: تازہ ترین

تازہ ترین ویڈیو

پی ایس ایل کی کامیابی پوری قوم کی کامیابی ہے،ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور


ispr news March 17, 2019 | 10:08 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ پی ایس ایل کی کامیابی پوری قوم کی کامیابی ہے، ہم سب نے مل کر اس ایونٹ کو کامیاب بنایا ہے۔ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور پاکستان سپر لیگ کا فائنل میچ دیکھنے کے لیے نیشنل اسٹیڈیم میں موجود ہیں ۔اس سے قبل ترجمان پاک فوج نے ایک ٹوئٹ میں پی ایس ایل 4 کا فائنل کھیلنے والی دونوں ٹیموں پشاور زلمی اور کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا اور اس کے ساتھ ہی انہوں نے کراچی کے لئے مخصوص لفظ عروس البلاد کے ساتھ پاکستان زندہ باد بھی تحریر کیا ہے۔

شہلا رضا اور سندھ کی خواتین پارلیمانی نمائندوں کی 12سے 17 مارچ آمریکا نیو یارک میں خواتین کے کمیشن ـ63/2019 میں شرکت۔


IMG-20190317-WA0032 March 17, 2019 | 9:35 PM

سندھ کی خواتین کی عالمی فورم پرمختلف سیشنز و ایونٹس مِیں نمائندگی اور حقوق و قانون سازی کی حوالے سے تبادلہ خیالات ـپاکستان ہاؤس نیو یارک آمریکہ میں پاکستانی کی مستقل مندوب ملیحہ لودھی سے ملاقات اور عشائیہ میں وفد کے ساتھ شرکت
کراچی :( نیوزآن لائن)صوبائی وزیر ترقی نسواں سندھ سیدہ شھلا رضا سندھ کی خواتین نمائندوں ایم پی اے سعدیہ جاوید، نزھت شیریں چئیر پرسن وومین کمیشن سندھ، مختلف غیر سرکاری تنظیموں کی نمائندوں سمیت نیو یارک آمریکہ میں منعقدہ دو ہفتہ والی خواتین کمیشن کے 63 ویں کانفرنس اجلاس میں مارچ 12 سے 17 تک سندھ کے وفد کی قیادت کی۔دوران کانفرنس سیدہ شہلا رضا نے عالمی سطح پر سندھ کی قیادت کرتے ہوئے سندھ کی خواتین کی حالت، رہن سہن، موجودہ سندھ حکومت اور پیپلز پارٹی کی جانب سے خواتین کے لییمناسب قانون سازی اور مضبوط بنانے کے ساتھ ساتھ انہیں سماجی، معاشی اور سیاسی طور پر بااختیار اور خود مختیار بنانے کے ٹھوس اقدامات اور اصلاحات کے حوالے سے اپنے خطاب میں تفصیلی ذکر کرتے ہوئے انکی بنیادی ضروریات اور حقوق کے تحفظ کیلیے عملدرآمد کے بارے میں بھی آگاھی دی۔ سیدہ شہلا رضا نے کہا کہ شہی ید محترمہ بینظیر بھٹو کی واضح ویزن کے مطابق پاکستان کی خواتین کی فلاح وبہبود اور انہیں بااختیار بنانے کیلیے ٹھوس قانون سازی کے تاریخی اقدامات جن میں چھوٹی عمر کی شادی کو روکنے،خواتین کو کام کرنے کے مقام پر ہراساں ، گھریلو تشدد کے خاتمہ کی قانون سازی کی گئی۔جبکہ مزید انکے معیار زندگی کو بلند کرنے کیلیے دو مزید بلوں پر کام جاری ہے جن میں تیزاب گردی اور جہیز پر قانون سازی شامل ہیں انہون نے اس حوالے سے ڈیٹا اورخواتین کی پارلیامینٹ میں کردار و اہمیت اور انہیں درپیش چیلینجز کے بارے میں بھی بتایا۔سیدہ شھلا رضا نے سندھ کے وفد کی نمائندگی کرتے ہوئے مختلف سیشنز و ایونٹس میں پیپلز پارٹی و حکومت سندھ کی نمائندگی وشرکت کے ساتھ تقاریب میں اظھار خیال کرتے ہوئے کہا کہ چئیر مین بلاول بھٹو زرداری کی واضح ہدایات کی روشنی میں جو خواتین کے حقوق کو انسانی حقوق اور انسانی حقوق ہی خواتین کے حقوق سمجھتے ہیں کے فلسفے کو سراھتے ہوئے کہا کہ کسی بھی معاشری کی خوشحالی خواتین کی سماجی سیاسی مقام کی وجہ سے منسلک ہے۔یہ یاد رہے کہ سیدہ شھلا رضا نے سندھ کے وفد کے ساتھ پاکستان، قطر اور گمبیا کے مشترکہ سماجی تحفظ کے ذریعہ معاشرے میں خواتین اور لڑکیوں کیلیے خاندان میں صنف کی برابری اور خودمختیاری کے موضوع پر ،پاکستان ایران اورانڈونیشیا کے مشترکہ ایشیائی خواتین کی سماجی تحفظ کے نظام میں خواتین کی شرکت میں بھی نمائندگی کی۔صوبائی وزیر ترقی نسوان سندھ سیدہ شھلا رضا نے دوران کانفرنس پاکستان کی امریکہ نیو یارک میں تعنیات مستقل مندوب ملیحہ لودھی سے ملاقات بھی کی اورپاکستان ھائوس نیویارک میں انکی جانب سے پاکستانی پارلیامینٹیرین کے اعزاز مین دیئے گئے عشائیہ میں بھی شرکت کی جس میں پاکستانی کمیونٹی اور نیشنل وومین کمیشن پاکستان خاور ممتاز کے علاوہ دیگر معززین نے بھی شرکت کی۔سیدہ شھلا رضانے عشائیہ میں 63 وین کمیشن کانفرنس کے معاملات اور پاکستان میں صنف برابری کے مسائل پر بات کی۔ملیحہ لودھی نے اس کانفرنس و ملاقات کو پاکستان کیلیے ایک اہم اور مفید موقع قرار دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان کو ایسے قابل قدر پارلیمینٹیرینز ملے ہیں جو اس عالمی فورم پر پاکستان کی نمائندگی احسن طریقہ سے کررہے ہیں اور مختلف ایونٹس و سیشنز میں شرکت کی ہے۔ سیدہ شھلا رضا نے اس کانفرنس و تقاریب کو سراھتے ہوئے کہا کہ اس کانفرنس سے پاکستان کیلیے خوشگوار تعلقات کے ساتھ ساتھ دیگر ممالک کیلیے ٹقافت کے فروغ,تجارت، کاروبار اور دیگر معاملات کیلیے نئے دروازیں کہلنے اور راہیں ہموار کرنے کے مقاصد بھی حاصل ہونگے۔ انہوں نے کانفرنس کے دیگر ڈائلاگز انٹر ایکٹو سیشنز میں شرکت کرکے بیجنگ ڈیکلریشن و پلیٹفارم، صنف کی برابری کے معاملات میں پارلیامینٹیرینز کی شرکت کع یقینی بنانے، سماجی تحفظ و پبلک سروسز کی انفراسٹرکچر،انٹر پارلیامینٹری یونین، فیصلوں می خواتین کی شرکت جیسے دیگر اہم موضوعات پر شرکت کی۔ وفد نے پاکستان ترکی ایران اور انڈونیشیا کے مشترکہ ایونٹ ” مسلم خواتین۔بطور تبدیلی کی نمائندہ” میں خصوصی طور پر شرکت کی۔کمیشن کے دو ہفتہ کے سرگرمیوں میں سندھ کا وفد خواتین کی ترقی اور انکے معاملات کے حوالے سے عملدرآمد میں تاخیر، صنف کی برابری میں ڈاکیومینٹ کی تیاری اور صنف برابری میں درپیش مسائل اور اس کے باعٹ خواتین کو باالتیار و خود مختیار بنانے کے دیگر درپیش مسائل کو حل کرنے کے حوالے سے کمیشن جو عالمی سطح پر غیر سرکاری تنظیم۔کے طور پر صنف کی برابری اور خواتین کو باختیار بنانے کیلیے کام کررہی ہیاور اسکی ایک اہم شناخت یو این وومین ہے۔

ڈیرہ مراد جمالی ، نامعلوم افرادوں کادھماکا خیز مواد سے جعفر ایکسپریس ٹرین کو نشانہ بنانے کی کوشش 4 افراد جاں بحق متعدد زخمی


jafar tayar train ancident March 17, 2019 | 4:29 PM

کوئٹہ:(نیوزآن لائن)ڈیرہ مراد جمالی کے قریب نامعلوم افرادوں دھماکا خیز مواد سے راولپنڈی سے کوئٹہ جانے والی جعفر ایکسپریس ٹرین کو نشانہ بنانے کی کوشش کی جس کے نتیجے میں 4 مسافر جاں بحق جبکہ متعد دافراد زخمی ہوگئے ہیں۔تفصیلات کے مطابق ڈیرہ مراد جمالی ریلوے اسٹیشن کے قریب ربیع کینال کے مقام پر دہشتگردوں نے ریلوے ٹریک کے ساتھ باردوی مواد نصب کر رکھا تھا، دہشتگردوں نے بارودی مواد کو ریموٹ کنٹرول کی مدد سے عین اس وقت تباہ کرنے کی کوشش کی جب راولپنڈی سے کوئٹہ جانے والی ٹرین جعفر ایکسپریس وہاں سے گزر رہی تھی۔ دھماکا اس قدر شدید تھا کہ ٹرین کی 7 بوگیاں ریلوے ٹریک سے اتر کر الٹ گئیں،بوگیاں الٹنے سے ان میں سوار 15 سے زائد مسافر زخمی ہوگئے جنہیں قریبی اسپتال منتقل کردیا گیا، اسپتال حکام نے 4 مسافروں کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کردی ہے جب کہ 8 زخمی اب بھی زیر علاج ہیں۔دوسری جانب ریلوے ٹریک تباہ ہونے سے ٹرینوں کی آمدورفت معطل ہوگئی ہے۔

کرائسٹ چرچ میں حملے کے سوگ میں پاکستان کا پرچم سرنگوں رہیگا،وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی


shah-mehmood March 17, 2019 | 4:06 PM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن)وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ کرائسٹ چرچ میں حملے کے سوگ میں پاکستان کا پرچم سرنگوں رہیگا، اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ کرائسٹ چرچ واقعے پراحتجاج ریکارڈ کرایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس واقعے میں مجموعی طور پر50 افراد شہید ہوئے جن میں سے 9 پاکستانی ہیں، جبکہ ایک آئی سی یو میں ہے۔وزیرخارجہ نے کہا کہ متاثرہ خاندانوں کے ساتھ ہمارے سفیرموجود ہیں، شہید پاکستانیوں کے اہل خانہ سے رابطے میں ہیں، ہمارے وزرا شہدا کے گھرجا کرتعزیت کررہے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ نیوزی لینڈ میں جس شخص نے حملہ کیا اس کا تعلق آسٹریلیا سے ہے، دونوں مساجد میں ایک ہی شخص نے حملہ کیا، دونوں مساجد کے درمیان پانچ کلومیٹر کا فاصلہ ہے۔وزیرخارجہ نے کہا کہ حملہ آور حال ہی میں مختلف ممالک سے ہوتا ہوا واپس پہنچا تھا، اس واقعے سے پہلے اس شخص نے ایک ای میل کے ذریعے مطلع کرنے کی کوشش بھی کی کہ اس کا کیا ارادہ ہے۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ واقعے میں 4 گرفتاریاں ہوئی ہیں جبکہ نیوزی لینڈ پولیس نے ایک ہی شخص کوذمے دارٹھہرایا جس کی ویڈیوچلی۔انہوں نے کہا کہ میتوں کی حوالگی کا عمل کل سے شروع ہوجائے گا، 6 خاندان اپنے افراد کی تدفین وہیں کرائسٹ چرچ میں کرنا چاہتے ہیں جبکہ 3 خاندانوں نے کہا ہے کہ وہ اپنے پیاروں کو پاکستان میں دفن کرنا چاہتے ہیں۔

وفاق کی جانب سے صوبوں کوسرکاری نوکریوں میں نظراندازکرناناانصافی ہے، وزیر ٹرانسپورٹ اویس قادرشاہ


awais qadir shah March 17, 2019 | 3:57 PM

نیب کی جانب سے افسران کو تنگ کرکے سندھ کی دیگر صوبوں سے پرفارمنس خراب کرنے کی کوشش کی جارہی ہے، اویس قادرشاہ
کراچی:(نیوزآن لائن) سندھ حکومت نے سندھ میں ترقیاتی کاموں میں تاخیرکا ذمہ داروفاق کو قرار دیدیا، سندھ کے وزیر ٹرانسپورٹ اویس قادرشاہ نے اپنے بیان میں کہا کہ وفاقی اداروں میں نوکریوں کی بندر بانٹ پر بھی تحفظات کا اظہار کرتے ہیں، وفاق کی جانب سے صوبوں کوسرکاری نوکریوں میں نظراندازکرناناانصافی ہے، انہون نے وفاق پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ وفاق کی جانب سے سندھ صوبے کہ ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک کیا جارہا ہے،سندھ کے وفاق نے فنڈز بھی روک دیے ہیں،ضیاء لحق کے دور سے سندھ کو دیوار سے لگایا گیاہے۔اویس قادرشاہ نے کہا کہ سندھ کے افسران کو نیب کی جانب سے تنگ کیا جارہاہے،وفاق کے ساتھ ملکر کام کرنے کو سندھ حکومت تیار ہے پر وفاق اپنی حرکتوں سے باز نہیں آرہا، سندھ کے عوام نے پیپلزپارٹی کو ووٹ دیکر ایوانوں تک پہنچایا، پر خان صاحب سے برداشت نہیں ہورہا۔ انہوں نے مزید چیئرمین نیب سے اپیل کی کرتے ہوئے کہا کہ نیب افسران کو تنگ کر رہا ہے، افسران کو تنگ کرکے سندھ کی دیگر صوبوں سے پرفارمنس خراب کرنے کی کوشش کی جارہی ہے،نیب کی جانب سے سندھ کے افسران کو بلاوجہ تنگ کرنے کا نیب چیئرمین نوٹس لیں.

پاکستان کو تنہا کرنے کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی


shah mehmood qureshi March 10, 2019 | 6:22 PM

ملتان:(نیوزآن لائن) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ پاکستان کو تنہا کرنے کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔ملتان میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ آنے والے دنوں میں مزید امتحان آنے ہیں، ہمارا ایک پڑوسی افغانستان اپنی ساری قباحتیں اور مشکلات پاکستان پر ڈالتا تھا، عرصے سے وہاں جنگ جاری ہے، صورتحال یہ ہے کہ کوئی بھی بنا تحقیق پاکستان پر انگلی اٹھا دیتا ہے۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ مودی کی یہ سوچی سمجھی پالیسی ہے جو پاکستان کو تنہا کرنا چاہتا ہے، بھارت چاہتا ہے کہ پاکستان سفارتی طور پر تنہا ہو جائے، امریکا اب پاکستان کے بجائے بھارت کو اپنا اسڑیٹیجک اتحادی سمجھتاہے، بھارت نے بنگلادیش کا سہارا لے کر سارک کو یرغمال بنالیا، پاکستان کو تنہا کرنے کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان کو گرے لسٹ میں ڈالا ہوا ہے سابق حکومت کے دور میں پاکستان گرے لسٹ میں آیا، ملک دوالیہ کے قریب پہنچ گیا، کئی ادارے دوالیہ ہو چکیہیں، ان حالت سے نکلنا ہے، اس مملکت کو رہتی دنیا تک قائم رہنا ہے تاہم بہت سے اتار چڑھا آئے ہیں اور آتے جاتے رہیں گے۔

مشرف کے بخل بچے آج کل عمران نیازی کے بخل بچے بنے بیٹھے ہیں’ عاجز دھامراہ


ppp March 10, 2019 | 5:57 PM

شیخ رشید ہر حکومت میں لوگوں کے پائوں پکڑ کر مزے لینے والا کس منہ سے احتساب کی باتیں کررہا ہے’ اقبال ساند ‘مشترکہ بیان
کراچی:(نیوزآن لائن) پاکستان پیپلز پارٹی سندھ کے سیکریٹری اطلاعات عاجز دھامراہ اور ضلع شرقی کے صدر اقبال ساند نے اپنے مشترکہ بیان میںوفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید کے اخباری بیان پر ردعمل کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ پنڈی کا شیطان شیدا ٹلی شاید بھول گیا ہے کہ جمہوری حکومت ہوں یا آمریت ہر حکومت میں لوگوں کے پائوں پکڑ کر حکومت کے مزے لینے والا کس منہ سے کرپشن اور احتساب کی باتیں کررہا ہے۔ انہوںنے کہا کہ شیخ رشید کو احتساب اور کرپشن کی باتیں کرتے شرم بھی محسوس نہیںہوتی ہے یا وہ یہ کہی بیچ آئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اگر شیخ رشید سچا ،ملک وعوام کی فکر رکھنے والا شخص ہے تو وہ عوام کو بتائے کہ مشرف کے دور حکومت میں جن لوگوں نے ملک کو نقصان اورعوام کی جیبوں پر ڈاکہ مارا وہ اس وقت کہاں کس کے ساتھ کھڑے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ شیخ رشید کی مثال اس طوطے کی طرح ہے جس کو جو سبق سیکھا دیا جائے وہ صرف وہی گاتا رہتا ہے اور اپنے آقائوں کو ناراض نہ کرنے کیلئے ایک ہی لائن دھراتا رہتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ پوری قوم جان چکی ہے کہ عمران نیازی محض کھلاڑی ہے جیسے سیاسی بنانے کی تگودو جاری ہے مگر کوے پر سفید رنگ مارنے سے وہ فاختہ نہیں بن سکتا۔ انہوں نے کہا کہ مشرف ادوار کے بخل بچے آج کل پی ٹی آئی کے کپتان عمران نیازی کے بخل بچے بنے بیٹھے ہیں جس پر عمران نیازی سمیت سب نے آنکھیں بند کررکھی ہے کیونکہ وہ تحریک انصاف لانڈری میںڈرائی کلین ہوچکے ہیں۔

المصطفیٰ کے زیر اہتمام جھل مگسی گوادرمیں فری آئی کیمپ کا انعقاد


NEWS 10-3-2019 Gandawah(Jhal Magsi) March 10, 2019 | 5:40 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)المصطفیٰ ویلفیئر سوسائٹی کے زیر اہتمام جھل مگسی (گوادر)میں المصطفیٰ کے سرپرست اعلیٰ سابق وفاقی وزیرڈاکٹرحاجی محمدحنیف طیب کی سرپرستی میں دوروزہ فری آئی کیمپ کا انعقادہوا ۔جس میں 574مریضوں کا معائنہ اور122 موتیے کے آپریشن کئے گئے۔جبکہ ہیپاٹائٹس بی کے 5 مریض اورہیپاٹائٹس سی کے 02مریضوں کا بھی چیک اپ کیاگیا،فری آئی کیمپ المصطفیٰ برطانیہ کے تعاون سے لگایاگیاتھا۔ جس میں مریضوں کے لئے کھانے،ادویات،لیبارٹری ٹیسٹ لینز اور بغیر ٹانکے کے آپریشن کی سہولیات مفت فراہم کی گئیں۔کیمپ میں آنے والے مریضوں ان کے لواحقین نے مسرت کا اظہارکرتے ہوئے کہاکہ بڑھتی ہوئی مہنگائی اور غربت کی وجہ سے ہمارے لئے آنکھوں کا علاج وآپریشن کرانا ناممکن تھا، لیکن المصطفیٰ نے ہماری دہلیز پر آکر ہمیں طبی سہولت فراہم کی،جس ہم المصطفیٰ اور اس کے سرپرست اعلیٰ حاجی محمد حنیف طیب اور ان کی ٹیم کے شکرگزارہیں اورہم ادارے کی ترقی اور خدمات کرنے والوں کے لئے دعاگوبھی ہیں۔ کیمپ لگانے پرالمصطفیٰ کے سرپرست اعلیٰ سابق وفاقی وزیرڈاکٹرحاجی محمدحنیف طیب نے،المصطفیٰ برطانیہ کے چیئرمین عبد الرزاق ساجد کو ٹیلی فون کرکے شکریہ اداکیا۔

پی ایس ایل 4 کے تمام میچز کراچی میں ہونگے


psl league March 3, 2019 | 6:50 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)پاکستان سپر لیگ فور تمام میچز کراچی میں ہونگے،، سرحدوں پر کشیدگی کے پیش نظر لاہور میں میچز کی میزبانی کے فیصلے پر نظرثانی کی جا رہی تھی۔ سیکورٹی حالات کے پیشِ نظر اور ایئرپورٹ بند ہونے کی وجہ سے پروڈکشن سامان لاہور نہ پہنچ سکا جس کی وجہ سے اب لاہور میں ہونے والے تمام پی ایس ایل کے میچز کراچی میں ہوں گے۔

مسلح افواج مسلسل الرٹ اور چوکنا ہیں، ترجمان پاک فوج


ispr press conference March 3, 2019 | 6:42 PM

راولپنڈی:(نیوزآن لائن)ترجمان پاک فوج نے کہا ہے کہ پاکستان کی مسلح افواج مسلسل الرٹ اور چوکنا ہیں،پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق بھارتی فوج نے یکم اور 2 مارچ کی درمیانی شب مختلف مقامات پر فائرنگ کی، بھارت نے رات کونیزہ پیر، جندروٹ اور باغسرسیکٹر پر وقفے وقفے سے گولہ باری کی جب کہ پاک فوج نے بھارتی گولہ باری کا بھرپور جواب دیا۔آئی ایس پی آر کے مطابق آج کنٹرول لائن پر کسی حد تک سکون کا ماحول ہے، پچھلے چوبیس گھنٹے میں پاکستان کی جانب کوئی جانی نقصان نہیں ہوا جب کہ پاکستان کی مسلح افواج مسلسل الرٹ اور چوکنا ہیں۔

نظام مصطفی پارٹی کے سربراہ سابق وفاقی وزیرڈاکٹرحاجی محمدحنیف طیب کی دعوت پربھارتی جارحیت کی شدیدالفاظ میں مذمت


ullama conference March 3, 2019 | 6:16 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)نظام مصطفی پارٹی کے سربراہ سابق وفاقی وزیرڈاکٹرحاجی محمدحنیف طیب کی دعوت پربھارتی جارحیت کی شدیدالفاظ میں مذمت اور پاکستانی افواج سے بھرپورتعاون کرنے کے لئے علماء ومشائخ کنونشن،پاکستان کے تحفظ کے عنوان پر قادری مسجد (سولجربازار) منعقد ہوا۔جس میں بانی پاکستان قائداعظم محمدعلی جناح کے رفیق کاراور ممتازروحانی پیشواامیرملت پیر سیدجماعت علی شاہ کے سجادہ نشین پیرسیدمنورعلی شاہ نے بطورمہمان خصوصی شرکت کی۔ جبکہ کنونشن کی صدارت پروفیسرڈاکٹرفریدالدین قادری نے کی کنونشن میں مفتی عبدالعلیم قادری ،شبیر احمدقاضی،الحاج محمدرفیع ،محمدحسین لاکھانی، قاری محمداشرف گورمانی،مولانااکرم سعیدی،ڈاکٹرامین جہانگیری ،مفتی ذیشان رسول،پیر زادہ غلام حسین چشتی ،مولاناشاہدین اشرفی،عاشق حسین سعیدی،مفتی محمدعمران قادری ،مولاناسیف اﷲسعیدی،منیب بلوانی ایڈووکیٹ،محمدصابرایڈووکیٹ،اویس قادری سمیت ودیگرعلماء ومشائخ وکارکنان نے شرکت کی۔کنونشن سے پیرسیدمنورعلی شاہ نے اظہارخیال کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان نے ثابت کردیاکہ وہ ایک امن پسندملک ہے اور دہشت گردی کے خاتمے کے لئے اس کی قربانیاں لازوال ہیں ۔جس کی تازہ ترین مثال پاکستان پر حملہ کرنے والے گرفتاربھارتی پائلٹ کوامن کے خاطر غیرمشروط طورپرواپس کرنااور ایک پائلٹ کو زخمی حالت میں ہے اس کاعلاج کیاجارہے۔پاکستان جارحیت اور انتہاء پسندی کے قطعاًخلاف ہے اور عالمی معاہدات کی پاسداری اس کے اخلاقیات کا ایک جزہے۔لیکن اس امن پسندی کو بھارت کمزوری ہرگزنہ سمجھے۔ڈاکٹرحاجی محمد حنیف طیب نے کہاکہ بھارت،اسرائیل کاپاکستان اور اسلام مخالف گٹھ جوڑبے نقاب ہوچکاہے۔بھارت، اسرائیلی اسلحے کا سب سے بڑاخریدارہے۔اسرائیل سے سب سے زیادہ اسلحہ بھارت ہی خریدرہاہے ،جس کے شواہد پاکستان میں بھارتی دراندازی کے موقع پر مل چکے ہیں۔بھارت یہ اسلحہ پاکستان اور کشمیرکے مسلمانوں کے قتل عام کے لئے استعمال کررہاہے۔لیکن افسوس ہے کہ اوآئی سی جیسا معتبر ادارہ بھارتی وزیرخارجہ کو پاکستان پر، بانی ممبر ہونے کے باوجود،ترجیح دے رہاہے اورششماسوراج کو اجلاس میں شرکت کے لئے دعوت نامہ دے کر لاکھوں مسلمانوں کی دل آزاری کی گئی ہے۔کنونشن سے ڈاکٹرفرید الدین قادری،مفتی عبدالعلیم قادری،شبیر احمدقاضی،الحاج محمدرفیع،قاری محمداشرف گورمانی ،محمدحسین لاکھانی ،مولانااکرم سعیدی نے کہاکہ اوآئی سی،سلامتی کونسل اور دیگر ادارے اس بات کو دنیاکے سب سے بڑے دہشت گردمودی یہ کیوں نہیں پوچھتے کہ اُس نے عالمی امن کو داؤ پر کیوں لگایا ہواہے؟پاکستان سے مذاکرات کے بجائے جنگ کو ہواکیوں دے رہاہے؟بھارتی تجزیہ کا راور اینکر جلتی پرتیل کا کام کررہے ہیں اور جنگی فضا کو بھڑکانے کی بات کررہے ہیں۔علماء ومشائخ کنونشن میں تحفظ پاکستان کے حوالے اس بات کا اعادہ کیاگیا کہ پاکستان بنانے میں علماء ومشائخ کی کاوشیں ناقابل فرامو ش ہیں اور پاکستان کو دشمنوں سے بچانے کے لئے شمع رسالت کے پروانے پاک فوج سے بھرپورتعاون کرنے کو تیارہیں۔کنونش میں بھارتی جارحیت کی شدیدالفاظ میں مذمت کی گئی۔کنونشن میں متفقہ طورپرقراردادپیش کی گئی جو پریس میںبعد میں جاری کی جائے گی۔

بیرونی طاقتوں نے ہر دور میں صوفی منش کشمیری قوم کو بزورِ شمشیرزیر اور زِچ کرنا چاہا۔اعظم انقلابی


sirinagar March 3, 2019 | 6:00 PM

سر ینگر:(نیوزآن لائن)جموں کشمیر قومی محاذِ آزادی کے سینئر رُکن اعظم انقلابی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ بیرونی طاقتوں نے ہر دور میں صوفی منش کشمیری قوم کو بزورِ شمشیرزیر اور زِچ کرنا چاہا۔ مغل حکمران 1585ء میں آئے اور 166سال تک حکومت کرتے رہے۔ پھر افغانستان کے حکمران آئے اور یہاں 69 سال تک حکومت کرتے رہے۔ اس کے بعد پنجاب کے سکھ حکمران آئے اور 27سال تک حکومت کرتے رہے۔ جموں کے ڈوگرہ حکمران آئے اور وہ پورے 100 سال تک کشمیریوں کو آداب غلامی سکھاتے رہے۔ جامع مسجد سرینگر ہو یا آثار شریف حضرت بل، خانقاہِ معلیٰ سرینگر ہو یا روضۂ نور الدین ولی چرار شریف ۔ غرض یہ کہ یہ وہ مقامات ہیں جہاں کشمیر کے صوفی منش مسلمان عبادت وریاضت کے ذریعے اللہ رَ ب ُ العزت کے ساتھ عارفانہ تعلق پیدا کرنے کی کوشش کرتے رہے ہیں اور عقیدہ توحید اور آخرت کے ساتھ درونِ دل سرور اور نور کی کیفیت پیدا کرنے کے عمل میں منہمک ہوتے ہیں۔ کشمیر کی دعوتی صوفی تحریک میں ہمارے علمائے دین اور صلحافی الحقیقت ہمارے محسنین ہیں۔ ہم اپنے اولیا کرام، علمائے دین اور راہ طریقت کے فدائین شوق کے ساتھ قلبی تعلق پیدا کرنے کو مطلوب باطنی عمل سمجھتے ہیں۔پچھلے دنوں اخبارات میں یہ خبر شائع ہوئی کہ میرواعظ عمر فاروق، اشرف صحرائی، شبیر احمد شاہ، ےٰسین ملک اور کچھ دیگر رہنماؤں کے گھروں میں این آئی والے گھُسے اور وہاں کئی گھنٹوں تک سامان زینت کے ساتھ کھیلتے رہے۔ ان بزرگوں اور دوستوں کے گھروں کی زینت یعنی کتابیں اگر محفوظ نہیں تو نییٔ نسل کے نوجوان کیا سوچیں گے؟ اخبارات میں ہی یہ خبر بھی شائع ہوئی ہے کہ جماعت اسلامی کے ایک سو کارکُن گرفتار ہوئے ہیں۔ ان میں امیر جماعت ڈاکٹر عبدالحمید فیاض بھی ہیں۔ اور اب تازہ خبر یہ ہے بھارتی حکمرانوں نے جماعت اسلامی کو غیر قانی تنظیم قرار دے کر اس پر پابندی عائد کی ہے۔ دوتین سال پہلے سابق امیر جماعت جناب غلام محمد بٹ صاحب نے انتہائی زیرک اور ذہین رہنما کی حیثیت سے ایک پریس کانفرنس میں اعلان کیا کہ ہمارا مِلِٹنسی کے ساتھ کوئی تعلق نہیں، اس سے کچھ بھی لینا دینا نہیں ہے، ہم دعوتی سرگرمیوں میں مصروف رہنے میں ہی ملک و ملت کی نجات کا راز مضمر پاتے ہیں۔ یہ بھی خبر ہے کہ مصلاّ پر ذکر و فکر میں مصروف کچھ جمعےّت اہلحدیث بزرگ بھی زینت زندان بنے ہوئے ہیں۔ ان حالات کے پیش نظر آزاد کشمیر کے صدر سردار مسعود خان صاحب فوری طور ایسے با اختیار فکری اور علمی ادارہ کے قیام کی کوششوں میں مصروف رہیں جس کی مجلس شوریٰ میں آرپار کے باصلاحیت دوست اور بزرگ موجود ہوں۔ یہ ادارہ دن رات انٹرنیٹ اور کمپؤٹر کی طرح کام کرے۔ مزاحمتی اتحادِ ثلاثہ سے وابستہ بزرگ اور دوست اس ادارہ کی رونق بنیں۔بھارت کے حکمران انتخابی سیاست میں کشمیریوں کو قربانی کا بکرا بنارہے ہیں،بڑی طاقتوں کے ذمہ دار حکمران غیر معمولی سفارتی مہم کے ذریعے بھارت پاکستان مذاکرات کا راستہ استوار کریں تاکہ مسئلہ کشمیر کا پرُ امن اور پائیدار حل تلاش کرنے کا کام آسان ہوجائے۔ ہم کشمیری اصرار کر رہے ہیں کہ سرینگر سے مظفر آباد تک پھیلی ہوئی وادی کشمیر سے بھارت اور پاکستان کی فوجوں کا انخلا ہوجائے تاکہ متحدہ وادی کے باسی اپنی پارلیمنٹ میں کشمیر کے سیاسی مستقبل کا تعین کریں۔آپ جنگ بندی لائن کے آرپار کے دیڑھ کروڑ کشمیری باسیوں کو غیر یقینی صورتحال اور عدم تحفظ کے بھنور سے باہر نکالیں گے تو بر صغیر کے تقریباً ڈیڑھ ارب لوگ اطمینان اور سُکھ کا سانس لیں گے۔ کشمیر ایک انسانی مسئلہ ہے۔ کشمیر کو اپنی انتخابی سیاست کے لیے میدان جنگ نہ بنائیں۔ قانون ُمکافات سے خوف محسوس کریں ۔ ظلم و عدوان اور جبر واستبداد کی روش سے قہر الہٰی کو دعوت دینا دانشمندی نہیں۔ رعونت، غرور، تکبر اور تمرّد کی اداؤں سے تائب ہو کر انسان دوستی اور عدل و انصاف کا راستہ اختیار کریں۔

بھارت پاکستان کو دبا میں لانے کا خیال ذہن سے نکال دے، بھارتی رویے کے خلاف پاکستانی قوم یکجا ہے۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی


shah mehmood qureshi February 24, 2019 | 7:45 PM

اسلام آباد: (نیوزآن لائن) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ پاکستان امن کا خواہاں ہے اور پاکستان کشیدگی ختم کرنے کے لئے اقدامات کررہا ہے، بھارت پاکستان کو دبا میں لانے کا خیال ذہن سے نکال دے، بھارتی رویے کے خلاف پاکستانی قوم یکجا ہے۔سلام آباد میں نیوز کانفرنس کے دوران شاہ محمود قریشی نے کہا کہ کشمیری خوف میں مبتلا ہیں، لوگ کاروبار بند کرکے گھروں میں بیٹھے ہوئے ہیں، نئی دہلی میں بیقصورکشمیری نوجوان پر تشدد کیا گیا، حریت قیادت کو کشمیر سے باہر دھکیلا جارہا ہے، مزید10 ہزار بھارتی فوجی مقبوضہ کشمیر بھجوائے جارہے ہیں، جے پور جیل میں پاکستانی قیدی کو شہید کردیا گیا۔ کشمیریوں پر حملے کیے گئے اور بھارتی حکومت خاموش تماشائی بنی رہی, آخر کار بھارتی سپریم کورٹ کو کشمیریوں کی جان و مال کی حفاظت کے لیے بیان دینا پڑا۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہبھارت پاکستان کو دبا میں لانے کا خیال ذہن سے نکال دے، بھارتی رویے کے خلاف پاکستانی قوم یکجا ہے۔

کرپشن کے ہوتے معاملات بہتری کی طرف نہیں جاسکتے،صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی


arif alvi February 24, 2019 | 5:49 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا کہنا ہے کہ کرپشن کے ہوتے معاملات بہتری کی طرف نہیں جاسکتے جب کہ پاکستان معاشی ترقی کے راستے پر گامزن ہوچکا ہے۔کراچی میں ادبی میلے کی تقریب سے خطاب کے دوران صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا کہنا تھا کہ نفرتیں پھیلانا سندھ کی ثقافت کیخلاف ہے لہذا سندھ کی آبادی کو جوڑنا میرا فرض ہے، فیڈریشن کا آئینی فرض بنتا ہے کہ سب کو متحد رکھے۔صدر مملکت عارف علوی نے کہا کہ لاپتہ افراد کے معاملے پر قانون کے مطابق کارروائی ہونی چاہیے۔

ڈیرہ مراد جمالی کے علاقے مزدور چوک میں دھما کہ،ایک شخص جاں بحق متعدد زخمی


dera murad jamali news February 24, 2019 | 5:35 PM

ڈیرہ مراد جمالی:(نیوزآن لائن) ڈیرہ مراد جمالی کے علاقے مزدور چوک میں دھماکہ ہوا ،دھماکے کے نتیجے میں ایک شخص جاں بحق جبکہ متعد د افراد زخمی ہوگئے ہیں۔تفصیلات کے مطابق ڈیرہ مراد جمالی کے علاقے مزدور چوک میں دھماکے سے 15 افراد زخمی ہو گئے۔ دھماکے کی اطلاع ملتے ہی قانون نافذ کرنے والے ادارے اور ریسکیو ٹیمیں حرکت میں آئیں، جنہوں نے موقع پر پہنچ کر زخمیوں کو ایمبیولینسوں کے ذریعے ہسپتال منتقل کیا جہاں انھیں طبی امداد دی جا رہی ہے۔ دھماکے میں ایک زخمی شخص زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہو گیا۔پولیس حکام کے مطاابق دھماکا موٹر سائیکل میں نصب بم پھٹنے سے ہوا۔ پولیس نے دھماکے کے بعد قریبی مارکیٹ بند کرا دی جبکہ زخمیوں کو سول ہسپتال منتقل کیا گیا ہے۔

مہاجر ملک کے دفاع کیلئے افواج کے ساتھ ہیں: ڈاکٹر سلیم حیدر


dr saleem haider MIT February 24, 2019 | 5:21 PM

جنگی جنون میں مبتلا بھارتی حکمرانوں کو حملے کی صورت میں پسپائی اور رسوائی ملے گی
مشرق پاکستان میں بھی لاکھوں محصورین نے ملک کے دفاع کیلئے قربانیاں دی تھیں
کراچی:(نیوزآن لائن )مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہا ہے کہ پاکستان کے عوام اور مسلح افواج نہ پہلے بھارت کی گیدڑ بھپکیوں سے ڈرے اور نہ اب ڈریں گے۔ سندھ میں رہنے والے 2کروڑ مہاجر ملک کے دفاع کیلئے ہر قربانی دینے کیلئے تیار ہیں۔ انہوں نے کہاکہ جنگی جنون میں مبتلا بھارتی افواج ماضی میں بھی پاکستان پر حملوں کے نتیجے میں رسوا اور پسپا ہوئی ہے اور اب بھی اگر جنگ مسلط کی گئی تو نتیجہ اس سے مختلف نہیں ہوگا۔ پاکستان کے عوام اور خاص طورپر مہاجر اپنے خون کا ایک ایک قطرہ بھی اس وطن پر نچھاور کرکے اس کا دفاع کریں گے ۔ انہوں نے کہاکہ مہاجر جو خالق پاکستان ہیں وہ پہلے بھی اپنے آباؤ اجداد کی جائیدادیں اور سامان چھوڑ کر پاکستان آئے تھے اور پھر انہوں نے بھی پاکستان کو بچانے کیلئے بے پناہ قربانیاں دیں اب بھی ضرورت پڑی تو کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہاکہ تاریخ گواہ ہے کہ مشرق پاکستان نے ملک کے دفاع کیلئے لاکھوں محصورین نے جانوں کے نذرانے بھی پیش کئے اور پاک فوج کے شانہ بشانہ لڑتے ہوئے قربانیاں بھی دیں، آج بھی بنگلادیش میں لاکھوں محصورین مشرق پاکستان موجود ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ بھارت نے نریندر مودی کی شکست یقینی ہے جس کو دیکھتے ہوئے وہ پاکستان پر جارحیت اور جنگی جنون مسلط کرنا چاہتے ہیں لیکن پاکستان کے عوام اپنے بہادر اور فرض شناس افواج کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔

سعودی ولی عہد محمد بن سلمان دو روزہ دورے پر آج اسلام آباد آمد تیاریا ں مکمل


saudi prience visit pakistan February 17, 2019 | 6:13 PM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن) سعودی ولی عہد محمد بن سلمان دو روزہ دورے پر آج اسلام آباد تشریف لا رہے ہیں۔ شاہی ڈاکٹرز، سیکورٹی اور دیگر عملے پر مشتمل 221 افراد پہلے ہی 7 طیاروں پر پاکستان پہنچ چکے ہیں۔جڑواں شہروں کی شاہراہیں خیرمقدمی بینرز، سعودی اور پاکستانی پرچموں سے سجا دی گئیں۔ وفاقی دارالحکومت کی دلہن کی طرح آرائش کی گئی ہے.، شاہی وفد میں شامل معزز مہمانان گرامی کی آمد کا سلسلہ جاری ہے۔ شہزادہ محمد بن سلمان کی تھری لئیرز باکس سیکورٹی کی مشترکہ کمان پاک فوج اور شاہی گارڈز کے سپرد کر دی گئی۔وزیراعظم عمران خان سعودی ولی عہد کا ایئرپورٹ پر استقبال کریں گے۔ محمد بن سلمان کو وزیراعظم ہاس میں گارڈ آف آنرپیش کیا جائے گا۔ اس کے بعد وزیراعظم عمران خان اورسعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی باضابطہ ملاقات ہوگی، وفود کی سطح پر مذاکرات کے بعد معاہدوں اور مفاہمتی یادداشتوں پر دستخط کئے جائیں گے۔ عمران خان سعودی ولی عہد کو وزیراعظم ہاس میں ہی عشائیہ دیں گے۔
سعودی ولی عہد کی آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ اور چیئرمین سینیٹ سے ملاقاتیں وزیراعظم ہاس میں ہی ہوں گی۔ صدرمملکت عارف علوی 18 فروری کو سعودی ولی عہد کے اعزاز میں ظہرانہ دیں گے۔

پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان خصوصی تعلقات ہیں،وزیراعظم عمران خان


imrankhan-taliban_2-7-2014_136990_l February 17, 2019 | 6:04 PM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان خصوصی تعلقات ہیں، سعودی عرب نے مشکل کی ہر گھڑی میں پاکستان کی مدد کی۔ معاشی بحران سے نمٹنے کیلئے چین، سعودی عرب اوریواے ای نے تعاون کیا۔وزیراعظم نے عرب ٹی وی کو انٹرویو میں کہا ہے کہ سعودی عرب کیساتھ دو طرفہ تعلقات چاہتے ہیں، سعودی عرب کے پاس سرمایہ اور تیل کے ذخائر ہیں اور پاکستان کے پاس ہنرمند افرادی قوت اور ٹیکنالوجی ہے، معاشی اصلاحات سے مسائل پر جلد قابو پا لیں گے۔عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ سعودی عرب، یمن اور ایران کے درمیان ثالثی کا کردار ادا کرینگے، معاشی بحران سے نمٹنے کیلئے چین، سعودی عرب اور یواے ای نے تعاون کیا۔ پاکستان اور سعودی عرب کے چیلنجز مختلف ہیں، تاہم محمد بن سلمان اور میرا کرپشن سے متعلق ایک جیسا موقف ہے۔

حکومت کا بلاجواز سوشل میڈیا پر پابندی لگانے اور آزادی رائے پر سختیاں ان کی بھوکہلاہٹ اور نااہلی کا کھلا ثبوت ہے۔ پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹرین


PPPsaysitlost23activiststorecentviolence_567-349x238 February 17, 2019 | 5:49 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹرین کی سیکریٹری اطلاعات و ممبر قومی اسمبلی نفیسہ شاہ ، کراچی ڈویژن کے ڈپٹی سیکریٹری اطلاعات شکیل چوہدری اور ضلع شرقی کے سیکریٹری اطلاعات وقاص شوکت نے اپنے مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ پی ٹی آئی حکومت کا بلاجواز سوشل میڈیا پر پابندی لگانے اور آزادی رائے پر سختیاں ان کی بھوکہلاہٹ اور نااہلی کا کھلا ثبوت ہے۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کے خود ساختہ لیڈر شاید وہ وقت بھول گئے جب وہ کھلے سانڈ کی طرح پاکستان کی سڑکوں پر جس کی چاہئے تذلیل اور جس پر چاہئے الزام تراشی کرتے دیکھائی دیتے تھے اور آج ان کے سروں پر یہ وقت آن پہنچا ہے تو یہ اپنی آمرانہ طرز سیاست سے ڈنڈے کے زور پر عوام کو خاموش کرنے کی جستجو میں لگے ہوئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اگر آزادی رائے پر کوئی قانون زیر تکمیل ہے تو پی ٹی آئی اس بات کو ذہن نشین کر لیں کہ اداروں اور عوام کے ووٹوں سے منتخب کردہ حکومتوں کے بارے میں جتنا کچھ پی ٹی آئی کے رہنمائوں نے غلاظت اگلی ہے ان سب کو بھی اس قانون پر عملدرآمد کرنا ہوگا ۔پی پی پی رہنمائوں نے کہا کہ الیکشن سے قبل پی ٹی آئی نے جس سیاست کو پروان چڑھایا ہے آج وہ خود اس سے خوفزدہ ہے اور عوام کو نہ بولنے نہ سننے اورنہ دیکھنے کے مشورہ پر عمل پیرا ہے۔پاکستان کی عوام جان چکی ہے کہ کھلاڑی اور سیاست دان میں زمین آسمان کا فرق ہوتا ہے اور کس طرح ایک ناتجربہ کار حکومت کا اقتدار پر قابض ہونے کے بعد ملک کی حفاظت وخوشحالی اور عوام کی جان کو دائوں پر لگایا گیا ہے۔

ترقی کی بنیاد صرف بہتر طرز حکمرانی ہے،وزیراعظم عمران خان


imran khan press conference February 10, 2019 | 9:19 PM

دبئی:(نیوزآن لائن) وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ ترقی کی بنیاد صرف بہتر طرز حکمرانی ہے۔دبئی میں ورلڈ گورنمنٹ سمٹ سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ خوشی ہے کہ اسلامی دنیا میں بھی اس طرح کی کانفرنس ہورہی ہے، 60 کی دہائی میں پاکستان تیزی سے ترقی کررہا تھا اور یو اے ای کی ایئرلائن کو پی آئی اے نے معاونت فراہم کی لیکن بدقسمتی سے پاکستان ترقی کی رفتار برقرار نہیں رکھ سکا۔عمران خان نے کہا کہ جب لوگ اتنے اچھے ہیں توٹیکس کیوں اد انہیں کرتے کیوں کہ ماضی میں ٹیکس حکمرانوں کی عیاشیوں پرخرچ ہوتے رہے اور اسی لیے لوگ ماضی کی حکومتوں پراعتماد نہیں کرتے تھے اور ٹیکس نہیں دیتے تھے ، کرپشن سے ٹیکس کا پیسا چوری ہوتا ہے اس لیے اصلاحات مشکل ہیں مگر ضروری ہیں،وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ترقی کی بنیاد صرف بہتر طرز حکمرانی ہے۔

سینیٹر سراج الحق : منصورہ میں وفود سے گفتگو


sirajul haq February 10, 2019 | 8:26 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ آئین و قانون کی بالادستی ہو تی تو این آر او اور ڈیل کی باتیں نہ ہوتیں ۔سپریم کورٹ کے فیصلے میں این آر او کو کالاقانون قرار دیا گیاہے ۔ صدر اور وزیراعظم کو بھی یہ اختیار نہیں کہ وہ قومی دولت لوٹنے اور اختیارات کا ناجائز فائدہ اٹھا کر دولت اکٹھی کرنے والوں کو چھوڑ دیں ۔ مشرف نے اپنا تسلط قائم رکھنے کے لیے قاتلوں ، بھتہ خوروں اور قومی لٹیروں کو چھوڑ کر آئین کا مذاق اڑایا ۔ آئین و قانون سے کھلواڑ کرنے کی اب کسی کو اجازت نہیں دی جائے گی ۔ حکومت سوئی گیس کی اوور بلنگ کر کے عوام کی جیبوں پر ڈاکہ ڈالنے والوں کا محاسبہ کرے اور آئندہ بل میں لوگوں کو انکے پیسے واپس کیے جائیں ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے منصورہ میں مختلف وفود سے ملاقات کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔
سینیٹر سر اج الحق نے کہاکہ سپریم کورٹ گزشتہ این آر او سے فائدہ اٹھانے اور بہتی گنگا میں ہاتھ دھونے والوں کو بھی طلب کرے ۔ کسی حکومت کو یہ حق نہیں کہ وہ قومی امانتوں میں خیانت کرنے اوراغوا اور قتل کرنے والوں کو معاف کردے ۔ انہوںنے کہاکہ اسٹیٹ بنک نے حکومت کی طرف سے مقامی ذرائع سے قرضہ لینے کے جو اعدادو شمار بتائے ہیں ، وہ تشویشناک ہیں ۔ اس سے پتہ چلتاہے کہ حکومت کا سارا دارومدار اور کاروبار محض قرضوں کا حصول ہے ۔ حکمران خود کو قرضہ لینے کے سپیشلسٹ سمجھتے ہیں حالانکہ یہ کوئی خوبی نہیں ، بلکہ قومی عزت و وقار کی نیلامی ہے ۔ حکومت نے ایسے ماہرین معاشیات جمع کر لیے ہیں جو معاشی اصلاحات کر کے قوم کو اپنے پائوں پر کھڑا کرنے کی بجائے بھکاری بنانے پر تلے ہوئے ہیں اور اس کو وہ اپنی خوبی سمجھتے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ کامیاب حکومت وہی ہوتی ہے جو لوگوں کو مچھلی دینے کی بجائے مچھلی پکڑنے کا طریقہ بتا دیتی ہے ۔
سینیٹر سرا ج الحق نے کہاکہ حکمران اگر واقعی ملک و قوم کی کوئی خدمت کرنا چاہتے ہیں تو انہیں قرضوں اور خیرات کی بجائے معاشی اصلاحات ، ڈاکومنٹیشن اور وسائل کی منصفانہ تقسیم پر توجہ مرکوز کرنا ہوگی ۔ کرپشن کے ناسور کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کے لیے بے لاگ اور کڑا احتساب کرناہوگا۔ حکومت کو ایسی قانون سازی کرنا ہوگی کہ کسی کرپٹ کو بچ نکلنے کا موقع نہ مل سکے ۔ انہوں نے کہاکہ جب تک آئین و قانون افراد اور شخصیات کے گرد گھومتا رہے گا ، بہتری نہیں آئے گی ۔ تبدیلی اس وقت آئے گی جب قانون سازی ریاست کے لیے ہوگی ۔

حکومت حج اخراجات کم کر کے عوام کے لیے حج کا سفر آسان بنائے حافظ نعیم الرحمن


hafiz naeem rehman February 10, 2019 | 8:22 PM

اگر حکومت نے یہ کام نہیں کرنا تو مذہبی امور کی وزارت کیوں قائم کی گئی ہے اور اس پر اخراجات کیوں برداشت کیے جارہے ہیں؟
کراچی: (نیوزآن لائن)جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمن نے حکومت کی جانب سے رواں سال حج پالیسی میں سبسیڈی ختم کرنے اور حج اخراجات میں اضافہ پر شدید مذمت کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ مدینہ جیسی ریاست بنانے کے دعویداروں نے فریضہ حج کے خواہش مند افراد کے لیے مشکل بنادیا ہے ، عوام حج کے لیے پائی پائی جمع کرتے ہیں لیکن مہنگائی کی وجہ سے حج کی ادائیگی نا ممکن بن جاتی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ افسوس کی بات ہے کہ ایک جانب حکومتی خسارے کو جواز بنا کرحج پالیسی میں سبسیڈی ختم کر کے حج اخراجات میں اضافہ کردیا گیا لیکن دوسری جانب دیگر شعبوں کو سبسیڈی دی جارہی ہے ، اگر حج پر سبسیڈی دینا گوارا نہیں تو فرٹیلائز ر، ٹیکسٹائل انڈسٹری کے مالکان کو سرچارج کی مد میں 125ارب روپے معاف کیوں کیے گئے ؟ حج پر سبسیڈی دی بھی جاتی تو 9ارب روپے کی رقم بنتی ہے ، حکومت کو 9ارب روپے کی ریلیف دینا ممکن نہیں تو ان صنعتی اداروں کے ایک سو پچیس ارب روپے کیسے معاف کردیے گئے ؟۔انہوں نے کہاکہ پڑوسی ملک بھارت سمیت کئی ممالک میں حج کے سفر اور عازمین حج کی سہولیات کے لیے حکومت رقم مختص کرتی ہے لیکن پاکستان کی حکومت یہ کرنے پر تیار نہیں ۔انہوں نے کہاکہ حج ایک عبادت ہے اور آئین پاکستان کی رو سے حکومت پابندہے کہ لوگوں کو اس مقدس فریضے کی ادائیگی کے لیے سہولیات فراہم کرے، اگر حکومت نے یہ کام نہیں کرنا تو مذہبی امور کی وزارت کیوں قائم کی گئی ہے اور اس پر اخراجات کیوں اٹھائے جارہے ہیں؟۔انہوںنے کہاکہ ایک حج کے لیے لوگ ساری عمر اخراجات میں سے بچت کرتے رہتے ہیں ، بے شمار لوگوں نے اس بار بھی اپنی خواہشات پس پشت ڈال کر حج کے لیے وسائل جمع کیے ، اب اچانک انہیں بتایا جارہا ہے کہ نئی حج پالیسی میں سبسیڈی ختم کر کے حج اخراجات میں اضافہ کردیا گیا ہے۔اگر حکومت کو وسائل کی قلت کا مسئلہ درپیش ہے تووہ حج اخراجات میں رعایت ختم کرنے کے بجائے اپنے تعیشات پر آنے والے خرچ کم کرے۔انہوں نے کہاکہ حج اخراجات میں اضافہ کسی صورت قبول نہیں ، حکومت فی الفور نئی پالیسی مرتب کرے اور عوام کے لیے حج کا سفر آسان بنائے۔

محکمہ اطلا عا ت کے ڈائر یکٹو ریٹ آف پر یس انفا ر میشن کو ضلع انتظا میہ کی جانب سے فراہم کر دہ تفصیلا ت


tharparkar February 3, 2019 | 6:33 PM

کراچی :( نیوزآن لائن) محکمہ اطلا عا ت کے ڈائر یکٹو ریٹ آف پر یس انفا ر میشن کو ضلع انتظا میہ کی جانب سے فراہم کر دہ تفصیلا ت کے مطا بق تھر کی صو ر تحا ل سے نمٹنے کے لئے انتظا میہ اپنی امدا دی سر گر میا ں انتہا ئی جو ش و خروش کے ساتھ جا ر ی رکھے ہو ئے ہے تفصیلا ت کے مطا بق رو زا نہ کی بنیا د پر امدا د ی سرگرمیوں کے حوالہ سے وزیر اعلیٰ سندھ کو دی جا نے رپو ر ٹ میں بتا یا گیا ہے کہ مٹھی اور دیگر تعلقہ اسپتالوں میں پانچ سال اور اس سے کم عمر کے 32 1بچوں کو علاج کے لئے لایا گیا, 1 بیمار بچی مختلف بیما ریو ں کے با عث انتقا ل کر گئی جبکہ47 بچوں کو صحتیا بی کے بعد ہسپتال سے فارغ کردیا گیا اور88 بچے ضلع اور تعلقہ کے مختلف اسپتالوں میںزیرعلاج ہیں۔وزیر اعلیٰ سندھ کو دی جا نے والی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ محکمہ صحت کے مختلف اسپتالوں میں 468 بچوں کا او پی ڈی میں علا ج کیا گیا ہے۔ رپو ر ٹ میں بتا یا گیا ہے کہ پی پی ایچ آئی کی زیر نگرا نی 31بنیا دی صحت کے مر اکز اور 18گورنمنٹ ڈسپنسریو ں کی او پی ڈی میں 374بچو ں کا علا ج کیا گیا۔ میڈیکل سپریٹنڈنٹ سول ہسپتال مٹھی نے بتایا ہے کہ سول ہسپتال مٹھی میںیونین کونسل روشن آباد تعلقہ جھڈو ضلع میرپورخاص سے تعلق رکھنے والے محمد علی لنڈ کی 3 ماہ کی بچی آسیہ جس کا وزن 4:5 کلو گرام تھا اور اس کو دست ، الٹی ، بخار، نزلہ سینے میں تکلیف اور نمونیا کی بیماریوں کے سبب اس کی وفات ہوگئی ۔
رپورٹ میں تھر کے متاثرہ خاندانوں میں مفت گندم کی تقسیم کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ5107 خاندانوں میں تیسرے مرحلے کے تحت مفت گندم فراہم کی گئی۔34 خاندانوں کی دوسرے مرحلے کی 50کلو گرام گندم فراہم کی گئی۔ جبکہ 11 خاندانوں میں جو کہ پہلے مرحلے میں گندم حاصل نہیں کر سکے تھے ان کومفت گندم فراہم کی گئی۔ پہلے مرحلے میں 247533 خاندانوں ، دوسرے مرحلے میں 252780 خاندانوں اور تیسرے مرحلے میں 171239 خاندانوں میں مفت گندم تقسیم کی گئی ہے۔
رپورٹ میں ڈپٹی کمشنر تھرپارکر نے بتایا کہ حا ملہ اور بچوں کو دودھ پلانے والی خواتین میں راشن بیگ کی تقسیم کے تیسرے مرحلے جو کہ 26 جنوری 2019 سے شروع کیا گیا ہے روزانی کی بنیادوں پر 4254 حا ملہ اور بچوں کو دودھ پلانے والی خواتین میں راشن بیگ کی تقسیم کئے گئے ہیں، جبکہ ابھی تک 15778 راشن بیگ تقسیم کئے گئے ہیں۔ نہیں کئے تھے ان میں بھی راشن بیگ تقسیم کئے گئے۔اس طرح پہلے مرحلے میں 36636 اور دوسرے مرحلے میں 66691 حا ملہ اور بچوں کو دودھ پلانے والی خواتین میںراشن بیگ تقسیم کئے گئے۔
رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ محکمہ لائیو اسٹاک تھرپارکر کے ڈپٹی ڈائریکٹر کی سربراہی میں مختلف تعلقہ کے 5 مختلفگاؤں میں وٹنری کیمپ لگائے گئے ہیں ،3 کیمپ تعلقہ اسلام کوٹ ، تعلقہ مٹھی اور چھاچھرو میں ایک ایک وٹنری کیمپ لگا ئے گئے ہیں۔ جس میں 81 جانوروں کا علاج 206 دست کی بیماریوں میں مبتلا جانوروں کا علاج اور2269جانوروں کی ویکسینیشن کی گئی ہے۔ مجموعی طو ر پر محکمہ لائیو اسٹاک نے اس وقت تک ضلع تھرپارکر کے 30012 جانوروں کا علاج ، 205386 دست کی بیماری میں مبتلا جانوروں کا علاج کیا گیا ۔جبکہ 1877216 جانوروں کی ویکسینیشن کی گئی ہے۔ رپو ر ٹ کے مطا بق تعلقہ اسلا م کوٹ کی یو نین کو نسل گریانچو کے مختلف گا ئو ں جن میں گوران ، ریدھاری ، ویری بگھت، بنٹارو ، ھریمار اور برواری کے 457 جانوروں کے مالکان میں چارہ تقسیم کیا گیا جس میں 50 کلو گرام وانڈھا اور 25 کلو گرام چانول شامل ہیں۔مجموعی طور پر اس وقت تک 6626 جانوروں کے مالکان میں چارہ تقسیم کیا گیا ہے۔رپو ر ٹ میں مزید بتایا گیا کہ تھرپارکر کے خشک سالی سے متاثر ہ 31 یونین کونسلز کی تھر فاؤنڈیشن کی جانب سے جانوروں کے چارہ کی تقسیم میں کے سروے کا کام جلد شروع کیا جائے گا۔

قومی ٹیم کی قیادت کیلئے پر امید ہوں، سرفراز احمد


sarfaraz ahmed press conference in karachi February 3, 2019 | 3:44 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)پاکستانی وکٹ کیپر اور بلے باز سرفراز احمد نے کہا ہے کہ قومی ٹیم کی قیادت کیلئے پر امید ہوں، پی سی بی نے کیس اچھے طریقے سے ہینڈل کیا جس پر انتظامیہ کا شکرگزار ہوں۔ کراچی میں پریس کانفرنس کے دوران سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ وکٹ کے پیچھے بولتے رہنا میری عادت ہے، اگر کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی نہیں کروں گا تو میچ پر گرفت کمزور پڑ جائے گی۔ میچ کے دوران پیچیدہ صورتحال کے باعث غلطی ہوئی۔ جب معافی مانگنے کیلئے گیا تو جنوبی افریقہ کے کھلاڑی نیکہا کہ آپ کو معاف کردوں گا مگر ماں کے بارے میں غلط جملے بولے جس پر انھیں سمجھا دیا گیا اور ماں کی دعا کے حوالے سے پس منظر بتایا تو معاملہ حل ہو گیا۔
کرکٹ پلئیر کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کا شکرگزار ہوں جنہوں نے بھرپور سپورٹ کیا اور معاملہ سلجھانے میں مدد دی، عوام کی سپورٹ بھی ہمیشہ ہمارے ساتھ رہی ہے۔ کوشش کروں گا ماضی میں جوچیزیں ہوئیں وہ دوبارہ نہ ہوں، قومی ٹیم کی قیادت کے حوالے سے پر امید ہوں۔

وزیراعظم عمران خان کا وزیر اعلی پنجاب سے ملاقات، سانحہ ساہیوال پر پیش رفت سے آگاہ کیا


imran khan meet usman brother February 3, 2019 | 3:26 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)وزیراعظم عمران خان ایک روزہ دورے پر لاہور پہنچے جہاں انہوں نے وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار سے ملاقات کی جس کے دوران صوبے میں امن و امان کی صورتحال پر تفصیلی بات چیت کی گئی، اس موقع پر وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار نے وزیراعظم عمران خان کو سانحہ ساہیوال پر پیش رفت سے آگاہ کیا اور پولیس اصلاحات کے بارے میں بریفنگ دی۔

خصوصی افراد اپنے سرٹیفکیٹ حاصل کرلیں:سید قاسم نوید قمر


sindh information  logo February 3, 2019 | 3:15 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) وزیر اعلیٰ سندھ کے معاون خصوصی برائے خصوصی افراد سید قاسم نوید قمر نے صوبے کہ خصوصی افراد کو ہدایت دی ہے کہ وہ اپنے سرٹیفکیٹ صوبائی کونسل برائے خصوصی افراد کی بحالی کے دفتر واقع بلاک 20 فیڈرل بی ایریا ملحقہ ابراہیم علی بھائی گرلز اسکول نزد سمن آباد پولیس اسٹیشن انچولی سے حاصل کرلیں۔ یہ بات انہوں نے اپنے دفتر میں منعقد ہونے والے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس میں ڈائریکٹر پی سی آر ڈی پی اور دیگر افسران نے بھی شرکت کی۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ خصوصی افراد اپنے متعلقہ بحالی مرکز میں صوبے بھر میں 27 اضلاع میں اپنی درخواست جمع کروا سکتے ہیں جہاں انہیں مقامی اسپتال میں میڈیکل بورڈ کی سہولت فراہم کی جائیں گی اور انہیں خصوصی سرٹیفکیٹ جاری کئے جائیں گے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے معاون خصوصی وزیر اعلیٰ سندھ برائے خصوصی افراد سید قاسم نوید قمر نے افسران کو ہدایت دی کہ خصوصی افراد کی اس سلسلے میں بھرپور معاونت کریں اور نہ صرف ان کی شکایات کے اندراج میں بھی ان کی بھرپور راہنمائی کریں بلکہ ان شکایات کے ازالے کے لئے بھی مکمل تعاون کریں۔ علاوہ ازیں انہوں نے تمام نجی اور صنعتی اداروں کو بھی ہدایت کی کہ وہ ملازمتوں میں خصوصی افراد کے لیے مختص کئے جانے والے پانچ فیصد کوٹہ پر قانون کے مطابق عمل کریں اور اس کی خلاف ورزی کرنے والوں کے قانون کے مطابق کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

کراچی میں مہاجروں کو بے گھر اور بیروزگار کیا جارہاہے: ڈاکٹر سلیم حیدر


dr saleem haider mit charimen February 3, 2019 | 3:11 PM

ایک سازش کے تحت انکروچمنٹ کی آڑ میں مہاجروں کے گھر ، دکانیں مسمار کی جارہی ہیں
مہاجروں کا جرم یہ ہے کہ انہوں نے کراچی کو گل وگلزار بنایا اس لئے انہیں دہشتگرد قرار دیا جاتا ہے
کراچی:(نیوزآن لائن)مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہا ہے کہ کراچی میں انکروچمنٹ کی آڑ میں مہاجروں کو بے گھر اور بیروزگار کیا جارہا ہے لیکن اب تک کے ایم سی کے کسی افسر یا اہلکار کو انکروچمنٹ کرانے کے جرم میں سزا نہیں دی گئی جو اس بات کا ثبوت ہے کہ میئر کراچی خود کراچی کے عوام سے سوتیلی ماں جیسا سلوک کررہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ کراچی کے مختلف مہاجر علاقوں میں 40سالوں سے رہائش پذیر افراد اور دوکان مالکان کو ناکردہ گناہوں کی سزا دی جارہی ہے۔ کراچی کے مہاجروں کا جرم یہ ہے کہ وہ رزق حلال کمانا چاہتے ہیں اور مہاجر سوچ و نظریئے پر کام رہتے ہوئے انہوں نے ان ہی ناعاقبت عناصر کو ووٹ دیئے جو انکروچمنٹ کے نام پر مہاجروں کو بے گھر اور بیروزگار کررہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اندرون سندھ میں اسکولوں اور سرکاری عمارت پر وڈیروں نے قبضے کئے ہوئے ہیں ۔ خودمہاجروں کی لاکھوں ایکڑ زمینیں سندھی وڈیروں کے قبضے میں ہیں لیکن برسوں گزر جانے کے باوجود نہ تو انہیں واگزار کرائی گئی اور نہ ہی کسی مظلوم کی داد رسی کی گئی ہے۔ یہ سارے نام نہاد قانون اور قواعد صرف کراچی ہی کے عوام پر کیوں استعمال کئے جاتے ہیں ۔ کیا کراچی میں ہی دہشت گرد اور جرائم پیشہ لوگ افراد رہتے ہیں ، سندھ کے ڈاکو، پتھارے دار ، دہشت گرد سب مومن مسلمان ہوچکے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ مہاجر حقوق کی آواز بلند کرنے کی پاداش میں مہاجروں پر ہی عرصہ حیات تنگ کیا جارہا ہے جبکہ علیحدگی پسند ملک دشمن اور ملکی دولت لوٹ کر راتوں رات کروڑ پتی بننے والے سندھی النسل افراد پر کبھی کوئی ہاتھ نہیں ڈالتا اور نہ ہی کوئی قانون ان پر لاگو ہوتا ہے۔

سینیٹر سرا ج الحق :منصورہ میں خطاب سانحہ ساہیوا ل کے لواحقین سے تعزیت، میڈیا گفتگو


pic Siraj Ul Haq January 20, 2019 | 8:31 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستا ن سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ قوم حکمرانوں سے پوچھ رہی ہے کہ سی ٹی ڈی اور پولیس کو شہریوں کے قتل عام کا کس نے لائسنس دیا ہے ۔اگر لاٹھی گولی کی سرکار کا اقتدار ہے تو پھر عدالتوں کو تالے لگوا دیں ۔ وزیر اعلیٰ چند روپے دے کر بچوں سے ان کے والدین کے ناحق قتل کا سودا کرنا چاہتے ہیں ۔ معصوم لوگوں کے قاتلوں کو سزا دینے کی ذمہ داری کس کی ہے ۔ یہ قتل و غارت گری کب تک چلے گی ۔ عوام ظلم کے اس نظا م کو مزید برداشت نہیں کریں گے ۔ حکومت اب تک ہوائی قلعے تعمیر کر رہی ہے ۔ حکمران کچھ کرنے کی صلاحیت سے محروم ہیں ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے منصورہ میں جاری نیشنل ایسوسی ایشن فار ایجوکیشن (نافع) کے زیراہتمام اساتذہ کی تربیتی ورکشاپ سے خطاب اور ساہیوال واقعہ کے مقتولین کے گھر تعزیت کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر سیکرٹری اطلاعات جماعت اسلامی قیصر شریف بھی موجود تھے ۔
سینیٹر سراج الحق نے تربیتی ورکشاپ کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان ایک نظریاتی مملکت اور دنیا بھر کے مسلمانوں کے لیے اسلام کا قلعہ ہے ۔ حکمرانوں نے پہلے اس کو دولخت کیا اور اب باقی ماندہ پاکستان کی بنیادوں کو کھوکھلا کر رہے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ جو حکومت آتی ہے وہ تمام خرابیوں کاذمہ دار سابقہ حکومت کو قرار دے کر ہاتھ پہ ہاتھ دھرے بیٹھ رہتی ہے سب یہی کہتے ہیں کہ بہت گند ہے اس کو صاف کرناہے مگر دوسروں سے زیادہ گند ڈال کر چلے جاتے ہیں ۔ موجودہ حکومت بھی اب تک یہی کر رہی ہے ۔ پانچ ماہ میں حکومت نے کوئی ایک وعدہ بھی پورا نہیں کیا ۔ انہوں نے کہاکہ ملک کو مسائل کی دلدل سے نکالنے اور عالمی برادری میں اپنا کھویا ہوا وقار دوبارہ حاصل کرنے کے لیے خوف خدا رکھنے والی نظریاتی قیادت کی ضرورت ہے جو آئی ایم ایف ، و رلڈ بنک و امریکہ سمیت عالمی استعمار سے ڈرنے کی بجائے اللہ اور اس کے رسول ۖ کی تعلیمات پر عمل کرنے والی ہو ۔ انہوںنے کہاکہ اس وقت تمام جماعتیں ناکام ہوچکی ہیں تین تین بار اقتدار میں رہنے والی سابقہ حکمران جماعتوں کو بھی عوام نے دیکھ لیاہے اور موجودہ حکومت کو بھی ،جو تبدیلی کے بڑے بڑے دعوئوں اور نعروں کے ساتھ آئی تھی ۔یہ حکومت بھی سابقہ حکومتوں کی طرح اسی استحصالی نظام کو جاری رکھے ہوئے ہے ۔ یہ حکومت بھی انہی مسافروں پر مشتمل ایک قافلہ ہے ان کا بھی وہی ایجنڈاہے جو ان سے پہلے حکمرانوں کا تھا ۔ یہ کسی قومی ایجنڈے پر نہیں ہمیشہ ذاتی مفادات کے ایجنڈے پر آتے ہیں او ر جب تک حکومت میں رہتے ہیں ، عوام کا خون چوستے اور اپنے مفاد کو پورا کرتے ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ چھ ماہ کے اندر ہی عوا م کی تمام امیدیں دم توڑ چکی اور خوش فہمیاں دور ہوگئی ہیں ۔ افراد اور پارٹیاں تبدیل ہو گئی ہیں مگر نظام وہی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ فرق صرف اتناآیاہے کہ بڑے بھائی کی جگہ چھوٹا ،چچا کی جگہ بھتیجا اور ماموں کی جگہ بھانجا حکومت میں آگیاہے اور کوئی فرق نہیں آیا۔
مقتولین کے خاندان سے اظہار تعزیت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ یہ واقعہ رات کے اندھیرے میں نہیں ، دن کی روشنی میں ہواہے سانحہ ساہیوال کھلی دہشتگردی اور بدمعاشی ہے ۔ حکومتی وزراء نے سات بار موقف بدلاہے ۔ سانحہ پر پوری قوم افسردہ ہے ۔ عوام کو حکومت اور اس کی بنائی ہوئی جے آئی ٹی پر اعتماد نہیں ۔ عدالت اس واقعہ کا از خود نوٹس لے اور ذمہ داروں کو قرار واقعی سزا دی جائے ۔ سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ کوئی دہشتگرد اہل خانہ اور بچوں کے ساتھ سفر نہیں کرتا یہ سیاسی نہیں ،انسانی مسئلہ ہے ۔ والدین کو بچوں کے سامنے شہید کر دیا گیاہے ۔ انہوںنے کہاکہ آج پتہ چلاکہ ادارے کیسے کام کر رہے ہیں ۔ معلومات نہ ہونے کے باوجود حملہ کیوں کیا گیا ۔ اپنے لوگوں کو دہشتگرد بناکر آپریشن کرنا ظلم اور دہشتگردی کی بدترین مثال ہے ۔ انہوںنے کہاکہ اس واقعہ سے عام شہریوں کے اندر خوف اور دہشت کی لہر دوڑ گئی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ جماعت اسلامی مظلوم خاندان کے ساتھ ہے جب تک اس خاندان اور معصوم بچوں کو انصاف نہیں مل جاتا ، انہیں اکیلا نہیں چھوڑیں گے ۔

حکمران عوام کے سر سے چھت چھیننے کا خیال دل سے نکال دیں حافظ نعیم الرحمن


Naeem Final copy January 20, 2019 | 8:28 PM

واٹر بورڈ لیاقت آباد ، سکند رآباداور اعظم آباد کے رہائشیوں کو متبادل مکانات دے ورنہ مکانات خالی نہیں کیے جائیں گے ۔احتجاجی کیمپ سے خطاب
جماعت اسلامی نے ہمیشہ عوام کے مسائل پر آواز بلند کی ہے سندھ اسمبلی میںاینٹی انکروچمنٹ مہم کے خلاف تحریک التواء جمع کرادی ہے ۔سید عبد الرشید
کراچی: (نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ واٹر بورڈ اہلیان پرانا غریب آباد، لیاقت آباد ،سکند رآباداور اعظم آباد کو متبادل مکانات فراہم کرے ورنہ مکانات خالی نہیں کیے جائیں گے ، 50سال سے آبادشہریوں کو کسی صورت چھت سے محروم نہیں ہونے دیں گے ، جماعت اسلامی کے پاس بہترین بلدیاتی تجربہ اور قیادت ہے، ہم سے بات کریں متبادل بتائیں گے اگر 48انچ کی پانی کی لائن کا متبادل نہیں تو پہلے متاثرین کو متبادل جگہ فراہم کی جائے ، نعمت اللہ خان نے جب لیاری ایکسپریس وے تعمیر کیا تو عوام کو پہلے متبادل فراہم کیا تھا، عوام کسی کے فریب میں نہ آئیں ، آپس میں متحد رہیں ، جماعت اسلامی آپ کے ساتھ ہے ۔ اہلیان علاقہ کو کسی صورت بے گھر نہیں ہونے دیں گے ۔ان خیالات کا اظہار انہوںنے واٹر بورڈ کی جانب سے سکندر آباد ، پرانا غریب آباد اور اعظم نگر کے مکینوں کو مکانات خالی کرنے کے نوٹس کے خلاف لگائے گئے احتجاجی کیمپ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ کیمپ میں بچے ، بوڑھے ،مرد وخواتین نے بڑی تعداد میں شرکت کی اور شہری و صوبائی حکومت کے خلاف زبردست نعرے بھی لگائے ۔ اس موقع پر رکن سندھ اسمبلی و امیر جماعت اسلامی ضلع جنوبی سید عبد الرشید ، ضلع عبوری امیر گلبرگ و سابق ٹاؤن ناظم گلبرگ فاروق نعمت اللہ ، ناظم حلقہ جاوید احمد خان ، عبید احمد،سابق نائب ناظم لیاقت آباد ٹاؤن شہا ب احمد ،سکریٹری اطلاعات زاہد عسکری و دیگر بھی موجود تھے۔ حافظ نعیم الرحمن نے خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ واٹر بورڈ کے نوٹس نے علاقے کے رہائشیوںمیں بے چینی پیدا کردی ہے ، برسوں سے قائم آبادی جس میں باقاعدہ بجلی کا کنکشن اور گیس کی فراہمی کی گئی ہے لیکن اب واٹر بورڈ نے حکم نامہ جاری کرکے ان کا سکون برباد کردیا ہے ۔انہوں نے کہاکہ عوام نے جن لوگوں کو ووٹ دے کر منتخب کیا آج وہ لوگ ان آبادیوں سے نکل کر ڈیفنس چلے گئے ہیں انہیں یہاں کے لوگوں کا کوئی خیال نہیں ہے ۔ہم واٹر بورڈ سے پوچھنا چاہتے ہیں کہ انہوں نے کراچی کے عوام کے لیے پانی کی فراہمی میں کتنا اضافہ کیا ؟۔کتنے پمپنگ اسٹیشنز کو ٹھیک کیا ؟۔سابق سٹی ناظم نعمت اللہ خان نے کراچی کے عوام کے لیے 100گیلن پانی کااضافہ کیا اور کے تین منصوبہ مکمل کیا اور اس کے بعد کے فورمنصوبہ کا آغازکیا تھا لیکن بدقسمتی سے اس کے بعد آنے والی حکومت نے ایک گیلن پانی کابھی اضافہ نہیں کیا۔کے فور منصوبہ کی لاگت 16ارب روپے جسے 2010میں مکمل ہونا تھا وہ ابھی تک مکمل نہیں ہوسکا اور اب اس کی لاگت کھربوں روپوں تک پہنچ گئی ہے ۔ جماعت اسلامی اس مشکل گھڑی میں متاثرین کے ساتھ ہے ، کسی قیمت میں بھی متاثرین کو بے گھر نہیں ہونے دیں گے ۔انہوں نے کہاکہ وفاقی و صوبائی حکومت کی ذمہ داری ہے کہ اہلیان سکندر آباد ، پرانا غریب آباد اور اعظم نگر کے عوام کو متبادل جگہیں فراہم کریں ورنہ ہم سڑکوں پر آئیں گے اور ضرورت پڑی تو گورنر ہاؤس کا بھی گھیراؤ کریں گے ۔ رکن صوبائی اسمبلی سید عبد الرشید نے کہاکہ جماعت اسلامی نے ہمیشہ عوام کے مسائل کے حل کے لیے آواز بلند کی ہے اور آئندہ بھی عوام کے ساتھ رہیں گے۔سندھ اسمبلی میں امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن کی ہدایت پر اینٹی انکروچمنٹ مہم کے خلاف تحریک التواء جمع کرادی ہے اور اہلیان سکندر آباد ، پرانا غریب آباد اور اعظم نگر سے منتخب ذمہ دارن سے ملاقات کروں گا اور مجھے امید ہے کہ دیگر منتخب عہدیداران بھی اس مسئلے کے حل کے لیے سے میرا ساتھ دیں گے ۔

ساہیوال: مبینہ پولیس مقابلے میں 4 افراد کی ہلاکت میں ملوث سی ٹی ڈی اہلکاروں کیخلاف دہشت گردی کا مقدمہ درج


sahiwal January 20, 2019 | 8:07 PM

ساہیوال:(نیوزآن لائن)ساہیوال میں مبینہ پولیس مقابلے میں جاں بحق افراد کے لواحقین کے پوری رات دھرنے اور شدید احتجاج کے بعد تھانہ یوسف والا پولیس نے مقابلے میں ملوث محکمہ انسداد دہشت گردی (سی ٹی ڈی) کے اہلکاروں کے خلاف دہشت گردی اور قتل کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا۔
ایف آئی آر 16 نامعلوم اہلکاروں کے خلاف درج کی گئی ہے جنہیں گزشتہ روز ہی حراست میں لے لیا گیا تھا۔ مقتول خلیل کے بھائی کی مدعیت میں درج کیا۔گزشتہ شب وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار نے لواحقین سے ملاقات کرکے انہیں تسلیاں تو دی تھیں تاہم مقدمہ درج نہیں کیا گیا جس کے باعث ورثا مطمئن نہیں ہوئے تھے۔واضح رہے کہ تھانہ سی ٹی ڈی لاہور میں واقعے میں جاں بحق افراد پر بھی مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

مہاجر نوجوان اپنی تعلیم پر توجہ دیں: ڈاکٹر سلیم حیدر


dr saleem haider MIT January 20, 2019 | 7:48 PM

علم اور قابلیت مہاجر قوم کی میراث ہے جسے واپس حاصل کرنا ہے
ماضی کی غلط سیاست نے مہاجروں کے تشخص کو نقصان پہنچایا ہے
کراچی(نیوزآن لائن)مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہا ہے کہ مہاجر نوجوان اپنی تعلیم پر خصوصی توجہ دیں کیونکہ مہاجروں کی میراث علم ہی ہے۔ علم کے ذریعے ہی مہاجروں نے قیام پاکستان کے بعد اس ملک کے نظم ونسق کو چلایا اور شہری علاقوں کو ترقی دلوائی۔ وہ کراچی کے مختلف کالجوں ، یونیورسٹیز کے طلباء کے ایک اجتماع سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہاکہ بدقسمتی سے مہاجر نوجوانوں کو ماضی میں تعلیم سے دور کرکے انہیں تشدد اور جرائم کی طرف لگایا گیا جس کے نتیجے میں پوری مہاجر نسل کو نقصان پہنچا۔ انہوں نے کہاکہ مہاجر تہذیب یافتہ اور شاندار ماضی اور ثقافت رکھنے والی قوم ہے ۔ تعلیم ہی مہاجروں کا ورثہ ہے جسے اب ایک بار پھر مہاجر نوجوان اپنے کھوئے ہوئے ورثے کی طرف واپس پلٹ رہے ہیں۔ تعلیم اور تربیت پر توجہ دیں ۔ پروفیشنل اور ٹیکنیکل تعلیم کے علاوہ مقابلوں کے امتحانات میں شریک ہوکر خود بھی مضبوط بنیں اور قوم کو بھی مضبوط کریں۔ انہوں نے کہا کہ مہاجر ایک شاندار ماضی ، حال اور مستقبل رکھنے والی قوم ہے لیکن بدقسمتی سے ماضی کی غلط سیاست نے مہاجروں کے تشخص کو نقصان پہنچایا اور مہاجروں پر بھتے خوری ، ٹارگٹ کلنگ، دہشت گردی جیسے الزامات لگتے رہے ۔ آج بھی مہاجر نام پر سیاست کرنے والے وہی بھروپیے موجود ہیں جن کی وجہ سے پوری مہاجر قوم تباہی سے ودچار ہوئی ۔ مہاجر نوجوانوں کا مستقبل تاریک ہوا اور آج مہاجر نوجوان بند گلی میں لاکھڑے کئے گئے ہیں۔ انہیں ملازمت سے لے کر تعلیمی اداروں میں داخلے تک ظالمانہ رویوں کا سامنا ہے۔

سندھ کا پہلا شہری جنگل( اربن فاریسٹ) کراچی میں قائم کیا جائے گا ۔ صوبائی وزیر جنگلات و جنگلی حیات کی زیر صدارت اعلیٰ سطحی اجلاس میں فیصلہ


selected pic 20-1-19 January 20, 2019 | 4:58 PM

صوبائی وزیر جنگلات و جنگلی حیات سید ناصر حسین شاھ کی زیر صدارت اہم اجلاس پائیدار فاریسٹ مینجمنٹ پالیسی دع دو ہزار انیس کی تیاری کے لئے تفصیلی تبادلہ خیال تمام اسٹیک ہولڈرز کی رائے شامل کی جائے گی۔
کراچی :( نیوزآن لائن ) صوبائی وزیر جنگلات و جنگلی حیات سید ناصر حسین شاھ نے کہا کہ سندھ کے جنگلات کی ترقی اور ان اضافے کے لئے جامع و مربوط اور شفاف پالیسی بنائی جائے گی اور اس سلسلے میں میرٹ و چیک اینڈ بیلنس کا پائدار ٹھوس نظام قائم کیا جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے محکمہ جنگلات کے دفتر میں پائیدار فاریسٹ مینجمینٹ پالیسی 2019 کی تیاری ، ایکٹس ، سالانہ ترقیاتی پروگرام ، سیکریٹریز کمیٹی میٹنگ میں جنگلات کے حوالے سے ایجنڈے ، سپریم اور ہائی کورٹ کے احکامات کی تعمیل کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں سیکریٹری محکمہ جنگلات عبدالرحیم سومرو، چیف کنزرویٹر آف فاریسٹ روینیو اعجاز نظامانی ، چیف کنزرویٹران لینڈ مینگروز ریاض احمد وگن ، کنزرویٹر جنگلات آغا طاہر حسین ، سوشل فاریسٹ سیکریٹری حیدرآباد ذوالفقار علی میمن، سوشل فاریسٹ سیکریٹری سکھر حیدر رضا خان، تمام سرکل کے کنزرویٹرز ، کنزرویٹر کراچی جاوید احمد مہر ، پی پی سی (ایس ایف ایم پروجیکٹ ) عبدالحق کے علاوہ ڈائریکٹر میڈیا مینجمینٹ وزیر جنگلات و جنگلی حیات محمد شبیہ صدیقی نے شرکت کی ۔ صوبائی وزیر نے اس موقع پر کہا کہ موسمیاتی تغیرات ، فضائی آلودگی اور ٹیمپرچر میں اضافہ کے پیش نظر کراچی میں سندھ کا پہلا شہری جنگل (اربن فاریسٹ) قائم کیا جائے گا جس کا دائرہ بتدریج صوبے کے تمام شہروں تک وسیع کیا جائے گا۔ گرین کراچی کے تحت ملیر ندی اور ریلوے لائن کے ساتھ پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت اور متعلقہ اداروں کے تعاون سے ماحول دوست اور پھلدار درخت لگائے جائے گیں اور بھرپور شجر کاری کی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ اربن فاریسٹ قائم کرنے کا مقصد کراچی میں بڑہتی ہوئی آلودگی کو کم کرنا ، شہر کو سرسبز بنانا ، اور ٹیمپریچر میں اضافہ کو کم کرنا ہے۔صوبائی وزیر نے ہدایت کی کہ وہ آنے والے بہار کے موسم میں جنگی بنیادوں پر اپنی تیاری مکمل کرلیں اور اس سلسلے میں شجرکاری کے حوالے سے کام کرنے والی این جی اوز سے رابطہ کرکے انہیں اپنے پروگرام میں شامل کریں۔ صوبائی وزیرنے کہا کہ سندھ کے جنگلات میں اضافہ کے لئے شارٹ ٹرم اور لانگ ٹرم منصوبہ بندی کی جائے۔صوبائی وزیر سید ناصر حسین شاھ نے افسران کو سپریم کورٹ آف پاکستان اور سندھ ہائی کور ٹ کی جانب سے جنگلات کے حوالے سے دیئے گئے احکامات پر من وعن عمل کرنے کی ہدایت کی۔اس موقع پر انہوں نے افسران کو سندھ کے تمام ضلعی ہیڈکوارٹرز اور ڈویثرنل ہیڈکوارٹرز کے لیول پر اربن فاریسٹری شروع کرنے کی ہدایت کی۔سیکریٹری جنگلات نے اس موقع پر مختلف حوالوں سے تفصیلی بریفنگ دی اور بتایا کہ سندھ پائیدار فاریسٹ مینجمینت پالیسی 2019 کے لئے کنسلٹیٹو ورکشاپس ، سییمنارز ، اجلاسوں ، تمام اسٹیک ہولڈرز، اکیڈمیاں اور کمیونٹی کی آراء کو شامل کر کے ایک ڈرافٹ کی صورت میں آئندہ ہفتے پیش کردیا جائے گا۔اجلاس میں صوبائی وزیر نے افسران پر زور دیا کہ جنگلات کی ترقی صوبے میں درختوںکی تعداد میں اضافہ اور ان کی حفاظت کے لئے اپنی تمام تر صلاحیتیں بروئے کار لائیں ۔ انہوں نے کہا کہ جنگلات قومی امانت ہیں اور ہر صورت میں ان کی حفاظت و نشونما کے لئے اقدامات کئے جائیں ۔ انہوں نے کہا کہ چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اور وزیر اعلیٰ سندھ اس سلسلے میں خصوصی دلچسپی رکہتے ہیں اور جنگلا ت کی ترقی و درختوں میں اضافہ کے لئے ان کی خاص ہدایات بھی ہیں۔ سرسبز سندھ ، سندھ حکومت کا عزم بھی ہے۔ اجلاس میں سالانہ ترقیاتی پروگرام کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی گئی اس موقع پر صوبائی وزیر نے تمام افسران کو ہدایت کی کہ وہ تمام جاری اسکیموں کو اعلیٰ معیار کے ساتھ وقت پر مکمل کروائیں۔

انسداد پولیو مہم پیرشروع ہوگی سات روز جاری رہے گی کمشنر کراچی افتخار شالوانی


DSC_2003wwww January 20, 2019 | 4:44 PM

کمشنر کراچی کی زیر صدار ت جائزہ اجلاس منعقد۔
مائکرہ پلان پر غوررہ جانے والے بچوں کی کمی
عالمی ادارہ صحت کا اظہار اطمینان اور تعریف
انسداد پولیو قومی مقصد ہے پولیو کے خاتمہ تک مہم جاری رہے گی کمشنر کراچی افتخار شالوانی
کراچی: (نیوزآن لائن) کمشنرکراچی افتخار شلوانی کی صدارت میںان کے دفتر میں انسداد پولیو کے بارے میں ایک جائزہ اجلاس منعقدہوا اجلاس میں انسداد پولیو کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی گئی ۔ بتایا گیا کہ مہم پیر 21جنوری سے شروع ہوگی ہونے والی این آئی ڈی انسداد پولیو مہم کے انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں۔ مہم سات روز جاری رہے گی ۔ جس میں تیئس لاکھ سے زاید بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے جائیں گے۔مہم 192 یونین کونسلوں میں بیک وقت شروع کی جارہی ہے ۔ سیکورٹی کے خصوصی اقدامات کئے گئے ہیں مہم میں تیرہ ہزار سے زائد پولیو ورکرز اپنے فرائض انجام دیں گے۔ اجلاس میں ایمر جنسی آپریشن سینٹر سندھ کے کوآرڈینٹر عمر فاروق ایڈیشنل کمشنر کراچی ون کمشنر کراچی پولیو ٹاسک فورس کے کوآرڈینٹر ڈاکٹر نصرت علی، پولیس رینجرز ،تمام ٹاون ہیلتھ افسران ،عالمی ادارہ صحت، یونیسیف ، بل گیٹس اینڈ ملنڈا کے نمائندوں اور دیگر نے شرکت کی۔ اجلاس میں عالمی ادارہ صحت کے ٹیم لیڈر سندھ نے انسداد پولیو کی کوششوں کو سراہا انھوں نے کہا کہ رہ جانے اور انکار کر نے والے بچوں میں بتدریج کی ہوئی ہے ۔ بہتر کار کردگی پر انھوں نے انتظامیہ ا،محکمہ صحت کے افسران اور دیگر متعلقہ اسٹیک ہولڈرز کی کوششوں کی تعریف کی۔ کمشنر نے کہا کہ انسداد پولیو قومی مقصد ہے اس سے ملک کا وقار اور بچوں کو مستقبل وابستہ ہے ملک کو پولیو سے پاک کر نے تک یہ کوششیں جاری رہیں گی۔انھوں نے کہا کہ قومی جذبہ سے تمام اسٹک ہولڈرز ملک کر کام کریں انھوں نے ڈپٹی کمشنرز سے کہا کہ وہ انسداد پولیو کے مائکرو پلان پر عملدرآمد کو یقینی بنانے میں اپنا کر دار ادا کریں۔ا نھوں نے رہ جانے والے بچوں کی تعداد میں کمی خوش آئند ہے کوشش کی جائے جلد از جلد سو فیصد بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے کا ہدف حاصل ہو اور پولیو کا خاتمہ ہو ۔

نارووال کے قریب تیز رفتار کار الٹنے سے ایک شخص جاں بحق


narawan city acciddnt car January 6, 2019 | 9:33 PM

نارووال):نیوزآن لائن ) نارووال کے قریب تیز رفتار کار الٹنے سے ایک شخص جاں بحق اور 3 زخمی ہو گئے ،تفصیلات کے مطا بق کار کو حادثہ نیو لاہور روڈ پر اس وقت پیش آیا جب تیزرفتاری کے باعث ڈرایئور نے کنٹرول کھو دیا اور نارووال کے قریب کار قلا بازیاں کھاتی ہوئی الٹ گئی۔ حادثے میں 4 افراد شدید زخمی ہو گئے ،پولیس نے زخمیوں کو قریبی ہسپتال منتقل کر دیا جبکہ جاں بحق ہونے والے شخص کی لاش ورثا کے حوالے کردی۔

چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثارکا پی کے ایل آئی کیس میں ریمارکس


chief justice of pakitsan news January 6, 2019 | 8:42 PM

لاہور:(نیوزآن لائن) چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار نے پی کے ایل آئی کیس میں ریمارکس دیتے ہو ئے کہا کہ پنجاب حکومت کی نااہلی کو تحریری حکم کا حصہ بنا رہے ہیں۔
سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں چیف جسٹس پاکستان ثاقب نثار کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے پاکستان کڈنی اینڈ ٹرانسپلانٹ انسٹی ٹیوٹ (پی کے ایل آئی) سے متعلق ازخود نوٹس کیس کی سماعت کی۔
سپریم کورٹ نے پنجاب حکومت، محکمہ صحت اور وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد پر سخت اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے 22 ارب لگا دیا، پھر بھی یہ اسپتال پرائیوٹ لوگوں کو چلا گیا، لیکن یہ واپس آنا چاہیے۔
چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ پی کے ایل آئی سے متعلق قانون سازی کا کیا بنا؟۔ صوبائی وزیر صحت یاسمین راشد نے جواب دیا کہ قانون سازی کیلئے مسودہ محکمہ قانون کو بہجوا دیا گیا ہے۔
چیف جسٹس نے کہا کہ گزشتہ سماعت پر بہی آپ کی جانب سے یہی کہا گیا تہا، آپ نہیں چاہتے کہ سپریم کورٹ پنجاب حکومت کی مدد کرے، یہ بتائیں کہ جگر کی پیوندکاری کے آپریشن کا کیا بنا؟۔
ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ چیف صاحب آپ فکر نہ کریں، اس پر بہی کام کر رہے ہیں۔ تو چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ یہ فکر آپ نے کرنی ہے بی بی، لیکن آپ کچھ نہیں کر رہیں، ہر سماعت پر آپ اور پنجاب حکومت زبانی جمع خرچ کر کے آجاتی ہیں، اس کیس میں آپ ہر سماعت پر بہانے بنا رہی ہیں۔
چیف جسٹس نے کہا کہ ہم یہ معاملہ ختم کر دیتے ہیں کیونکہ پنجاب حکومت میں اتنی اہلیت نہیں ہے، پنجاب میں نااہلی اور نکما پن اپنی انتہا کو پہنچ چکا ہے، یہ نااہلی ہی ہے کہ پنجاب حکومت سے معاملات نہیں چلائے جا رہے، آپ نے پہلا آپریشن کرنے کیلئے حتمی تاریخ دینی تہی لیکن آج بہی آپ گا گی گے کر رہی ہیں، آپ کی کارکردگی صرف باتوں تک ہے اور کچھ نہیں۔
چیف جسٹس نے پنجاب حکومت کی کارکردگی پر مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آپ کی کارکردگی یہ ہے کہ آپ سے آج تک ایک کمیشن تو بن نہیں سکا، ہم اس کیس میں پنجاب حکومت کی نااہلی کو تحریری حکم کا حصہ بنا رہے ہیں، آپ لوگوں کو علاج کی سہولیات دینے میں ناکام ہیں، لوگ آپ سے خود ہی پوچھ لیں گے، سپریم کورٹ کو آپ سے توقعات تہیں لیکن آپ نے شدید مایوس کیا۔

سینیٹر سراج الحق ، مجلس شوریٰ کے اجلاس سے اختتامی خطاب


siraj ul haq conference January 6, 2019 | 7:39 PM

لاہور:(نیو ز آن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ ملک کے عوام کے مسائل کے سنجیدہ حل کے لیے طرز حکومت میں تبدیلی کی ضرورت ہے ۔ اب تو چیف جسٹس بھی یہ کہنے پر مجبور ہو گئے ہیں کہ حکومتیں کام نہیں کریں گی تو کوئی اور ذمہ داری پوری کرے گا۔ سیاست میں تلخیاں بڑھتی جارہی ہیں جو جمہوریت کے لیے سخت نقصان دہ ہیں ۔ وزراء تحمل اور برد باری کا مظاہرہ کریں اور مسائل کے حل پر توجہ دیں۔ اس وقت پوری قوم معاشی بدحالی سے پریشان ہے ۔ معیشت کو ٹریک پر چڑھانے کے لیے معاشی ڈاکومنٹیشن ، غیر ترقیاتی اخراجات میں کمی اور دیانتدار قیادت کی ضرورت ہے ۔ٹیکسوں کی بھر مار اور ادھار سے ملک نہیں چلتے ۔ ان خیالات کااظہار انہوںنے منصورہ میں ہونے والے مرکزی مجلس شوریٰ کے سہ روزہ اجلاس کے اختتامی سیشن سے خطاب اور کارکنوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ حکومت کے پہلے پانچ ماہ میں کوئی قانون سازی نہیں ہوسکی ۔ حکومت اب تک کوئی جوڈیشل ریفارمز بھی نہیں کر سکی ۔ حکومت نے جنوبی پنجاب اور کراچی کے مسائل حل کرنے کے بڑے دعوے کیے تھے مگر یہ مسائل ابھی تک جوں کے توں ہیں ۔ حکومت نے سماجی خدمات میں انقلاب لانے کا بھی وعدہ کیا تھا ، قوم منتظر ہے کہ حکومت اپنے ان وعدوں پر عمل درآمد کے لیے کب کوئی سنجیدہ قدم اٹھاتی ہے ۔ عوام پہلے کی طرح تھانے کچہری اور پٹوار خانے کے رحم و کرم پر ہیں ۔ لوگوں کو انصاف جیسی بنیادی سہولت میسر نہیں ۔ پڑھے لکھے نوجوان مایوسی کا شکار ہیں حکومت نے کہاتھاکہ ایک کروڑ نوجوانوں کو روزگار دیں گے لیکن ابھی تک اس پر عملدرآمد دور دور تک نظر نہیں آرہا۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ تبدیلی کے نعرے پر آنے والی حکومت کے دور میں ایسی کوئی تبدیلی نظر نہیں آرہی جو عوام کو نظر آئے۔ مہنگائی نے عوام کی چیخیں نکال دی ہیں ۔ پہلے سردیوں میں گیس کی لوڈشیڈنگ ہوتی تھی اب دسمبر اور جنوری میں گیس کے ساتھ ساتھ بجلی کی لوڈشیڈنگ بھی ہورہی ہے ۔ روز مرہ اشیاء کی قیمتوں میں اضافے سے لوگو ں کے لیے ضروریات زندگی حاصل کرنا مشکل ہوگیاہے ۔ حکومت عوام کو کوئی ریلیف نہیں دے سکی ۔ تبدیلی صرف ٹیکسوں اور مہنگائی میں اضافے کی صورت میں آئی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ تعلیم اور علاج کی سہولتوں کی عدم دستیابی مستقل مسئلہ بن چکاہے ۔ لاہور کراچی اسلام آباد اور پشاور جیسے بڑے شہروں کے عوام بھی علاج کی سہولتیں نہ ملنے سے سراپا احتجاج ہیں لیکن وزراء صبح و شام تبدیلی کے دعوے کرتے نہیں تھکتے ۔ انہوںنے کہاکہ دو کروڑ پینتیس لاکھ بچے سکولوں سے باہر ہیں۔ قوم و ملک کی ترقی کے لیے تعلیم بنیادی اہمیت رکھتی ہے ، سابقہ حکومتوں کی طرح موجودہ حکومت بھی تعلیم کی طرف توجہ دینے میں سنجیدہ نظر نہیں آتی ۔

قاضی حسین احمد قومی رہنما ،اتحاد امت کے داعی ، جری اور بہادر دینی، سیاسی اور سماجی رہنما تھے ۔لیاقت بلوچ


Liaqat Baloch final 2 copy January 6, 2019 | 7:36 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ قاضی حسین احمد قومی رہنما ،اتحاد امت کے داعی ، جری اور بہادر دینی، سیاسی اور سماجی رہنما تھے ۔ محنت اور محنت ، کام اور کام ان کی زندگی کا مشن اور غلبہ دین ہمیشہ ان کی جدوجہد کا مرکز و محور رہا ۔ وہ عزیز جہاں تھے ۔ ان کی رحلت پر پور ی قوم نے ذاتی صدمہ محسوس کیا ۔ مولانا سید ابوالاعلیٰ مودودی کی تحریک انمول اور بے مثال رہنما سے محروم ہوگئی ۔ انہوںنے یہ بات قاضی حسین احمد کے یوم وفات پر اپنے پیغام میں کہی ۔
لیاقت بلوچ نے کہاکہ دینی ، سماجی اور جمہوری قوتیں بکھری ہوئی ہیں ۔ قومی قیادت کو ملک کے بدترین حالات کا احساس ہی نہیں ۔ پارلیمنٹ عملاً کھلنڈرے سیاسی ایکٹرز کی یرغمال بنی ہوئی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ تمام جمہوری اور سیاسی قوتیں کرپٹ عناصر کی پرواہ کیے بغیر قومی سلامتی ، عوامی مسائل کے حل اور پاکستان دشمن قوتوں کے مقابلہ میں متحد ہو جائیں ۔ انہوںنے کہاکہ کرپٹ مافیا آئین سے ماورا اقدامات اور غیر ذمہ دارانہ رویوں نے ملک اور عوام کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا ہے ۔ انہوںنے کہاکہ ہر پارٹی کے صالح اور جمہوریت پسند کردار فعال ہوں اور پاکستان کو بحرانوں سے نکالیں ۔
لیاقت بلوچ سے منصورہ میں سندھ اور بلوچستان کے نوجوانوں کے وفد نے ملاقات کی اور سندھ اور بلوچستان کے نوجوانوں کے مسائل سے انہیں آگاہ کیا۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ بے روزگار ی، سفارش، رشوت اور میرٹ کی پامالی نوجوانوں کے لیے بڑا روگ بنادیا گیاہے ۔

سینیٹر سراج الحق کا سیالکوٹ میں(نافع) کے زیر اہتمام ٹیلنٹ ایوارڈ شو کے شرکاء سے خطاب


pic ameer ji December 30, 2018 | 9:15 PM

لاہور :( نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ گیس کا بحران شدت اختیار کر گیا ہے ۔ آج کل ہوا بھی سرد اور چولہے بھی ٹھنڈے ہیں ۔ ایل پی جی کی قیمتوں میں اضافہ اور گیس کی عدم فراہمی کی وجہ سے ہر گھر میں پریشانی ہے ۔ ایل پی جی سرکاری ریٹ پر دستیاب نہیں اور بلیک میں مہنگی بک رہی ہے۔ ای سی ایل میں نام ڈالنے ہیں تو پھر سب کے ڈالیے۔ اگر ملک سے لوٹے ہوئے 375 ارب ڈالر واپس آ جائیں تو کسی سے خیرات لینے کی ضرورت نہ رہے ۔ ہم کسی ایک فرد یا جماعت کا نہیں ، سب کا احتساب چاہتے ہیں ۔ ملک کو لوٹنے والے کسی رعایت کے مستحق نہیں ۔ موجودہ حکومت میں بھی مسلم لیگ اور پی پی کے لوگ شامل ہیں جو لوٹ مار کے نظام کا حصہ رہے ہیں ۔ ملک میں کوئی ہنگامی صورتحال نہیں مگر پھر بھی روزانہ مہنگائی میں اضافہ ہورہاہے ۔ ابھی تک تبدیلی کا کوئی نام و نشان نہیں ۔ تبدیلی صرف ٹیکسوں اور مہنگائی میں اضافہ سے آئی ہے ۔ ان خیالات کااظہار انہوںنے سیالکوٹ میں نیشنل ایسوسی ایشن فار ایجوکیشن (نافع) کے زیر اہتمام جینئس آف سیالکوٹ ٹیلنٹ ایوارڈ شو کے شرکاء سے خطاب اور میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ تقریب سے امیر جماعت اسلامی وسطی پنجاب امیر العظیم نے بھی خطاب کیا ۔ ٹیلنٹ ایوارڈ میں طلبہ و اساتذہ نے سینکڑوں کی تعداد میں شرکت کی ۔ سراج الحق نے مختلف شعبوں میں اعلیٰ کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے طلبہ اوراساتذہ میں انعامات و شیلڈز بھی تقسیم کیں ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ موجودہ حکومت مدینے کی ریاست کا نام لیتی ہے مگر اس کو اختیار کرنے کو تیار نہیں ۔ انہوںنے کہاکہ جب تک نظریہ پاکستان پر ایمان رکھنے والی قیادت ملک کی باگ ڈور نہیں سنبھالتی ، پاکستان اسلامی اور فلاحی ملک نہیں بن سکتا ۔ انہوںنے کہاکہ حکمران قوم سے کیے گئے وعدوں پر عمل کرنے میں ناکام ہوچکے ہیں ۔ الیکشن 2018 ء کے بعد اقتدار میں آنے والوں نے عوام کو کوئی ریلیف نہیں دیا ، مہنگائی اور بے روزگاری میں مسلسل اضافہ ہورہاہے ۔ عوام کو تعلیم اور صحت کی سہولتیں میسر نہیں ۔ دو کروڑ 35 لاکھ بچے سکولوں سے باہر ہیں ۔ حکمران بتائیں کہ ان بچوں کا مستقبل کیوں تاریک کیا جارہاہے ۔انہوںنے کہاکہ احتساب کا موجودہ نظام قوم کو تقسیم کر رہاہے ۔ نیب ، حکومت اور سپریم کورٹ پانامہ لیکس کے دیگر ملزموں کو بھی پکڑیں یہ تاثر نہیں جانا چاہیے کہ حکومت احتساب کو متنازعہ بنارہی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ جماعت اسلامی سب کا احتساب چاہتی ہے ۔ نیب کے پاس 150 میگا کرپشن کے اسکینڈلز ہیں ان کو کھولا جائے ۔ بنکوں سے اربوں روپے کے قرضے لے کر معاف کرانے والوں اور دولت بیرون ملک منتقل کرنے والوں کو پکڑا جائے ۔ جب سب کا احتساب ہو گا تو اس پر کوئی اعتراض نہیں کرسکے گا ۔

بانیان پاکستان کی اولادوں کودیوار سے لگانے کی سازشیں ہورہی ہیں،سید عقیل انجم


Baber Brotheran December 30, 2018 | 6:42 PM

ملک کے سواداعظم اہلسنّت وجماعت کی ذمہ داری ہے کہ اپنے اکابرین کی امانت وطن عزیزپاکستان کی حفاظت کا فریضہ انجام دیں،مفتی بشیرالقادری
وطن عزیز آج تاریخ کے انتہائی نازک ترین دورسے گزررہاہے، شکیل قاسمی، ظہیر خان ٹھیکیدارودیگر کالیاقت آباد میں منعقدہ جشن غوث الوریٰ سے خطاب
کراچی (نیوزآن لائن) جمعیت علماء پاکستان کراچی کے صدرعلامہ سید عقیل انجم قادری نے کہا ہے کہ وطن عزیز آج تاریخ کے انتہائی نازک ترین دورسے گزررہاہے، قتل وغارتگری،دہشتگردی اور لاقانونیت کابازارایک بارپھرگرم ہوچکاہے،بانیان پاکستان کی اولادوں کودیوار سے لگانے کی سازشیں ہورہی ہیں،ایسے میں اہلسنّت وجماعت جواس ملک کے سواداعظم ہیں ان کی ذمہ داری ہے کہ اپنے اکابرین کی امانت وطن عزیزپاکستان کی حفاظت کا فریضہ انجام دیں۔ یہ باتیں انہوں نے سکندرآباد لیاقت آباد میںجے یوپی ضلع وسطی کے زیراہتمام منعقدہ جشن غوث الوریٰ سے خطاب کرتے ہوئے کہیں،اس موقع پر جے یوپی کراچی ڈویژن کے جنرل سیکریٹری مفتی محمدبشیرالقادری،چیف آرگنائزرمحمدشکیل قاسمی،نائب صدر سید جہاں زیب سبزواری،میزبان ضلع وسطی کے ناظم اعلیٰ ظہیر خان ٹھیکیدار ودیگر نے بھی خطاب کیا،جبکہ حبیب بھیا،سیکریٹری لیبرافیئرزغلام عباس لنگاہ، ضلع ملیرکے صدر محمداکبروٹو، طارق مغل،مہتاب نورانی،محمودعسکری، سلمان شیخ، محمدہاشم نورانی،کاشف نورانی،جمیل قادری،جمال انصاری،حافظ شہریارقادری، ایان قادری،نورمحمداشرفی ودیگر نے بھی شرکت کی۔جشن غوث الوریٰ میں عالم اسلام کے معروف ثناء خوان رسول حافظ طلحہ قادری، محمدارسلان نقشبندی، بابرنقشبندی، سلمان قادری، اویس رضا قادری، بلال شاہ بخاری،ابوبکر قادری، زوہیب قادری ودیگر نے ہدیہء نعت ومنقبت پیش کیا۔مقررین نے اپنے خطاب میں کہاکہ پاکستان بچانے کی واحدصورت یہ ہے کہ جن اکابرین نے پاکستان بنایاتھا ان کی اولادیں آگے بڑھیںاور پاکستان کوبچائیں۔انہوںنے کہاکہ حضورغوث الاعظم کے مریدین ومعتقدین نے صلیبی جنگوں میںاسلام کی سربلندی میں اہم کرداراداکیا،حضرت مجددالف ثانی نے اپنے دورمیں انقلاب کی راہ ہموار کی، خانقاہی نظام کااصل مقصدہی مسلمانوں کاتحفظ اور شعائراللہ کی حفاظت ہے ،آج بھی اگرصاحبان طریقت موقع کی نزاکت کوسمجھ لیں توملک میں انقلاب نظام مصطفےٰ ۖ کے نفاذ کی منزل قریب تر ہوگی۔انہوں نے کہاکہ جے یوپی قادریوں، نقشبندیوں، چشتیوں اور سہروردیوں کالشکر ہے ،یہ امام نورانی کے چاہنے اور ماننے والو ں کااصل لشکرہے یہ سرکٹاتوسکتاہے ،سرجھکانہیں سکتا۔انشاء اللہ مشن نورانی کوپوراکریں گے اور یارسول اللہ ۖ کے نعرے پرسب کو متحد کریں گے۔ جمعیت علماء پاکستان موروثی جماعت نہیں ہے ہم سب علامہ شاہ احمدنورانی کے بنائے ہوئے دستور کے پابند ہیں۔انہوں نے مطالبہ کیاکہ وطن پاک میں بے روزگاری کے خاتمے کے لئے توانائی کے نئے ذرائع تلاش کئے جائیںاور روزگارکی فراہمی کے لئے نئے صنعتی یونٹس لگائے جائیں اور وہ تمام بیمارصنعتوں کی بحالی کے لئے عملی اقدامات کئے جائیں اور نوجوان نسل کو بے روزگاری سے بچایاجائے۔ پی ٹی آئی کی قیادت نے انتخابات سے قبل قوم سے وعدہ کیاتھاکہ ملک سے کرپشن کاخاتمہ کریں گے ،بدعنوان عناصر کوسرعام سزادی جائے گی اور وہ لوگ جنہوں نے ملک سے بے شماردولت لوٹی ہے وہ پیسہ واپس لیا جائے گا،مگرمیڈیاپر ٹرائل تو نظرآرہاہے لیکن پیسہ نہیں آرہا،مہنگائی کا طوفان غریبوں کے چولہے ٹھنڈے کررہاہے مگر حکمران اربوں روپے خرچ کرکے نئے سنیماتعمیر کئے جارہے ہیں۔حکمران انتخابی وعدے پورے کریں ، مظلوم قوم نے پی ٹی آئی کوتبدیلی کے نام پر ووٹ دیا تھامگر یہ ہماری بدقسمتی ہے کہ نہ توکوئی تبدیلی آئی اور نہ ہی کرپشن کاخاتمہ ہوا،نہ لوڈشیڈنگ ختم ہوئی نہ ملکی وسائل کی لوٹ مار میں کمی آئی،بلکہ ہر آنے والادن پاکستان کے غریب عوام کی پشت پر مہنگائی کے کوڑے برسارہاہے ۔ بجلی، آٹا،پیٹرول اور بنیادی ضرورت کی اشیاء کی قیمتوں میں روزافزوں اضافہ ہورہاہے ور یہ سب کچھ ورلڈ بینک اور آئی ایم ایف کی پالیسیز کی پابندی کانتیجہ ہے ۔عمران خان اپنے وعدے پورے کریں ،ورلڈ بینک وآئی ایم ایف کے شکنجے سے قوم کو آزادی دلائیںتاکہ قوم واقعی خوشحالی کی راہ پر گامزن ہوسکے۔انہوں نے قائدین اہلسنّت سے مطالبہ کیاکہ حالات کی نزاکت کوسمجھیں اب وقت آچکاہے کہ قائدین آج بھی متحد نہ ہوئے توپھرکب ہونگے،ہم تمام قائدین اہلسنّت سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ خدااور اس کے رسول ۖ کے واسطے اپنے تمام تر ذاتی اور گروہی اختلافات کو بالائے طاق رکھ کر اپنی مادری تنظیم جمعیت علماء پاکستان کے پلیٹ فارم پر متحدومنظم ہوجائیں اور پاکستان کو حقیقی معنوں میں نظام مصطفےٰ کا گہوارابنانے کی تحریک کا آغازکریں۔

کراچی میں مہاجروں کو اقلیت میںتبدیل کیا جارہاہے،ڈاکٹر سلیم حیدر


dr saleem haider mit charimen December 23, 2018 | 8:58 PM

اپنے ہی شہر میں مہاجر نوجوان تعلیم اور روزگار سے محروم کردیئے گئے ہیں
مہاجر قیادت اور مہاجر فکر رکھنے والے تمام افراد کو متحد ہوکر مشترکہ جدوجہد کرنی ہوگی
کراچی:(نیوزآن لائن) مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہا ہے کہ کراچی جوکہ مہاجروں کا سب سے زیادہ اکثریتی شہر ہے اس پر ایک منصوبہ بندی کے تحت مہاجروں کو اقلیت میں تبدیل کیا جارہا ہے۔ اپنے ہی شہر میں مہاجر نوجوانوں پر تعلیم اور روزگار کے دروازے بند کردیئے گئے ہیں۔ وہ طلباء کے وفد سے بات چیت کررہے تھے۔ ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہاکہ کراچی میں مہاجر قوم کو منتشر ہونے کے بعد مہاجر دشمن عناصر مہاجروں کو دیوار سے لگانے کیلئے کمر بستہ ہوگئے ہیں۔ اس صورتحال کا ادراک کرتے ہوئے ہم نے کافی عرصے قبل سے ہی مہاجر جماعتوں اور قائدین کو متحد کرنے کی کوششیں شروع کیں جو اب بھی جاری ہیں جس کا مقصد کراچی سمیت سندھ میں رہنے والے مہاجروں کو ان کے حقوق کے ساتھ ساتھ ان کے تحفظ کو بھی یقینی بنانا ہے۔ انہوں نے کہاکہ پیپلزپارٹی کی حکومت جس کی قیادت سے لے کر اراکین اسمبلی اور وزراء تک کرپشن میں ڈوبے ہوئے ہیں ، وہ کراچی کے وسائل کو اندرون سندھ میں ترقی کے نام پر لے کر جارہے ہیں ، جہاں سے وہ وسائل بھی بدعنوانی کی نذر ہوجاتے ہیں، انہوں نے کہاکہ مہاجر ماضی سے سبق سیکھتے ہوئے مثبت اور بہتر قیادت کو سامنے لے کر آئیں تاکہ مہاجروں کے دیرینہ مسائل اور ان کے حقوق کے حوالے سے جدوجہد کی جاسکے۔ کیونکہ سندھ میں جس طرح کی صورتحال پیدا کردی گئی ہے اس کے بعد اب مہاجروں کیلئے ہر آنے والا دن سخت سے سخت ہوتا جارہا ہے۔

کاروبار اور سرمایہ کاری سے متعلق موجودہ حکومت کی سوچ سابقہ حکومتوں سے مختلف ہے۔وزیراعظم عمران خان


imran khan meeting for stock exchange market December 9, 2018 | 7:28 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ حکومت ملک میں کاروبار اور سرمایہ کاری کے فروغ اور تحفظ کیلئے پرعزم ہے۔وہ پاکستان سٹاک ایکسچینج کے ایک وفد سے گفتگو کررہے تھے جس نے اپنے چیئرمین سلیمان مہدی کی قیادت میں اتوار کے روز کراچی میں ان سے ملاقات کی۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ کاروبار اور سرمایہ کاری سے متعلق موجودہ حکومت کی سوچ سابقہ حکومتوں سے مختلف ہے۔۔ انہوں نے کہا کہ غیر ملکی سرمایہ کار معیشت کے مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری میں دلچسپی ظاہر کررہے ہیں۔وزیراعظم نے ملک میں کاروباری ماحول کی بہتری کیلئے تاجروں سے تجاویز طلب کیں۔ انہوں نے وزیراعظم کو سٹاک مارکیٹ کے بروکرز کے مسائل سے بھی آگاہ کیا۔دونوں فریقوں نے ٹیکس کے دائرے کو وسعت دینے اور سٹاک مارکیٹ میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کے استعمال پر اتفاق کیا۔وزیراعظم نے وفد کی بیشتر تجاویز کی منظوری دے دی۔

جماعت اسلامی اقامت دین کی تحریک ہے ہمارا مقصد رضائے الہیٰ کا حصول ہے سراج الحق


Tanzeem Program copy December 9, 2018 | 6:35 PM

کراچی میں بڑی قربانیاں دی ہیں کٹھن حالات میں بھی دعوت دین اور خدمت کا فریضہ انجام دیا تقریب حلف برداری سے خطاب
تقریب میں 10عبوری امراء اضلاع نے اپنی ذمہ داری کا حلف لیا محمد حسین محنتی ، حافظ نعیم الرحمن نے بھی خطاب کیا
کراچی: (نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سرا ج الحق نے کہا ہے کہ جماعت اسلامی اقامت دین کی تحریک ہے اور ہمارا مقصد اس تحریک اور جدوجہد میں شریک ہوکر رضائے الہیٰ کا حصول ہے، کراچی منی پاکستان اور عالم اسلام کا ایک اہم اور بڑا شہر ہے ،کراچی میں جماعت اسلامی کے کارکنوں نے بڑی قربانیاں دی ہیں ، انتہائی مشکل اور کٹھن حالات میں بھی دعوت دین اور خلق خدا کی خدمت کا فریضہ انجام دیا ہے ، یہ جدوجہد جاری رہے گی ۔ ان خیالات کا اظہارانہوں نے ادارہ نورحق میں جماعت اسلامی کراچی کی تنظیمی تشکیل نو کے بعد مقرر کیے جانے والے 10عبوری امراء اضلاع کی تقریب حلف برداری کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ تقریب سے جماعت اسلامی سندھ کے امیر محمد حسین محنتی ، کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمن اور سکریٹری عبد الوہاب نے بھی خطاب کیا۔ تقریب میں ضلعی امراء محمد اسلام ، ، توفیق الدین صدیقی ،عبد الجمیل خان ، ، محمد یونس بارائی ،سیف الدین ایڈوکیٹ ، سید عبد الرشید ،محمد اسحاق خان ، محمد یوسف ،فاروق نعمت اللہ اورمنعم ظفر خان نے حلف پڑھ کر اپنی ذمہ داری کا حلف لیا ، اس موقع پر نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان اسد اللہ بھٹو و دیگر بھی موجود تھے ۔ سراج الحق نے عبوری امراء کے لیے استقامت اور کامیابی کی دعا کرتے ہوئے کہاکہ رب کریم تمام ذمہ داران کو اس عہد کے تمام تقاضوں کو پورا کرنے کی توفیق عطا فرمائے۔ انہوں نے کہاکہ اقامت دین کا کام ایک عظیم اور مقدس کام ہے ، حضرت آدم سے لے کر نبی کریم ۖ کے زمانے تک تمام انبیاء کرام اقامت دین کا کام کرتے رہے اور آج یہ کام پوری امت پر فرض ہے کہ معاشرے میں اقامت دین کی جدوجہد کی جائے ۔موجودہ دور میں انسان مادہ پرستی کی زندگی اور مال کمانے میں مصروف ہے لیکن غلامان رسول ۖ اور اقامت دین کے مجاہد دین کی اشاعت اور رضائے الہیٰ کے حصول میں لگے رہتے ہیں اور یہی ہمارے نبی ۖ کی شان تھی کہ جو دنیا سے بے نیاز ہوکر مخلوق کو متحد ومتفق کرنے اور دین کے غلبے کی جدوجہد کرتے رہے ۔ انہوں نے کہاکہ ہماری لڑائی کسی کی ذات کے لیے یا صرف اقتدار کے لیے نہیں بلکہ اللہ کے دین کو غالب کرنے کے لیے ہے ، اللہ تعالیٰ ہماری کاوشوں اور جدوجہد کو قبول کرے یہی ہمارے لیے آخرت میں نجات اور جنت کے حصول کا ذریعہ ہے ، انہوں نے کہاکہ معاشرے میں بے شمار لوگ صلاحیت، مال و دولت اور علم کے لحاظ سے موجود ہیں ،لیکن اللہ کی مہربانی ہے کہ اس نے ہمیں اس کام کے لیے منتخب کیا ۔انہوں نے کہاکہ ملکی اور بیرونی سطح پر چیلنجز کا مقابلہ منظم اور متحد ہو کر ہی کیا جاسکتا ہے ، آپ کی صلاحیتیں اللہ کی امانت ہیں ان کو بہتر اور خوب سے خوب تر بنایا جائے ، راتوں کو جاگ کر اللہ کے حضور مدد اور نصرت طلب کریں اور غلطیوں ، کوتاہیوں اور نفرتوں سے درگزر کرنے کی دعا کریں ۔انہوں نے کہاکہ آنے والا کل اللہ کے دین کا ہوگا اور یہ ناممکن نہیں ، اللہ کا وعدہ ہے کہ دین غالب ہوکر رہے گا ۔

مہاجر شہداء کو سلام عقیدت پیش کرتے ہیں ۔ شہداء کے معاملے پر کسی کو سیاست کرنے کی ضرورت نہیں ۔ اگر کچھ کرنا ہے تو اختلافات بھلا کر ایک ہوجائیں ۔ ڈاکٹر محمد انور صدیقی


karachi December 9, 2018 | 6:21 PM

قوم کی مشکلات دن بدن بڑھ رہی ہیں ۔ ایم کیو ایم پاکستان کو کرش کیا جا رہا ہے۔ ہم نے اب کھل کر مہاجر سیاست اور عوامی اجتماعات کا فیصلہ کرلیا ہے۔ چیئرمین ایم این ایم
چاروں طرف سے مہاجر کش آپریشن ہورہا ہے۔ لیکن جنہیں مینڈیٹ دیا گیا وہ خاموشی کا روزہ رکھ کر بیٹھے ہیں۔چیئرمین ڈاکٹر انور کا جلدکنونشن منعقد کرنے کا بھی اعلان
مہاجر نام پر منتخب ہونے والے اسکی کو بٹہ لگا رہے ہیں ۔ فاروق ستار با با نے مہاجر قوم کی پیٹھ پر چھرے گھونپ گھونپ کراسے لہولہان کردیا ہے۔ روبینہ یاسمین سینئر وائس چیئرپرسن
کراچی کے تمام سرکاری اداروں میں مہاجر افسر و ملازمین کو چن چن کر لسانیت کی بنیاد پر نیب اور اینٹی کرپشن نشانہ بنا رہے ہیں ۔ متعدد جیلوں میں ہیں ۔ عقیل انبالوی وائس چیئرمین
آفاق احمد ، فاروق ستار ایک ہی سکے کے دو رخ اور لندن مافیاء مہاجر قوم کو لندن سے بیٹھ کر کچلنے کے لئے متحرک ہے۔ محمد یونس میمن ۔ عارضی جنرل سیکریٹری مہاجر نیشنل موومنٹ
عام انتخابات دھوکہ اور جھرلو تھے۔ ایم کیو ایم کو ہرانے میں خلائی مخلوق پیش پیش تھی۔ محسوس کر رہے ہیں کہ مہاجر سیاست کچل دی گئی ہے۔ شبانہ خانم جوائنٹ سیکریٹری ایم این ایم
مہاجر اشوز پر اب کسی کا انتظار نہیں کرینگے۔ جتنی بھی نشستیں ہیں ایم کیو ایم مہاجر حقوق پر آواز اٹھائے ۔ عادل شفیق سیکریٹری اطلاعات مہاجر نیشنل موومنٹ
تجاوزات کے خاتمے پر وسیم اختر مبارکباد کے مستحق ہیں ۔ سڑکیں کشادہ ہو رہی ہیں ۔ گھروں کے مسمار کرنے پر استعفی کا اعلان مہاجر میئر کا زبردست فیصلہ ہے۔ مرکزی کمیٹی
تحریک انصاف ملک ، قوم ، ایم کیو ایم سے مخلص نہیں ۔ ایم کیو ایم کو اب تک کیا ریلیف ملا جواب دیں ۔ عمرانہ سی ایف ایس جی، فاریہ ، عبدالقیوم ، کرن خان اورناصر خان کا خطاب
کراچی:(نیوزآن لائن) مہاجر نیشنل موومنٹ کے چیئرمین ڈاکٹر محمد انور صدیقی نے کہا ہے کہ مہاجر نام کو کچلنے کی کوششیں ناکام ہوں گیں۔ مہاجر شہداء کو سلام عقیدت پیش کرتے ہیں ۔ شہداء کے معاملے پر کسی کو سیاست کرنے کی ضرورت نہیں ۔ اگر کچھ کرنا ہے تو اختلافات بھلا کر ایک ہوجائیں۔ فاروق ستار ایک دانا سیاست کے بجائے دھوکہ باز مہاجر رہنما کی حیثیت سے سامنے آرہے ہیں جو قبضہ گروپ ہیں ۔ انا کے خول میں بند آمر رہنما کی تقلید میں وہ بند ڈبے میں نظر آرہے ہیں ۔ ڈاکٹر انور نے یہ بات مہاجر نیشنل موومنٹ کے عہدیداران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ چیئرمین ڈاکٹر انور نے جلدکنونشن منعقد کرنے کا بھی اعلان کیا۔ انہوں نے کہا کہ چاروں طرف سے مہاجر کش آپریشن ہورہا ہے۔ لیکن جنہیں مینڈیٹ دیا گیا وہ خاموشی کا روزہ رکھ کر بیٹھے ہیں ۔ ایسے اقتدار سے بہتر ہے کہ عوام کے پاس واپس آکر تحریک چلائی جائے ہم بھی شانہ بشانہ چلنے کو تیار ہیں ۔ ہم نے غیر مشروط حمایت کیں لیکن اب بھی مخالفت برائے مخالفت نہیں کریں گے مخالفت برائے اصلاح کریں گے۔ ہم آفاق احمد ، فاروق ستار ، ندیم احسان ، کی طرح قوم کی تقسیم اور تباہی کے لئے کسی کا ایندھن نہیں بنیں گے۔ لندن کو قوم کا مجرم سمجھتے ہیں وہاں سے تعلق کفر کے برابر ہے جو پاکستان کا نہیں وہ ہمارا نہیں ۔ ڈاکٹر انور نے علاقائی سطح پر ورکرز اجلاس شروع کرنے کا بھی اعلان کیا ۔ اتوار 16دسمبر کو یوم سقوط ڈھاکہ پر گلشن اقبال میں پہلا اجلاس منعقد ہوگا۔ سینئر وائس چیئرپرسن روبینہ یاسمین نے کہا کہ مہاجر نام پر منتخب ہونے والے اسکی کو بٹہ لگا رہے ہیں ۔ فاروق ستار با با نے مہاجر قوم کی پیٹھ پر چھرے گھونپ گھونپ کراسے لہولہان کردیا ہے۔ وائس چیئرمین عقیل انبالوی نے کہا کہ کراچی کے تمام سرکاری اداروں میں مہاجر افسر و ملازمین کو چن چن کر لسانیت کی بنیاد پر نیب اور اینٹی کرپشن نشانہ بنا رہے ہیں ۔ متعدد جیلوں میں ہیں۔ واحد ہم ہیں جس اس پر آواز اٹھا رہے ہیں ۔من مانی نہیں کرنے دیں گے۔ عارضی جنرل سیکریٹری محمد یونس میمن نے کہا کہ آفاق احمد ، فاروق ستار ایک ہی سکے کے دو رخ اور لندن مافیاء مہاجر قوم کو لندن سے بیٹھ کر کچلنے کے لئے متحرک ہے۔جوائنٹ سیکریٹری شبانہ خانم نے کہا کہ عام انتخابات دھوکہ اور جھرلو تھے۔ ایم کیو ایم کو ہرانے میں خلائی مخلوق پیش پیش تھی۔ محسوس کر رہے ہیں کہ مہاجر سیاست کچل دی گئی ہے۔ عادل شفیق نے کہا کہ مہاجر اشوز پر اب کسی کا انتظار نہیں کرینگے۔ جتنی بھی نشستیں ہیں ایم کیو ایم مہاجر حقوق پر آواز اٹھائے۔ تجاوزات کے خاتمے پر وسیم اختر مبارکباد کے مستحق ہیں ۔ سڑکیں کشادہ ہو رہی ہیں ۔ گھروں کے مسمار کرنے پر استعفی کا اعلان مہاجر میئر کا زبردست فیصلہ ہے۔ مرکزی کمیٹی کے دیگر رہنمائوں نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ تحریک انصاف ملک ، قوم ، ایم کیو ایم سے مخلص نہیں ۔ ایم کیو ایم کو اب تک کیا ریلیف ملا جواب دیں ۔ عمرانہ سی ایف ایس جی، فاریہ ، عبدالقیوم ، کرن خان اورناصر خان نے بھی خطاب کیا۔

سینیٹر سراج الحق : منصورہ میں میڈیا اسٹینڈنگ کمیٹی اجلاس سے خطاب


siraj ul dula in lahore news December 2, 2018 | 9:08 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ پاکستان ایک نظریاتی ملک ہے جو نظریے سے ہی مضبوط اور مستحکم ہوگا ۔ اسلامی انقلاب قوم کی منزل ہے ۔ اسلام ہی مسائل کا حل ہے ۔ انسان کے جسم و روح کا سکون اسلام پر عمل پیرا ہونے میں ہے ۔ آئین نے اظہار رائے کی آزادی کا شہریوں کو جو حق دیاہے ، اس پر عمل نہیں ہورہا ۔ میڈیا پر قدغن لگانا اور اسے اپنی مرضی پر چلانا درست طرز عمل نہیں ۔ میڈیا کی آزادی کا نعرہ لگانے والوں کو اپنے وعدوں پر عمل درآمد کا جائزہ لینا چاہیے ۔ پاکستان سمیت عالم اسلام کے ذرائع ابلاغ کو اسلام کی ترویج و اشاعت کے لیے اپنا کردارادا کرنا چاہیے ۔ اسلام کے خلاف مغربی ذرائع ابلاغ کی متعصبانہ مہم کو ناکام بنانے کے لیے ضروری ہے کہ مسلم ممالک کا میڈیا دنیا کے سامنے اسلام کے روشن چہرے کو واضح کرے ۔ جھوٹ ، بہتان بازی اور پروپیگنڈے کے دور میں اسلامی دنیا کے ذرائع ابلاغ کو اپنی الگ پہچان بناناہوگی ۔ جماعت اسلامی صحافیوں کے مسائل کے حل کے لیے ہر فورم پر آواز اٹھائے گی ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے منصورہ میں ہونے والے مرکز ی میڈیا اسٹینڈنگ کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اجلاس سے صدر کمیٹی ڈاکٹر فرید احمد پراچہ ، امیر العظیم اور سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف نے بھی خطاب کیا ۔ اس موقع پر سابق سیکرٹری اطلاعات محمدانور نیازی ، ڈاکٹر طارق سلیم ، شاہد ہاشمی ، شاہد شمسی و دیگر ممبران کمیٹی بھی موجود تھے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ اب وہ دور آگیاہے کہ جب میڈیا کے ذریعے ہم اسلام کے امن پسند ی اور خیر خواہی کے پیغام کو دنیا بھر کے انسانوں تک بڑی آسانی سے پہنچا سکتے ہیں ۔ ذرائع ابلاغ کی ترقی اور سوشل میڈیا کے دور میں تحریک اسلامی کا کام نہایت آسان ہوگیاہے ۔ اب دنیا بھر کی اسلامی تحریکوں کو آگے بڑھ کر اپنے پیغام کو پوری انسانیت تک پہنچانا چاہیے دعوت و تبلیغ کے پھیلائو میں مسلم دنیا کا میڈیا نہایت موثر کردار ادا کر سکتاہے لہٰذا مسلم ممالک کو اس طرف خصوصی توجہ دینی چاہیے ۔ خاص طور پر مغربی میڈیا کے اسلام مخالف رویے اور اسلامو فوبیا جیسے پروپیگنڈے کو ناکام بنانے کے لیے اسلامی ممالک کے الیکٹرانک میڈیا کو میدان میں آناچاہیے اور دنیا کی مختلف زبانوں میں قرآن و حدیث کے تراجم پیش کرکے انسانیت کو گمراہی کے اندھیروں سے نکال کر حق کی روشنی کی طرف لانا چاہیے ۔ انہوںنے کہاکہ اگر مسلم دنیا کا میڈیا اپنے اس فرض کو پہچان لے تو دنیا بھر میں مسلمانوں پر ہونے والے مظالم کو ختم کیا جاسکتاہے اور کشمیر اور فلسطین جیسے دیرینہ مسائل کو بھی حل کیا جاسکتا ہے ۔

سینیٹر سراج الحق : ایوان اقبال میں خاتم الانبیاء ۖ کانفرنس سے خطاب


pic sirajul haq November 25, 2018 | 7:52 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سرا ج الحق نے کہاہے کہ آئین پاکستان میں قادیانیوں سمیت تمام اقلیتوں کے حقوق کا واضح تعین کردیاگیاہے لیکن قادیانی خو د کو غیر مسلم تسلیم کرنے کی بجائے آئین پاکستان کے خلاف سازشوں میں مصروف ہیں ۔ آئین سے غداری کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی ۔ حکومتی وزیر اور مشیر قادیانیوں کی سرپرستی چھوڑ دیں اور آئین کی حفاظت کے حلف کی پاسداری کریں ۔ غلامان مصطفےٰۖ کسی کو آئین سے کھلواڑ کرنے کی اجازت نہیں دیں گے ۔ دستور قومی وحدت و یکجہتی کی علامت ہے اس کی حفاظت کے لیے کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے ۔ حکومت کے سو دن پورے ہونے کو ہیں مگر ابھی تک تبدیلی کا دور دور تک کوئی نشان نہیں ۔ ختم نبوتۖ اور ناموس رسالتۖ کے تحفظ کے لیے پوری قوم ایک پیج پر ہے ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے جماعت اسلامی لاہور کے زیراہتمام ایوان اقبال میں خاتم الانبیاء ۖ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ کانفرنس سے جماعت اسلامی لاہور کے امیر ذکر اللہ مجاہد ، جسٹس ریٹائرڈ خلیل الرحمن خان ، ڈاکٹر ارباب عالم ، پروفیسر عامر متین اور،اوریا مقبول جان نے بھی خطاب کیا ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ قادیانی اسلام اور آئین پاکستان کے غدار ہیں ان کی خواہش ہے کہ دستور پاکستان سے اسلامی دفعات ، خاص طور پر قادیانیوں کو کافر قرار دینے اور 295 سی جیسی دفعات کا خاتمہ کر کے اسے مکمل سیکولر دستور بنا دیا جائے لیکن قوم ان سازشوں کو مزید برداشت نہیں کرے گی ۔ انہوںنے کہاکہ حکمرانوں کو بھی اپنا قبلہ درست اور قادیانیوں کی سرپرستی چھوڑ کر اپنی آئینی ذمہ داریوں کو پورا کرنا ہوگا ۔ انہوں نے کہاکہ قوم حکمرانوں کی ہر کوتاہی معاف کر سکتی ہے مگر قادیانیوں کے ساتھ حکومتی آفیشلز کا میل ملاپ اور انہیں سر پر بٹھانے کے اقدامات کو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا ۔ انہوںنے کہاکہ آئین پاکستان اقلیتوں کے حقوق کی مکمل حفاظت کی ضمانت دیتاہے غیر مسلموں کو اپنے مذہب پرعمل کرنے کی مکمل آزادی ہے ۔ ہم پاکستان میں غیر مسلموں کے خلاف نہیں ، قادیانی خود کو غیر مسلم تسلیم کریں تو ان سے بھی کسی کو کوئی اختلاف نہیں ہوگا ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ حکومت کو یوٹرن لینے اور یوٹرن کے جواز پیدا کرنے کی بجائے رائٹ ٹرن لے کر اپنے وعدوں کی تکمیل کی طرف توجہ دینی چاہیے ۔ حکومت کے سو دن پورے ہونے کو ہیں مگر اب تک اس کے پاس اپنے منشور ، وعدوں اور دعوئوں پر عمل درآمد کے حوالے سے کوئی ایک مثال بھی نہیں ۔ انہوںنے کہاکہ عوام ریلیف چاہتے ہیں ۔ غربت ، مہنگائی ، بے روزگاری اور بدامنی سے نجات چاہتے ہیں ۔ عوام کو دعوئوں اور نعروں سے زیادہ دیر بہلایا نہیں جاسکتا ۔
کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی لاہور ذکر اللہ مجاہد نے کہاکہ خاتم النبیین ۖ کی ناموس کی حفاظت کے لیے عاشقان مصطفی ۖ اپنی جانیں نچھاور کرنے کو اپنے لیے سعادت سمجھتے ہیں ۔ ختم نبوت اور ناموس رسالت کی حفاظت کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ ملک میں آپ ۖ کی شریعت کا نفاذ ہو ۔

سرکاری نیلامی کے عمل کو آسان اور شفاف کیا جارہا ہے۔ مرتضیٰ وہاب


murtuza wahab November 25, 2018 | 3:10 PM

پروکیورمنٹ سے متعلق اعلیٰ سطحی اجلاس کی صدارت میں مشیر قانون کے احکامات
کراچی :( نیوزآن لائن ) وزیر اعلیٰ سندھ کے مشیر اطلاعات و قانون اور اینٹی کرپشن بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ سرکاری نیلامی کے عمل کو نمایاں اور شفاف بنانے کے لیے پروکیورمنٹ اتھارٹی کو جدید خطوط پر استوار کیا جائے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سندھ پبلک پروکیورمنٹ ریگولیٹری اتھارٹی کے اعلیٰ سطحی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ صوبائی مشیر نے ہدایات دیں کہ سرکاری نیلامی کے ٹینڈر کے بولی دہندگان کی تمام جائز شکایات اور اس کو رفع کرنے سے متعلق تجاویز کو دستاویز میں رکھنا ہوگا تاکہ بعد میں کسی بھی بولی دہندہ کو اس کے کاغذات سے متعلق جانچ پڑتال کو سامنے لایا جاسکے۔ پروکیورمنٹ ریگولیٹری اتھارٹی کے مینیجنگ ڈائریکٹر محمد اسلم غوری نے صوبائی مشیر کو پروکیورمنٹ سے متعلق قانون سازی کی پروجیکٹر پر پریزنٹیشن دیتے ہوئے آگاہی دی۔ صوبائی مشیر نے کہا کہ بولی دہندگان کی تعداد کو متعلقہ ٹینڈر سے متعلق کم سے کم پورے ٹینڈر کی رقم کا دو فیصد زر ضمانت قابلِ واپسی جمع کرانے کو لازم کیا جائے تاکہ بولی دہندہ کی سامنے آنے والی کسی بھی شکایت کو اس کی ٹینڈر سے متعلق دلچسپی و دل جمعی کے تحت اس کی شکایت کو دور کرنے میں پروکیورمنٹ اتھارٹی کو آسانی ہوسکے مزید برآں صوبائی مشیر نے ہدایت دی کہ بولی دہندگان کو ٹینڈر جمع کرنے کیلئے متعلقہ دفاتر کے علاوہ ضلعی انتظامیہ کے دفاتر میں بھی اس کو جمع کرنے کا انتظام کیا جائے تاکہ کسی بھی وجہ سے بولی دہندہ اگر متعلقہ ادارے کے دفتر تک نہ پہنچ سکے تو متعلقہ ضلعی انتظامیہ کے دفتر میں ٹینڈر سے متعلق اپنی بولی جمع کرسکے اس کے علاوہ بذریعہ ڈاک اور ای میل کے ذریعے بھی ٹینڈر جمع کرانے کیلئے الیکٹرانک نظام کو مؤثر بنایا جائے جس میں زر ضمانت کے پے آرڈر کے نمبر کے اندراجات اس ای میل کے ذریعے ارسال ہوں۔ اجلاس میں سیکرٹری جنرل ایڈمنسٹریشن عبد الوہاب سومرو ، مینیجنگ ڈائریکٹر سندھ پبلک پروکیورمنٹ ریگولیٹری اتھارٹی محمد اسلم غوری، سیکریٹری قانون محمد شارق، ڈائریکٹر پروکیورمنٹ جاوید صبغت اللہ مہر، پروکیورمنٹ اسپیشلسٹ علی امام قادری اور دیگر افسران نے شرکت کی۔

نظام مصطفی پارٹی کا کراچی میں چائنا قونصلیٹ پر دہشت گردی کے حملے کی شدید الفاظ میں مذمت


nizam mustafa party news November 25, 2018 | 2:43 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)نظام مصطفی پارٹی کے سربراہ سابق وفاقی وزیرڈاکٹرحاجی محمدحنیف طیب ،میاں خالد حبیب ایڈووکیٹ،وسیم ممتازایڈووکیٹ،قاضی شبیراحمد،الحاج محمدرفیع ،پیر زادہ غلام حسین چشتی نے کراچی میں چائنا قونصلیٹ پر دہشت گردی کے حملے کی شدیدالفاظ میں مذمت کی اور اس کے نتیجے میں دوپولیس اہلکارسمیت چارافرادکی ہلاکت پرافسوس کا اظہارکیا۔انہوںنے کہاکہ آپریشن میں موجودقانون نافذکرنے والے ادارے خراج تحسین کے مستحق ہیں کہ جنہوں نے بروقت کارروائی کرکے بڑے نقصان سے بچایااور ملک دشمن عناصرکے ناپاک عزائم کو خاک میں ملاکر سفارت خانے میں موجودچینی عملہ کی جان ومال کو محفوظ بنایا۔انہوںنے کہاکہ سی پیک منصوبہ پاکستان کی معاشی،تجارتی،اقتصادی اور معاشرتی ترقی کے لئے مفید ہوسکتاہے جس کو ملک دشمن عناصر ناکام بنانے کی کوششیں کررہے ۔ملک دشمن عناصر یہ بات بھی جان لیں کہ ایسے واقعات سے پاک چین دوستی کومتاثر نہیں کیاجاسکتاہے۔انہوں نے کہاکہ موجودہ حالات میں پاکستان کواندرونی اور بیرونی طورپرمضبوط بنانے اور مستحکم کرنے کی ضرورت ہے۔سیاسی محاظ آررائی کے باعث پاکستان میں دہشت گردی کوروکنے کے لئے بنائے گئے قوانین پر مؤثر عمل درآمدجس طرح سے ہوناچاہیے تھانہیں ہوپارہا۔انہوںنے کہاکہ عوام یہ جانناچاہتی ہے کہ ملک دشمن عناصر کی دہشت گردانہ سرگرمیوں کو روکنے کے لئے نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمدکیوں نہیں ہورہا۔یہ حملہ آورکون تھے۔ان کا تعلق کہاسے تھا۔ان کاماسٹر مائنڈکون تھااس کو بے نقاب کرکے کیفرکردارتک پہنچایاجائے۔

امیر جماعت اسلامی پاکستا ن سینیٹر سراج الحق کاخرطوم میں سوڈان کے نائب صدر علی عثمان طہٰ سے ملاقات


pic siraj ul haq- 01 November 18, 2018 | 11:27 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستا ن سینیٹر سراج الحق نے خرطوم میں سوڈان کے نائب صدر علی عثمان طہٰ اور تحریک اسلامی سوڈان کے سربراہ ڈاکٹر احمد الحسن الزبیر سے الگ الگ ملاقات کی ۔ ملاقات میں جماعت اسلامی پاکستان کے ڈائریکٹر امور خارجہ عبدالغفار عزیز بھی موجود تھے۔ سینیٹر سرا ج الحق نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ مسئلہ کشمیر و فلسطین ، روہنگیا مسلمانوں کا برمی فوج کے ہاتھوں قتل عام اور افغانستان و شام امت کے اجتماعی مسائل ہیں ،ان مسائل کے حل کے لیے عالم اسلام کو متحد ہونا پڑے گا ۔ جب تک مسلم ممالک میں عوام کے حقیقی نمائندے برسر اقتدار نہیں آتے ، امت کے مسائل حل نہیں ہوں گے ۔ انہوںنے کہاکہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں پونے دو ارب مسلمانوں کا کوئی ایک بھی نمائندہ ملک نہیں ۔ دنیا میں 60 کے قریب اسلامی ممالک ہیں لیکن ان کی آواز صدا بہ صحرا بن کر رہ گئی ہے ۔ ستر سال سے کشمیر و فلسطین میں مسلمانوں کا قتل عام جاری ہے مگر اقوا م متحدہ کے کان پر جوں تک نہیں رینگی ۔ انہوں نے کہاکہ پوری امت کو اپنے مظلوم کشمیری و فلسطینی بھائیوں پر ہونے والے ظلم کے خلاف آواز بلند کرنی چاہیے اور شام و افغانستان اور یمن کے مسائل کو حل کرنا ہوگا۔

تیسر ٹائون میں کرنٹ لگنے سے 4سالہ خضر کے ورثاء کو انصاف فراہم کیا جائے حافظ نعیم الرحمن


hafiz naeem rehman November 18, 2018 | 11:20 PM

کے الیکٹرک کی انتظامیہ اور متعلقہ ذمہ داران کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے ، جماعت اسلامی متاثرہ خاندان کے ساتھ ہے
شکایت کر نے پر علاقے کو ہائی لاسز زون قرار دے کر عملے کو نہ بھیجنا انتہائی غیر انسانی اور سفاکانہ رویہ ہے
کراچی : (نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ کے الیکٹرک کی نا اہلی اور غیر انسانی رویہ کے باعث تیسر ٹائون میں 4سالہ خضر کے جاں بحق ہو نے پر کے الیکٹرک کی انتظامیہ اور متعلقہ ریجن اور ڈیپارٹمنٹ کے ذمہ داران کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے اور بچے کے ورثاء کو انصاف فراہم کیا جائے ۔ جماعت اسلامی متاثرہ خاندان کے ساتھ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کے الیکٹرک کے تاروں سے کرنٹ لگنے سے تیسر ٹائون میں 4سالہ خضر کی ناگہانی موت’ ہلاکت کا دوسرا واقعہ ہے ۔اس سے قبل ملیر میں بھی معصوم اذہان بارش کے دوران تار گر نے اور کرنٹ لگنے سے جاں بحق ہو ا جبکہ تاروں سے کرنٹ لگنے سے دو بچے اپنے ہاتھوں سے محروم ہو چکے ہیں ۔ علاوہ ازیں پی ایم ٹی گر نے کے واقعے میں بھی شہری کے زخمی ہونے کی اطلاعات موجود ہیں ۔ کرنٹ لگنے والے تمام واقعات میں تاروں کے گر نے اور کرنٹ پھیلنے کی اطلاع کے الیکٹرک کو دی گئی مگر عملے اور متعلقہ ذمہ داران کی طرف سے مجرمانہ غفلت و لاپرواہی اور بے حسی کا مظاہرہ کیا گیا ۔ شکایت کر نے اور اطلاع دینے کے باوجود کے الیکٹرک والے تاروں کو درست کر نے نہیں آئے جس کی وجہ سے قیمتی انسانی جانیں ضائع ہوئیں ۔ جبکہ اس حالیہ واقعے میں انتہائی غیر انسانی اور سفاکانہ رویے کا مظاہرہ کیا گیا اور علاقہ مکینوں کی شکایت پر اس علاقے کو ہائی لاسز زون قرار دے کر عملے کو نہیں بھیجا گیا اور بالآخر یہ سانحہ رونما ہوا اور ایک بچہ اپنی جان کی بازی ہار گیا ۔ حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ کے الیکٹرک کا ادارہ کراچی کے عوام کے لیے زحمت بن چکا ہے اور اس کی نا اہلی و ناقص کارکردگی سے شہری سخت نالاں ہیں ۔ لوڈشیڈنگ ،اووربلنگ اور اب بریک ڈائون نے عوام کی زندگی اجیرن بنا کر رکھ دی ہے لیکن اس سے کوئی پوچھنے اور جواب طلب کر نے والا نہیں ۔ نیپرا کی جانب سے صرف نمائشی اقدامات اور بیانات کے بعد خاموشی اختیار کر لی جاتی ہے ۔ اب صورتحال انتہائی سنگین ہوتی جا رہی ہے اور کے الیکٹرک کی نظر میں انسانی جانوں کی بھی کوئی اہمیت نہیں ہے ۔ کرنٹ لگنے سے بچے کی ہلاکت کا حالیہ واقعہ اس کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی و صوبائی حکومتوں اور حکومتی پارٹیوں کے عوامی نمائندوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ اس معاملے پر چشم پوشی اختیار کر نے کے بجائے کے الیکٹرک کے خلاف سخت کارروائی کر نے کے لیے اپنا کردار ادا کریں ۔ متاثرہ خاندانوں کو انصاف فراہم کریں اور عوام کو ریلیف دلائیں ۔انہوںنے کہا کہ جماعت اسلامی مظلوموں کے شانہ بشانہ کھڑی ہے اور ان کو ان کا حق دلانے کے لئے ہرممکن کوشش کرے گی۔اگر اس سے قبل کے الیکٹرک کی وجہ سے ہلاک اور زخمی ہونیوالوں کی داد رسی حکومت اور عدالتیں بروقت کر دیتیں تو بعد کے واقعات سے بچا جاسکتا تھا۔اگر اب بھی عدالتیں فیصلے جلددیں تو آئندہ واقعات کی پیش بندی ہوسکتی ہے۔

ابھی تک حکومت نے مہاجروں کیلئے کوئی پیکیج نہیں دیا: ڈاکٹر سلیم حیدر


dr saleem haider MIT November 18, 2018 | 11:03 PM

قومی دھارے کے نام پر مہاجروں کو دیوار سے لگایا جارہا ہے ، اسٹیبلشمنٹ سندھ کے مہاجروں پر توجہ دے
ایم کیوایم بہادر آباد گروپ یہ بتائے کہ اس نے کن شرائط پر پی ٹی آئی کی حکومت سے وزارتیں لیں
کراچی:(نیوزآن لائن)مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کی حکومت بتائے کہ انہوں نے اب تک سندھ کے مہاجروں کیلئے کون سے پیکیج کا اعلان کیا ہے اور اس حکومت میں مہاجروں کے حوالے سے کیا پالیسیاں ہیں۔ قومی دھارے کے نام پر مہاجروں کو دیوار سے لگایا جارہا ہے ۔ مہاجر ہمیشہ قومی دھارے میں رہے ہیں لیکن ان کے مسائل کبھی حل نہیں کئے گئے اور نہ ہی کبھی سیاسی جماعتوں اور اسٹیبلشمنٹ نے سندھ میں آباد مہاجروں کے مسائل حل کرنے پر توجہ دی۔ یہی وجہ ہے کہ ہر آنے والے دن کے ساتھ مہاجروں کے مسائل میں اضافہ ہوتا جارہا ہے لیکن اسٹیبلشمنٹ سندھ میں نئے نئے تجربات کرکے مہاجروں کے کیس کو خراب کرنے میں مصروف ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ایم کیوایم بہادر آباد گروپ یہ بتائے کہ اس نے کن شرائط پر پی ٹی آئی کی حکومت سے وزارتیں لیں اور ان کی وزارتیں لینے سے مہاجروں کو اب تک کیا فوائد ملے ہیں۔ اس سے پہلے وہ 30 سال تک صوبائی اور وفاقی حکومت میں وزارتیں اور مشیری لیتے رہے کیا اس کے بعد مہاجر مسائل حل ہوگئے، کیا مہاجر قومیت مستحکم ہوئی ، کیا مہاجر نوجوانوں کو باعزت روزگار اور تعلیم کے مواقع میسر آگئے۔ انہوں نے کہاکہ ایم کیوایم نے سب سے زیادہ مہاجروں کے کیس کو خراب کیا۔ ہم جو بات 20 سال سے کہتے آئے ہیں آج ایم کیوایم کے مرکزی قائدین وہی الزامات ایک دوسرے کو لگارہے ہیں لیکن اب بھی سوائے مفادات اور مالی وسائل سمیٹنے کے کچھ بھی نہیں کیا جارہا ہے۔