صدر کمیٹی ڈاکٹر فرید احمد پراچہ ، امیر العظیم اور سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف نے بھی خطاب کیا ۔ اس موقع پر سابق سیکرٹری اطلاعات محمدانور نیازی ، ڈاکٹر طارق سلیم ، شاہد ہاشمی ، شاہد شمسی و دیگر ممبران کمیٹی بھی موجود تھے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ اب وہ دور آگیاہے کہ جب میڈیا کے ذریعے ہم اسلام کے امن پسند ی اور خیر خواہی کے پیغام کو دنیا بھر کے انسانوں تک بڑی آسانی سے پہنچا سکتے ہیں ۔ ذرائع ابلاغ کی ترقی اور سوشل میڈیا کے دور میں تحریک اسلامی کا کام نہایت آسان ہوگیاہے ۔ اب دنیا بھر کی اسلامی تحریکوں کو آگے بڑھ کر اپنے پیغام کو پوری انسانیت تک پہنچانا چاہیے دعوت و تبلیغ کے پھیلائو میں مسلم دنیا کا میڈیا نہایت موثر کردار ادا کر سکتاہے لہٰذا مسلم ممالک کو اس طرف خصوصی توجہ دینی چاہیے ۔ خاص طور پر مغربی میڈیا کے اسلام مخالف رویے اور اسلامو فوبیا جیسے پروپیگنڈے کو ناکام بنانے کے لیے اسلامی ممالک کے الیکٹرانک میڈیا کو میدان میں آناچاہیے اور دنیا کی مختلف زبانوں میں قرآن و حدیث کے تراجم پیش کرکے انسانیت کو گمراہی کے اندھیروں سے نکال کر حق کی روشنی کی طرف لانا چاہیے ۔ انہوںنے کہاکہ اگر مسلم دنیا کا میڈیا اپنے اس فرض کو پہچان لے تو دنیا بھر میں مسلمانوں پر ہونے والے مظالم کو ختم کیا جاسکتاہے اور کشمیر اور فلسطین جیسے دیرینہ مسائل کو بھی حل کیا جاسکتا ہے ۔

سینیٹر سراج الحق : ایوان اقبال میں خاتم الانبیاء ۖ کانفرنس سے خطاب


pic sirajul haq November 25, 2018 | 7:52 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سرا ج الحق نے کہاہے کہ آئین پاکستان میں قادیانیوں سمیت تمام اقلیتوں کے حقوق کا واضح تعین کردیاگیاہے لیکن قادیانی خو د کو غیر مسلم تسلیم کرنے کی بجائے آئین پاکستان کے خلاف سازشوں میں مصروف ہیں ۔ آئین سے غداری کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی ۔ حکومتی وزیر اور مشیر قادیانیوں کی سرپرستی چھوڑ دیں اور آئین کی حفاظت کے حلف کی پاسداری کریں ۔ غلامان مصطفےٰۖ کسی کو آئین سے کھلواڑ کرنے کی اجازت نہیں دیں گے ۔ دستور قومی وحدت و یکجہتی کی علامت ہے اس کی حفاظت کے لیے کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے ۔ حکومت کے سو دن پورے ہونے کو ہیں مگر ابھی تک تبدیلی کا دور دور تک کوئی نشان نہیں ۔ ختم نبوتۖ اور ناموس رسالتۖ کے تحفظ کے لیے پوری قوم ایک پیج پر ہے ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے جماعت اسلامی لاہور کے زیراہتمام ایوان اقبال میں خاتم الانبیاء ۖ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ کانفرنس سے جماعت اسلامی لاہور کے امیر ذکر اللہ مجاہد ، جسٹس ریٹائرڈ خلیل الرحمن خان ، ڈاکٹر ارباب عالم ، پروفیسر عامر متین اور،اوریا مقبول جان نے بھی خطاب کیا ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ قادیانی اسلام اور آئین پاکستان کے غدار ہیں ان کی خواہش ہے کہ دستور پاکستان سے اسلامی دفعات ، خاص طور پر قادیانیوں کو کافر قرار دینے اور 295 سی جیسی دفعات کا خاتمہ کر کے اسے مکمل سیکولر دستور بنا دیا جائے لیکن قوم ان سازشوں کو مزید برداشت نہیں کرے گی ۔ انہوںنے کہاکہ حکمرانوں کو بھی اپنا قبلہ درست اور قادیانیوں کی سرپرستی چھوڑ کر اپنی آئینی ذمہ داریوں کو پورا کرنا ہوگا ۔ انہوں نے کہاکہ قوم حکمرانوں کی ہر کوتاہی معاف کر سکتی ہے مگر قادیانیوں کے ساتھ حکومتی آفیشلز کا میل ملاپ اور انہیں سر پر بٹھانے کے اقدامات کو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا ۔ انہوںنے کہاکہ آئین پاکستان اقلیتوں کے حقوق کی مکمل حفاظت کی ضمانت دیتاہے غیر مسلموں کو اپنے مذہب پرعمل کرنے کی مکمل آزادی ہے ۔ ہم پاکستان میں غیر مسلموں کے خلاف نہیں ، قادیانی خود کو غیر مسلم تسلیم کریں تو ان سے بھی کسی کو کوئی اختلاف نہیں ہوگا ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ حکومت کو یوٹرن لینے اور یوٹرن کے جواز پیدا کرنے کی بجائے رائٹ ٹرن لے کر اپنے وعدوں کی تکمیل کی طرف توجہ دینی چاہیے ۔ حکومت کے سو دن پورے ہونے کو ہیں مگر اب تک اس کے پاس اپنے منشور ، وعدوں اور دعوئوں پر عمل درآمد کے حوالے سے کوئی ایک مثال بھی نہیں ۔ انہوںنے کہاکہ عوام ریلیف چاہتے ہیں ۔ غربت ، مہنگائی ، بے روزگاری اور بدامنی سے نجات چاہتے ہیں ۔ عوام کو دعوئوں اور نعروں سے زیادہ دیر بہلایا نہیں جاسکتا ۔
کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی لاہور ذکر اللہ مجاہد نے کہاکہ خاتم النبیین ۖ کی ناموس کی حفاظت کے لیے عاشقان مصطفی ۖ اپنی جانیں نچھاور کرنے کو اپنے لیے سعادت سمجھتے ہیں ۔ ختم نبوت اور ناموس رسالت کی حفاظت کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ ملک میں آپ ۖ کی شریعت کا نفاذ ہو ۔

سرکاری نیلامی کے عمل کو آسان اور شفاف کیا جارہا ہے۔ مرتضیٰ وہاب


murtuza wahab November 25, 2018 | 3:10 PM

پروکیورمنٹ سے متعلق اعلیٰ سطحی اجلاس کی صدارت میں مشیر قانون کے احکامات
کراچی :( نیوزآن لائن ) وزیر اعلیٰ سندھ کے مشیر اطلاعات و قانون اور اینٹی کرپشن بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ سرکاری نیلامی کے عمل کو نمایاں اور شفاف بنانے کے لیے پروکیورمنٹ اتھارٹی کو جدید خطوط پر استوار کیا جائے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سندھ پبلک پروکیورمنٹ ریگولیٹری اتھارٹی کے اعلیٰ سطحی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ صوبائی مشیر نے ہدایات دیں کہ سرکاری نیلامی کے ٹینڈر کے بولی دہندگان کی تمام جائز شکایات اور اس کو رفع کرنے سے متعلق تجاویز کو دستاویز میں رکھنا ہوگا تاکہ بعد میں کسی بھی بولی دہندہ کو اس کے کاغذات سے متعلق جانچ پڑتال کو سامنے لایا جاسکے۔ پروکیورمنٹ ریگولیٹری اتھارٹی کے مینیجنگ ڈائریکٹر محمد اسلم غوری نے صوبائی مشیر کو پروکیورمنٹ سے متعلق قانون سازی کی پروجیکٹر پر پریزنٹیشن دیتے ہوئے آگاہی دی۔ صوبائی مشیر نے کہا کہ بولی دہندگان کی تعداد کو متعلقہ ٹینڈر سے متعلق کم سے کم پورے ٹینڈر کی رقم کا دو فیصد زر ضمانت قابلِ واپسی جمع کرانے کو لازم کیا جائے تاکہ بولی دہندہ کی سامنے آنے والی کسی بھی شکایت کو اس کی ٹینڈر سے متعلق دلچسپی و دل جمعی کے تحت اس کی شکایت کو دور کرنے میں پروکیورمنٹ اتھارٹی کو آسانی ہوسکے مزید برآں صوبائی مشیر نے ہدایت دی کہ بولی دہندگان کو ٹینڈر جمع کرنے کیلئے متعلقہ دفاتر کے علاوہ ضلعی انتظامیہ کے دفاتر میں بھی اس کو جمع کرنے کا انتظام کیا جائے تاکہ کسی بھی وجہ سے بولی دہندہ اگر متعلقہ ادارے کے دفتر تک نہ پہنچ سکے تو متعلقہ ضلعی انتظامیہ کے دفتر میں ٹینڈر سے متعلق اپنی بولی جمع کرسکے اس کے علاوہ بذریعہ ڈاک اور ای میل کے ذریعے بھی ٹینڈر جمع کرانے کیلئے الیکٹرانک نظام کو مؤثر بنایا جائے جس میں زر ضمانت کے پے آرڈر کے نمبر کے اندراجات اس ای میل کے ذریعے ارسال ہوں۔ اجلاس میں سیکرٹری جنرل ایڈمنسٹریشن عبد الوہاب سومرو ، مینیجنگ ڈائریکٹر سندھ پبلک پروکیورمنٹ ریگولیٹری اتھارٹی محمد اسلم غوری، سیکریٹری قانون محمد شارق، ڈائریکٹر پروکیورمنٹ جاوید صبغت اللہ مہر، پروکیورمنٹ اسپیشلسٹ علی امام قادری اور دیگر افسران نے شرکت کی۔

نظام مصطفی پارٹی کا کراچی میں چائنا قونصلیٹ پر دہشت گردی کے حملے کی شدید الفاظ میں مذمت


nizam mustafa party news November 25, 2018 | 2:43 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)نظام مصطفی پارٹی کے سربراہ سابق وفاقی وزیرڈاکٹرحاجی محمدحنیف طیب ،میاں خالد حبیب ایڈووکیٹ،وسیم ممتازایڈووکیٹ،قاضی شبیراحمد،الحاج محمدرفیع ،پیر زادہ غلام حسین چشتی نے کراچی میں چائنا قونصلیٹ پر دہشت گردی کے حملے کی شدیدالفاظ میں مذمت کی اور اس کے نتیجے میں دوپولیس اہلکارسمیت چارافرادکی ہلاکت پرافسوس کا اظہارکیا۔انہوںنے کہاکہ آپریشن میں موجودقانون نافذکرنے والے ادارے خراج تحسین کے مستحق ہیں کہ جنہوں نے بروقت کارروائی کرکے بڑے نقصان سے بچایااور ملک دشمن عناصرکے ناپاک عزائم کو خاک میں ملاکر سفارت خانے میں موجودچینی عملہ کی جان ومال کو محفوظ بنایا۔انہوںنے کہاکہ سی پیک منصوبہ پاکستان کی معاشی،تجارتی،اقتصادی اور معاشرتی ترقی کے لئے مفید ہوسکتاہے جس کو ملک دشمن عناصر ناکام بنانے کی کوششیں کررہے ۔ملک دشمن عناصر یہ بات بھی جان لیں کہ ایسے واقعات سے پاک چین دوستی کومتاثر نہیں کیاجاسکتاہے۔انہوں نے کہاکہ موجودہ حالات میں پاکستان کواندرونی اور بیرونی طورپرمضبوط بنانے اور مستحکم کرنے کی ضرورت ہے۔سیاسی محاظ آررائی کے باعث پاکستان میں دہشت گردی کوروکنے کے لئے بنائے گئے قوانین پر مؤثر عمل درآمدجس طرح سے ہوناچاہیے تھانہیں ہوپارہا۔انہوںنے کہاکہ عوام یہ جانناچاہتی ہے کہ ملک دشمن عناصر کی دہشت گردانہ سرگرمیوں کو روکنے کے لئے نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمدکیوں نہیں ہورہا۔یہ حملہ آورکون تھے۔ان کا تعلق کہاسے تھا۔ان کاماسٹر مائنڈکون تھااس کو بے نقاب کرکے کیفرکردارتک پہنچایاجائے۔

امیر جماعت اسلامی پاکستا ن سینیٹر سراج الحق کاخرطوم میں سوڈان کے نائب صدر علی عثمان طہٰ سے ملاقات


pic siraj ul haq- 01 November 18, 2018 | 11:27 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستا ن سینیٹر سراج الحق نے خرطوم میں سوڈان کے نائب صدر علی عثمان طہٰ اور تحریک اسلامی سوڈان کے سربراہ ڈاکٹر احمد الحسن الزبیر سے الگ الگ ملاقات کی ۔ ملاقات میں جماعت اسلامی پاکستان کے ڈائریکٹر امور خارجہ عبدالغفار عزیز بھی موجود تھے۔ سینیٹر سرا ج الحق نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ مسئلہ کشمیر و فلسطین ، روہنگیا مسلمانوں کا برمی فوج کے ہاتھوں قتل عام اور افغانستان و شام امت کے اجتماعی مسائل ہیں ،ان مسائل کے حل کے لیے عالم اسلام کو متحد ہونا پڑے گا ۔ جب تک مسلم ممالک میں عوام کے حقیقی نمائندے برسر اقتدار نہیں آتے ، امت کے مسائل حل نہیں ہوں گے ۔ انہوںنے کہاکہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں پونے دو ارب مسلمانوں کا کوئی ایک بھی نمائندہ ملک نہیں ۔ دنیا میں 60 کے قریب اسلامی ممالک ہیں لیکن ان کی آواز صدا بہ صحرا بن کر رہ گئی ہے ۔ ستر سال سے کشمیر و فلسطین میں مسلمانوں کا قتل عام جاری ہے مگر اقوا م متحدہ کے کان پر جوں تک نہیں رینگی ۔ انہوں نے کہاکہ پوری امت کو اپنے مظلوم کشمیری و فلسطینی بھائیوں پر ہونے والے ظلم کے خلاف آواز بلند کرنی چاہیے اور شام و افغانستان اور یمن کے مسائل کو حل کرنا ہوگا۔

تیسر ٹائون میں کرنٹ لگنے سے 4سالہ خضر کے ورثاء کو انصاف فراہم کیا جائے حافظ نعیم الرحمن


hafiz naeem rehman November 18, 2018 | 11:20 PM

کے الیکٹرک کی انتظامیہ اور متعلقہ ذمہ داران کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے ، جماعت اسلامی متاثرہ خاندان کے ساتھ ہے
شکایت کر نے پر علاقے کو ہائی لاسز زون قرار دے کر عملے کو نہ بھیجنا انتہائی غیر انسانی اور سفاکانہ رویہ ہے
کراچی : (نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ کے الیکٹرک کی نا اہلی اور غیر انسانی رویہ کے باعث تیسر ٹائون میں 4سالہ خضر کے جاں بحق ہو نے پر کے الیکٹرک کی انتظامیہ اور متعلقہ ریجن اور ڈیپارٹمنٹ کے ذمہ داران کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے اور بچے کے ورثاء کو انصاف فراہم کیا جائے ۔ جماعت اسلامی متاثرہ خاندان کے ساتھ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کے الیکٹرک کے تاروں سے کرنٹ لگنے سے تیسر ٹائون میں 4سالہ خضر کی ناگہانی موت’ ہلاکت کا دوسرا واقعہ ہے ۔اس سے قبل ملیر میں بھی معصوم اذہان بارش کے دوران تار گر نے اور کرنٹ لگنے سے جاں بحق ہو ا جبکہ تاروں سے کرنٹ لگنے سے دو بچے اپنے ہاتھوں سے محروم ہو چکے ہیں ۔ علاوہ ازیں پی ایم ٹی گر نے کے واقعے میں بھی شہری کے زخمی ہونے کی اطلاعات موجود ہیں ۔ کرنٹ لگنے والے تمام واقعات میں تاروں کے گر نے اور کرنٹ پھیلنے کی اطلاع کے الیکٹرک کو دی گئی مگر عملے اور متعلقہ ذمہ داران کی طرف سے مجرمانہ غفلت و لاپرواہی اور بے حسی کا مظاہرہ کیا گیا ۔ شکایت کر نے اور اطلاع دینے کے باوجود کے الیکٹرک والے تاروں کو درست کر نے نہیں آئے جس کی وجہ سے قیمتی انسانی جانیں ضائع ہوئیں ۔ جبکہ اس حالیہ واقعے میں انتہائی غیر انسانی اور سفاکانہ رویے کا مظاہرہ کیا گیا اور علاقہ مکینوں کی شکایت پر اس علاقے کو ہائی لاسز زون قرار دے کر عملے کو نہیں بھیجا گیا اور بالآخر یہ سانحہ رونما ہوا اور ایک بچہ اپنی جان کی بازی ہار گیا ۔ حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ کے الیکٹرک کا ادارہ کراچی کے عوام کے لیے زحمت بن چکا ہے اور اس کی نا اہلی و ناقص کارکردگی سے شہری سخت نالاں ہیں ۔ لوڈشیڈنگ ،اووربلنگ اور اب بریک ڈائون نے عوام کی زندگی اجیرن بنا کر رکھ دی ہے لیکن اس سے کوئی پوچھنے اور جواب طلب کر نے والا نہیں ۔ نیپرا کی جانب سے صرف نمائشی اقدامات اور بیانات کے بعد خاموشی اختیار کر لی جاتی ہے ۔ اب صورتحال انتہائی سنگین ہوتی جا رہی ہے اور کے الیکٹرک کی نظر میں انسانی جانوں کی بھی کوئی اہمیت نہیں ہے ۔ کرنٹ لگنے سے بچے کی ہلاکت کا حالیہ واقعہ اس کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی و صوبائی حکومتوں اور حکومتی پارٹیوں کے عوامی نمائندوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ اس معاملے پر چشم پوشی اختیار کر نے کے بجائے کے الیکٹرک کے خلاف سخت کارروائی کر نے کے لیے اپنا کردار ادا کریں ۔ متاثرہ خاندانوں کو انصاف فراہم کریں اور عوام کو ریلیف دلائیں ۔انہوںنے کہا کہ جماعت اسلامی مظلوموں کے شانہ بشانہ کھڑی ہے اور ان کو ان کا حق دلانے کے لئے ہرممکن کوشش کرے گی۔اگر اس سے قبل کے الیکٹرک کی وجہ سے ہلاک اور زخمی ہونیوالوں کی داد رسی حکومت اور عدالتیں بروقت کر دیتیں تو بعد کے واقعات سے بچا جاسکتا تھا۔اگر اب بھی عدالتیں فیصلے جلددیں تو آئندہ واقعات کی پیش بندی ہوسکتی ہے۔

ابھی تک حکومت نے مہاجروں کیلئے کوئی پیکیج نہیں دیا: ڈاکٹر سلیم حیدر


dr saleem haider MIT November 18, 2018 | 11:03 PM

قومی دھارے کے نام پر مہاجروں کو دیوار سے لگایا جارہا ہے ، اسٹیبلشمنٹ سندھ کے مہاجروں پر توجہ دے
ایم کیوایم بہادر آباد گروپ یہ بتائے کہ اس نے کن شرائط پر پی ٹی آئی کی حکومت سے وزارتیں لیں
کراچی:(نیوزآن لائن)مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کی حکومت بتائے کہ انہوں نے اب تک سندھ کے مہاجروں کیلئے کون سے پیکیج کا اعلان کیا ہے اور اس حکومت میں مہاجروں کے حوالے سے کیا پالیسیاں ہیں۔ قومی دھارے کے نام پر مہاجروں کو دیوار سے لگایا جارہا ہے ۔ مہاجر ہمیشہ قومی دھارے میں رہے ہیں لیکن ان کے مسائل کبھی حل نہیں کئے گئے اور نہ ہی کبھی سیاسی جماعتوں اور اسٹیبلشمنٹ نے سندھ میں آباد مہاجروں کے مسائل حل کرنے پر توجہ دی۔ یہی وجہ ہے کہ ہر آنے والے دن کے ساتھ مہاجروں کے مسائل میں اضافہ ہوتا جارہا ہے لیکن اسٹیبلشمنٹ سندھ میں نئے نئے تجربات کرکے مہاجروں کے کیس کو خراب کرنے میں مصروف ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ایم کیوایم بہادر آباد گروپ یہ بتائے کہ اس نے کن شرائط پر پی ٹی آئی کی حکومت سے وزارتیں لیں اور ان کی وزارتیں لینے سے مہاجروں کو اب تک کیا فوائد ملے ہیں۔ اس سے پہلے وہ 30 سال تک صوبائی اور وفاقی حکومت میں وزارتیں اور مشیری لیتے رہے کیا اس کے بعد مہاجر مسائل حل ہوگئے، کیا مہاجر قومیت مستحکم ہوئی ، کیا مہاجر نوجوانوں کو باعزت روزگار اور تعلیم کے مواقع میسر آگئے۔ انہوں نے کہاکہ ایم کیوایم نے سب سے زیادہ مہاجروں کے کیس کو خراب کیا۔ ہم جو بات 20 سال سے کہتے آئے ہیں آج ایم کیوایم کے مرکزی قائدین وہی الزامات ایک دوسرے کو لگارہے ہیں لیکن اب بھی سوائے مفادات اور مالی وسائل سمیٹنے کے کچھ بھی نہیں کیا جارہا ہے۔

مہمند ایجنسی :مسجد کے قریب دھماکہ16افراد جاں بحق


blast in pakistan September 16, 2016 | 4:55 PM

مہمند ایجنسی :( نیوزآن لائن)تحصیل انبارکے علاقے میں مسجد کے قریب دھماکا ہوا جس کے نتیجے میں 16 افراد شہید جب کہ 20 سے زائد زخمی ہوگئے۔سیکورٹی ذارئع کے مطابق دھماکے کے وقت نماز جمعہ کے لیے شہریوں کی بڑی تعداد جمع تھی، جبکہ زخمیوں کو ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹرز ہسپتال منتقل کر دیا گیا ،دھماکے کے بعد سیکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا ہے۔

قائم علی شاہ سچا ہے تو پھر اس کو کنفیڈریشن کا نعرہ لگا کر میدان میں آنا چاہئے۔ ممتاز علی خان بھٹو


Karachi-Sindh September 16, 2016 | 3:31 PM

میرپور بھٹو:(نیوزآن لائن)سندھ نیشنل فرنٹ کے چیئرمین سردار ممتاز علی خان بھٹو سے عید الاضحی کے چوتھے روز بھی سندھ بھر سے عید مبارک دینے والے وفود کی میرپور بھٹو آمد کا سلسلہ جاری رہا، اس موقعے پر گفتگو کرتے ہوئے ممتاز علی بھٹو نے کہا کہ قائم علی شاہ اب بیان دے رہا ہے کہ مرکز ہمیشہ سندھ سے زیادتیاں کرتا آ رہا ہے تاہم خود اس نے تین بار اور 12 سال سندھ پر حکمرانی کی ہے مگر اس قسم کی شکایت اس نے کبھی نہیں کی اور اب جاگ پڑا ہے اگر مرکز کی سندھ سے زیادتی ہے اور قائم علی شاہ سچا ہے تو پھر اس کو کنفیڈریشن کا نعرہ لگا کر میدان میں آنا چاہئے کیونکہ اصل صحیح راستہ اور قائد اعظم محمد علی جناح رحہ کی دیے گئے پروگرام کے تحت کہ پاکستان میں صوبے خودمختیار اور مقتدر ہونگے اور مرکز کے پاس بہت محدود اختیارات ہونگے یہ ہی پاکستان کے لئے صحیح راستہ ہے۔ ممتاز علی بھٹو نے مزید کہا کہ پاکستان بننے کے چند ماہ بعد قائد اعظم محمد علی جناح رحہ اللہ پاک کو پیارے ہوگئے اس کے بعد 10 سالوں میں 8 حکومتیں آئیں اور گئیں جس کے بعد جرنل ایوب خان کا 10 سالہ دؤر حکومت آگیا اور قائد اعظم محمد علی جناح رحہ کا دیا گیا کنفیڈریشن کا پروگرام سب نے بھلا دیا اور اس لئے پاکستان ٹوٹ گیا اور جو بچہ کچہ ملک ہے اس میں بھی علحدگی کی تحریکیں چل رہی ہیں، ایسی صورتحال میں یہ ہی راستہ پاکستان کو بچا سکتا ہے جو پروگرام قائد اعظم محمد علی جناح رحہ نے خود قرارداد پاکستان میں دیا ہے آؤ تو اس پر عمل کرتے ہوئے مل جل کر ملک کو مزید تباہی سے بچالیں۔

وزیراعظم نواز شریف کی آرمی چیف جنرل راحیل شریف سے ملاقات


nawaz sharif and army chief meeting September 16, 2016 | 1:32 PM

اسلام آباد :( نیوزآن لائن) وزیراعظم میاں محمد نواز شریف سے آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے ملاقات کی ۔ملاقات میں دورہ امریکا کے حوالے سے مشاورت کی گئی ۔ وزیراعظم کا کہنا ہے کہ دہشتگردی اور انتہا پسندی کیخلاف جنگ کو منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا ۔انہوں نے کہا کہ آپریشن ضرب عضب کے دوران دہشتگردوں کو شکست دینے کیلئے مسلح افواج کا کردار شاندار ہے ۔ وزیراعظم نواز شریف کل اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کے لئے امریکا روانہ ہوں گے۔

مہاجر چہرے بدل کر آنے والوں کا احتساب کریں: ڈاکٹر سلیم حیدر


dr saleem haider mit September 12, 2016 | 6:15 PM

پاکستان زندہ باد کہنے سے ماضی کے گناہ اور بداعمالیاں نہیں دھل سکتیں، قوم کو حساب دینا ہوگا
کراچی میں 20سال سے بیٹھ کر اقتدار کے مزے لینے والوں نے مہاجروں کے کتنے مسائل حل کروائے
کراچی:(نیوزآن لائن)مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے اہل وطن کو عید کی مبارکباد دیتے ہوئے تمام مہاجروں سے اپیل کی ہے کہ وہ عید کی خوشیوں میں ان کو بھی شریک رکھیں جو ہم سے بچھڑ گئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ عید کا مفہوم خود احتسابی بھی ہے ۔ مہاجروں کو اپنے آپ کا بھی احتساب کرنا چاہئے کہ وہ 30 سالوں سے مہاجر نام پر کن بازی گروں اور شعبدے بازوں کے ہاتھ مضبوط کرتے رہے اور اب بھی ان کے سہولت کار بہروپیوں کے بہکاوے میں آرہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگانے سے ماضی کے گناہ اور مہاجروں کو دیئے جانے والے فریب دھوئے نہیں جاسکتے۔ مہاجر قوم اچھی طرح جانتے ہیں کہ کل کے یہ سہولت کار آج پارسائی اور بے گناہی کے کتنے ہی دعوے کریں لیکن یہ سر سے پاؤں تک جرائم اور مہاجر دشمنی میں ڈوبے ہوئے ہیں۔ اب ایک بار پھر روپ تبدیل کرکے قوم کو پھر نئے سرے سے دھوکہ دینے کی کوشش کررہے ہیں لیکن اس بار مہاجران کے اصل چہروں کو پہچان چکے ہیں کیونکہ جس طرح مہاجر نام کو ان بازی گروں نے اپنے ذاتی مفادات کیلئے استعمال کیا وہ کسی سے پوشیدہ نہیں۔ انہوں نے کہا کہ مہاجر قوم کو ان سے سوال کرنا چاہئے کہ 20 سال سے یہ کراچی میں بیٹھ کر اقتدار کے مزے لوٹ رہے ہیں اس دوران انہوں نے کتنے مہاجر بیروزگار نوجوانوں کو ملازمتیں دلوائیں، مہاجروں کے کتنے مسائل حل کرائے ، کتنی مرتبہ مہاجر حقوق کیلئے ایوانوں میں آواز اُٹھائی ، کتنی مرتبہ مہاجر حقوق کیلئے سڑکوں پر احتجاج کیا ۔ انہوں نے کہاکہ شخصیت پرستی سیاست کو فروغ دینے والے آج چہرے بدل بدل کر پارسائی کے دعوے کررہے ہیں ۔

بھارتی حکمران بھول جائیں کہ وہ کشمیریوں کو بنوکِ بندوق اور بزورِ شمشیر زیر اور زِچ کرسکتے ہیں۔ محمد اعظم انقلابی


sirinagar September 12, 2016 | 5:52 PM

سرینگر:(نیوزآن لائن) جموںکشمیر محاذ آزادی کے سرپرست محمد اعظم انقلابی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ استعماری مزاج کے حامل بھارتی حکمران بھول جائیں کہ وہ کشمیریوں کو بنوکِ بندوق اور بزورِ شمشیر زیر اور زِچ کرسکتے ہیں۔ تمہیں محاذِ رائے شماری کی مزاحمتی تحریک راس نہیں آئی۔ نتیجہ یہ نکلا کہ کشمیر کے مجاہد دانشور بطلِ حریت مقبول بٹ نے 1966ء میں عسکری مزاحمت کا فلسفہ پیش کرتے ہوئے کشمیر کے انقلاب پسند نوجوانوں کو مزاحمت کی نئی اداؤں کے ساتھ صف بندی کرنے کی دعوت دی۔
بھارتی حکمرانوں کو میرواعظ مولوی فاروق، عبد الغنی لون صاحب، ڈاکٹر قاضی نثار، مقبول ملک، جلیل اندرابی، ایڈووکیٹ حسام الدین جیسے ہر دلعزیز کشمیری مزاحمتی رہنماؤں کی سیاست بھی راس نہیں آئی۔ نتیجہ یہ نکلا کہ اِس قوم میں اشفاق مجید وانی، مقبول الٰہی اور برہان وانی جیسے اولوالعزم کمانڈر پیدا ہوئے جنہوں نے غالب قوم کے ظلم وعدوان اور جبرواستبداد کے خلاف موثر مُزاحمت کے گُر سکھائے۔
آج پوری قوم پچھلے دو مہینوں سے سڑکوں پر پُرامن مُزاحمتی اجتماعات میں داستانِ مظلومیت سنا رہی ہے۔ میں کشمیر کے علمائے دین، اساتذہ اور وکلا حضرات سے اپیل کرتا ہوں کہ آپ اِن پُر امن اجتماعات میں اپنی فصیح اور بلیغ تقاریر میں بیرونی دنیا خاص کر امریکہ کو بتائیں کہ کشمیر ایک نیوکلیئر فلیش پوئنٹ ہے، پورای کشمیر بارود کے ڈھیر پر کھڑا ہے۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ دنیا کی بڑی طاقتیں مسئلہ کشمیر کے پُرامن تصفیہ کیلئے ضروری اقدامات کریں۔
ہمیں معلوم نہیں کہ افغانستان کے صدر اشرف غنی صاحب دہلی کا دورہ کرکے کیا گُل افشائی کریں گے۔ اُنہیں معلوم ہونا چاہئے کہ افغانستان کے 70یا 80فیصدی ولاقے پر طالبان مجاہدین کا کنٹرول ہے۔ وہ نئی دہلی میں ایسی کوئی بات نہ کہیں جس سے اُن کے لئے کابل اور اسلام آباد میں مشکلات پیدا ہوں۔ پچھلے 37سال کی مُزاحمت کے دوران افغانستان اور پاکستان حالات کی مجبوری کی وجہ سے اتنے قریب آئے ہیں کہ وہ ایک دوسرے کیلئے لازم و ملزوم بن گئے ہیں۔ میں افغانستان اور پاکستان کے عُلمائے دین اور دانشوروں سے پُر زور اپیل کرتا ہوں کہ وہ جگہ جگہ علمی کانفرنسوں کا انعقاد کریں اور پوری دنیا کو بتائیں کہ ایشیا میں امن و سکون کا ماحول پیدا کرنے کے لئے ضروری ہے کہ افغانستان سے بیرونی فوجوں کا انخلا ہوجائے۔

سینیٹر سراج الحق نے نثار احمد ایڈووکیٹ کو کسان بورڈ کا صدر ، ارسلان خان خاکوانی کو سیکرٹری جنرل مقرر کردیا


pic Siraj ul haq September 10, 2016 | 6:58 PM

لاہور :( نیوزآن لائن) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ کرپشن بے نقاب ہونے کے باوجود اقتدار کے ایوانوں میں براجمان رہنے والوں نے ڈھٹائی اور ہٹ دھرمی کی بدترین مثال قائم کی ہے ۔جن لوگوں کے نام پانامہ لیکس میں آئے تھے انہیں شفاف تحقیقات تک اپنے عہدوں سے الگ ہوجانا چاہئے تھا۔جب تک کسانوں کو جاگیروں اور مزدوروں کو کارخانوں کی آمدن میں شریک نہیں کیا جاتا مزدوروں اور کسانوںکے معاشی حالات بہتر نہیں ہوسکتے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ میںکسان بورڈ پاکستان کے نئے صدر نثار احمد ایڈووکیٹ اور نئے سیکرٹری جنرل ارسلان خان خاکوانی کی تقرری اور سبکدوش ہونے والے سابق صدر صادق خان خاکوانی کے اعزاز میں منعقدہ تقریب کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا۔تقریب میں نائب امراء حافظ محمد ادریس ،میاں محمد اسلم ،سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ ،ڈپٹی سیکرٹری جنرل ڈاکٹر فرید احمد پراچہ ،محمد اصغر ،حافظ ساجد انور ،کسان بورڈ کے مرکزی عہدیداروں اور جماعت اسلامی پاکستان کے ناظمین شعبہ جات نے بھی شرکت کی ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ حکومت سے ہر شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والے لوگ بری طرح مایوس اور ناامید ہوچکے ہیں ،کسانوں ،ڈاکٹروں ،اساتذہ اور مزدوروں سمیت زندگی تمام طبقات کے لوگ اپنے مسائل کے حل کیلئے آئے روز سڑکوں پرسراپا احتجاج ہوتے ہیں مگر حکمران سب اچھا کی گردان الاپ رہے ہیں ،انہوں نے کہا کہ پاکستان ایک زرعی ملک ہے جس کی 70فیصد آبادی زراعت کے شعبہ سے وابستہ ہے مگر کسانوں کو ان کی فصلوں کی قیمت نہ ملنے اور مداخل کی قیمتوں میں بار بار اضافہ ہونے سے زراعت تباہی کے دھانے پر پہنچ گئی ہے ،انہوں نے کہا کہ فصلوں کی پیداوار پر پانی کی عدم دستیابی نے بہت برا اثر ڈالا ہے ،آبی وسائل نہ ہونے کی وجہ سے پانی کی فی ایکٹرفراہمی انتہائی کم ہوچکی ہے اور جنوبی پنجاب میں تو لاکھوں ایکڑ اراضی پانی نہ ملنے کی وجہ سے بنجر ہوچکی ہے ،جس سے کپاس ،گنا ،چاول اور گندم جیسی بڑی فصلوں کی فی ایکڑ پیداوار آدھی سے بھی کم رہ گئی ہے اور اگر یہی صورتحال رہی تو پاکستان کو خوراک کیلئے دوسرے ملکوں کے سامنے ہاتھ پھیلانا پڑیں گے ۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ زرعی مقاصد کیلئے بجلی اور ڈیزل کی قیمتوں میں کمی کی جائے تاکہ کسان ٹیوب ویلوں کے ذریعے اپنی فصلوں کو پانی دے سکیں اور کھاد بیج اور زرعی ادویات کی قیمتوں میں بھی کمی کی جائے ۔انہوں نے کہا کہ حکمران کسان پیکج کا اعلان کردیتے ہیں اور بعد میں اس پر عمل درآمد کا جائزہ نہیں لیاجاتا ۔سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ قابل کاشت زمینوں میں اضافہ کیلئے جنوبی پنجاب اور ملک کے دیگر حصوں میں پڑی ہوئی بے آباد اور بنجر سرکاری زمین کے مالکانہ حقوق ان زمینوں کو آباد کرنے والوں کو دے دیئے جائیں اور ان علاقوں تک نئی نہروں کی کھدائی کی جائے تاکہ ملک کو خوراک میں خود کفیل بنایا جاسکے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ زمینوں کا ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ کرنا قابل ستائش ہے مگر جن لوگوں کی زمینوں پر سال ہا سال سے جاگیرداروں اور وڈیروں نے قبضہ کررکھا ہے ان کی فریاد بھی سنی جائے ۔انہوں نے کہا کہ ایسے قابضین کے خلاف قانون حرکت میں اس لئے نہیں آتا کہ یہ لوگ خود اقتدار کے ایوانوں میں بیٹھے ہوئے ہیں۔ موجودہ حالات میں اعلان کردہ مراعات سے صرف حکومتی ایوانوں سے وابستہ افرادہی استفادہ کر سکیں گے ۔ہمارا مطالبہ ہے کہ کسانوں کو بلا سود قرضے مہیا کئے جائیں ۔اسٹیٹ بنک پاکستان نے اس ضمن میں بہت سارے طریقے وضع کئے ہوئے ہیں سوال صرف حکومت کی قوت ارادی کا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اس وقت زراعت کا شعبہ جس طرح سسک رہا ہے ۔حکومت وقت سے یہ توقع تھی کہ وہ میٹرو بسوں اور اورنج لائن ٹرین کی طرح کے منصوبوں پر اربوں روپے خرچ کرنے کی بجائے زراعت کے شعبہ کی بہتری کے لئے بھرپور منصوبہ بندی کرے گی مگر حکمرانوں کے رویے سے لگتا ہے کہ انہیں سڑکوں ،پلوں اور میٹرو بسوں اور اورنج لائن ٹرین کے علاوہ کوئی دوسراکام سوجھتاہی نہیں ۔سینیٹر سراج الحق نے کسان بورڈ کے سبکدوش ہونے والے صدر صادق خان خاکوانی کی کسانو ں کے لیے خدمات کو زبردست الفاظ میں سراہتے ہوئے امید ظاہر کی کہ وہ کسان بورڈ کی سرپرستی اور رہنمائی جاری رکھیں گے۔

پارٹی وفاداریاں سر عام تبدیل کرنے والے قانون شکن افراد اور جمہوریت کی پیٹھ میں چھرا گھوپنے جیسا ہے۔ تاج حیدر


527500-ppp-1364415145-852-640x480 September 10, 2016 | 6:42 PM

کراچی: (نیوزآن لائن)پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرین سندھ کے جنرل سیکریٹری سینیٹر تاج حیدر نے اپنے اخباری بیان میں کہا ہے کہ آج جمہوریت کے لئے انتہائی صدمے کا دن ہے کیونکہ ماتلی میں صوبائی الیکشن کمیشن کی بھرپور سرپرستی سے پارٹی وفاداریاں سر عام تبدیل کرنے والے قانون شکن افراد اور جمہوریت کی پیٹھ میں چھرا گھوپنے والے مجرم ماتلی میونسپل کمیٹی کے چیئرمین اور نائب چیئرمین کا حلف اٹھا رہے ہیں ۔ پی پی پی میڈیا سیل سندھ سے جاری کئے گئے بیان میں سینیٹر تاج حیدر نے کہا کہ یہ افراد ،  ان کے ناموں کی تجویز اور تائید کرنے والے اور ان کو ووٹ دینے والے تمام افراد پاکستان پیپلز پارٹی کے ٹکٹ پر منتخب ہوئے تھے ۔پارٹی نے میونسپل کمیٹی کے چیرمین کے عہدے کے لئے پارٹی کی خاتون کارکن محترمہ تنزیلہ کو ٹکٹ دیا تھا ۔ ان ا فراد نے پارٹی ڈسپلن اور سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ کی کھلم کھلا خلاف ورزی کرتے ہوئے آزاد امیدوار کی حیثیت سے اپنے کاغذات نامزدگی جمع کرائے۔ قانون کی رو سے ان کے کاغذات سرے سے جمع ہی نہیں ہونے چاہیے تھے ۔ بحر حال جب ریٹرننگ آفیسر کو میری طرف سے سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ کی دفعہ 36 کے تحت ڈیفیکشن سرٹیفکیٹ موصول ہوا تو انہوں نے ان پارٹی ڈسپلین کی خلاف ورزی کرنے والے اراکین کے کاغذات مسترد کرتے ہوئے پاکستان پیپلز پارٹی کے نامزد کردہ امیدواروں کو فاتح قرار دے دیا ۔ انہوں نے کہا کہ دکھ کی بات یہ ہے کہ سندھ الیکشن کمیشن نے قانون کی دھجیاں اڑاتے ہوئے اس سیٹ پر دوبارہ الیکشن کا حکم دیا۔ ہم نے اس غیر قانونی الیکشن میں حصہ نہیں لیا ۔ پارٹی کے13غداروں نے اس الیکشن میں جا کر ووٹ دئے ۔ ماتلی میں تمام کونسلر پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹی ینز کے ٹکٹوں پر منتخب ہوئے تھے ۔ کسی آزاد امیدوار کے ماتلی میونسپل کمیٹی کے انتخابات میں حصہ لینے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ۔ پارٹی نے سپریم کورٹ میں چلنے والے متحدہ قومی موومنٹ کے مقدمے میں یہی موقف اختیار کیا تھا کہ دوسرے مرحلے کے بالواسطہ انتخابات میں خفیہ بیلٹ کی اجازت دینا ووٹوں کی خرید و فروخت اور عوام کے مینڈیٹ کو رد کرنے کا باعث بنے گا ۔ ہماری جائز بات تسلیم نہیں کی گئی اور اس کے نتیجے میں سندھ میں ہمیں کئی جگہ سے وفاداریاں تبدیل کرنے کی شکایات موصول ہوئی ہیں ۔ سینیٹر تاج حیدر نے کہا کہ ماتلی اور ڈھرکی کے معاملات میںآزاد امیدوار کی حیثیت سے انتخابات میں حصہ لینا پارٹی وفاداریاں تبدیل کرنے کا کافی سے زیادہ ثبوت ہے ۔ سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ کے سیکشن 36  کے تحت ان تمام افراد کی سیٹیں منسوخ کرکے ان کو آئندہ چار سال کے لئے نا اہل قرار دینا الیکشن کمیشن کا فرض منصبی ہے ۔ ہمیں افسوس ہے کہ ذمہ دار افراد کی جانب سے اس قسم کے ریمارکس آرہے ہیں کہ ہارس ٹریڈنگ تو پچھلے 68  سال سے ہورہی ہے اب کیا مسئلہ ہوگیا ۔ اس قسم کے ریمارکس کو جواز بنا کر الیکشن کمیشن سندھ ہارس ٹریڈنگ کی سرپرستی نہیں کرسکتا ۔ پارٹی کی جانب سے اس دوران صرف ماتلی میںکھلی قانون شکنی کے بار ے میں تین مختلف درخواستیں بشمول ڈیفیکشن سرٹیفکیٹ محترم چیف الیکشن کمشنر کی خدمت میں پیش کی گئی ہیں ۔ ہمیں افسوس ہے کہ ان درخواستوںپر جن کے لئے کسی قسم کے مزید ثبوت یا شنوائی کی ضرورت نہیں تھی کوئی کاروائی نہیں کی گئی اور آج ماتلی میں پارٹی اور عوام کے غدار مجرم حلف وفاداری اٹھا رہے ہیں ۔اللہ شہید بی بی صاحبہ پر اپنی بے پایاں رحمتوں کا نزول کرے ۔ ان کے دل میں سمندروں جیسا رحم اور ظرف تھا ۔ وہ غداروںکو معاف کردیا کرتی تھیں اور دوبارہ ان پر احسانات کیا کرتی تھیں ۔اور یہ محسن کش لوگ بار بار وفاداریاں تبدیل کرتے تھے ۔ ہمیں اللہ نے اس رحمدلی اور اس عالی ظرفی سے محروم رکھا ہے ۔ پارٹی کارکن مطمئن رہیں کہ ہم غداروں کو قانون کے  مطابق سزا دلوانے کے لئے آخری حدد تک  جائیں گے ۔ ہمیں یہ بھی خبر ہے کہ ان کے پیچھے کون سے افراد ہیں۔ پارٹی ایسے منافقین کے خلاف بھی بھرپور کاروائی کرے گی ۔ جمہوریت نظم و ضبط اور قانون کی پابندی کا تقاضا کرتی ہے ۔ جمہوریت کی بقا اور استحکام کے لئے ان عناصر کے خلاف کاروائی ہماری بنیادی ضرورت اور بنیادی فرض ہے۔

پاکستان چین اقتصادی راہداری سے خطے کی تقدیر بدل جائے گی۔ وزیراعظم نوازشریف


nawaz sharig September 10, 2016 | 1:25 PM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن)وزیر اعظم نواز شریف کا کہنا ہے کہ حکومت توانائی کے شعبے میں اربوں روپے کی سرمایہ کاری سے گیس اور بجلی کی کمی پورا کرنے کی ہرممکن کوشش کر رہی ہے ، جاری منصوبوں کی تکمیل سے لوڈشیڈنگ کا خاتمہ اور صارفین کو سستی بجلی میسر ہو گی ۔وزیراعظم نواز شریف سے سینیٹ میں قائد ایوان راجہ ظفرالحق نے اسلام آباد میں ملاقات کی، وزیراعظم نواز شریف کا کہنا تھا کہ حکومت گیس اور بجلی کی کمی پورا کرنے کی ہر ممکن کوشش کر رہی ہے،توانائی کے شعبے میں اربوں روپے کی سرمایہ کاری کی ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ ملک میں امن وامان کی صورتحال میں نمایاں بہتری آئی ہے جب کہ پاکستان چین اقتصادی راہداری منصوبے سے خطے کی تقدیر بدل جائے گی۔وزیراعظم نے کہا کہ تاجر برادری امن وامان کی صورتحال کی بہتری سے مستفید ہورہی ہے،عالمی مالیاتی منڈیوں کاپاکستان پراعتماد بڑھا ہے اور ٹیکس محصولات میں بھی نمایاں اضافہ ہوا ہے جب کہ زرمبادلہ کے ذخائر تاریخ کی بلند ترین سطح پر ہیں۔

کے ایم سی افسران کو عید پر تنخواہیں نہ دینے سے وزیر بلدیات، حکومت سندھ کی بدنیتی ظاہر ہوگئی۔ سہیل اختر ہاشمی


karachi September 10, 2016 | 1:12 PM

منتخب نمائندوں کو ناکام بنانے کے لئے عمل کیا گیا، اسسٹنٹ کمشنرز منتخب نمائندوں کے متوازی اختیارات استعمال کر رہے ہیں۔ ارشد وہرہ کا ساتھ دیں گے۔ سہیل اختر ہاشمی
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
کراچی:(نیوزآن لائن)کراچی آفیسرز ویلفیئر ایسوسی ایشن کے چیئرمین سہیل اختر ہاشمی نے عیدالاضحی پر کے ایم سی افسران کو تنخواہیں نہ دینے لی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے وزیر بلدیات کا تعصب اور حکومت سندھ کی بد نیتی ظاہر ہوگئی۔ منتخب نمائندوں کو ناکام بنانے کے لئے یہ عمل کیا گیا۔ ڈپٹی میئر کراچی ارشد وہرہ نے مثبت سوچ کے ساتھ وزیر بلدیات سے ملاقات کی لیکن کوئی فائدہ نہیں ہوا۔ منتخب میئر کو آزاد کرنے کے بجائے جیل میں رکھا گیا ہے۔ یہ سارا عمل افسوس ناک ہے ہم ارشد وہرہ کا ساتھ دیں گے اپنے ممبران کو مکمل سپورٹ کا کہ دیا ہے۔ کے ایم سی آفیسرز ویلفیئر ایسوسی ایشن کے بھی ساتھ ہیں۔ سہیل اختر ہاشمی نے مذید کہا کہ اسسٹنٹ کمشنرز بلدیہ عظمی کراچی اور ڈی ایم سیز میں منتخب نمائندوں کے اختیارات استعمال کر رہے ہیں۔ لوکل ٹیکس، لینڈ معاملات میں اختیارات سے تجاوز کرکے اداروں کو مفلوج کیا جا رہا ہے ۔ ہم اسکی مذمت کرتے ہوئے ۔ چیف سیکریٹری سندھ سے کاروائی اور وزیر اعلی سندھ سے خصوصی توجہ و مداخلت کا مطالبہ کرتے ہیں۔

پشاور ورسک روڈ، پولیس موبائل بم دھماکے پر ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی کا اظہار مذمت


mqm sangar September 8, 2016 | 8:28 PM

بم دھا کے نتیجے میں متعدد پولیس اور راہگیروں کی زخمی ہونے پر افسوس کا اظہار اور زخمیوں کی جلد صحتیابی کیلئے دعا
پشاور ورسک روڈ پر پولیس موبائل پر بم دھماکہ دہشت گردوں کے خلاف جاری آپریشن ضرب عضب کو ناکام بنانے کی سازش ہے ، رابطہ کمیٹی
پشاور ورسک روڈ پر پولیس موبائل پر بم دھماکے میں ملوث دہشت گردوں کو فوری گرفتار کیا جائے ، وفاقی اور خیبرپختونخواہ حکومت سے مطالبہ
کراچی :( نیوزآن لائن)متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کی رابطہ کمیٹی نے پشاور ورسک روڈ پر پولیس موبائل پر بم دھماکے کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کی ہے اور دھما کہ کے نتیجے میںمتعدد پولیس اہلکار اور اہگیروں کے زخمی ہونے پر افسوس کا اظہار کیا ہے اور ان کی جلد و مکمل صحتیابی کیلئے دعا بھی کی ۔ ایک بیان میں رابطہ کمیٹی نے کہا پشاور ورسک روڈ پر پولیس اہلکار کے موبائل پر بم دھماکہ دہشت گردوں کی بزدلانہ کاروائی ہے جس کی جتنے بھی مذمت کی جائے وہ کم ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردوںکی جانب سے پشاور ورسک روڈ پر بم دھماکہ پاک فوج کی جانب سے دہشت گردوں کے خلاف جاری آپریشن ضرب عضب کو ناکام بنانے کی گھناؤنی سازش ہے ۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ کئی دنوں سے خیبر پختونخواہ کے بعض شہروں میں دہشت گرد بم دھماکہ کرکے معصوم اور عام شہریوں کو خاک و خون میں نہلانا چاہتے ہیں اور خیبرپختونخواہ میں ایک بار پھر انتشار پھیلانے کی سازش ہے ۔ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ دہشت گردوں کے خلاف جاری آپریشن ضرب عضب اور نیشنل ایکشن پلان کو مزید موثر بنانے کی ضرورت ہے تاکہ ملک میں بچے کچے دہشت گرد بھی اپنے مذموم عزائم اور ناپاک مقاصد کی تکمیل میں ناکام ہوں ۔ رابطہ کمیٹی نے وزیراعظم پاکستان میاں محمد نوازشریف ، وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار اور خیبرپختونخواہ کے وزیراعلیٰ پرویز خٹک سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ پشاور ورسک روڈ پر پولیس موبائل پر بم دھاکہ میں ملوث دہشت گردوں کو فوری گرفتار کرکے قانون کے مطابق سزا دی جائے ۔

قربانی کا مہینہ ہے قربانی کے ساتھ ساتھ سیاسی قربانی بھی ہوسکتی ہے۔منظور حسین


mansoor wasan September 8, 2016 | 8:23 PM

ا چی: (نیوزآن لائن )صوبائی وزیر صنعت وتجارت منظور حسین وسان نے کہا ہے کا قربانی کا مہینہ ہے قربانی کے ساتھ ساتھ سیاسی قربانی بھی ہوسکتی ہے دھواںاسلام آباد سے ہوتے ہوئے لاھور رائیونڈ پہنچے گا۔ مودی رائیونڈ جاسکتا ہے تو دھواں کیوں نہیں جاسکتا صوبائی حلقہ 127 کی سیٹ پیپلز پارٹی کی امانت ہے واپس ملے گی 2002 کے بعد یہ سیٹ جلائو گھیرائو کا سھارا لیکر جیتی گئی تھی دبئی، اسلام آباد اور کراچی آنا جانا سیاسی قائدین کی مجبوری ہے بلاول بھٹو زرداری پارٹی امور میں مشاورت کے لیے دبئی گئے تھے۔ ان خیالات کا اظہار آج انہوں نے اپنے دفتر میں سندھ اسمال انڈسٹریز کارپوریشن کے 719 ملازمین کی تنخواہوں کی مد میں ساڑھے چار کروڑ روپے کی رقم کے چیک تقسیم کی تقریب  کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کے 875 ملازمین میں سے 719 ملازمین کو  دوماہ کی تنخواہ عیدالاضحی سے قبل ادا کرکے ملازمین سے کیا گیا وعدہ پورا کیا گیا ہے 156 غیر حاضر ملازمین کی تنخواہ روک لی گئی ہیں ایس ایس آئی سی کے وہ ملازمین جو ادارے کے لیے کارآمد ہیں ان کو رکھا جائے گا اضافی ملازمین کو ایس اینڈ جی محکمہ رپورٹ کرنے کو کہا جائے گا۔ وزیر صنعت نے مزید کا کہا کے پیپلز پارٹی کا منشور غریب آدمیوں کو روزگار فراھم کرنا ہے فارغ کرنا نہیں کارپوریشن نے اپنی قیام کے بعد سے چھوٹی چھوٹی صنعتوں میں اہم کردار ادا کیا ہے اس کو تباہ ہونے سے بچایا جائیگا  سندھ کے شہروں اور دیہاتوں میں چھوٹی صنعتوں کا جال بچھائینگے۔ منظور حسین وسان نے کہا کے صنعت وتجارت کے فروغ کے لیے صنعتکاروں کا ایک وفد بیرون ملک لیکر جائینگے تاکہ سندھ کی ثقافتی صنعت اور تجارت کو فروغ حاصل ہو تھر میں ثقافتی صنعت کے فروغ کے لیے بڑے مواقع ہیں اس کو ترقیاتی منصوبے کے جال بچھائیں گے، سندھ اسمال خود مختیار ادارہ ہے اپنی آمدنی سے اپنے اخراجات پورے کرتا ہے انہوں نے کہا کہ ضلعی اور علاقائی دفاتر ٹھٹہ، سانگھڑ، نوابشاہ اور خیرپور سمیت ملازمین کی حاضریاں کم ہوتی ہیں کارپوریشن میں اضافی بھرتیوں اور غیر حاضر ملازمین کے خلاف تحقیقات کرائینگے پارٹی قیادت نے ہدایت دی ہیں کہ سندھ میں انڈسٹریز کو فروغ دیا جائے کیونکہ ملک بھر کا  65 فیصد روینیوصرف کراچی سے حاصل ہوتا ہے۔

عمرا ن خا ن کرا چی کی غیر یقینی سیا سی صو ر تحا ل سے فا ئدہ اٹھا نے کی کو شش کر رہے ہیں ۔ مو لا بخش چا نڈیو


Mola-Baksh-Chandio-Media-Talk-Sukkar-30-01 September 8, 2016 | 8:20 PM

کرا چی :( نیوزآن لائن)وزیر اعلیٰ سندھ کے مشیر برا ئے اطلا عا ت و آر کا ئیوز مو لا بخش چا نڈیو نے کرا چی میں عمران خا ن کے جلسے پر تنقید کر تے ہو ئے کہا ہے کہ عمرا ن خا ن شہر کی غیر یقینی سیا سی صو ر تحا ل سے فا ئدہ اٹھا نے کی کو شش کر رہے ہیں ۔سیا سی طو ر پر نا پختہ ہیں اور ملک میں تبدیلی نہیں لا سکتے جبکہ کر کٹ اور سیا ست دو الگ چیزیں ہیں صوبائی مشیر نے بدھ کو جا ر ی کر دہ اپنے بیا ن میں کہا کہ سیا ست میں بڑ ی قر با نیو ں کی ضرورت ہے اور تا ریخ شا ہد ہے کہ صر ف بھٹو خا ندا ن نے ملک اور قو م کے لئے بڑ ی قر با نیا ں دیکر پو ر ی دنیا کی تا ریخ میں ایک مثا ل رقم کی ہے ۔انہو ں نے کہا کہ عمرا ن خا ن کو ابھی سیا ست سیکھنے کی ضرورت ہے ۔انہو ں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ سندھ سید مرا د علی شاہ کی متحرک قیا دت میں سندھ حکو مت نے صو بہ میں زندگی کے تما م شعبو ں میں تبدیلی لا نے کا آغا ز کیا ہے جس سے حقیقی خو شحالی ،تر قی اور امن آئے گا ۔سندھ کے عوام با لخصو ص کرا چی کے شہری حقیقی امن اور کا رو با ر کے فرو غ کے موا قع محسو س کر رہے ہیں ۔انہو ں نے کہا کہ پا نی کے منصو بو ں کے ساتھ متعدد نئے منصو بو ں کا آغا ز کیا جا چکا ہے ۔سندھ حکومت نے 10ارب رو پے کے کرا چی پیکج کا اعلا ن کیا ہے جس سے 21اسکیمیں روا ں ما لی سال میں مکمل کی جا ئیں گی ۔وزیر اعلیٰ سندھ نے امن و اما ن ،تعلیم اور صحت کو اپنی تر جیحا ت میں شا مل کیا ہے کیو نکہ وہ سندھ کو تر قی یا فتہ صو بہ بنا نا چا ہتے ہیں ،جہا ں امن اور خو شحا لی کو فرو غ ملے ۔ صوبا ئی مشیر مو لا بخش چا نڈیو نے کہا ہے کہ ملک کی سیا ست اور با لخصو ص سندھ میں پیپلز پا ر ٹی کی جڑ یں گہری ہیں ۔ذوالفقا ر علی بھٹو لو گو ں کے دلو ں میں بستے ہیں اور کو ئی بھی انہیں عوام کے دلو ں سے نہیں نکا ل سکتا ۔انہوں نے کہا کہ عمرا ن خا ن نے کرا چی میں حالیہ جلسہ کرا چی کے شہریو ں میں غیر یقینی پیدا کر نے کے لئے کیا۔انہو ں نے مزید کہا کہ عمرا ن خا ن عوا م کو اپنی طر ف نہیں کھینچ سکتے کیو نکہ سندھ کے لو گ عمرا ن خا ن کے ارا دوں سے مکمل طو ر پر آگا ہ ہیں ۔انہو ں نے کہا کہ عمرا ن خا ن دو سرو ں پر الزا م لگا رہے ہیں ۔جبکہ وہ خو د پانا مہ لیکس میں شا مل ہیں ۔انہو ں نے کہا کہ سندھ حکومت امن اور تر قی کے لئے ما حو ل سا ز گا ر بنا رہی ہے ا س سلسلے میں میڈیا اہم کر دا ر ادا کر سکتا ہے
انہو ں نے کہا کہ ہم محنت کشو ں کے لئے بنا ئے گئے قوا نین پر عملدرآمد کے لئے کو شا ں ہیں ۔ہم آزا دی اظہا ر کے حق کو بر قرا ر رکھنے کے لئے پر عزم ہیں ۔مو لا بخش چا نڈیو نے کہا کہ پیپلز پار ٹی میں بلا ول بھٹو زر دا ر ی ،پی پی پی پی صدر آصف علی زر دا ر ی اور وزیر اعلیٰ سندھ سید مرا د علی شا ہ ،شہید ذو الفقا ر علی بھٹو اور شہید بے نظیر بھٹو کی سیا ست اور عوامی خدمت کے نظریہ پر عمل پیرا ہیں ۔بلا و ل بھٹو زر دا ر ی رو ٹی ،کپڑا اور مکا ن کے نعرہ کو سیا سی تعصب سے بالا تر ہو کر آگے بڑ ھا رہے ہیں ۔انہو ں نے کہا کہ پیپلز پا ر ٹی کو صو بو ں کو مضبو ط بنا نااور خو شحا لی چا ہتی ہے ۔اس لیے 18ویں تر میم منظور کر کے صوبو ں کو مضبو ط کیا ۔18ویں تر میم کا کریڈٹ پی پی پی پی صدر آصف علی زر دا ر ی کو جا تا ہے جنہوں نے تما م سیا سی جماعتوں سے مشاورت کے بعد اسے منظو ر کروایا ۔انہو ں نے کہا کہ جمہو ریت مخا لف طا قتیں آج بھی پی پی کو نقصا ن پہنچا نے کی کو شش کررہی ہیں لیکن ہما ر ے رہنما ئو ں کی بصیرت کی وجہ سے پا ر ٹی مضبو ط ہے اور عوام کی خدمت کے لئے کو شا ں ہے ۔انہوں نے کہا کہ پی ایم ایل ن کی حکومت سندھ کو فنڈز کا جا ئز حصہ لینے میں نا کا م ہو چکی ہے ۔جس کے نتیجے میں عوام کو سخت مشکلا ت کا سا منا ہے ۔ انہو ں نے کہا کہ پیپلز پار ٹی عوامی طا قت سے آئندہ انتخا با ت میں چاروں صو بو ں میں کا میا ب ہو گی اور ایک بڑ ی طا قت کے طو ر پر ابھرکر سامنے آئے گی ۔وفا قی حکومت سندھ کے سا تھ سو تیلی ما ں جیسا سلو ک کر رہی ہے اور اس کو بنیا د ی حقوق سے محرو م کر رہی ہے ۔صوبا ئی مشیر نے کہا کہ چیئر میں پیپلز پارٹی بلا ول بھٹو زر دار ی نو جو ان قیا دت کو سامنے لا رہے ہیں تا کہ عوام کے مسائل حل کئے جا ئیں ۔

حافظ نعیم الرحمن کی نیپرا کے اجلاس میں شرکت،بجلی کی قیمتوں میں اضافے کی مخالفت


Nepra Ijlas Pic September 8, 2016 | 7:57 PM

نیپرا کے الیکٹرک کی ظلم و زیادتی سے کراچی کے عوام کو نجات دلائے،کے الیکٹرک نے قبلہ درست نہ کیا تو دھرنا دیں گے
مقامی ہوٹل میں نیپرا کے سہ ماہی اجلاس میں شرکت کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو
کراچی :( نیوزآن لائن)جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمن نے جمعرات کے روز مقامی ہوٹل میں کراچی کے عوام کی نمائندگی کرتے ہوئے نیپرا کے اجلاس میں شرکت کی۔کے الیکٹرک کے خلاف عوام کا مقدمہ پیش کیا اور بجلی مہنگی کرنے کے مطالبے کو رد کرتے ہوئے حقائق پیش کیے۔ انہوں نے کے الیکٹرک کی جانب سے بجلی کے نرخوں میں اضافے کے حوالے سے عوامی احساسات و جذبات پر مبنی اپنا مؤقف پیش کیا ۔واضح رہے کہ نیپرا نے حافظ نعیم الرحمن کی کراچی کے نمائندے کی حیثیت سے کے الیکٹرک کے خلاف فریق بننے کی درخواست منظور کی تھی۔ اجلاس کے بعد حافظ نعیم الرحمن نے میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ نیپرا کے الیکٹرک کی پشت پناہی کررہی ہے اسی وجہ سے کے الیکٹرک پرلگائے گئے جرمانے کے باوجود اور سپریم کورٹ میں مقدمہ دائر کرنے کے باوجود عوامی مسائل حل نہیں کیے جارہے،انہوںنے کہا کہ 5ارب روپے کی سبسیڈی کے فوائد کو عوام تک نہیں پہنچایا گیا ، عوام پر بجلی کی قیمت میں اضافے کا مطالبہ عوام کے ساتھ سراسر ناانصافی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی کراچی کے عوام کے ساتھ ہے اورکراچی کے عوام کا مقدمہ لڑرہی ہے ۔انہوںنے کہا کہ کے الیکٹرک بجلی زیادہ تر گیس سے بنا رہا ہے۔ وفاق کی طرف سے 650 میگا واٹ سستی بجلی ،پانی سے پیدا کرکے،کے الیکٹرک کو فراہم کی جاتی ہے،کے الیکٹر ک آئی پی پی ایس سے بھی سستی بجلی خرید کر صارفین کو مہنگے ریٹ پر بیچتا ہے۔ تین ماہ سے زائد عرصہ گزر جانے کے بعد بھی کے الیکٹرک کے 52 صارفین جنہوں نے اس کے کے خلاف اوور بلنگ کے حوالے سے نیپرا میں درخواستیں دی تھیںآج تک انکا فیصلہ نہیں سُنایا گیا جبکہ قانون کے مطابق نیپراسماعت کے 15 دن تک فیصلہ سُنانے کا پابند ہے۔ پرانا ملٹی ایئر ٹیرف جس کی معیاد30 جون2016ء کو ختم ہوگئی ہے ۔نئے ملٹی ائیر ٹیرف پر نیپرا ہیرنگ میں کیوں تاخیر کر رہی ہے۔ کے الیکٹرک کراچی کی صارفین سے 15 پیسے فی یونٹ اضافی ملازمین کے نام پر آج تک اربوں روپے وصول کر رہی ہے۔ جبکہ کے۔ الیکٹرک نے اپنے ملازمین کی چھانٹی کر کے تعداد17 سے 10ہزار کر دی ہے ۔انہوں نے کہا کہ کے الیکٹرک کراچی کی عوام سے ڈبل بینک چارجز اور ناجائز میٹر رینٹ کے نام پر اربوں روپے کی وصولی کر رہا ہے۔نیپرا جو فیصلے صارفین کے حق میں کرتا ہے اس پر عمل درآمد نہیں ہوتا اور جو فیصلے کے۔الیکٹرک کے حق میں ہوتے ہیں اس پر فوراً عملدرآمد ہوجاتاہے۔انہوں نے کہا کہ کے الیکٹر ک کی نجکاری کا بنیادی مقصد اس کی کارکردگی کو بہتر بنانا اورعوام کو بلا تعطل بجلی کی فراہمی کو یقینی بنانا تھالیکن کراچی کے عوام بجلی کی لوڈ شیڈنگ ،اوور بلنگ اور بوگس بلنگ سے تنگ آچکے ہیں۔ بجلی کے بریک ڈاؤن سے کراچی کوپانی کی فراہمی بھی معطل ہو جاتی ہے ۔اس طرح کراچی کے شہری شدید گرمی سے دوہرے عذاب کا شکار ہو جاتے ہیں۔ ہم نے سپریم کورٹ میں کے الیکٹرک کے خلاف مقدمہ درج کرایا ہے، لیکن اس کے باوجود عوام کے مسائل حل نہیں کیے جارہے اور عوام کو ریلیف نہیں دی جارہی ۔انہوں نے کہا کہ اگر عوامی مسائل حل نہیں کیے گئے توہم دھرنا دیں گے اور کے الیکٹرک کے عذاب سے عوام کو چھٹکارا دلائیں گے ۔ اس موقع پر جماعت اسلامی کراچی کے ،کے الیکٹرک صارفین حقوق کے انچارج عمران شاہد اور سکریٹری اطلاعات زاہد عسکری اور دیگر بھی موجود تھے ۔

مہاجر مسائل آج بھی منہ کھولے کھڑے ہیں: ڈاکٹر سلیم حیدر


dr saleem haider mit September 8, 2016 | 7:53 PM

اسمبلی کے اندر اور اسمبلی کے باہر مہاجر مسائل کیلئے کبھی بات نہیں کی گئی جو مہاجر مینڈیٹ کے ساتھ دھوکہ ہے
مہاجر نسلوں کو تباہ کرنے والے بہروپیوں سے مہاجر قوم جلد سے جلد جان چھڑائیں: چیئرمین ایم آئی ٹی
کراچی:(نیوزآن لائن) مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہا ہے کہ شخصیت پرستی کی سیاست اپنے منطقی انجام کو پہنچ رہی ہے ، بدقسمتی سے 30 سال کے دوران مہاجر حقوق اور مہاجر مسائل پر بات کرنے کے بجائے شخصیت پرستی کی سیاست کو فروغ دیا گیا۔ جس نے مہاجروں کے حقوق اور مسائل پس پشت ڈال کر اپنی ذات کو اُجاگر کیا ۔ انہوں نے کہاکہ مہاجر مسائل آج بھی منہ کھولے کھڑے ہیں۔ برسہا برس سے قیادت اور کارکنوں کے مسائل پر احتجاج سے لے کر ہنگامہ آرائی تک تو کی گئی لیکن مہاجر مسائل پر نہ اسمبلی او رنہ ہی اسمبلی کے باہر کوئی بات ہوئی۔ حد تو یہ ہے کہ کراچی اور حیدرآباد کے مہاجروں کیلئے تعلیمی ادارے بھی نہیں بنائے گئے ۔ حیدرآباد کے شہریوں کا دیرینہ مسئلہ یونیورسٹی کے قیام پر آج تک کوئی توجہ دی گئی اور نہ ہی کراچی میں مہاجر نوجوانوں کیلئے یونیورسٹی اور کالج بنائے گئے۔ انہوں نے کہاکہ مہاجروں کو جس طرح بدنام اور رسوا کیا گیا ہے اس سے سب کے سر شرم سے جھک گئے ہیں۔ پاکستان بنانے والوں کی اولادوں پر پاکستان دشمنی کے الزام کے بعد ہمارے آباؤ اجداد کی روحیں بھی تڑپ اُٹھی ہوں گی۔ لیکن وہ جوکہ شخصیت پرستی کی سیاست کو پروان چڑھانے میں آگے آگے تھے آج وہی پاکستان کی سالمیت کے دعویدار بنے بیٹھے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ مہاجروں کی نسلوں کو تباہ وبرباد کرنے والے بہروپیوں کیخلاف قوم کوغیرمعمولی فیصلے کرنا ہوں گے۔ اگر ابھی مصلحت اور منافقت کا ساتھ نہیں چھوڑا گیا تو پھر مہاجروں کی داستان بھی نہ ہوگی داستانوں میں۔

چمن کومبنگ آپریشن جاری،3 دہشتگرد گرفتار


chaman balochistan September 4, 2016 | 12:49 PM

چمن :( نیوزآن لائن) ملک کے مختلف شہروں میں سیکیورٹی فورسز کومبنگ آپریشن جاری ہے ، چمن میں آپریشن کے دوران3 دہشتگرد کو گرفتار کر لیا ہے۔تفصیلات کے مطابق ڈیرہ بگٹی میں سیکیورٹی فورسز نے کومبنگ آپریشن کیا جس کے دوران تین دہشت گردوں کوگرفتار کرلیا گیا ۔ کارروائی کے دوران دوبم برآمد کرکے ناکارہ بنا دیئے جبکہ گرفتاردہشت گردوں کو نا معلوم مقام پر منتقل کر دیا گیا ہے۔

سالم انٹر چینج پر تیز رفتار بس اور ٹرالر میں تصادم ،5 جاں بحق


sagoda accident September 4, 2016 | 12:00 PM

بھیرہ:(نیوزآن لائن) سالم انٹر چینج پر تیز رفتار بس اور ٹرالر کے درمیان تصادم ہو گا ، تصادم کے نتیجے میں 5 افراد جاں بحق جبکہ متعدد زخمی ہو گئے۔تفصیلات کے مطا بق سرگودھا میں موٹر وے پر سالم انٹرچینج پر پشاور سے لاہور جانے والی بس تیزرفتاری کے باعث ٹرالر سے ٹکرا گئی، جس کے نتیجے میں ایک خاتون سمیت 5 افراد جاں بحق جبکہ متعدد زخمی ہو گئے۔پولیس کا کہنا ہے کہ زخمیوں کو ڈی ایچ کیو اسپتال منتقل کردیا گیا جہاں انہیں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے ۔

ذی الحج کا چاند نظر نہیں آیا،عیدالاضحی بروز منگل13ستمبر کو ہو گی


rohat hilal comety September 2, 2016 | 9:17 PM

 کراچی: (نیوزآن لائن)چیئرمین مرکزی رویت ہلال کمیٹی مفتی منیب الرحمان کے زیر صدارت ذی الحج کا چاند دیکھنے کیلئے کراچی میں اجلاس ہوا۔ اجلاس میں کمیٹی کے اراکین، محکمہ موسمیات، پاکستان نیوی اور سپارکو کے نمائندے بھی شریک تھے۔مفتی منیب الرحمان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں کہیں بھی ذی الحج کا چاند نظر نہیں آیا، چاند کی رویت کا فیصلہ اتفاق رائے سے کیا گیا ہے، محکمہ موسمیات کے تمام مراکزسیعدم رویت کی رپورٹ ملی۔ذی الحج کا چاند دیکھنے کیلئے رویت ہلال کمیٹی کو محکمہ موسمیات اور سپارکو کی تکنیکی معاونت بھی حاصل تھیں۔ رویت ہلاک کمیٹی کو چاند نظر آنے سے متعلق کوئی شہادت موصول نہیں ہوئی۔ اجلاس کے بعد مفتی منیب الرحمان نے بتایا کہ ملک بھر کے بیشتر علاقوں میں مطلع ابر آلود تھا جس کی وجہ سے چاند نظر نہیں آیا۔ اس لئے عیدالاضحی 13 ستمبر بروز منگل کو ہوگی۔

مردان ضلع کچہری میں خود کش بم دھماکہ پر ایم کیوایم (پاکستان ) کے سربراہ ڈاکٹر محمد فاروق ستار کا اظہار مذمت


farooq_sattar September 2, 2016 | 8:25 PM

معصوم اور بے گناہ انسانوں کو خاک و خون میں نہلانے والے کھلے ملک دشمن ہیں اور ملک کی سا لمیت اور
استحکام کے درپے ہیں، ڈاکٹر فاروق ستار
دہشت گردوں کے خلاف جاری آپریشن ضرب عضب اور نیشنل ایکشن پلان کو مزید موثر ، مربوط اور جدید خطوط پر استوار
کرنے کی ضرورت ہے ، ڈاکٹر فاروق ستار
ڈاکٹر فاروق ستار کی بم دھماکہ میں شہید ہونے والے وکیلوں ، پولیس اہلکاروں سمیت دیگر افراد کی شہادت پر
دلی تعزیت و افسوس کااظہار ، زخمیوں کی جلد صحت یابی کیلئے دعا
کراچی :( نیوزآن لائن)متحدہ قومی موومنٹ (پاکستان ) کے سربراہ ڈاکٹر محمد فاروق ستار نے مردان ضلع کچہری میں خود کش بم دھماکہ کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کی ہے اوردھماکے کے نتیجے میں پولیس اہلکاروں ، وکیلوں سمیت متعدد افراد کے شہید اور زخمی ہونے پر گہرے دکھ اور افسوس کااظہار کیا ہے ۔ ایک بیان میں ڈاکٹر محمد فاروق ستار نے کہاکہ مردان میں معصوم اور بے گناہ انسانوں کو خاک و خون میں نہلانے والے کھلے ملک دشمن ہیں اور ملک کی سا لمیت اور استحکام کے درپے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ مردان میں خود کش بم دھماکہ کے بعد ملک میں دہشت گردوں کے خلاف جاری آپریشن ضرب عضب اور نیشنل ایکشن پلان کو مزید مئوثر اور مربوط بنانے اور اسے جدید خطوط پر استوار کرنے کی ضرورت ہے تاکہ ملک میں بچے کچے دہشت گرد بھی اپنے مذموم عزائم اور ناپاک مقاصد کی تکمیل میں کامیاب نہ ہوسکیں ۔ ڈاکٹر فاروق ستار نے خود کش بم دھماکہ میں وکیلوں اور پولیس اہلکاروں سمیت شہید ہونے والے افراد کے تمام سوگوار لواحقین سے دلی تعزیت وہمدردی کااظہار کرتے ہوئے انہیں صبر کی تلقین کی اور دعا کی کہ اللہ تعالیٰ شہداء کو جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام عطا فرمائے ، سوگواران کو صبرجمیل عطا کرے اور زخمیوں کو جلد ومکمل صحت یابی عطا فرمائے ۔ ڈاکٹر محمد فاروق ستار نے وزیراعظم نواز شریف اور چیف آف آرمی اسٹاف جنرل راحیل شریف سے مطالبہ کیا کہ مردان میں خود کش بم دھماکہ میں ملوث سفاک دہشت گردوں کو فی الفور گرفتار کیاجائے اور انہیں عبرتناک سزا دی جائے ۔

عمران خان نے پاناما لیکس پر کل سپریم کورٹ میں پٹیشن دائر کرنے کا اعلان کر دیا


imran August 28, 2016 | 9:15 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)عمران خان نے پاناما لیکس پر کل سپریم کورٹ میں پٹیشن دائر کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔تحریک انصاف کے چیرمین عمران خان کا  لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہناتھا کہ حکومت کے خلاف تحریک کیلئے سب جماعتوں کو ساتھ ملانے کا اعلان کر دیا۔ عمران خان کا نے کہا کہ 3ستمبر کو پوری قوت کے ساتھ لاہور سے ٹکرانے کا اعلان بھی کیا  جبکہ عمران خان نے اعلان کیا کہ پاناما لیکس پر پیر کو وزیر اعظم کے خلاف سپریم کورٹ میں پٹیشن دائر کریں گے۔

حالیہ بارشوں کے دوران کراچی میں ہونے والے جانی و مالی نقصانات اور مختلف حادثات پر ایم کیوایم رابطہ کمیٹی پاکستان کا اظہار تشویش


mqm sangar August 28, 2016 | 8:57 PM

حق پرست اراکین قومی وصوبائی اسمبلی اور منتخب بلدیاتی چیئرمینز ، وائس چیئرمین ، یوسی چیئرمینز اور وائس چیئرمینز سمیت تمام کونسلر ز
اپنی مدد آپ کے تحت شہری نظام زندگی کی بحالی کیلئے بھر پورکردار ادا کریں ، ایم کیوایم رابطہ کمیٹی پاکستان
حکومت سندھ کی جانب سے بارشوں سے شہریوں کے تحفظ کیلئے کوئی اقدامات بروئے کار نہیں لائے گئے ، رابطہ کمیٹی پاکستان
کراچی میں حالیہ بارشوں کے دوران تباہ کاریوں کا سختی سے نوٹس لیاجائے اور شہری نظام زندگی کو مفلوج
ہونے سے بچانے کیلئے تمام سرکاری ذرائع اور وسائل استعمال میں لائے جائیں، رابطہ کمیٹی پاکستان
کراچی:(نیوزآن لائن)متحدہ قومی موومنٹ رابطہ کمیٹی پاکستان نے حالیہ بارشوں کے دوران کراچی میں ہونے والے جانی و مالی نقصانات اور مختلف حادثات پر گہری تشویش کا اظہار کیاہے اور مطالبہ کیاکہ حالیہ بارشوںسے ہونے والی تباہ کاریوںسے نمٹنے کے لئے منتخب حق پرست بلدیاتی نمائندوںکواختیارات دیئے جائیں۔ ایک بیان میںرابطہ کمیٹی پاکستان نے کہاکہ شہر میں اس سے قبل بھی بارشیں ہوئی تھیں توجگہ جگہ پانی کھڑا ہوگیا تھا ، سیوریج کا نظام درہم برہم ہوگیا تھا اور کئی قیمتی انسانی جانیںاس کی نذرہوگئیںتھیںلیکن اس کے باوجود حکومت سندھ کی جانب سے بارشوںسے شہریوںکے تحفظ کیلئے کوئی اقدامات بروئے کار نہیں لائے گئے۔ انہوںنے کہاکہ کراچی میں حالیہ بارشوں کے باعث ایک بار پھر جگہ جگہ پانی کھڑا ہوگیا،سیوریج کا نظام درہم برہم ہوگیا ، قیمتی انسانی جانیں ضائع ہوگئیں لیکن اس کے باوجود حکومت سندھ اور اس کی کابینہ کے اراکین خواب خرگوش کے مزے لیتے رہے۔رابطہ کمیٹی پاکستان نے حق پرست اراکین قومی وصوبائی اسمبلی اور منتخب بلدیاتی چیئرمینز ، وائس چیئرمین ، یوسی چیئرمینز اور وائس چیئرمینزسمیت تمام کونسلروں کو ہدایت کی ہے کہ بارش کے پانی کی نکاسی ، کچرے کے انبارکوٹھکانے لگانے اور بے گھر ہوجانے والے خاندانوں کی اپنی مدد آپ کے تحت بھر پور امداد کریں اور اس سلسلے میں کوئی کثر باقی نہ چھوڑیں۔رابطہ کمیٹی پاکستان نے وزیراعظم پاکستان نواز شریف اور وزیراعلیٰ سندھ سے مطالبہ کیا کہ کراچی میں حالیہ بارشوں کے دوران تباہ کاریوںکا سختی سے نوٹس لیاجائے اور شہری نظام زندگی کو مفلوج ہونے سے بچانے کیلئے تمام سرکاری ذرائع اور وسائل استعمال میں لائے جائیں۔

سینیٹر سراج الحق کا ژوب میں پروگرام سے خطاب


pic ameer ji (3) August 28, 2016 | 8:43 PM

لاہور :( نیوزآ ن لائن)امیرجماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ بلوچستان کے بارے مودی کے بیان پر یہاں کے محب وطن عوام کی طرف سے جو شدید ردعمل آیا ہے اس نے ثابت کردیا ہے کہ یہاں کے عوام پاکستان کی خا طر مرمٹنے کیلئے تیار ہیں ۔ کوئٹہ سانحہ کے بعد میں نے وزیر اعظم کو تجویز دی تھی کہ کوئٹہ میں تمام سیاسی قائدین کا مشاورتی اجلاس طلب کیاجائے جس میں سیکیورٹی اداروں کے سربراہان اور آرمی چیف کو بھی بلایا جائے اور مل بیٹھ کر یہاں کے مسائل اور بدامنی کا حل تلاش کیا جائے لیکن مرکزی حکومت نے اس تجویز پر عمل نہیں کیا ۔یہی وجہ ہے کہ مودی کو بھی جلتی پر تیل ڈالنے کا موقع ملا ،جس کا بلوچستان کے غیورعوام نے متحد ہوکر مودی کو منہ توڑ جواب دیا ہے۔ وسائل کی غیر منصفانہ تقسیم اورصوبے کے عوام کو تعلیم صحت اورروز گارسے محرورم رکھنا ظلم ہے ،اس ظلم کے خلاف آواز اٹھانے والوں کو ملک دشمن قرار نہیں دیا جاسکتا۔ وفاقی حکومت بلوچستان کے عوام کے ساتھ کئے گئے وعدوں کا پاس کرتی تو یہاں سے اسلام آباد کے خلاف کوئی آواز نہ اٹھتی ۔ مولانا عبدالحئی مندوخیل نے پوری زندگی غلبہ اسلام کی جدوجہد کی۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے مدرسہ جامعہ ریاض العلوم ژوب میں مولانا عبد الحئی مندوخیل مرحوم کے تعزیتی ر یفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔تعزیتی ریفرینس سے پشتونخواہ ملی عوامی پارٹی کے رضا محمد رضا،جمعیت علمائے اسلام کے مولانا شمس الدین ،اے این پی کے محمد انور مندوخیل ،تحریک انصاف کے ملک میر اعظم خان اور جماعت اسلامی بلوچستان کے امیر مولانا عبد الحق ہاشمی نے بھی خطاب کیا ۔ سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ بلوچستان بے پناہ قدرتی وسائل سے مالا مال صوبہ ہے لیکن اس صوبے کے وسائل کو یہاں کے عوام پر خرچ نہیں کیا جاتا ،حالانکہ ان وسائل پر یہاں کے عوام کا حق ہے جس دن انہیں یہ حق دے دیا گیا پاکستان کے خلاف نہ کوئی بات کرے گا اور نہ سنے گا۔بلوچستان کی ترقی کیلئے تعلیمی اداروں ،ہسپتالوں اور ڈیموں کی ضرورت ہے اگر عوام کی پریشانیوں کا ازالہ کیا جاتا اور یہاں کے عوام کو ملک کے دیگر صوبوں کی طرح زندگی کی سہولتیں دی جاتیںتو یہ صوبہ بھی دوسرے صوبوں کی طرح پرامن ہوتا ۔انہوں نے کہا کہ سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی نے بلوچستان کے نوجوانوں کو روز گار دینے کا وعدہ کیا تھا مگر یہاں کے نوجوان آج بھی ڈگریاں ہاتھوں میں لئے روز گار کی تلاش میں مارے مارے پھر رہے ہیں ۔موجودہ حکومت نے بار بار صوبے کی ترقی و خوشحالی کے سبز باغ دکھائے ۔ 100ڈیمزبنانے کا منصوبہ تھا جس پر عمل نہیں کیا گیا اور ابھی تک صرف 20ڈیم بن سکے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ پنجاب میں اورنج لائن ٹرین اور میٹرو بس پرملک میںتعلیم اور صحت کے بجٹ سے زیادہ خرچ کیا جارہا ہے،حکومت کی اس طرح ناانصافیوں کی وجہ سے دوسرے صوبوں کے عوام کے اندر احساس محرومی پیدا ہوتا ہے ۔کوئٹہ سانحہ میں شہید ہونے والے وکلاء کے خاندانوں کی کفالت کی ذمہ داری مرکزی اور صوبائی حکومتوں کی ہے ۔کوئٹہ سانحہ پاکستان کا 9/11تھا جس نے ہم سے ہمارے بہترین لوگوں کو چھین لیا ،اگر پولیس اور دیگر ادارے پروٹوکول کی مصروفیات کو ترک کرکے زخمیوں کو بروقت ہسپتال منتقل کردیتے تو درجنوں لوگوں کی زندگی بچائی جاسکتی تھی۔ انہوں نے کہا کہ آج کوئٹہ میںسب کو ایک ہی لاٹھی سے ہانکنے کی کوشش کی جارہی ہے جو ناقابل برداشت ہے ۔سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ پاکستان کو بچانے کیلئے کرپشن کا خاتمہ ضروری ہے اور تمام سیاسی جماعتوں کو کرپشن اور کرپٹ نظام کے خاتمہ کیلئے مل کر چلنا چاہئے ۔پاکستان کسی وڈیر ے ،جاگیر دار ،خان اور سردار نے نہیں بلکہ عوام نے بنایا تھا لیکن یہاں عوام دووقت کی روٹی سے محروم ہیں اور جاگیر دار وڈیرے اور سردار عوامی وسائل پر عیش و عشرت کررہے ہیں۔

مہاجروں کو رسوا اور تباہی پر پہنچانے والے قوم سے معافی مانگیں: ڈاکٹر سلیم حیدر ==========


dr saleem haider mit August 28, 2016 | 8:37 PM

جن لوگوں نے مہاجر نام پر جائیدادیں بنائیں، چائنا کٹنگ کی انہیں حقوق کی بات کرنا کوئی حق نہیں
مہاجر ان شعبدے بازوں کو جو بھیس بدل کر پھرقوم کو بیوقوف بنارہے ہیں مسترد کرتے ہیں
کراچی:(نیوزآن لائن)مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدرنے کہا ہے کہ ان حالات کی نشاندہی ہم 20 سال سے کرتے رہے ہیں جس کی پاداش میں ہم پر قاتلانہ حملے ہوئے ۔ ہمارے کارکنوں کو جھوٹے مقدمات میں گرفتار کرایا گیا۔ آج ہماری بتائی ہوئی باتیں سچ ثابت ہورہی ہیں ۔ لہٰذا مہاجروں کو رسوا اور تباہی پر پہنچانے والے الطاف حسین کو مہاجر قوم سے معافی مانگنی ہوگی۔ آج جو مہاجروں کے ہمدرد بنے ہوئے ہیں وہ ماضی میں مہاجر حقوق کی بات کرنے والوں کیخلاف عرصہ حیات تنگ کرتے رہے ہیں اور یہ بھی مہاجروں کو دیئے جانے والے دھوکے اور مہاجروں کا سودا کرنے میں برابر کے شریک ہیں۔ وہ ناظم آباد میں کارکنوں کے اجتماع سے خطاب کررہے تھے۔ ڈاکٹر سلیم حیدرنے کہاکہ ہماری جماعت مہاجر حقوق کی بانی جماعت ہے ، ہم نے کسی بھی دوراہے پر نہ تو مہاجر دشمن قوتوں سے مفاہمت کی اور نہ ہی مہاجر نام پر مراعاتیں حاصل کرکے اپنے ضمیر کا سودا کیا۔ انہوں نے کہاکہ اب وقت آگیا ہے کہ مہاجران شعبدے بازوں کومسترد کردیں جو بھیس بدل کر ایک مرتبہ پھر مہاجروں کو بیوقوف بنانے کی کوششیں کررہے ہیں۔ پہلے ہی مہاجروں کے 30 سال تباہ ہوچکے ہیں اب مزید مہاجر تباہی اور بربادی کے متحمل نہیں ہوسکتے۔ اس لئے یہ عناصر مہاجروں کی جان چھوڑ دیں اور انہیں عزت اور وقار سے زندہ رہنے دیں۔ آج اگر مہاجروں کو را کا ایجنٹ ، دہشت گرد اور ملک دشمن اور مفاد پرست کے القاب سے نوازا جارہا ہے تو اس سب کے ذمہ دار ایم کیوایم کے یہ گروپ ہیں جو مہاجر بھیس میں مہاجر دشمن ثابت ہوئے ہیں ۔ انہوں نے دنیا بھر کی مراعاتیں اور مفادات حاصل کئے اور اب بھی مہاجروں کو بیوقوف بنانے کیلئے گلے پھاڑ پھاڑ کر شور مچارہے ہیں۔ مہاجر عوام انہیں مسترد کرتے ہیں اس لئے کہ کسی اور کے کندھے پر بیٹھ کر نہ تو مہاجروں کی خدمت کی جاسکتی ہے اور نہ ہی مہاجروں کو ان کا کھویا ہوا مقام دلایا جاسکتاہے۔

کراچی میں بارش کا سلسلہ جاری،مختلف حادثات میں 5 افراد جاں بحق


251355-karachirainmohammadazeem-1315903695-716-640x480 August 28, 2016 | 3:06 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)کراچی میں بارش کا سلسلہ وقفے وقفے جاری ہیں ,بارش کے دوران چھت ،دیوار گرنے اور کرنٹ لگنے سے 5 افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہو گئے ہیں۔پولیس کے مطابق سرجانی ٹائون ، کلفٹن بلاول ہائوس کے قریب اور نارتھ کراچی میں کرنٹ لگنے کے واقعات میں 3 افراد جاں بحق ہوگئے جبکہ سول لائن اورنگی ٹاون ایم پی آر کالونی میں دیوار گرنے سے دو افراد جاں بحق ہو گئے جبکہ برسات کے بعد شہر کے مختلف علاقوں میں بجلی بھی غائب ہوگئی ہے۔ترجمان کے الیکٹرک نے کہا ہے کہ 150کے قریب فیڈرز متاثر ہوئے ہیں ، بجلی کی بحالی کے لئے کے الیکٹرک کا عملہ مصروف ہے ۔محکمہ موسمیات کے مطابق سب سے زیادہ 45ملی میٹر بارش لانڈھی میں ہوئی،ایئرپورٹ اور گلستان جوہر میں 18ملی میٹر ،گلشن حدید میں 17ملی میٹر اور صدر میں 4ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی ہے ۔بارش میں حادثات سے بچائو کے لئے چند ہدایات بھی جاری کی گئی ہیں،جن کے مطابق تیزہواوں کے ساتھ بارش ہوتو غیر ضروری سفر سے گریز کریں،سفر میں گاڑی یا موٹرسائیکل کی رفتار آہستہ رکھیں،دوسری گاڑیوں سے مناسب فاصلہ رکھیں۔

بھارتی حکمرانوں کا یہ الزام کہ پاکستان ہی کشمیر میں جذبات کی نمود کی تحریک میں مُحرکِ اوّل کی حیثیت رکھتا ہے دُرست نہیں ہے۔ سیدالطاف اندرابی


sirinagar August 28, 2016 | 2:38 PM

سرینگر:(نیوزآن لائن) جموںکشمیر محاذ آزادی کے سرپرست محمد اعظم انقلابی اور محاذکے صدر سیدالطاف اندرابی نے اپنے مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ بھارتی حکمرانوں کا یہ الزام کہ پاکستان ہی کشمیر میں جذبات کی نمود کی تحریک میں مُحرکِ اوّل کی حیثیت رکھتا ہے دُرست نہیں ہے۔ سابق وزیر اعظم پنڈت جواہرلال نہرو کے کشمیر سے متعلق وعدہ رائے شماری اور اقوام متحدہ کی قرار دادوں کے باوجود بھارتی حکمرانوں نے استعماری اور توسیع پسندانہ عزائم کی وجہ سے ہی ایفائے عہد کا راستہ اختیار کرنے کے بجائے کشمیر میں اپنی برہنہ خون آلود تلوار کو ہی حاکِم، حُکم اور حَکم قرار دیا اور یہاں قتل وغارت گری کے ذریعے کشمیریوں کو زیر اور زچ کرنے کی مذموم پالیسی اختیار کی۔
بھارتی مستعمرین کے جارحانہ مزاج نے ہی ہمارے بطلِ حریت مقبول بٹ، فرزندِ کشمیر افضل گورو، میرواعظ مولوی فاروق، خواجہ عبدالغنی لون، ڈاکٹر قاضی نثار، مقبول ملک، جلیل اندرابی، شیخ عبدالعزیز، ایس حمید، ایڈووکیٹ حسام الدین، مولانا شوکت شاہ اور ڈاکٹر غلام قادر وانی جیسے ہر دلعزیز اُولوالعزم مُزاحمتی قائدین کو درجۂ شہادت تک پہنچایا۔ کیا یہ حقیقت نہیں کہ بھارتی بندوقوں نے ہی یہاں گاؤکدل، پتھری بل، کپوارہ، سوپور، ہندوارہ غرضیکہ کشمیر کے بے شمار مقامات پر جلیاوالا باغ کے مناظر پیش کئے۔ یوں ہمارے لاکھوں جگرپارے راہِ حق وحریت میں کام آئے۔ وہ قبروں کی زینت بنے۔
بھارتی مستعمرین کی شقاوتِ قلبی، عداوتِ حق اور خونخواری نے ہی یہاں کشمیر کے باغیرت صوفی منش لوگوںکو سڑکوں پر آکر اپنے جذبات کا اظہار کرنے پر آمادہ کیا۔ بھارتی حکمرانوں کے تکبر اور تمرد نے ہی مسائل کو پیچیدہ بنادیا، پاکستان ایٹمی طاقت کی حیثیت سے کشمیر کے محاذ پر محتاط رویہ اختیار کئے ہوئے ہے۔
اِس خطرناک صورتحال سے بچنے کی واحد صورت یہ ہے کہ آپ فوراً مزاحمتی رہنماؤں قبلہ سید علی گیلانی صاحب، میر واعظ عمرفاروق صاحب، یٰسین ملک صاحب اور شبیر احمد شاہ صاحب جیسے سینئر رہنماؤں کو اعتماد میں لیتے ہوئے کشمیر میں دیوارِ برلن (کنٹرول لائن) کے انہدام، آرپار فوجوں کے انخلا اور متحدہ کشمیر میں کشمیر پارلیمنٹ کے قیام کے لئے راستہ استوار کریں۔ کشمیر پارلیمنٹ کے معزز ارکان حقِ خودارادیت کے اصول کے تحت کشمیر کے سیاسی مستقبل کا تعّین کریں گے۔ اﷲ تمہیں بات سمجھنے کی توفیق عطا کرے، آمین۔

اقلیتی برادری کے عبادت گاہوں پر سی سی ٹی وی کیمرے نصب کئے جائیں گے۔ ڈاکٹر کھٹو مل


Karachi-Sindh August 27, 2016 | 4:38 PM

کراچی: (نیوزآن لائن) وزیر اعلیٰ سندھ کے معاون خصوصی برائے اقلیتی امور ڈاکٹر کھٹو مل جیون نے کہا ہے کہ حکومت سندھ اقلیتوں کو مذہبی رسومات کی ادائیگی اور ان کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لئے ہر ممکن اقدامات کر رہی ہے ۔ مندروں ، گرجا گھروں اور گردواروں کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لئے سی سی ٹی وی کیمروں کی تنصیب کی جائے گی تاکہ اقلیتی برادری اپنی مذہبی رسومات کی ادائیگی بے خوف و خطرکرسکے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے دفتر میں ہندو ، عیسائی اور سکھ برادری کے مختلف وفود سے گفتگو کے دوران کیا۔
ڈاکٹر کھٹو مل جیون نے کہا کہ سابق صدر آصف علی زرداری اور وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی ہر ممکن کوشش ہے کہ اقلیتی برادری ملک کی ترقی اور تعمیر میں اپنا مثبت کردار مزید بہتر انداز سے ادا کریں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ پیپلز پارٹی کے ٹکٹ پر مختلف اضلاع میں ٹائون کمیٹیوں ، میونسپل کمیٹیوں اور ضلع کونسل میں اقلیتی برادری سے تعلق رکھنے والے اٹھارہ چیئرمین اور وائس چیئر مین منتخب ہونا غیر مسلم عوام کو بااختیار بنانے کی روشن مثال ہے۔
ڈاکٹر کھٹو مل جیون نے کہا کہ اقلیتی امور کے محکمہ کے فنڈز بلا تفریق اقلیتی برادری کی فلاح و بہبود کے لئے استعمال کئے جارہے ہیں انہوں نے اس موقع پر وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ اور ان کی ٹیم کا شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے اقلیتی امور کے محکمہ کے بجٹ میں سو فیصد اضافہ کیا ہے۔

مہاجر سیاست کے نام پر شعبدے بازی بند کی جائے: ڈاکٹر سلیم حیدر


dr saleem haider mit August 27, 2016 | 4:28 PM

مہاجر سیاست کو رسوا کرنے والوں کو قوم کبھی معاف نہیں کرے گی، نوجوان بھی شعور کا مظاہرہ کریں
مہاجروں کو 30 سال سے اقتدار کے حصول کیلئے فروخت کیاجاتا رہاہے اور اب بھی قوم کو گمراہ کیا جارہا ہے
کراچی:(نیوزآن لائن) مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدرنے کہاہے کہ مہاجر سیاست کے نام پر اب شعبدے بازی کا سلسلہ بند ہوجانا چاہئے۔ مہاجر سیاست کو رسوا کرنے والوں کو قوم کبھی معاف نہیں کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ فاروق ستار واضح موقف اختیار نہ کرکے پوری قوم کو ہیجانی کیفیت میں مبتلا کئے ہوئے ہیں۔ اب قوم مزید کسی ڈرامے بازی اور شعبدے بازی کی متحمل نہیں ہوسکتی۔ پہلے ہی مہاجروں کے 30 سال برباد کردیئے گئے ۔ سب سے زیادہ تہذیب یافتہ اور پڑھی لکھی مہاجر قوم کو گالی بنادیا گیا۔ لندن میں بیٹھے شخص نے زاتی مفادات کیلئے ایک مرتبہ پھر پوری قوم کا سودا بین الاقوامی قوتوں کے ہاتھوں کردیا ہے اس سے پہلے بھی مہاجروں کو اقتدار کے حصول کیلئے خریدا اور بیچا جاتا رہا۔ انہوں نے کہاکہ آج کے حالات کی نشاندہی ہم نے برسوں پہلے سے کرنا شروع کردی تھی، کیونکہ ہم یہ سمجھتے ہیں کہ مہاجر قوم کو گمراہی اور جہالت میں مبتلاکرکے نہ تو قوم کی خدمت کی جاسکتی ہے اور نہ ہی ملک کی تعمیروترقی میں کوئی کردار ادا کیا جاسکتا ۔ انہوں نے کہاکہ مقتدر حلقے اور اداروں کو اب واضح طورپر ان ملک دشمن عناصر کیخلاف بھرپور کارروائی کرنی ہوگی جو پاکستان اور اس کی سالمیت کیخلاف بات کرتے ہیںاور غیرملکی قوتوں کے آلہ کار بنے ہوئے ہیں۔ انہوں نے مہاجر نوجوانوں سے اپیل کی ہے کہ وہ شعور اور ہوش مندی کا مظاہرہ کرتے ہوئے مہاجروں کیخلاف کی جانے والی سازشوں سے بچیں اور کسی ایسے شخص کے آلہ کار نہ بنیں جو پاکستان دشمنی کیلئے انہیں استعمال کررہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اب وقت آگیا ہے کہ مہاجر متحد ہوکر ملک دشمن قوتوں کو مسترد کردیں اور اپنا پاکستانی تشخص برقرار رکھنے کیلئے اُٹھ کھڑے ہوں۔ کیونکہ چند لوگوں کی بداعمالیوں کی سزا پوری قوم کو نہیں دی جاسکتی۔ مہاجر سر سے پاؤں تک پاکستانی ہیں اور ان کی پاکستان سے محبت غیر مشروط ہے۔ یہ کبھی نہیں ہوسکتا کہ پوری قوم ملک دشمن ہو جائے، چند لوگ تو ملک دشمنی کا ارتکاب کرسکتے ہیں پوری قوم نہیں۔

پاکستان پیپلز پارٹی انسانی حقوق ونگ لاہور کا اجلاس ابو احمر ہاشمی کی رہائش گاہ پر منعقد


PPP-FLAG August 27, 2016 | 4:18 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)پاکستان پیپلز پارٹی انسانی حقوق ونگ لاہور کا اجلاس ابو احمر ہاشمی کی رہائش گاہ پر منعقد ہو ا۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے لاہور کے رہنماء نصیر احمد ، شیخ علی سعید، عبدالکریم میو، رانا محمد منیر، نصیر احمد، ارشد لودھی، وقاص پرنس، سیدہ حمیرا،تنزیلہ نذر، عاصمہ اکرم نے کہا کہ لاہور کو پیرس بنانے کا دعوی ٰ کرنے والوں نے وینس میں تبدیل کر دیا ہے پنجاب حکومت نے تمام اداروں کے فنڈ روک کر اورنج ٹرین پر لگا دیے ۔ 165 ارب سے زائد لاگت سے 27 کلومیٹر طویل اورنج ٹرین تعمیر کی جا رہی ہے اور اس کے 27 اسٹیشن ہیں ہر اسٹیشن کا خرچہ 6 ارب سے زائد ہے لاہور کے تمام ایم این ایس،ایم پی ایس کے فنڈز بھی جاری نہیں کیے جا رہے اورنج ٹرین کے صرف ایک اسٹیشن کا خرچہ لاہور کے نکاسی آب اور پینے کے پانی پر لگا دیئے جائیں تو لاہور کی عوام ہر سال بارش سے متاثر ہونے سے بچ سکتی ہیں۔ اور اہلیان لاہو رکو بیماریوں سے پاک پینے کا پانی مل سکتا ہے۔ لاہور کے 50 سالہ پرانے نکاسی آب نظام کو بدلنے کے لیے کوئی منصوبہ بندی نہیں کی جا رہی ۔ محکمہ موسمیات کے ماہرین کی اس پیشن گوئی کے بعد اس سال مون سون بارشیں زیادہ ہونگی ۔ حکومت نے بچائوں کے لیے کوئی ٹھوس منصوبہ بندی نہیں کی لاہور میں شدید بارشیوں سے تباہی پھیلائی ہوئی ہے جبکہ خادم اعلیٰ سے لے کر لاہور کے تمام ایم پی ایز اور سرکاری افسران بیرونی دوروں پر ہیں یہ پھر لاہور سے باہر ضمنی الیکشن میں ڈیوٹیاں سرانجام دے رہے ہیں ۔  اور لاہور کو لاوارث چھوڑ دیا گیا ہے ۔ انہوںنے مطالبہ کیا کہ پنجاب حکومت لاہور کے 50سالہ نکاسی آپ پروگرام کو بدلنے کے لیے ترجیحی بنیادوں پر فنڈ جاری کرے تاکہ بارشیوں سے کم سے کم نقصان ہو۔