: تازہ ترین

تازہ ترین ویڈیو

طیارہ حادثہ نے عید کی خوشیوں کو غم میں بدل دیا ہے حافظ نعیم الرحمن


Eid Milan Idara Pic copy May 26, 2020 | 9:47 PM

حادثہ حکومت اور پی آئی اے کی نااہلی ہے،عید کے موقع پر بھی الخدمت کے رضاکار کوروناریلیف کا کام کررہے ہیں عید ملن کے شرکاء سے گفتگو
حافظ نعیم الرحمن عید کے دن نعمت اللہ خان ، برجیس احمد ، راشد قریشی اور عظیم بلوچ کے گھر گئے اور اہل خانہ سے ملاقات کی
کراچی :( نیوزآن لائن)جماعت اسلامی کراچی کی روایتی عید ملن یکم شوال کوادارہ نورحق میں منعقد ہوئی۔عید ملن ملک بھر میں کورونا وائرس کی وباکے پیش نظراحتیاطی تدابیر اختیار رکھتے ہوئے غیر رسمی رکھی گئی جس میں جماعت اسلامی کے ذمہ داران اور دیگر طبقہ فکر کے افراد نے شرکت کی اور ایک دوسرے کو عید کی مبارکباد دی ۔عید ملن میں نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان اسد اللہ بھٹو ،جماعت اسلامی صوبہ سندھ کے امیر محمد حسین محنتی ،امیر کراچی حافظ نعیم الرحمن،نائب امیر کراچی راجا عارف اسلطان،ڈپٹی سکریٹریز کراچی راشد قریشی ،یونس بارائی، سکریٹری اطلاعات زاہد عسکری ، ڈپٹی سکریٹریزاقبال چوہدری، صہیب احمد، ایڈیٹر روزنامہ جسارت مظفر اعجاز،معروف صحافی واجد انصاری ودیگر رہنماؤں، ذمہ داران اور کارکنان شریک ہوئے اور عید کی مبارکبا د دی ۔عید ملن صبح 11بجے سے ایک بجے تک جاری رہی۔اس موقع پر جماعت اسلامی پاکستان کے نائب امیر اسد اللہ بھٹو نے سانحہ طیارہ کے شہداء اور کورونا وائرس سے شہید ہونے والے تمام افراد کے لیے خصوصی دعا بھی کرائی ۔حافظ نعیم الرحمن نے عید ملن کے موقع پر شرکاء سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اہل وطن اورپور ی امت مسلمہ کو عید مبارک، طیارہ حادثہ نے عید کی خوشیوں کو غم میں بدل دیا ہے،پوری قوم کو غمگین کردیا ہے ۔طیارہ حادثہ حکومت اور پی آئی اے انتظامیہ کی نااہلی ہے جس پر سوالات اٹھائے جارہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ طیارہ حادثے کی فوری تحقیقات ہونی چاہیے تاکہ آئندہ ایسے واقعات رونما نہ ہوں۔انہوں نے کہاکہ عید کے اس پرمسرت موقع پر بھی جماعت اسلامی اور الخدمت کے رضاکار کورونا وائرس سے بچاؤ اور عوامی ریلیف کا کام کررہے ہیں اوروہ لوگ جو لاک ڈاؤن او ر کوروانا وائرس کی وبا سے متاثر ہوئے ہیں ان کے ساتھ عید منارہے ہیں ۔ عید ملن میں جماعت اسلامی اقلیتی ونگ کے رہنماء یونس سوہن ایڈووکیٹ کی زیر قیادت اقلیتی نمائندوں کے وفد نے بھی شر کت کی اورحافظ نعیم الرحمن و دیگر سے ملاقات کی۔وفد میں نائب صدر منارٹی ونگ سیموئیل نذیر،جنرل سکریٹری پرویز برکت،پادری نقاش عباس، ادریس بھٹی،پاسٹر ولسن ،پاسٹر افضل،پاسٹر محسن اقبال،پاسٹر جانسن،پاسٹر بابر،پرویز وکی،آصف زاہد،یشوع محمود،انتھونی ولسن،ارشد بوٹا و دیگر شامل تھے۔
دریں اثناء امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے عید کے دن سابق سٹی ناظم نعمت اللہ خان مرحوم ،نائب امیر جماعت اسلامی کراچی برجیس احمد کی اہلیہ اور نائب قیم راشد قریشی کے والد کے انتقال پر ان کے گھر جاکر اہلخانہ ولواحقین سے ملاقات بھی کی ۔علاوہ ازیں وہ جماعت اسلامی سندھ کے رہنما عظیم بلوچ مرحوم کے گھر بھی گئے اور ان کے اہل خانہ سے ملاقات کی ۔

سماجی رابطوں میں دوری پر عمل کرتے ہوئے عیدالفطر منائی جائے۔ سید قاسم نوید قمر


qasim naveed qamar May 26, 2020 | 9:42 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) وزیر اعلی سندھ کے معاون خصوصی برائے محکمہ بحالی خصوصی افراد سندھ سید قاسم نوید قمر نے کہا ہے کہ عید الفطر خوشیوں بھرا تہوار ہے لیکن اس مرتبہ عید ایسے موقع پر آئی ہے جب ایک طرف کورونا وائرس سے پوری دنیا متاثر ہے اور دوسری طرف پی آء اے کے جہاز کریش ہو جانے کی وجہ ہونے والی شہادتوں کی وجہ سے پاکستانیوں کے دل بوجھل ہیں۔ لہذا ہمیں یہ عید سادگی اور سماجی رابطوں میں دوری کو اپناتے ہوئے منانے کی ضرورت ہے۔ یہ بات آج انہوں نے بخاری ہاس ٹنڈو محمد خان میں رکن سندھ اسمبلی سید اعجاز علی شاہ اور دیگر سے ملاقات کے دوران کہی۔ بعد ازاں وزیر اعلی سندھ کے معاون خصوصی سید قاسم نوید قمر سومرو ہاس ٹنڈو محمد خان گئے اور پارٹی رہنما خرم کریم سومرو سے ملاقات کی اور انہیں عیدالفطر کی مبارکباد دی۔ علاوہ ازیں وزیر اعلی سندھ کے معاون خصوصی سید قاسم نوید قمر نے قمر ہاس ٹنڈو محمد خان میں لوگوں اور معززین شہر سے بھی ملاقات کی اور انہیں عیدالفطر کی مبارکباد دی۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں چاہیے کہ عید سادگی سے مناتے ہوئے سماجی رابطوں میں دوری کی پالیسی اپنائیں تاکہ کورونا وائرس سے محفوظ رہ سکیں

سندھ حکومت کا صوبے میں ٹڈی دل کے خاتمے کیلیے عید کے روز بھی کئی علاقوں میں اسپرے جاری


locusts May 26, 2020 | 9:40 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) سندھ حکومت کی جانب سے صوبے میں ٹڈی دل کے خاتمے کیلیے عید کے روز بھی کئی علاقوں میں اسپرے کیا گیا.وزیرزراعت سندھ محمد اسماعیل راہو نے اپنے جاری کردہ بیان میں مزید کہاہے کہ سندھ کے دو نہیں بلکہ 9 اضلاع ٹڈی دل سے متاثر ہوئے ہیں, عید کہ دوسرے دن بھی محکمہ زراعت کی ٹیموں نے مختلف اضلاع میں ٹڈی دل کے خاتمے کیلیے خیرپور, سانگھڑ, شہید بینظیر آباد, کشمور کند ھکوٹ, دادو, قمبرشھدادکوٹ, مٹیاری, جامشورو, حیدرآباد, تھرپارکر اور بدین میں 1408 ایکڑ اسپرے کیا گیا. انہوں نے کہا کہ وفاق کی طرف سے سندھ میں ابھی تک کوئی فضائی اسپرے شروع نہیں کیا گیا, موسم گرما کی فصلوں میں ٹڈی دل کے حملوں سے 451 ارب کا نقصان ہونے کا خدشہ ہے, ٹڈی دل سے انسانوں کو کوئی خطرہ نہیں فصلیں تباھ کردیتی ہے, اس وقت بڑی تعداد میں ٹڈی دل بلوچستان سے سندھ اور جنوبی پنجاب میں داخل ہورہی ہے. اسماعیل راہو نے وفاق پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ٹڈی دل اتنا بڑا قومی مسئلہ ہے ابھی تک وفاق کی عدم توجہ کا شکار ہے, کاش وزیراعظم صاحب نتھیا گلی گھومنے کے بجائ جہاز حادثہ، کورونا اور ٹڈی دل کے مسائل پر تھوڑا غور کر لیتے, موجودہ حکومت کی نااہلی کی وجہ سے ٹڈی دل سے ملک ایک نئے بحران کا شکار ہوگا.صوبائی وزیر نے کہا کہ زراعت تباہ ہوئی تو قحط اور غذائی قلت جیسے بڑے مسائل سر اٹھائینگے,عوام نے نتھیا گلی گھومنے کے بجائے، کورونااورٹڈی جیسی مصیبتوں کاسامناکیا,ٹڈی دل کوئی بیماری نہیں پھیلاتی اورنہ ہی جانوروں پرحملے کرتی ہے یہ صرف فصلوں پر حملہ کرتی ہے, ٹڈی دل سندھ میں صوبے کی سالیانی 70 فیصد بجٹ جتنا فصلوں کو نقصان پہنچا سکتی ہے. اسماعیل راہو نے کہا کہ ٹڈی دل سندھ کی ریگستا نی 7 اضلاع سمیت 10 اضلاع میں فصلیں مکمل تباہ کرسکتی ہے.

بھارت خیبر پختونخوا ور بلوچستان میں انتشار پھیلا رہا ہے۔ شاہ محمود قریشی


shah mehmood qureshi May 24, 2020 | 1:37 PM

ملتان:(نیوزآ ن لائن )وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بھارت خیبر پختونخوا کے قبائلی اضلاع اور بلوچستان میں بھارت پھیلا رہا ہے۔ تفصیلات کے مطا بق ملتان میں نمازعید کے ادائیگی کے بعد شاہ محمود قریشی نے کہا کہ بھارت بلوچستان میں انتشار پھیلا رہا ہے، بھارتی جاسوس کلبھوشن بھی بلوچستان سے گرفتار ہوا تھا۔ خیبر پختونخوا کے قبائلی علاقوں اور بلوچستان میں بھارت شر پسندوں سے رابطے میں ہے۔ بھارت ہماری امن کی خواہش کو کمزوری نہ سمجھے اور ہمارا واضح پیغام ہے کہ اگر جارحیت ہوئی تو منہ توڑ جواب دیں گے۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ کشمیر میں آج بھی کرفیو ہے، کشمیریوں کو نماز کی اجازت نہیں، اہل کشمیر مظالم کا شکار ہیں اللہ انہیں سرخرو کرے۔

صدر اور وزیراعظم کی قوم کو عید الفطر کے موقع پر مبارکباد


arif alvi and imran khan May 24, 2020 | 11:57 AM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن)صدرڈاکٹرعارف علوی اور وزیراعظم عمران خان نے قوم کو عید الفطر کے موقع پر مبارکباد دیتے ہوئے احتیاطی اقدامات پر عملدرآمد پر زور دیا ہے ۔صدرڈاکٹر عارف علوی نے اپنے پیغام میں کہا کہ پوری قوم یکجہتی اور احتیاطی اقدامات پر عملدرآمد کے ذریعے ہی کوروناوائرس سے پیدا ہونے والی صورتحال سے نبردآزما ہوسکتی ہے۔صدر نے کہا کہ اس مبارک اور پرمسرت موقع پر ہمیں معاشرے کے ضرورت مند اور مستحق افراد کو ہر گز فراموش نہیں کرنا چاہیے اور انہیں عید کی خوشیوں میں شامل کرکے مزہ دوبالا کرنا چاہیے جبکہ وزیراعظم نے کوروناوائرس کے حوالے سے احتیاطی اقدامات اور حکومت کی جانب سے وضع کردہ ضابطہ کار پر سختی سے عملدرآمد پر بھی زور دیا کیونکہ اس حکمت عملی سے ہی لوگ اپنی اور اپنے پیاروں کی زندگیوں کو محفوظ بناسکتے ہیں۔وزیراعظم نے کہا کہ ہم نے رمضان المبارک کے دوران ہم آہنگی، ضبط وتحمل اور حسن سلوک کے جس طرز عمل کا مظاہرہ کیا، ہمیں ان خوبیوں کو مستقل طور پر اپنی زندگیوں میں اختیار کرنا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ پوری عالمی برادری کو کوروناوائرس کے چیلنج کا سامنا ہے اور تمام ممالک اس کے پھیلائو پر قابو پانے کی کوششیں کررہے ہیں۔

ملک بھر میں آج عید الفطر منائی جارہی ہے


eid ul azha in pakistan May 24, 2020 | 11:33 AM

کراچی:(نیوزآن لائن) ملک بھر میں عیدالفطر آج سادگی سے منائی جا رہی ہے۔ تفصیلات کے مطابق ملک کے تمام چھوٹے بڑے شہروںمیں عید الفطر کی نماز کے اجتماعات منعقد کیے گئے،جس میں ملک کی سلامتی، ترقی، خوشحالی، پی آئی اے طیارہ حادثہ اور کرونا سے جاں بحق افراد کے لیے مغفرت اور بلندی درجات کی دعائیں مانگی گئیں، اس موقع پر ملکی سلامتی اور استحکام کے لیے خصوصی دعائیں مانگی گئیں۔گورنر سندھ عمران اسماعیل نے عید الفطر کی نمازگورنر ہاس کے لان میں ادا کی۔اراکین صوبائی اسمبلی،چیف سی پی ایل سی نے بھی نماز عید ادا کی۔گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے گورنر ہائوس لاہور میں نماز عید ادا کی۔اس موقع پر چوہدری محمد سرور کا کہنا تھا کہ اللہ پاکستان سے کرونا جیسی وبا کاجلدخاتمہ کرے،کرونا سے بچا کے لیے عوام احتیاطی تدابیر پرعمل کریں۔وزیراعلی خیبرپختونخوا محمود خان،چیف سیکرٹری اور دیگر شخصیات نے گورنر ہاس پشاور میں نماز عید ادا کی۔وزیراعلی بلوچستان جام کمال خان نے عیدکی نماز وزیراعلی سیکریٹریٹ میں ادا کی۔عیدالفطر کے موقع پر خصوصی پیغام ٹوئٹ کرتے ہوئے وزیر اعظم پاکستان عمران خان کا کہنا تھا کہ میں چاہتا ہوں کہ اس مرتبہ قوم روایت سے ہٹ کر عید الفطر کی خوشیاں منائے۔

جب تک کورونا ٹیسٹ فری نہیں ہوتا مریضوں کی اصل تعداد سامنے نہیں آئے گی ۔ سراج الحق


siraj ul haq May 15, 2020 | 11:27 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ جب تک کورونا ٹیسٹ فری نہیں ہوتا مریضوں کی اصل تعداد سامنے نہیں آئے گی۔کورونا ٹیسٹ اتنا مہنگا ہے کہ کسی غریب کے بس کی بات نہیں اور اگر کسی گھر کے چار پانچ افراد ہیں تو وہ چالیس پچاس ہزار روپے کہاں سے لا سکتا ہے ۔کورونا مریضوں کے ساتھ اچھوتوں والا سلوک دیکھ کر کوئی بھی خود کو مریض ظاہر کرنے پر تیار نہیں ۔اس لئے حکومت کو فوری طور پر کورونا ٹیسٹ مفت کرتے ہوئے مریضوں کے ساتھ ہمدردی اور خیر خواہی کا رویہ اپنانا ہوگا تاکہ کورونا کے پھیلائو کو روکا جاسکے ۔قوم اس وبا سے بچنے کیلئے توبہ و استغفار کا رویہ اختیار کرے ،کرپشن ،ملاوٹ ،جھوٹ اوربدیانتی سے توبہ کرکے خوف خدا اور تقویٰ کی روش اختیار کرنا ہوگی۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ میں مختلف وفود سے ملاقات کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا۔
سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ آج دنیا بھر کی سپر طاقتیں کورونا کے معمولی وائرس کے سامنے بے بس ہیں ،ان طاقتوں نے دنیا بھر میں انسانوں خاص طور پر مسلمانوں پر زندگی تنگ کر رکھی تھی اور لاکھوں معصوم انسانوں کا خون بہا یا ۔اللہ کے نظام کا مذاق اڑانے والوں کو آج کچھ سجھائی نہیں دے رہا ۔ اللہ تعالیٰ کے عطا کردہ پاکیزہ خاندانی نظام کو تباہ کرکے ہم جنس پرستی کا شرمناک طریقہ اختیار کیا۔دنیا بھر کے وسائل پر غاصبانہ قبضہ کیا اور غریب ملکوں کو سودی قرضوں کے نیچے دبا کر ان کے عوام پرغربت اور تنگ دستی مسلط کی۔انہوں نے کہا کہ جب حق کے مقابلے میں ظلم و جبر بڑھ جائے تو پھر اللہ تعالیٰ کا قانون حرکت میں آتا ہے اور ظالموں کو بچ نکلنے کا موقع نہیں ملتا۔
سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ حق و باطل کا معرکہ ابد سے ہے اور ازل تک جاری رہے گا۔وہ لوگ خوش قسمت اور اللہ تعالیٰ کے پسندیدہ ہیں جو تمام تر پریشانیوں اور مشکلات کے باوجود حق کا ساتھ نہیں چھوڑتے اور حق کے مورچے میں بیٹھ کر باطل کا مقابلہ کرتے ہیں جبکہ اللہ کے غضب کا نشانہ بننے والے لوگ انتہائی بدقسمت ہیں جو باطل کے لشکر میں شامل ہوکر حق کو مٹانے کیلئے لڑتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ آخری پیغمبر ۖ کی امت ہونے کے ناطے ہمیں اپنی ذمہ داریوں کا ادراک کرنا چاہئے اور پوری انسانیت تک حق کا پیغام پہنچانا چاہئے جو قرآن و سنت کی شکل میں ہمارے پاس محفوظ ہے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ کشمیر میں جاری ظلم و جبر پر ہماری حکومت خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے ،کشمیر میں نو ماہ سے کرفیو اور لاک ڈائون جاری ہے۔بیماروں کو علاج تک کی سہولت نہیں ،لوگ گھروں میں دم توڑ رہے ہیں اور انہیں قبرستانوں میں دفن کرنے تک کی اجازت نہیں دی جارہی ۔ہزاروں نوجوانوں کو بھارتی جیلوں اور عقوبت خانوں میں بند کردیا گیا ہے ۔پوری کشمیری قیادت گھروں یا قید خانوں میں نظر بند ہے ۔ان حالات میں ہماری حکومت کا فرض ہے کہ وہ عالمی سطح پر کشمیریوں کے حق میں آوازبلند کرے اور اقوام متحدہ سمیت انسانی حقوق کے عالمی اداروں میں اس مسئلہ کو ایک بار پھر پوری قوت سے اٹھایا جائے تاکہ کشمیریوں کو بھارت کے پنجۂ استبداد سے آزادی مل سکے ۔

کورونا کے مریضوں کے عوام سے عوام میں تحفظات بڑھتے جارہے ہیں۔ لیاقت بلوچ


pic liaqat baloch. May 15, 2020 | 11:24 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ کورونا کے مریضوں کے عوام سے عوام میں تحفظات بڑھتے جارہے ہیں۔کینسر،جگر اور سانس کی بیماریوں کے مریضوں کو بھی کرونا کے مریض ڈکلیئر کردیا جاتا ہے۔ایک قومی کمیشن تشکیل دیا جائے جو تمام حقائق عوام کے سامنے لائے۔کورونا کے خلاف لڑنے والے ڈاکٹرز،پیرا میڈیکل سٹاف اور نرسز کو عزت د ی جائے۔پوری قوم اپنے ہیروز کو سلام پیش کرتی ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے الخدمت فائونڈیشن لاہور کی طرف سے ثریا عظیم ہسپتال کو آٹھ وینٹی لیٹرز کا عطیہ دینے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر ایم ایس منصورہ ہسپتال ڈاکٹرز انوار بگوی،ایم ایس ثریا عظیم ہسپتال ،ڈاکٹر ارباب عالم ،صد الخدمت فائونڈیشن لاہور عبدالعزیز عابد اور احمد سلمان بلوچ بھی موجود تھے۔
لیاقت بلوچ نے کہا کہ کرونا وائرس پوری شدت سے پھیل رہا ہے۔سمار ٹ لاک ڈائون عوام کے لیے ناقابل ہے۔یہ منطق ناقابل یقین ہے کہ 400کورونا وائرس متاثرین تھے تو لاک ڈائون سخت اور اب 40000کے قریب مریض ہونے کو ہیں تو لاک ڈائون ختم ہوگیا۔ اسی وجہ سے عوام کرونا کو حکومتی خفیہ ایجنڈا اور عالمی امدادی پیکج کے ساتھ جو ڑ رہے ہیں۔مساجد میں طے شدہ معیاری ضابطوں پر عملدرآمد ہورہا ہے۔
لیاقت بلوچ نے کہا کہ ملک کو بحرانوں اور افراتفری سے بچانے کے لیے وزیراعظم عمران خان کورونا وبا ،کشمیر اور بھارت میں مسلمان پر مودی فاشٹزم افغانستان کے بگڑتے حالات اور اقتصادی بحران کے مقابلہ کے لیے قومی اتفاق رائے کے قومی ایکشن پلان کے لیے قومی قیادت اور تما م اسٹیک ہولڈرز کو متحد کرے۔
دریں اثناء سے کسان بورڈ کے وفد نے ملاقات کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومتیں ہمیشہ کسان پیکج ،زراعت ریلیف منصوبوں کا اعلان کرتی ہے لیکن عام کسانوں کو کوئی فائد ہ نہیں ہوتا۔گندم ،گنا ،چاول اور دیگر اجناس کی خرید کے موقع پر کسان برباد کردیا جاتا ہے۔زراعت پالیسی چھوٹے کسانوں کے لیے ہونی چاہیے۔کپاس امدادی قیمت مقرر ہونے سے ہی کاشتکاروں کا اعتماد بڑھے گا۔زرعی ٹیوب ویل کا نرخ قابل برداشت ہے۔یوریا کھاد کے یونٹ بند ہیں جس سے کھاد کی قلت کا خطرہ ہے ۔حکومت کسان کی 20لاکھ گانٹھیں خرید کر فوری بندوبست کرے۔زراعت قومی معیشت کو بحرانوں سے نکال سکتی ہے۔اس وقت بھی کسانوں کی محنت نے عوام کو بھوک و افلاس سے بچایا ہے۔

الخدمت فاؤنڈیشن وومن ونگ کی طرف سے مستحق خواتین میں عید پیکج کی تقسیم


jip khawateen May 15, 2020 | 11:20 PM

یتیم بچوں اور ان کی بلند حوصلہ ماؤں کو تنہا نہیں چھوڑیں گے۔کلثوم رانجھا
لاہور:(نیوزآن لائن)الخدمت فاونڈیشن وومن ونگ کی صدر کلثوم رانجھا نے کہا کہ رمضان المبارک نیکیوں کا موسم بہار ہے جس میں اللہ تعالی کی بے شمار رحمتیں اور برکتیں نازل ہوتی ہیں جس سے ایک ایسی فضا بن جاتی ہے جس میں دوسروں کے لیے ہمدردی ، قربانی کا جذبہ ، احساس ذمہ داری پہلے سے کہیں زیادہ ہوتا ہے ، الخدمت فاونڈیشن وومن کی ذمہ داران اور رضا کار ورکرز نے کرونا وائرس کی وبائ کی اس آزمائش کے عرصے میں ملک بھر میں خدمت کی مثالیں قائم کیں ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ذمہ داران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔
کلثوم رانجھا نے کہا کہ یہ آزمائش کا وقت ہے اس میں ہم یتیم بچوں اور ان کی حوصلہ مند ماؤں کو تنہا نہیں چھوڑیں گے ، معاشرے میں ضرورت مند خواتین کا خیال رکھنا حکومت کی اور ہم سب کی ذمہ داری ہے ۔رمضان المبارک اور خاص طور پر عید الفطر کے موقع پر اپنے ارد گرد موجود غریبوں ،مساکین ،بیوائوں اور یتیموں کا خصوصی خیال رکھا جائے۔ان کے لئے سحری اور افطاری کا انتظام کیا جائے اور عیدپر اپنے بچوں کے ساتھ ساتھ یتیم بچوں کو بھی نئے کپڑے اور جوتے خرید کر دیے جائیں تاکہ وہ بھی عید الفطر کی خوشیوں میں شامل ہوسکیں۔انہوں نے کہا کہ یتیم بچوں کی کفالت کی ذمہ داری حکومت اور معاشرے دونوں پر ہے۔
بیگم کلثوم رانجھا نے کہا کہ الخدمت کی ان کاوشوں کا مقصد مستحق خواتین کی دلجوئی کرنا ہے تا کہ ان غیر معمولی حالات میں وہ اپنے آپ کو تنہا نہ سمجھیں۔ انہوں نے کہا کہ الخدمت فاؤنڈیشن بلا فرق رنگ ونسل انسانیت کی خدمت کر رہی ہے۔
الخدمت فاونڈیشن وومن ونگ کی ٹیم نے سنٹرل آفس منصورہ لاہور میں بڑے پیمانے پر ضروتمند خواتین میں عید پیکج تقسیم کئے۔

سندھ بھر میں وبائی امراض ترمیمی ایکٹ نافذ ہوگیا ہے ، بیرسٹر مرتضی وہاب


murtuza wahab May 15, 2020 | 11:14 PM

وبائی امراض ایکٹ کی خلاف ورزی پر بھاری جرمانے ہونگے،ترجمان سندھ حکومت
کر اچی(نیوزآن لائن )ترجمان سندھ حکومت بیرسٹر مرتضی وہاب نے ایک ویڈیو بیان میں کہا ہے کہ گورنر سندھ کی منظوری کے بعد سندھ بھر میں وبائی امراض ترمیمی ایکٹ نافذ ہوگیا ہے شہریوں، دکانداروں اور فیکٹری مالکان سمیت ہر فرد پر اب احتیاطی تدابیر پر عمل لازم ہے وبائی امراض ایکٹ کی خلاف ورزی پر بھاری جرمانے ہونگے۔ بیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا کہ شہریوں سمیت تمام ادارے محکمہ داخلہ کے کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے تمام ایس او پیز پر عمل کریں ایس او پی کی خلاف ورزی پر دس لاکھ روپے تک جرمانہ ہوگا انہوں نے کہا کہ اس قانون کا مقصد شہریوں میں احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد کا شعور پیدا کرنا ہے سندھ حکومت کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے سنجیدہ اقدامات لے رہی ہے۔بیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا کہ فیزیکل فاصلہ، ماسک کا استعمال، کارخانوں و مارکیٹوں کی ایس او پیز پر اس قانون کا اطلاق ہوگا اجتماعات، مذہبی و سماجی تقاریب، لاک ڈاو ن کی پابندیوں پر بھی اس قانون کا اطلاق ہوگا ہم سب نے وبائی امراض ترمیمی ایکٹ پر عمل کرنا ہے۔بیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا کہ پابندی والے کاروبار کھولنے پر بھی یہ قانون حرکت میں آئیگا انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ آئیے اس وباکے خاتمے کے لئے قانون پسند شہری ہونے کا ثبوت دیں۔

حکومت کے احتساب اور شفافیت پر سوال اٹھتے ہیں ، شیری رحمان


shere rehman May 15, 2020 | 11:12 PM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن) پیپلز پارٹی کی پارلیمانی لیڈر سینیٹر شیری رحمان نے کہا ہے کے پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کی حکومت نے اثاثے ظاہر کرنے کی شرط کو نرم بنانے کے لئے 4 مئی کو ایک صدارتی آرڈیننس جاری کیاہے جس میں تبدیلی سرکار نے اپنے ہی سیاسی نظریات کے برعکس پاکستانی اور دہری شہریت رکھنے والے شہریوں کو آف شور کمپنیوں میں اپنے 10 فیصد سے کم شیئرز کو خفیہ رکھنے کی اجازت دیدی ہے ۔اب احتساب اور شفافیت کا کیا ہوا؟یہ حکومت کے دوہرہ معیار ہیں ۔
شیری رحمان نے کہا کے جو غیر ملکی اکاؤنٹس میں اپنا پیسہ چوری کرتے ہیں اور چھپاتے ہیں ان لوگوں کو سزا دینے کے بجائے ، ان جیسے آرڈیننس منظور کیے جارہے ہیں اور وہ بھی جب حکومت کو جاری وباسے نمٹنے کے لئے پالیسیاں بنانے میں مصروف رہنا چاہئے۔ یقینی طور پر اس پر قانون سازی کے پیچھے بھی اہم امور ہیں۔
سینیٹر شیری رحمان نے کہا کے حکمران جماعت کے اس اقدام سے بہت سارے سوالات اٹھتے ہیں ، کیونکہ یہ وہی لوگ ہیں جنہوں نے اپوزیشن میں ہوتے ہوئے میرٹ ، شفافیت اور احتساب کے نام پر سیاست کی، لیکن اب سب بھول چکے ہیں۔ حکومت کس کی حفاظت کی کوشش کر رہے ہے۔

حضرت علی کی زندگی ہم سب کے لیے نمونہ عمل ہے۔ نائب صدر بابر حمید


iso flag May 15, 2020 | 11:00 PM

دشمن آج بھی حضرت علی کی راہج کردہ عدالت سے خوفزدہ ہیں۔ نائب صدر بابر حمید آئی ایس او پاکستان کراچی ڈویژن نائب صدر بابر حمید
یوم القدس خالص اسلام محمدیۖ اور امریکی اسلام میں فرق کو ظاہر کرنے کا دن ہے۔ نائب صدر بابر حمید
کراچی: (نیوزآن لائن) امام علیہ السلام کی زندگی ہم سب کے لیے نمونہ عمل ہے۔ ان خیالات کا اظہار نائب صدر آئی ایس او پاکستان کراچی ڈویژن بابر حمید نیاجلاس سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔آج لشکریزیدی امریکہ کے پرچم تلے جمع ہورہاہے،امریکہ اسرائیل اور آلِ سعودکے گٹھ جوڑ سے بننے والا اتحاد دراصل اس دنیا کیسب سے بڑے دہشت گرد اسرائیل کو تحفظ دینے کے لیے بنایا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ شیعہ نوجوانوں کی غیر قانونی گرفتاریاں شرمناک فعل ہے،اب تک پورے پاکستان سیسینکڑوں کی تعداد میں نوجوان لاپتہ ہیں،یہ کیسا اندھا قانون ہے کہ ظلم بھی ہم پر ہو، ہمارے،مقدسات کو نشانہ بنایا جائے اور گرفتاریاں اور پابند سلاسل بھی ہمیں کیا جائے۔اس ملک کو تباہ کرنے والے دہشت گرد دندناتے پھر رہے ہیں اور محب وطن شیعہ نوجوانوں کو گرفتار کیا جارہا ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ فلفور بے گناہ جوانوں کی گرفتاریوں کو ظاہر کر کے انہیں عدالت میں پیش کیا جائے،وگرنہ ہم اس کے خلاف احتجاج کو سڑکوں پر لانے کا حق رکھتے ہیں. یمن،بحرین،فلسطین، کشمیر میں چلنے والی عوامی تحریکوں کی حمایت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم جمعتہ الوداع یوم القدس مظلوم عوام کی ظالم کے خلاف اور خالص اسلام محمدیۖ اور امریکی اسلام میں فرق کو ظاہر کرنے کا دن ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ملک بھر میں ایام شہادت مولا علی علیہ السلام کی مناسبت سے مجالس عزا کا سلسلہ اپنے رویتی انداز سے جاری و ساری رہے گا۔ کرونا وائرس کی وباء کی وجہ سے مکمل طور احتیاطی تدابیر کو مدنظر رکھا جا رہا ہے۔ اس سلسلے میں نمائش پر مرکزی جلوس علی علیہ السلام ایس او پیز کے مطابق مجلس منعقد ہوئی، مجلس عزا سے حجت الاسلام علامہ سید شہنشاہ نقوی نے خطاب کیا۔

کراچی پولیس کی زیر سماعت قیدیوں کی پیشی اورگواہوں کی حفاظت کے لئے ویڈیو کانفرنس سسٹم کے قیام کی تجویز زیر غور


Sindh_Police_Logo May 10, 2020 | 10:22 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) ایڈیشنل آئی جی کراچی کی ہدایات پر ڈی آئی جی پولیس سیکیورٹی اینڈ ایمرجنسی سروس ڈویژن مقصود احمد کی زیر صدارت ویڈیولنک اجلاس منعقد ہوا جسکا مقصد کراچی رینج میں ویڈیو کانفرنس سینٹرز کے ذریعہ انڈر ٹرائل قیدیوں کی پیشی اور گواہوں کی حفاظت کو یقینی بنانا ہے۔
کمانڈنٹ ایس ایس یو غلام مرتضی تبسم، ایس ایس پی کورٹ پولیس کیپٹن محمد اسد علی چوہدری،ایس پی مددگار15 عبداللہ میمن، ایس پی کیماڑی سو میر نورچنہ، ڈائریکٹر آئی ٹی سی پی او سندھ محترمہ تبسم عباسی اور دیگر سینئر افسران نے اجلاس میں شرکت کی جو کہ حکومت کی ہدایات کے مطابق سماجی فاصلہ کو مد نظر رکھتے ہوئے منعقد کیا گیا۔
اجلاس کے دوران فیصلہ کیا گیا کہ پہلے مرحلے میں 05 ویڈیو کانفرنس سینٹرزشہر میں قائم کئے جائیں گے جبکہ عدالتی کاروائیوں کے دوران گواہوں کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لئے مراکز کی تعداد بعد ازاں بڑھائی جائے گی جوکہ ٹرائل کورٹس اور جیلوں سے منسلک ہوں گے۔ ہر ماڈل کورٹ اور جیل کیلئے گواہوں اور زیر سماعت قیدیوں کے بیانات کی ریکارڈنگ کے لئے ماڈل کانفرنس روم قائم کیا جائے گا جو کہ سپریم کورٹ پاکستان سے منظور شدہ پروٹوکول کے مطابق عمل پیر ا ہو گا۔
اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ ویڈیو کانفرنس سسٹم کا اسٹینڈرڈ سپریم کورٹ کی ماڈل کانفرنسنگ ایس او پی کے عین مطابق ہو گا جبکہ ڈیٹاکی اسٹوریج اور حفاظت کو یقینی بنایا جائے گااور ویڈیو کانفرنسنگ سوفٹ ویئر عالمی سطح کی مشہور آئی ٹی کمپنی لائف سائز سے حاصل کیا جائے گا۔
مزید برآں تمام اسٹیک ہولڈرز یعنی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج ساتھ، ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج ملیر، سینٹرل اور ملیر جیلوں کے سپرنٹنڈنٹس سے ملاقاتیں کی جائیں گی تاکہ انہیں اس فیصلے کے متعلق اعتماد میں لیا جا سکے۔

سندھ میں لاک ڈان مکمل طور پر ختم کرنے کا تاثر غلط ہے، ناصر حسین شاہ


nasir hussain May 10, 2020 | 10:17 PM

سندھ حکومت کاروباری برادری کی خدمات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے سید ناصر حسین شاہ
کراچی :( نیوزآن لائن)صوبائی وزیر اطلاعات، بلدیات، جنگلات و مذہبی امور سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ سندھ حکومت کو تاجر برادری کی قربانیوں اور خدمات کا احساس ہے۔ ان کی مشکلات کو کم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ اس سلسلہ میں ان کے ساتھ مل کر ایس او پیز بنارہے ہیں اور جن کاروباری سرگرمیوں میں وفاق نے نرمی کا اعلان کیا ہے وہ مقررہ طریقہ کار کے تحت کھل جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے وفاقی حکومت کو خط لکھا ہے کہ وہ تاجروں کی فوری طور پر امداد کرے اس وقت ان کو سودی قرضوں کی بجائے امداد کی اشد ضرورت ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اس طرح تاجروں کو لاک ڈاون کے دوران ہونے والے خسارے کا مداوا ہوسکے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نیج اپنے جاری ہونے والے ایک بیان میں کیا۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ ملکی معیشت اور روزگار کی فراہمی میں تاجر برادری کا انتہائی اہم کردار ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ ہم نے لاک ڈاون خوشی سے نہیں کیا بلکہ انتہائی مجبوری میں اور عوام کی صحت کی خاطر یہ سخت فیصلے کرنے پڑے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے وژن کے تحت وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ کی جانب سے کئے جانے والے فیصلے عوام کے وسیع تر مفاد کے لئے ہیں۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ ہم وفاقی حکومت کے فیصلوں کے ساتھ ہیں اور ان کا احترام بھی کرتے ہیں۔ تاہم حکومت سندھ کورونا کے حوالے سے حالات دیکھ کر ہی لاک ڈاون میں سختی یا نرمی کا فیصلہ کرتی ہے، اور جو وہ بھی فیصلہ کرتی ہے لوگوں کی بہتری اور جانوں کی حفاظت کے لئے کرتی ہے۔وزیر اطلاعات سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ سندھ میں لاک ڈاون کے مکمل خاتمے کا تاثر غلط ہے۔ اگر صوبہ سندھ میں کورونا کے مریضوں کی تعد اد بڑھتی ہے تو ہوسکتا ہے کہ حکومت سندھ کو دوبارہ مکمل لاک ڈاون کی طرف جانا پڑے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ وزیراعظم کے ساتھ تمام وزرا اعلی اور دیگر متعلقین کے ساتھ اجلاس میں جو فیصلے کئے گئے ہیں جن میں ہفتہ اور اتوار کے روز مکمل لاک ڈاون کا فیصلہ کیا گیا ہے، سندھ حکومت اس کی مکمل پابندی کر ے گی۔ جو لسٹ اورایس او پی وفاقی حکومت کی جانب سے آئی ہیں، ان میں بہت سی وضاحت طلب ہیں، وفاقی حکومت کی جانب سے لائحہ عمل پر عمل کرتے ہوئے ہم لاک ڈاون کو مزید سخت کریں گے۔انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت کورونا وائرس کے حوالے سے ٹیسٹوں کی استعداد میں دن بدن اضافہ کررہی ہے، اور کورونا وائرس کے مریضوں کے علاج و دیکھ بھال کے حوالے سے سہولیات و معیار میں مزید اضافہ کیا جارہا ہے۔
دریں اثنا صوبائی وزیر اطلاعات نے معروف کامیڈین اطہر شاہ خان کے انتقال پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا اور انہیں خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم کے فن اور خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔

ریاض نائیکو کی شہادت کشمیر میں آزادی کی منزل کو مزید قریب کرے گی۔ سراج الحق


sirajul haq May 7, 2020 | 11:42 PM

لاہور :( نیوزآن لائن) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ ریاض نائیکو کی شہادت کشمیر میں آزادی کی منزل کو مزید قریب کرے گی۔برہان وانی کی شہادت کے بعد جس طرح آزادی کی تحریک میں نیا موڑ آیا تھااور ہزاروں اعلیٰ تعلیم یافتہ نوجوان تحریک میں شامل ہوگئے تھے اسی طرح ریاض نائیکو کی شہادت سے کشمیری نوجوانوں میں نیا جوش و جذبہ پیدا ہوا ہے۔ بھارتی قابض فوج کشمیری قیادت کو چن چن کر قتل کررہی ہے ۔گزشتہ نو ماہ سے مقبوضہ کشمیر میں بدترین لاک ڈائون ہے ۔کورونا کی عالمی وباء کے دوران بھارتی فوج نے ظلم و جبر کے تمام سابقہ ریکارڈ توڑ دیئے ہیں اورکورونا کو معصوم کشمیریوں کے خلاف ہتھیار کے طو رپر استعمال کررہی ہے ۔ایک طرف کشمیری اپنے گھروں میں محصور ہیں اور دوسری طرف قابض فوج گھرگھر تلاشی کی آڑ میں کشمیری نوجوانوں کوڈھونڈ ڈھونڈ کرقتل کررہی ہے ۔ بھارت تمام تر مظالم اور جبر و تشدد کے باوجود آزادی کی تحریک دبا نہیں سکے گا۔اقوام متحدہ اور عالمی برادری کشمیر میں بھارتی مظالم کورکوائے اور کشمیریوں سے حق خود ارادیت کے اپنے وعدے کو پورا کرے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ میں ریاض نائیکو شہید کی غائبانہ نماز جنازہ سے قبل گفتگو کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر سیکرٹری جنرل امیر العظیم اور نائب امیر لیاقت بلوچ بھی موجود تھے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ کشمیر کی آزادی نوشتہ ٔ دیوار ہے ۔ آزادی کی تحریک کو بھارت پون صدی میں نہیں دبا سکا،اس کے ظلم و جبر کے تمام تر ہتھکنڈے آئندہ بھی ناکام رہیں گے ۔بھارتی افواج کی درندگی جیسے جیسے بڑھ رہی ہے کشمیریوں میں آزادی کی تڑپ میں بھی اضافہ ہوتا جارہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اٹھارہ ہزار کشمیر ی نوجوانوں کو اٹھا کر بھارتی جیلوں میں قید کردیا گیا ہے ،روزانہ کشمیری نوجوانوں کو جعلی مقابلوں میں مارا جارہا ہے اور ہزاروں بھارتی فوج کے عقوبت خانوں اور ٹارچر سیلوں میں بند ہیں مگر کشمیر کے ہر گھر سے آج بھی آزادی کے نعرے سنائی دیتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ مودی سمجھتا تھا کہ کشمیر کی آئینی حیثیت کو بدلنے ،حریت قیادت کو نظر بند کر دینے اور ہزاروں نوجوانوں کو اٹھا کر غائب کردینے سے کشمیر پر اس کی گرفت مضبوط ہوجائے گی مگر حالات نے ثابت کردیا ہے کہ بھارتی افواج کو پہلے سے بھی زیادہ مزاحمت کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ کشمیر ی حق خودارادیت اور آزادی کے مطالبے سے پیچھے نہیں ہٹیں گے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ کشمیر پاکستان کیلئے زندگی اور موت کا مسئلہ ہے ،کشمیر کے بغیر پاکستان نامکمل ہے ۔ہماری حکومتوں نے مسئلہ کشمیر کو پس پشت ڈالے رکھا،حکمران بھارتی سرکار سے ہاتھ ملانے کیلئے کشمیریوں کی مدد سے ہاتھ کھینچتے رہے جس کی وجہ سے کشمیر کی آزادی کی منزل آج تک حاصل نہیں ہوسکی۔انہوں نے کہا کہ کشمیریوں نے آزادی کیلئے جو قربانیاں پیش کی ہیں وہ انسانی تاریخ کا ایک روشن باب ہے لیکن ہمارے حکمرانوں نے ہمیشہ ان قربانیوں کو ضائع کرنے کی کوشش کی ۔حکومت کا فرض ہے کہ اقوام متحدہ ،او آئی سی ،یورپی یونین اور ایمنسٹی انٹرنیشنل سمیت مختلف عالمی فورمز پر اس مسئلے کو دوبارہ اجاگر کرے اور عالمی برادری کو کشمیر میں استصواب رائے کروانے پر مجبور کیا جائے تاکہ کشمیریوں کو بھارت کے پنجۂ استبداد سے آزاد ی مل سکے۔

پیر 9مئی سے مارکیٹیں اور کاروبار کھلے گا سندھ حکومت روکاوٹ نہ ڈالے آل کراچی تاجر کنونشن کا اعلان


Convantion pic (1) May 7, 2020 | 11:39 PM

دوکانیں نہ کھولنے دی گئیں تو حالات کی ذمہ دار سندھ حکومت پر ہوگی ، کنونشن سے حافظ نعیم الرحمن محمود حامدودیگر کاخطاب
جب وزیر اعظم نے اعلان کردیا ہے تو پھر اس کے مطابق9مئی سے تمام دوکانیں اور مارکیٹیں کھل جانی چاہیئے تاجر رہنماؤں کا خطاب
کنونشن سے عبد الرزاق خان ،جاوید شمس ،مدثر سعید ،محمد ایاز ،اسلم ،حنیف خان،سید فرازاحمد ،عبد الصمد،مینا بازارکی خاتون دوکاندار ثریا ودیگر کاخطاب
کراچی:(نیوزآن لائن)جماعت اسلامی کراچی کے تحت ادارہ نورحق میں ہونے والے ”آل کراچی تاجر کنونشن ”میں کراچی کے تاجروں نے متفقہ طور پر اعلان کیا ہے کہ پیر 9مئی سے کراچی کی مارکیٹیں اور کاروبار کھلے گا،سندھ حکومت نے روکاوٹ ڈالی تو حالات کی ذمہ داری وہ خود ہوگی،کنونشن کے مقررین نے کہاہے کہ جب وزیر اعظم نے اعلان کردیا ہے تو پھر اس کے مطابق9مئی سے تمام دوکانیں اور مارکیٹیں کھل جانی چاہیئے، تاجر احتیاطی تدابیر اختیار کریں ،اگر سندھ حکومت نے کاروباری سرگرمیوں میں روکاوٹ ڈالنے کی کوشش کی تو امن و امان کی ذمہ دار سندھ حکومت ہوگی ۔حکومت تاجروں کے راستے میں روکاوٹیں نہ کھڑی کرے۔کنونشن سے امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن ،سابق رکن سندھ اسمبلی و ڈپٹی سکریٹری کراچی عبد الرزاق خان ، اسمال ٹریڈرز آرگنائزیشن اینڈ کاٹیج انڈسٹریز کے صدر محمود حامد،انجمن تاجران سندھ کے رہنما جاوید شمس ،رئیل اسٹیٹ کے مدثر سعید ،لیاقت مارکیٹ کے رہنما محمد ایاز ،پینورامہ سینٹر کے رہنما اسلم ،فرنیچر ڈیلر ایسوسی ایشن کے حنیف خان،حیدری صرافہ بازار کے سید فرازاحمد ،کارشوروم ایسوسی ایشن کے عبد الصمد،مینا بازارکی خاتون دوکاندار ثریا ،حیدر ی مارکیٹ کے رہنما سید اختر شاہد ،لیاقت آباد ٹریڈرز الائنس کے صدر بابر خان بنگش ،گلبہار سینٹری مارکیٹ کے صدر مظفر الاسلام ،ایس ایم عالم ،حیدر ی مارکیٹ کے صدر سید سعید احمد ،مینا بازارکریم آباد کے جمیل اختر،پلازہ الیکٹرونک مارکیٹ کے صدر سید نوید احمد ،ایم اے جناح روڈ اسپورٹس مارکیٹ کے صدر سلیم ملک ودیگر نے بھی خطاب کیا ۔کنونشن میں مینا بازار کریم آباد کی خواتین دوکاندار وں نے بھی شرکت کی ۔حافظ نعیم الرحمن نے کہاکہ آج ایک مشترکہ مسئلے اور مؤقف پر تمام مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے کراچی کے تمام تاجر یہاں جمع ہوئے ہیں کیونکہ یہاں آنے کا ایک ہی مقصد ہے کہ کراچی کے کاروبار اور تاجر طبقے کو تباہی سے بچائے جائے ، ہم چاہتے ہیں کہ 46دن کے لاک ڈاؤن سے جو صورتحال اور مسائل پیدا ہوئے ہیں اب انہیں ہر حال میں حل کیا جائے ۔تاجر طبقہ اور چھوٹے کاروباری افراد اور خواتین سخت پریشان اور سب سے زیادہ متاثر ہیںان کے مسائل کو حل کیا جائے ۔کرونا کے حوالے سے سائنسی بنیادوں پر تحقیق اور اعدادوشمار سامنے آنے کے بعد دنیا بھر میں لاک ڈاؤن ختم کیا جارہا ہے تو کراچی میں کاروباراور دوکانوں کو کیوں نہیں کھولاجارہا ہے ؟۔حکومت خود لاک ڈاؤن پر عملدرآمد کرانے میں ناکام ہوچکی ہے صرف دفاتر ،اسکولز اور کاروبار بند کر کے کرونا وائرس ختم نہیں کیا جاسکتا ۔عوام میں خوف پیدا کر کے حالات بہتر نہیں کیے جاسکتے ، آج معاشرتی اور سماجی سطح پر مسائل پیدا ہورہے ہیں ،سفید پوش طبقہ کس طرح کسی سے راشن مانگے ؟اس لیے اب صرف واحد راستہ یہ ہے کہ مارکیٹیں کھولی جائیں اور اس حوالے سے تاجر ،عوام اور حکومت سب کی ذمہ داری ہے کہ وہ احتیاطی تدابیراختیار کریں ، حکومت ایس او پیز ضرور بنائے لیکن اپنی ذمہ داری بھی پوری طرح ادا کرے ۔تاجر ایس اوپیز پر عمل کر نے کے لیے تیار ہیں لیکن اس کے لیے ضروری ہے کہ قابل عمل ایس اوپیز بنائے جائیں ۔انہوں نے کہاکہ افسوس ہے کہ پیپلز پارٹی 10سال سے سندھ میں حکومت کررہی ہے لیکن اس کے پاس کوئی ڈیٹا تک نہیں ہے ،کراچی میں ایک لاکھ 80ہزار دوکاندار ہیں جو مختلف کاروبار سے وابستہ ہیں،ایک اندازے کے مطابق 70لاکھ افراد ان کاروباری اور تاجر طبقے سے وابستہ ہے ۔کاروبارکی بندش سے لاکھوں عوام شدید متاثر ہورہی ہے ۔احتیاطی تدابیراختیار کرنا ہم سب کی ذمہ د اری ہے ۔یہ وبا اللہ کی طرف سے ایک تنبیہ ہے اور اس کے موقع پر ہم سب کو اجتماعی طور پر اللہ سے رجوع کرنا چاہیئے ،اللہ کی طاقت سب سے بڑی ہے جس کے سامنے آج کی جدید دنیا اور ترقی یافتہ ممالک بے بس ہیں ۔عبد الرزاق خان نے کہاکہ اگر تاجروں میں اتحاد و اتفاق قائم رہے توکوئی طاقت انہیں مطالبات منظور کروانے سے نہیں روک سکتی ، جماعت اسلامی نے کرونا کے مسئلے پر سندھ حکومت کا ساتھ دینے کا اعلان کیا تھا مگر ڈیڑھ ماہ میں حکومت کی نا اہلی اور بے حسی کھل کرسامنے آگئی ہے ،آج ہم تاجروں کے ساتھ ہیں ، کراچی کے کاروبار کو تباہ نہیں ہونے دیں گے ۔پولیس دوکانداروں کے ساتھ تذلیل آمیز رویہ فورا ختم کرے ۔ محمود حامد نے کہاکہ ضلع وسطی کی مارکیٹوں کی تنظیموں نے تاجروں کی جانب سے مارکیٹیں کھلوانے کی جدوجہد شروع کی اور جماعت اسلامی سے رابطہ کیا ، آج یہ پورے کراچی کی تحریک بن چکی ہے ، سندھ حکومت بوکھلاہٹ کا شکار ہے ، وزیر اعظم نے بھی چھوٹے دوکانداروں کو کاروبار کرنے کی اجازت دے دی ہے ، اگر اب صوبائی حکومت نے وفاقی حکومت کے اعلان کے بعد روکاوٹ کھڑی کی تو ہم بھرپور احتجاج کریں گے اور ہر حال میں مارکیٹیں کھولیں گے ۔جاوید شمس نے کہاکہ لاک ڈاؤن اور کاروبار کی بندش نے تاجروں کو حکمرانوں کے سامنے بھیگ مانگنے پر مجبور کردیا ہے ،وزیر اعلیٰ سندھ ہم پر رحم کریں۔مدثر سعید نے کہاکہ وزیر اعلیٰ سندھ سے اپیل کرتے ہیں کہ آپ اپنی شرائط کے مطابق ہی صحیح لیکن خدارا ہمیں چند گھنٹوں کے لیے کاروبار کھولنے کی اجاز ت دی جائے ۔محمد ایاز نے کہاکہ ایسا لگتا ہے کہ ہم منشیات فروش ہیں اور پولیس ہمارے پیچھے لگی ہوئی ہے ،خدارا تاجروں کے اہلخانہ اور ان کے ورکروں کے گھرانوں پر رحم کریں ،اگر ہمارے مطالبات نہ تسلیم کیے گئے تو ہم ہر طرح کا احتجاج کریں گے ۔محمد اسلم نے کہاکہ سندھ حکومت کو یہ بات سمجھنی چاہیئے کہ اگر ہمارے کاروبار نہ کھلے تو ہمارے اور ہمارے ورکرز کے گھروں کے چولہے کس طرح جلیں گے۔حنیف خان نے کہاکہ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ حکومت چاہتی ہے کہ کرونا کے کیسز بڑھتے جائیں تاکہ کاروبار بند رہے اگر حکومت شروع کے 15دنوں میں ہی سخت لاک ڈاؤن کا نفاذ کرتی تو آج یہ صورتحال نہ ہوتی۔سید فرازاحمد نے کہاکہ خدارا سوچیے کہ آج سونے کاروبا ر کرنے والے سخت پریشان ہیں تو دیگر کاروبار ی طبقہ کتنا پریشان ہوگا، کرونا کے نام پر آج صرف کاروباری طبقے کو نشانہ بنایا جارہا ہے ۔عبد الصمد نے کہاکہ جماعت اسلامی نے شہر کے مسائل کے حل کے لیے ہمیشہ قدم آگے بڑھا یا ہے اور آج بھی تاجروں کے مسائل کے حل کے لیے صرف جماعت اسلامی ہی میدان عمل میں موجود ہے۔ مینا بارزارکی خاتون دوکاندارثریا نے کہاکہ ہمارے لیے ایک دن کے کھانے کا انتظام کرنا مشکل ہورہا ہے ،ہم 50دنوں سے بے روزگار ہیں ،وزیر اعلیٰ سندھ خدارا خواتین دوکانداروں پر تو رحم کریں اور ہمیں دوکانیں کھولنے دیں ۔سید اختر شاہد نے کہاکہ ہم نے کاروباری بندش کے حوالے سے حافظ نعیم الرحمن سے رابطہ کیا ،ہمیں خوشی ہے کہ جماعت اسلامی نے اقتدار میں نہ ہونے کے باوجود تاجروں کی نمائندگی کی جب کہ جنہوں نے عوام سے ووٹ لیے اور اقتدار میں موجود ہیں انہوں نے کراچی کے تاجروں کو مشکل حالات میں تنہا چھوڑیا۔بابر خان بنگش نے کہا کہ وفاقی حکومت ہو صوبائی حکومت دونوں ایک دوسرے پر الزامات لگارہے ہیں ،حقیقت میں تاجروں کے مسائل کے حوالے سے کوئی سنجیدہ نہیں ، سندھ حکومت تاجروں کو ڈرا دھمکارہی ہے ، تاجروں کے حقیقی نمائندوں کے بجائے غیر نمائندہ لوگوں کے ذریعے فیصلے کروائے جارہے ہیں ۔آ ن لائن کاروبار ایک مذاق کے سوائے کچھ نہیں شہر میں کہیں لاک ڈاؤن نظر نہیں آتا،صرف دوکانیں بند کرنے سے کرونا وائرس کا مسئلہ حل نہیں ہوگا۔مظفر الاسلام نے کہاکہ حقیقت یہ ہے کہ تاجر کاروبار کی بندش سے خود ضرورت مند بن گئے ہیں ، آج ہم اعلان کرتے ہیں کہ اپنے کاروبار ہر صورت کھولیں گے خواہ اس کے لیے کچھ بھی کرنا پڑے ۔ایس ایم عالم نے کہاکہ لاک ڈاؤن نے کاروبار کو تباہ کردیا ہے ، دینے والے ہاتھوں کو لینے والا بنادیا ہے ، آج تاجر اور دوکانداروں کے پاس اپنے ملازمین کو تنخواہیں دینے کے لیے پیسے نہیں ہے ۔شہر میں مختلف مارکیٹیں کھولی گئیں ہیں کیا وہاں کورونا وائرس نہیں پھیلتا ۔سید سعید احمد نے کہاکہ جماعت اسلامی نے تاجروں کے ہمراہ سڑکوں پر احتجاج کیا اور تاجروں کے ترجمان بنی ، امید ہے کہ ان کی قیادت میں تاجروں کا مسئلہ حل ہوجائے گا۔جمیل اختر نے کہا کہ مینا بازار میں پانچ ہزار خواتین دوکاندار رزق حلال کماتی ہیں ، جو ڈیڑھ ماہ سے مکمل بے روزگارہوگئی ہیں اور فاقوں پر مجبور ہیں ،حکمران ہمارے گھروں کے چولہے چلنے دیں ۔سید نوید احمد نے کہاکہ حکمرانوں نے تاجروں کے احتجاج کے باوجود ہوش کے ناخن نہیں لیے ہمارا روزگار تباہ ہورہا ہے ۔صدر سلیم ملک نے کہاکہ اگر سندھ حکومت نے مارکیٹیں کھولنے کی اجاز ت نہ دی تو ہم بھی اپنی دوکانوں کے آگے گروسری کا سامان رکھ کر کاروبار شروع کردیں گے ،خدارا رمضان المبارک میں ہمیں بے روزگاری اور فاقوں سے بچایا جائے ۔

کرونا وائرس کے باعث آئی ایس او پاکستان کراچی ڈویژن رمضان المبارک میں سوشل میڈیا پر درسی نشست کا انعقاد کررہی ہے۔ نائب صدر بابرحمید


iso May 7, 2020 | 10:57 PM

کراچی:  (نیوزآن لائن) امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کراچی ڈویژن رمضان المبارک کے پہلے میں جوانوں کی تربیت کے حوالے سے آن لا?ن دوری قرآن فہمی کا انعقاد کررہی ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے رمضان المبارک کے حوالے سے منعقدہ خصوصی اجلاس سے  گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ آئی ایس او پاکستان کراچی ڈویژن ماہ رمضان المبارک میں سوشل میڈیا کے ذریعے مختلف اسلامی موضوعات پر درسی نشست منعقد کرے گی۔ اسلامی مہینوں میں ماہ مبارک رمضان کو بڑی منزلت حاصل ہے۔ یہ خدا کے ایک بابرکت مہینوں میں سے ایک ہے, جس میں اللہ تعالی کی رحمت عروج پر ہوتی ہے، روزہ صرف بھوکا رہنے کا نہیں بلکہ صبر، ہمدردی اورانسانیت کا نام ہے۔ ڈویژن نائب صدر بابر حمید کا مزید کہنا تھا کہ پوری دنیا کو کرونا وائرس جیسی وباء کے باعث آزمائش کا سامنا ہے۔ ہمیں بحیثیت مسلمان اور پاکستانی اس ماہ رمضان اْن لوگوں کا بھی احساس کرنا چاہیے جو ان حالت میں کسی قسم کی مشکلات کا شکار ہیں اور اْن کی جس حد تک ہو مدد کرنی چاہیے۔فرصت کے ان لمحات کو پروردگار سے منسوب کرکے دعا و مناجات کے سلسلہ کو جاری رکھنا چاہیے۔

حکومت سیاسی بیان بازی کو قرنطینہ میں رکھ کر مہنگائی کے طوفان کو روکنے کی طر ف توجہ دے ۔ سراج الحق


ProfSirajulHaq-f April 26, 2020 | 8:48 PM

لاہور:(نیوزآن لائن) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا کہحکومت سیاسی بیان بازی کو قرنطینہ میں رکھ کر مہنگائی کے طوفان کو روکنے کی طر ف توجہ دے ۔ حکومت کے ہاں تبدیلی کا مطلب بیوروکریسی کی تبدیلی ہے جبکہ عوام حالات کی تبدیلی چاہتے ہیں۔رمضان المبارک میں ہوشربا مہنگائی سے عوام الناس کو دن میں تارے نظر آگئے ہیں ۔ پھلوں اور سبزیوں کی قیمتیں سن کر عوام صبر کا پھل کھانے پر مجبور ہیں ۔ عوام پر مہنگائی کے مسلسل ڈرون حملے جاری ہیں جبکہ اقتدار کے ایوانوں میں بیٹھے حکمران چین کی بانسری بجا رہے ہیں ۔ کروناوبا کے خلاف فرنٹ لائن پر مقابلہ کرنے والے ڈاکٹرز ، نرسز اور پیرا میڈیکل سٹاف اور میڈیا حفاظتی سامان نہ ملنے پرسراپا احتجاج ہیں۔حفاظتی سامان نہ ملنے کی وجہ سے اب تک کئی ڈاکٹرز اور نرسز کورونا وبا کیخلاف لڑتے ہوئے شہید ہوچکے ہیں، یہ حکومت کی بے حسی کی انتہا ہے ۔ ڈاکٹر ز حفاظتی کٹس عدم دستیابی کے باعث مریضوں کی دیکھ بھال نہ کرسکے تو اس کے مجرم حکمران ہوں گے ۔ ملک میں اسلامی فلاحی ریاست کا خواب اس وقت شرمندہ تعبیر ہوگا جب دیانتدار قیادت برسراقتدارآئے گی ۔حکمران خود کو قانون سے بالاتر سمجھتے ہیں جس کی وجہ سے پاکستان مسائل کی دلدل میں دھنستا جارہاہے ۔ان خیالات کا اظہا رانہوں نے منصورہ میں میڈیا کے ذمہ داران سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف بھی موجود تھے ۔سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ رمضان المبارک ایثار ،ہمدردی اور غمگساری کا مہینہ ہے لیکن حکمرانوں کی لاپرواہی اور بے حسی نے اسے پریشانیوں میں بدل دیا ہے ۔لوگوں کیلئے پھل تو کیا سبزی خریدنا مشکل ہوگیا ہے ۔ہردکاندار اپنی مرضی کے ریٹ بتا رہا ہے ،لگتا ہے پرائس کنٹرول کمیٹیوں کا کوئی وجود ہی نہیں۔انہوں نے کہا کہ رمضان کے دودنوں میں ہر چیز کی قیمت دوگنا سے بھی بڑھ ہے ۔منڈیوں اور بازاروں میں لوگوں کی مجبوریوں کے سودے ہورہے ہیں۔ حکومت نام کی چیز کہیں نظر نہیں آرہی ۔مقررہ اوقات میں بھی لوگ منڈیوں اور دکانوں سے خالی ہاتھ لوٹنے پر مجبور ہیں۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ حکومت فوری طور پر اس مہنگائی کا نوٹس لے اور ناجائز منافع خوروںکے خلاف سخت کاروائی کی جائے ۔سینیٹر سراج الحق نے کارکنوں کو ہدایت کی ہے کہ رمضان المبارک سے کماحقہ استفادہ کرنے کی کوشش کی جائے ،اپنی انفرادی تربیت اور تزکیہ نفس کی طرف خصوصی توجہ دیں۔اللہ سے اپنے تعلق کو مضبوط بنائیں ۔رمضان نیکیوں کا موسم بہار ہے اس میں رجوع الی اللہ ،توبہ و استغفار کو اپنا معمول بنائیں۔غرباء و مساکین کا خیال رکھیں ،یتیموں کی کفالت کے ذریعے اپنے رب کو راضی کریں ۔ رمضان اور قرآن کا آپس میں گہرا تعلق ہے ۔قرآن سے جڑ جائیں اور اس کی تلاوت و مطالعہ کو بھرپور وقت دیں۔مساجد کی صفائی،نمازیوں کی خدمت ،مساجد کے انتظام و انصرام میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں۔اپنے اڑوس پڑوس میں نادار و مستحق لوگوں کا سہارا بنیں ۔انہوں نے کہا کہ کارکنان آپس کے تعلقات کو مزید فروغ دیں اور ایک دوسرے کی خوشی وغم شریک ہوں ۔ سینیٹر سراج الحق نے ایک بار پھر حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ ناصرف سرکاری بلکہ پرائیویٹ ہسپتالوں کے عملے کو بھی کورونا سے بچائو کیلئے حفاظتی کٹس اور سامان مہیا کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے ۔ڈیڑھ ماہ بعد بھی ڈاکٹرز اور طبی عملہ پی پی ایز اور این 95ماسک نہ ملنے پر احتجاج کررہا ہے ۔ملک میں کئی ڈاکٹرز اور نرسز مریضوں کا علاج کرتے کرتے خود وائرس کا شکار ہوکر اپنی جان کی بازی ہارچکے ہیں ،کورونا سے لوگوں کو بچاتے ہوئے اپنی جان کا نذرانہ پیش کرنے والوں کو باقاعدہ شہداء ڈکلیئر کیاجائے اور ان کے خاندانوں کو سرکاری سطح پر وہ پروٹوکول دیا جائے جوملک و ملت پر قربان ہونے والوں کیلئے مخصوص ہے ۔انہوں نے کہا کہ ابھی کل ہی پروفیسر ڈاکٹر جاوید اقبال کورونا مریضوں کا علاج کرتے ہوئے شہید ہوگئے ہیں ،اگر حکومت نے ڈاکٹروں کو بروقت حفاظتی سامان دیا ہوتا تو شاید ان کی زندگی بچ جاتیں ۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ حکومت مزید تاخیرنہ کرے اور ڈاکٹرز و پیرا میڈیکل سٹاف کو ضروری سامان مہیا کیا جائے ۔

شمالی وزیرستان میں سیکیورٹی فورسز کا آپریشن 9 دہشت گرد ہلاک 2 اہلکار شہید


pak army operation in waziristan April 26, 2020 | 6:56 PM

راولپنڈی:(نیوزآن لائن)شمالی وزیرستان میں آپریشن کے دوران 9 دہشت گرد ہلاک ہوگئے جبکہ فائرنگ کے تبادلے میں 2 اہلکار شہید ہوگئے۔آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان کے مطابق شمالی وزیرستان کے علاقوں خیسورہ اور دوسالی میں دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے پر سیکیورٹی فورسز نے کارروائی کی۔ آپریشن کے دوران 9 دہشت گرد ہلاک ہوگئے ،ہشت گردوں کے قبضے سے بھاری تعداد میں اسلحہ اور گولہ بارود بھی برآمد ہوا جبکہ اس آپریشن کے دروان 2 اہلکار شہید ہو گئے ہیں، شہید ہونے والوں میں لانس نائیک عبدالوحید اور سپاہی سکم داد تھے۔ لانس نائیک عبدالوحید کا تعلق مظفرآباد اورسپاہی سکم داد کا ایبٹ آباد سے ہے۔

سندھ حکومت نے تاجروں کے الزامات پر مبنی سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی مبینہ آڈیو کی تحقیقات کے لیے ایف آئی اے کے سائبر کرائم کو خط لکھ دیا: سید ناصر حسین شاہ


nasir shah April 26, 2020 | 6:27 PM

کراچی :( نیوزآن لائن) صوبائی وزیر اطلاعات سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ آ ج کل سوشل میڈیا پر تاجر رہنماں کی جانب سے وزیر اعلی سندھ اور ان کے خلاف جو بیان چل رہا ہے اس کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں ہے اور اس طرح کی مہم سندھ حکومت کے خلاف ایک سازش کے تحت چلائی جارہی ہے جس کا مقصد صوبے میں انتشار پھیلا نا ہے۔ انہوں نے کہا اس طرح کے بیانات کی تاجر رہنماں نے بھی تردید کردی ہے اور انہوں نے بھی اس کو ایک سازش قرار دیا ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ شر پسند عناصر کو سندھ حکومت کی عوام دوست پالیسی پسند۔ نہیں آ رہی ہے اس لیے وہ اس طرح کی مذموم حرکتیں کر رہے ہیں کیونکہ ان کو عوام کی جان کی کوئی پروا نہیں ہے اور ان کا مقصد ملک میں انتشار پھیلا نا ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اس سلسلہ میں ایف آئی اے سایبر کرائم سرکل کو خط لکھ دیا گیا ہے کہ وہ اس طرح کے عناصر جو کہ جھوٹی من گھڑت اور بے بنیاد خبریں اور آ ڈیو پھیلا رہے ہیں ان کو بے نقاب کرکے قانون کے مطابق قرار واقعی سزا دلوائی جائے ۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اس بیماری سے بچا کے لیے سندھ حکومت ہر وہ قدم اٹھائے گی جو کہ عوام کی صحت کے لیے ضروری ہوگا۔ اس بیماری سے بچا کی ایک ہی صورت ہے کہ احتیاط کی جائے اور مکمل لاک ڈان کیا جائے اور غیر ضروری طور پر گھروں سے نہ نکلا جائے۔ ہم سب مل کر ایک دوسرے کے تعاون سے ہی اس وبا پر قابو پا سکتے ہیں۔

وفاقی حکومت لاک ڈان کے باعث متاثر ہونے والی صنعتوں اور تاجروں کے لئے ریلیف پیکج کا اعلان کرے۔ جام اکرام اللہ دھاریجو


jam ikramullah April 26, 2020 | 6:23 PM

کراچی۔ :( نیوزآن لائن) وبائی وزیر برائے صنعت و تجارت اور محکمہ امداد باہمی اور انسداد بدعنوانی جام اکرام اللہ دھاریجو نے وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ لاک ڈان کے باعث متاثر ہونے والی صنعتوں اور تاجروں کے لئے وہ فوری طور پر ریلیف پیکج کا اعلان کرے تاکہ یہ لوگ سکھ کا سانس لے سکیں۔ اتوار کو جاری ہونے والے ایک بیان میں صوبائی وزیر جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ پاکستان کی تاریخ کی پہلی وفاقی کابینہ ہے جس میں منتخب اراکین سے غیر منتخب لوگ زیادہ تعداد میں ہیں۔ وفاقی حکومتی کابینہ میں 25 غیرمنتخب لوگ شامل ہیں جو حیرت انگیز بات ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سلیکٹیڈ وزیراعظم کا اپنی کابینہ ممبران کو 18 سے 20 تک محدود رکھنے کی باتیں آج جھوٹ کا پلندہ ثابت ہورہی ہیں۔وفاقی کابینہ کے ممبران کی تعداد 49 تک پہنچاکر سلیکٹیڈ حکومت نے ” کفایت شعاری ” اور ” سادگی ” کی مثال قائم کردی ہے۔ اور یہ سب معیشت کے لئے سفید ہاتھی ہیں۔ صوبائی وزیر جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ تبدیلی حکومت کی سب باتیں جھوٹی نکلیں ۔ لگتا ہے کہ وزرا ، وزرا مملکت، معاونین خصوصی، اور مشیروں کی فوج کو صرف اور صرف سندھ حکومت پر تنقید کرنے پر مامور کردیا گیا ہے۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ تبدیلی کے بھیانک نتائج قوم کو مل رہے ہیں ۔ قوم سے انتخابات سے قبل جھوٹ پر جھوٹ بولا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کے اثرات کے باعث ایک طرف آمدنی میں کمی ہورہی ہے تو دوسری جانب وسیع کابینہ کا بوجھ بھی ملکی معیشت پر ڈالا گیا ہے۔ سلیکٹیڈ وزیراعظم کی کراچی کی ٹیم سندھ حکومت پر تنقید کرنے کے بجائے، اعلامیہ کراچی پیکیج و دیگر اعلانات پر عمل کروائے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت نے صنعتکاروں اور تاجروں کو آن بورڈ لیا ہے اور ہم سب ایک پیج پر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ صنعتکاروں اور تاجروں سے رقم وصولی کی جھوٹی باتوں کا پول صنعتکاروں اور تاجروں نے ہی کھولا دیا ہے اور منفی پروپئگنڈہ کرنے والوں کو ناکامی نصیب ہوئی۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ وفاقی حکومت نے صنعتکاروں کو کوئی ریلیف نہیں دیا ۔ سخت لاک ڈاون کی وجہ سے انڈسٹریز اور تاجر متاثر ہوئے ہیں ۔وفاقی حکومت ان کے لئیے پیکیج کا اعلان کرے ۔انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کے خلاف جہاد میں سندھ سب سے آگے ہے ۔ وفاقی حکومت سمیت دیگر صوبوں نے بھی کورونا وائرس جنگ میں سندھ کے اقدامات کی کاپی کی ہے کیونکہ سندھ حکومت باقاعدہ حکمت عملی کے تحت عوام کو ریلیف دے رہی ہے اور کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے موثر اقدامات بھی کررہی ہے۔

سینیٹر سراج الحق منصورہ میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو


pic Ameer Jamaat .. April 19, 2020 | 8:14 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سرا ج الحق نے کہاہے کہ غریب افراد کے لیے سرکار کے دروازے بند ہیں ۔ حکومت صرف میڈیا پر پروپیگنڈا کے ذریعے اپنی کارکردگی کا اظہار کر رہی ہے ۔ کرونا کے خلاف سیاسی قیادت کو متحد کرنے کی بجائے وفاقی اور سندھ حکومت نے ایک دوسرے پر الزامات کا افسوس ناک رویہ اپنا رکھاہے ۔ حکومت 12 ہزار روپیہ ان کو دے رہی ہے جن کے نام پہلے سے بے نظیر انکم سپورٹ فنڈ میں رجسٹرڈ ہیں جبکہ لاکھوں مستحقین کا حکومت کے پاس کوئی ڈیٹا ہی نہیں ۔ جماعت اسلامی اور الخدمت فائونڈیشن کے ایک لاکھ سے زائد رضا کار پہلے دن سے خدمات سرانجام دے رہے ہیں اور اب تک الخدمت نے ایک ارب سے زائد کا راشن اور حفاظتی سامان عوام میں تقسیم کیا ہے ۔ رضاکار پہلے غریب آبادیوں میں سپرے کا کام مکمل کریں ۔ غریبوں کا خیال رکھنا اور ان کی مشکلات اور پریشانیوں کو دورکرنے کی کوشش کرنا ہمارا دینی فریضہ ہے ۔ ڈاکٹر ز اور پیرا میڈیکل سٹاف ہمار ے اصل ہیروز ہیں ۔ حکومت ان کی حفاظت کرنے کی بجائے ان پر لاٹھیاں برسا رہی ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں ایک طرف نو لاکھ بھارتی فوج کشمیریوں کو محاصرے میں لے کر ان کا قتل عام کر رہی ہے اور دوسری طرف کورونا وبا پھیلی ہوئی ہے جس سے بچائو کے لیے انتظامات نہیں کیے جارہے جس کی وجہ سے کشمیری تیزی سے لقمہ اجل بن رہے ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوںنے منصورہ میں الخدمت لاہور کے رضا کاروں کو اینٹی کرونا سپرے مشینوں کی حوالگی کے موقع پر میڈیا کے نمائندوں سے گفتگوکرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر جماعت اسلامی کے نیشنل فوکل پرسن اظہر اقبال حسن ، امیر وسطی پنجاب محمد جاویدقصوری ، امیر لاہور ذکر اللہ مجاہد ، مرکزی سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف ، صدر الخدمت وسطی پنجاب اکرام سبحانی اور الخدمت لاہور کے صدر عبدالعزیز عابد بھی موجود تھے ۔
سینیٹر سراج الحق نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل سے اپیل کی ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں خصوصی مشن بھیج کر کشمیریوں کی نسل کشی رکوائیں ۔ بھارتی قابض فوج کورونا کو بھی کشمیریوں کے خلاف ہتھیار کے طور پر استعمال کر رہی ہے ۔ گزشتہ آٹھ ماہ سے ہسپتال ، تعلیمی ادارے اور تمام کاروبار بند ہیں اورکشمیر ی محاصرے کی وجہ سے موت کے منہ میں جارہے ہیں ۔ انسانی حقوق کے عالمی اداروں اور او آئی سی کی بھی یہ ذمہ داری ہے کہ کشمیر میں ہونے والے بدترین مظالم کے خلاف آواز بلند کریں ۔ اگر عالمی برادری اسی طرح سوئی رہی تو مقبوضہ کشمیر میں انسانی المیہ جنم لے سکتاہے ۔
سینیٹر سرا ج الحق نے کہاکہ کشمیریوں کو بڑے پیمانے پر سیاسی ، جسمانی اور ذہنی تشدد کانشانہ بنایا جارہاہے ۔ ہزاروں سیاسی کارکنوں کو جیلوں میں بند کردیا گیاہے ۔ جسمانی اذیت اور ٹارچر رو ز مرہ کا معمول بن چکاہے ۔ مسلسل بدترین لاک ڈائون اور کورونا وائرس کو ہتھیار کے طور پر استعمال کیا جارہاہے جو جنگی جرم ہے ۔ لاک ڈائون کے بعد معاشی طور پر بھارت نے مقبوضہ کشمیر کو تباہ کردیاہے ۔ پوری وادی میں خوراک کی کمی کا مسئلہ پیدا ہو گیاہے ۔ کرونا وائرس کے پھیلائو کے باوجود وادی میں کسی مقامی یا بین الاقوامی ادارے کو ریلیف کے کام کی اجازت نہیں ۔ بھارتی حکومت نے پالیسی بنا رکھی ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کے اداروں کو مداخلت کی اجازت نہیں دیں گے ۔ تعلیم اور صحت کا نظام بری طرح تباہ ہے جس کا مقصد کشمیریوں کو جان بوجھ کر تعلیم اور علاج سے دور رکھناہے ۔ حکومت پاکستان انسانی حقوق کے عالمی اداروں ، اقوام متحدہ اور او آئی سی سے رابطہ کر کے کشمیر میں جنم لینے والے انسانی المیے کو روکنے کے لیے آواز بلند کرے ۔ حکومت پاکستان کو اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے اس مطالبے کی حمایت کرنی چاہیے جس میں انہوںنے دنیا بھر میں گلوبل سیز فائر کا مطالبہ کیاہے ۔ پاکستان کا مطالبہ ہونا چاہیے کہ اس کاآغاز مقبوضہ کشمیر سے بھارتی افواج کی واپسی سے کیا جائے ۔

کورونا وائرس کی وبا نے پوری دنیا کو ایک پیج پر کھڑا کردیا حافظ نعیم الرحمن


Event Ramadan Gift PIc April 19, 2020 | 8:11 PM

وبااہل ایمان کے لیے آزمائش اور خدائی دعویٰ کرنے والوں کے لیے عذاب ہے علاقہ گلبرگ میں تقریب رمضان گفٹ سے خطاب
پاکستان اللہ کی طرف سے نعمت ہے ،ملک کو اسلامی اسٹیٹ بنانے کے لیے طویل جدوجہد کی ضرورت ہے امیرجماعت اسلامی کراچی
کراچی:(نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی وبا نے پوری دنیا کو ایک پیج پر کھڑا کردیا ، وبا سے آج دنیا کی تمام سپر پاور قوتیں بے بس ہوگئیں ہیں،کورونا وائرس اہل ایمان کے لیے آزمائش اور خدائی دعویٰ کرنے والوں کے لیے عذاب ہے ،بدقسمتی سے آج تمام اسلامی ممالک میں اسلامی قوانین اور اسلامی نظام نافذ نہیں ،پاکستان اللہ کی طرف سے ہمارے لیے نعمت ہے ،اس ملک کو اسلامی ریاست بنانے کے لیے طویل جدوجہد کرنے کی ضرورت ہے،رمضان المبار کی آمد ہے لیکن حکومت کی جانب سے عوام کے لیے رمضان پیکیج تک کا اعلان نہیں کیا گیااور نہ ہی اس حوالے سے کوئی ریلیف دی گئی ،حکمران پارٹیاں صلاحیت نہ ہونے کی وجہ سے عوام کو ڈیلیور کرنے میں ناکام ہورہی ہیں ۔ان خیالات کااظہار انہوں نے جماعت اسلامی ضلع گلبرگ وسطی کے تحت علاقہ گلبرگ میں تقریب رمضان گفٹ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر امیر جماعت اسلامی ضلع گلبرگ فاروق نعمت اللہ،قیم ضلع حسین احمد مدنی ،ناظم علاقہ عرفان شاہ ودیگر ذمہ داران بھی موجود تھے۔حافظ نعیم الرحمن نے خطاب کرتے ہوئے مزیدکہاکہ رمضان المبارک کا بابرکت مہینہ ہم سب پر سایہ فگن ہونے والا ہے ، رمضان المبارک رحمتوں، بخششوں اور برکتوں کا مہینہ ہے۔ یہ نیکیوں کا موسم بہار ہے۔ اس مہینے میں زیادہ سے زیادہ نیکیاں کرنی چاہئیں،پاکستان کا تحفہ اس مہینے میں ملا اور پاکستان اسلام کے نام پر قائم ہوا۔ لہٰذا اس ملک میں اسلامی نظام رائج ہونا چاہئے۔ رمضان کا احترام بھی ہونا چاہئے اورہمیں کثرت سے توبہ ،رجوع الی اللہ اور استغفار کا اہتمام کرنے کی ضرورت ہے تاکہ ہم اپنے گناہوں کی معاف کرواسکیں اور اللہ کی جانب سے کورونا آزمائش سے نجات حاصل کرسکیں۔عرفان شاہ نے کہاکہ کورونا وائرس سے متاثرہ خاندان ، مستحقین و ضرورت مندوں کے لیے لاکھوں روپے کا فنڈ جمع کیا گیا اور ضرورت مندوں کی عزت نفس کا خیال رکھتے ہوئے رات کی تاریکی میں گھر گھر جاکر راشن پہنچایا گیا،ضلع گلبرگ میں 10سے زائد مقامات پر ریلیف سینٹر بنائے گئے ،جس میں احتیاطی تدابیر اور وائرس سے بچاؤ کے لیے دو ہزار ماکس اور 5ہزار سینیٹائزر تقسیم کے گئے ،ہزاروں خاندانوں میں راشن تقسیم کیا گیا ،علاقے کی تمام مساجد ،چرچزاور مندر وں میں بھی جراثیم کُش اسپرے کیا گیا ۔

وفاق موت کا کھیل دیکھنے والے اقدامات سے باز رہے۔ مہاجر نیشنل موومنٹ


HYDERABAD SINDH April 19, 2020 | 8:04 PM

سندھ حکومت کے اقدامات کی تائید کرتے ہیں ۔ کچھ نرمی کے ساتھ لاک ڈائون برقرار رکھا جائے۔ مہاجر نیشنل موومنٹ
رمضان المبارک میں لاک ڈائون میں صرف نماز اور خریداری کی نرمی ہونی چاہئے۔ کرونا سے ہلاکتیں بڑھ رہی ہیں ۔ عبادات ہی اس سے نجات کا ذریعہ ہیں۔ ڈاکٹر انور و ایڈھاک کمیٹی مہاجر نیشنل موومنٹ
کراچی:(نیوزآن لائن)مہاجر نیشنل موومنٹ کے عارضی کنوینر ڈاکٹر انور اور ایڈھاک کمیٹی مہاجر نیشنل موومنٹ نے وزیر اعظم عمران خان سے کہا ہے کہ وہ لیڈر بنیں وفاقی وزراء کے کہنے میں آکر سندھ میں تعصب کی فضاء کو جنم نہ دیں۔ انکی غلط پالیسیوں کی وجہ سے انکے کراچی کے ایم این اے نجیب ہارون نے استعفی دے دیا۔ وفاق موت کا کھیل دیکھنے والے اقدامات سے باز رہے۔سندھ حکومت کے اقدامات کی تائید کرتے ہیں ۔ کچھ نرمی کے ساتھ لاک ڈائون برقرار رکھا جائے۔ مہاجر نیشنل موومنٹ وزیر اعلی سندھ کے انسانیت دوست اقدامات کی تعریف کرتی ہے۔ رمضان المبارک میں لاک ڈائون میں صرف نماز اور خریداری کی نرمی ہونی چاہئے۔ کرونا سے ہلاکتیں بڑھ رہی ہیں ۔ عبادات ہی اس سے نجات کا ذریعہ ہیں۔ ڈاکٹر انور و ایڈھاک کمیٹی مہاجر نیشنل موومنٹ نے راشن اور خدمت خلق کے حوالے سے انتظامات کو موثر بنانے کی بھی اپیل کی ہے۔

وزیر اعلی سید مراد علی شاہ نے تمام متعلقہ اداروں کو سختی سے ہدایت دی ہے کہ وہ راشن کی تقسیم کے وقت لوگوں کی عزت نفس کا خیال رکھیں: سید ناصر حسین شاہ


nasir hussain shah April 12, 2020 | 9:43 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) سندھ کے وزیر اطلاعات و بلدیات، ہاسنگ و ٹان پلاننگ، مذہبی امور، جنگلات و جنگلی حیات سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری کی ہدایت کے مطابق سندھ کے وزیر اعلی سید مراد علی شاہ نے ان تمام افسران کو جو کہ راشن کی تقسیم کے حوالے سے کام کر رہے ہیں کو یہ ہدایات جاری کردی ہیں کہ وہ راشن کی تقسیم کے کام کو کسی بھی قسم کی شہرت کے لیے استعمال نہ ہونے دیں۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ وزیر اعلی سندھ نے تمام متعلقہ ڈپٹی کمشنروں کو یہ ہدایت بھی جاری کر دی ہے کہ وہ راشن کی تقسیم کے وقت لوگوں کی عزت نفس کا مکمل خیال رکھیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر کوئی بھی افسر کسی مستحق کی عزت نفس کی پامالی میں ملوث پایا گیا تو اس کے خلاف سخت ایکشن لیاجائے گا۔ سید ناصر حسین شاہ نے مزید بتایا کہ صوبائی اسمبلی کے بہت سے ممبران بھی اپنے طور پر اپنے اپنے حلقوں میں ضرورت مند مستحقین میں راشن تقسیم کر رہے ہیں۔ صوبائی وزیر اطلاعات کے مطابق وزیراعلی سندھ کی ہدایت پر یہ راشن صبح کے وقت تقسیم کیا جاتا ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ فی الحال سندھ حکومت کی پوری توجہ اپنے لوگوں کی زندگی کو کرونا وائرس سے بچانے پر مرتکز ہے اور اسی لیے سندھ حکومت اپنی صحت کی سہولیات کو ہر طرح سے تیار کر رہی ہے تاکہ کوئی بھی کرونا وائرس سے متاثرہ شخص ان صحت کی سہولیات میں جن میں تمام ہسپتال اور دیگر سہولیات شامل ہیں آئے تو اس کو مکمل توجہ کے ساتھ تمام ضروری علاج معالجے کی سہولیات میسر ہوں۔
صوبائی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ اس کے ساتھ ساتھ مختلف طریقوں سے لوگوں میں کرونا وائرس سے خود کو بچانے کے لیے آگاہی بھی پیدا کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اپنے ماحول کو صاف ستھرا رکھ کر اور ایک دوسرے سے کچھ عرصے کے لے سماجی دوری کے اصول کو اپنا کر ہم خود کو کرونا وائرس سے محفوظ رکھ سکتے ہیں۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اگر لوگ صفائی ستھرائی کا خیال نہیں رکھیں گے اور سماجی دوری کو نہیں اپنائیں گے تو وہ اپنے ساتھ ساتھ بہت سے دوسرے لوگوں کی زندگیاں خطرے میں ڈال دیں گے۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ سندھ حکومت یہ چاہتی ہے کہ صوبے کا ہر فرد حکومت کی جاری کردہ صحت سے متعلق ہدایات پر عمل کرتے ہوئے اپنا بھرپور کردار ادا کرے اور صوبے کے تمام دوسرے لوگوں کی زندگیوں کو بچائے۔ سید ناصر حسین شاہ نے جہاں ایک طرف ان تمام لوگوں کا شکریہ ادا کیا کہ جو حکومت کی جاری کردہ ہدایات پر عمل کرتے ہوئے سماجی دوری کو مکمل طور پر اپنائے ہوئے ہیں تو انہوں نے دوسری طرف اس امر پر افسوس کا اظہار کیا کہ حکومت کی ہدایات کو مسلسل نظرانداز کرتے ہوئے اپنے سمیت بڑے بوڑھوں اور دیگر بیمار افراد کی زندگیاں خطرے میں ڈال ر ہے ہیں۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ حکومت کو اس بات کا اندازہ ہے کہ لوگوں میں کرونا وائرس کے متعلق حکومت کی ہدایات کو لے کر بڑی بے چینی اور بے قراری پائی جاتی ہے خاص طور پر جب انہیں اپنا طرز زندگی بدلنے سے متعلق کوء ھدایت دی جاتی ہے تو، لیکن انہوں نے کہا کہ اگر ہمیں کرونا وائرس جیسی وابا سے مکمل نجات حاصل کرنی ہے تو ہمیں یہ سب کرنا ہی پڑے گا اپنا طرز زندگی بدلنا ہی پڑے گا۔ انہوں نے لوگوں سے کہا کہ وہ گھبرائیں نہیں مضبوط بنیں اپنا اپنے پیاروں کا اور تمام لوگوں کا خیال رکھیں وہ وقت دور نہیں ہے کہ جب ہم سب اس وبا سے مکمل طور پر نجات حاصل کر لیں گے۔
دریا اثنا وزیراطلاعات سندھ سید ناصر حسین شاہ نے اتوار کے روز سینئر صحافی و دانشور احفاظ الرحمن کے انتقال پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔ اپنے تعزیتی پیغام میں سید ناصر حسین شاہ کا کہنا تھا کہ احفاظ الرحمن آزادی اظہار کے بڑے داعی تھے اور صحافت کے لیے ان کی خدمات ہمیشہ یاد رکھی جائیں گی۔صوبائی وزیر اطلاعات نے مرحوم کی مغفرت اور ایصال ثواب کی دعا کے علاوہ مرحوم کی اہل خانہ کے لئے صبر جمیل کی دعا کی۔

ٹڈی دل بھی کوروناکی طرح خطرناک ہیوفاق صورتحال کو سمجھے,محمد اسماعیل راہو


ismail rahu April 12, 2020 | 9:36 PM

سندھ حکومت کا ٹڈی دل کے خاتمے کہ لئے وفاق کی جانب سے فضائی اسپرے نہ کرنے پر تشویش کا اظہار
ٹڈی دل بھی کوروناکی طرح خطرناک ہیوفاق صورتحال کو سمجھے,محمد اسماعیل راہو
ضلعہ گھوٹکی میں ٹڈی دل آچکی ہے,لیکن وفاق کی جانب سے فضائی اسپرے شروع نہ ہوسکا,وزیر زراعت اسماعیل راہو
کراچی:(نیوزآن لائن) سندھ حکومت نے ٹڈی دل کے خاتمے لئے وفاق کی جانب سے فضائی اسپرے نہ کرنے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹڈی دل بھی کورونا کی طرح خطرناک ہے وفاق صورتحال کو سمجھے. صوبائی وزیر زراعت محمد اسماعیل راہو نے مزید کہا کہ ضلعہ گھوٹکی میں ٹڈی دل آچکا ہے,لیکن وفاق کی جانب سے فضائی اسپرے شروع نہ ہوسکا, گھوٹکی میں ٹڈی دل کے خاتمے کہ لئے محکمہ زراعت کے جانب سیاسپریجا ری ہے, سندھ کا پورا ریگستانی علاقہ ٹڈی دل کی لپیٹ میں ہے. انہوں نے کہا کہ لاکھوں ایکڑ کے رقبے میں ٹڈی دل کے بچے اور انڈے موجود ہیں,پاکستان کو کورونا وائرس کے ساتھ ساتھ ٹڈی دل کا بھی سامنہ کرنا پڑیگا. وزیرزراعت نے کہا کہ ٹڈی دل کا خاتمہ فضائی اسپرے سے ہی ممکن ہے, ڈیزرٹ لوکسٹ اور فضائی اسپرے فقط وفاقی حکومت کا مینڈیٹ ہے, منسٹری آف فوڈ سکیور ٹی نے وزیراعظم کی موجودگی میں واعدہ کیاتھاوفا نہ ہوا,6 مارچ کے اجلاس میں اعلان کیا گیا کہ اپریل کے پہلے ہفتے میں فضائی اسپرے شروع ہو چکا ہوگا. انہوں نے کہاکہ سب سے پہلے بلوچستان اور سندھ میں اسپرے ہونا تھا, ٹڈی دل مکئی اور کپاس سمیت غذائی اجناس کی فصلو ں پرحملہ آور ہوگی, ناقابل تلافی نقصان ہوسکتا ہے, سندھ میں بارشوں کی وجہ سے ٹڈی دل کے لئے موسم سازگارہوگا, وفاق کی لاپرواہی کی وجہ سے گزشتہ سال بھی فصلوں کونقصان پہنچا تھا, محکمہ پلانٹ پرو ٹیکشن اگر کام نہیں کرسکتا تو اسے بند کر دیا جائے. صوبائی وزیر نے کہا کہ پلانٹ پروٹیکشن کی چند پرانی گاڑیاں کچھ نہیں کرسکتی, ٹڈی دل کے ممکنہ تباھ کاری کو نظراندازن نہیں کیا جاسکتا, ٹڈی دل سے نمٹنے کے لئے وفاق تیاری کرے ورنہ کاشتکا روں کی فصلیں تباھ ہوجائیں گی. انہوں نے کہا کہ اس بار اگر فصلوں کو نقصان پہنچا تو اس کی ذمہ دار بنی گالا سرکارہوگی.

مہاجر نیشنل موومنٹ کی تنظیم توڑ دی گئی۔عارضی کنوینر ڈاکٹر انور نامزد


Karachi-Sindh April 12, 2020 | 9:16 PM

عارضی کمیٹی قائم ۔ شبلی، یونس میمن ، عبدالقیوم ، نفیس فاطمہ، اقبال کامریڈ،سمیت بیس افراد کی رکنیت کا خاتمہ۔ تنظیم کے انتخابات کا اعلان ۔ سات رکنی منشور کا اعلان کل کریں گے۔ ڈاکٹر انور
کراچی:(نیوزآن لائن)مہاجر نیشنل موومنٹ کی تنظیم توڑ دی گئی۔سپریم کونسل کی اجازت سے ڈاکٹر انور کو عارضی کنوینر نامزد کردیا گیا۔ جبکہ عارضی ایڈھاک ورکنگ کمیٹی میں عادل شفیق، روبینہ یاسمین، انصر اقبال ، سجاد مہدی اور فرحین کنول شامل ہیں ۔ مہاجر نیشنل موومنٹ کی سپریم کونسل نے ۔ شبلی، یونس میمن ، عبدالقیوم ، نفیس فاطمہ، اقبال کامریڈ،سمیت بیس افراد کی رکنیت کا خاتمہ کردیا ہے۔ جبکہ تنظیم کے انتخابات کا اعلان جلد منعقد کرنے کے لئے الیکشن انچارج افشاں اور مسرت جبیں کو بنایا گیا ہے ۔ سات رکنی منشور کا اعلان کل کریں گے۔ ڈاکٹر انور نے کہا ہے کہ مہاجر نیشنل موومنٹ کو بہت سی سازشوں کا سامنا تھا۔ ہم نے بلدیاتی انتخابات سے پہلے پارٹی کو منظم اور مہاجر منشور پر صحیح سمت میں لے جانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ہم پر بی ٹیم کا الزام لگتا رہا۔ ہم اب کسی کا چارہ کار نہیں بنیں گے۔ مہاجر اتحاد کے لئے کسی کے بھی پاس جانے میں حرج نہیں ۔ افسوس کرونا جیسے حالات میں فیصلہ لینا پڑا۔

وزیراعلی سندھ روزانہ کی بنیاد پر کرونا وائرس کے پھیلا کو صوبے میں روکنے کے حوالے سے بنائی گئی ٹاسک فورس کی صدارت کرتے ہیں ۔ سید ناصر حسین شاہ


PIX SINDH MINISTER FOR INFORMATOIN April 5, 2020 | 5:52 PM

کراچی:) نیوزآن لائن)سندھ کے وزیر اطلاعات و بلدیات، ہاسنگ و ٹان پلاننگ، مذہبی امور، جنگلات و جنگلی حیات سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ وزیراعلی سندھ روزانہ کی بنیاد پر کرونا وائرس کے پھیلا کو صوبے میں روکنے کے حوالے سے بنائی گئی ٹاسک فورس کی صدارت کرتے ہیں جس میں صحت، ڈیزاسٹرمنیجمنٹ اور دیگر متعلقہ اداروں کے حکام شرکت کرتے ہیں۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ یہ ٹاسک فورس اسی دن بنا دی گئی تھی جس دن صوبے میں کرونا وائرس کا پہلا مریض سامنے آیا تھا۔ اپنے ویڈیو پیغام میں سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ صوبے میں کرونا وائرس کے پھیلا کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال کے بعد جو بھی فیصلہ لیتے ہیں جس میں لاک ڈان کا فیصلہ بھی شامل ہے یہ تمام فیصلیصحت اور دیگر شعبوں کے ماہرین سے طویل مشاورت کے بعد کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی سندھ کی ٹاسک فورس دن رات کرونا وائرس کے پھیلا کو روکنے کے لیے کام کر رہی ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ طب کے شعبے کے ماہرین کے مطابق کرونا وائرس سے متاثر ہونے والے لوگوں کی تعداد 25 اپریل تک پچاس ہزار تک جا سکتی ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ وفاق نے کرونا وائرس کے پھیلا کو روکنے کے لیے بہت دیر سے اقدامات لینا شروع کیے۔ ان تمام ڈاکٹرز، نرسز اور پیرا میڈیکس جوکہ کرونا وائرس کے متاثرہ مریضوں کو براہ راست دیکھ رہے ہیں کی حفاظت کے حوالے سے بات کرتے ہوئے سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اب تک جتنی بھی سیفٹی کیٹس حکومت کو موصول ہوئی تھی وہ ڈاکٹرز نرسز اور پیرا میڈیکس کو فراہم کر دی گئی ہیں جبکہ مزید سیفٹی کٹس بھی منگوالی گء ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ صوبے میں کرونا وائرس کے مزید 12 مریض صحت یاب ہوگئے ہیں اس طرح صحت یاب ہونے والے مریضوں کی کل تعداد 86 ہوگئی ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ کو ہدایت کی ہے کہ وہ کرونا وائرس کے پھیلا کو روکنے کے حوالے سے جو بھی اقدام لیں اس سے وفاقی حکومت کو بھی آگاہ رکھیں۔ انہوں نے کہا کہ چیئرمین پی پی پی کی یہ واضح ہدایت ہے کہ وفاقی حکومت کے ساتھ مل کر کام کیا جائے۔ سید ناصر حسین شاہ نے ایک دفعہ پھر واضح کیا کہ صوبے بھر میں یا بارڈر پر گڈز ٹرانسپورٹ کے چلنے پر کسی بھی قسم کی کوئی پابندی نہیں لگائی گئی ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ کھانے پینے کی ضروری اشیا فراہم کرنے والی گاڑیوں پر لوگ ڈاون کے پہلے دن سے کسی بھی قسم کی کوئی پابندی نہیں ہے اور وہ روزانہ کی بنیاد پر کھانے پینے کا ضروری سامان شہر میں دکانوں پر فراہم کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تاریخ کے اس مشکل وقت میں ہمیں ایک دوسرے پر الزام تراشی سے گریز کرتے ہوئے پوری دلجمعی کے ساتھ ضرورت مندوں کی مدد کرنی چاہیے۔
دریں اثنا صوبائی وزیر اطلاعات و بلدیات سندھ سید ناصر حسین شاہ سے اوورسیز ڈاکٹرز والنٹیرز ٹیم کے ارکان نے میںکارونا کے خلاف حکومت سندھ کی جدوجہد میں اپنا حصہ ڈالنے کی گزارش ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات سید ناصر حسین سے اورسیز ڈاکٹرز والنٹیر ٹیم کے وفد نے علی ہاوس کراچی میں ملاقات کی۔ وفد میں کنور محمد علی،محمد ساجد خان اور عاطف علی خان شامل تھے۔ وفد کے شرکا کی جانب سے صوبائی وزیر کو کارونا کے خلاف موثر اور بہترین حکمت عملی اختیار کرنے پر مبارک باد پیش کرتے ہوئے کارونا کے خلاف کام کرنے والے ڈاکٹروں کے لئے خاص طور پر تیار کئے گئے ڈیڑھ سو لباس پیش کئے گئے۔ناصر حسین شاہ نے وفد کے شرکا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کارونا کی وبا کے خلاف حکومت سندھ کی جدوجہد روز بروز تیز ہورہی ہے اور مخیر اداروں، فلاحی تنظیموں کا اس حوالے سے اہم کردار ہے اور حکومت سندھ انسانی خدمات کے ان اقدامات کی تہ دل سے قدر کرتی ہے۔وزیر اطلاعات نے وفد کے شرکا کو حکومتی اقدامات کے حوالے سے بتایا کہ کارونا کی وبا کے نمودار ہوتے ہی وزیر اعلی سندھ نے تمام اسٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لیکر جامع اور مربوط حکمت عملی کے نفاذ کا مرحلہ وار آغاز کردیا تھا جس کی بدولت سندھ میں یہ مرض بڑی تباھی پھیلانے میں کامیاب نہیں ہوسکا۔ناصر حسین شاہ نے کہا کہ ملک کی موجودہ صورت حال پر قابو پانے کے لئے مرکز اور صوبائی حکومتوں کا ایک پیج پر ہونا ضروری ہے اورحکومت سندھ وفاقی حکومت کے کارونا کے خلاف کئے جانے والے تمام اقدمات کی غیر مشروط حمایت کرتی ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات و بلدیات کے مطابق حکومت سندھ کارونا کے خلاف برسر پیکار ڈاکٹروں کو حفاظتی لباس کی فراہمی کے لئے باقاعدہ بجٹ بھی مختص کرچکی ہے اور وزیر اعلی سندھ کی ہدایت پر حفاظتی لباس تیار کرنے والے اداروں سے بھی ترجیحی بنیادوں پر لباس تیار کرنے کی درخواست کی گئی ہے۔ ناصر حسین شاہ نے بطور خاص حکومت چائنہ کا بھی شکریہ ادا کیا جنہوں نے کارونا کے خلاف فرنٹ لائن پر کام کرنے والے ڈاکٹروں اور پیرا میڈیکل اسٹاف کے بچاوکے لئے حفاظتی لباس تیار کرکے بھیجے اور مخیرحضرات کو بھی خراج تحسین پیش کیا جن کی مدد سے حکومت سندھ اس قدرتی آزمائش سے نبٹنے کے لئے جدوجہد کر رہی ہے۔

تعمیرات کے شعبے کو ٹیکسوں میں 90فیصد رعایت دی جارہی ہے۔ معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان


firdous ashiq awan April 5, 2020 | 5:47 PM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن)وزیراعظم کی معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ تعمیرات کے شعبے کو ٹیکسوں میں نوے فیصد رعایت دی جارہی ہے۔تفصیلا ت کے مطا بق ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ نیا پاکستان ہاوسنگ پروگرام میں سرمایہ کاری کرنے والوں کو صرف 10 فیصد ٹیکس ادا کرنا ہوگا، تعمیراتی شعبے کی ترقی کا مطلب محنت کشوں اور مزدور طبقے کی ترقی ہے۔معاون خصوصی نے کہا کہ حکومت نے سیمنٹ اور اسٹیل کی صنعت کے سوا تمام تعمیراتی شعبے پر دہولڈنگ ٹیکس ختم کردیا ہے۔

گندم چینی بحران کے ذمہ داروں کے خلاف کارروائی ہوگی۔ وزیراعظم عمران خان


imran khan April 5, 2020 | 2:29 PM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن) وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ گندم چینی بحران پیدا کر نے والوں کے ذمہ داروں کے خلاف تفصیلی رپورٹ آنے پر کارروائی ہوگی۔سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ وعدے کے مطابق گندم اور چینی کی قیمتوں میں اچانک اضافے کی تحقیقاتی رپورٹ بغیر ردوبدل سامنے لے آئے۔وزیراعظم عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ اعلی اختیاراتی کمیشن سے تفصیلی فرانزک رپورٹ کا انتظار کر رہا ہوں، کمیشن کی رپورٹ 25 اپریل کو آئے گی جس کے بعد گندم چینی بحران کے ذمہ دار افراد کیخلاف کارروائی ہوگی، رپورٹس آنے کے بعد کوئی بااثر لابی عوام کا پیسہ نہیں کھا سکے گی۔ ملک بھر میں گندم چینی بحران پر وزیراعظم عمران خان کی جانب سے قائم کردہ تحقیقاتی کمیٹی کی رپورٹ منظرعام پر آگئی جس میں بتایا گیا ہے کہ گندم ،چینی کے بحران میں تحریک انصاف کے سینئر رہنما جہانگیر ترین نے اٹھایا۔جہانگیر ترین نے سبسڈی کی مدد میں 56 کروڑ روپے کمائے جب کہ وفاقی وزیر خسرو بختیار کے رشتہ دار نے آٹا و چینی بحران سے 45 کروڑ روپے کمائے، چوہدری منیر رحیم یارخان ملز، اتحاد ملز ٹو اسٹار انڈسٹری گروپ میں حصہ دار ہیں، اس بحران میں مسلم لیگ (ن) کے سابق ایم پی اے غلام دستگیر لک کی ملز کو 14 کروڑ کا فائدہ پہنچا۔

وزیر اعلی سندھ کراچی کے بلدیاتی اداروں کو بھی سندھ کا حصہ سمجھیں ابتک نہ تنخواہیں دی گئیں ہیں نہ اضافی تنخواہیں۔ رباب جعفری۔ غلام مصطفی


karachi April 5, 2020 | 1:56 PM

کرونا وائرس سے کراچی کے بلدیاتی ادارے بھی متاثر ہیں ۔یوسیز کے ملازمین کو بلا لیا گیا لیکن راشن کی تقسیم سے محروم رکھا گیا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
کراچی:(نیوزآن لائن) آل پاکستان آفیسرز ایکشن کمیٹی سندھ کی سینئر وائس چیئرپرسن رباب جعفری ، وائس چیئرمین غلام مصطفی نے وزیر اعلی سندھ کی توجہ مبذول کراتے ہوئے کہا ہے کہ وزیر اعلی سندھ کراچی کے بلدیاتی اداروں کو بھی سندھ کا حصہ سمجھیں ابتک نہ تنخواہیں دی گئیں ہیں نہ اضافی تنخواہیں۔انکے ٢٥ مارچ تک تنخواہوں کی ادائیگی کے دعوی ہوا ہو چکے ہیں۔ کرونا وائرس سے کراچی کے بلدیاتی ادارے بھی متاثر ہیں ۔یوسیز کے ملازمین کو بلا لیا گیا لیکن راشن کی تقسیم سے محروم رکھا گیا ہے۔ملازمین و افسران شدید مشکلات کا شکار ہیں۔میئر کراچی نے ابتک جون کی اضافی تنخواہیں نہ دیکر ظلم کی حد کی ہوئی ہے۔ نا اہل افسران اور کمیشن مافیا ملازمین کے لئے رقوم نہیں ہونے دیتی۔ مرجانے والوں کو معاوضہ نہیں دیا جاتا۔ افسران کو اداروں کے سپرد کرکے انکے ہارٹ اٹیک کا بندوبست کردیا جاتا ہے۔ میئر ، ڈپٹی میئر اقتدار اور آسائشوں کے مزے لے رہے ہیں۔ وزیر اعلی سندھ ، وزیر بلدیات خصوصی توجہ دیں اور تنخواہیں ادا کرائیں ۔

حکومت جوبھی حکمت عملی بنائے گی اس میں دیہاڑی دار مزدور پہلی ترجیح ہوگی۔وزیراعظم عمران خان


pm-imran-khan-kashmir-750x369 March 29, 2020 | 8:50 PM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ حکومت جوبھی حکمت عملی بنائے گی اس میں دیہاڑی دار مزدور پہلی ترجیح ہوگی۔تفصیلات کے مطا بق وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت پی ٹی آئی کور کمیٹی کا اجلاس ہوا، اجلاس میں کورونا وائرس کی مجموعی صورتحال اور ملک میں اشیائے ضروریہ کی بلاتعطل فراہمی کے اقدامات کا جائزہ لیا گیا، جب کہ صوبوں میں کورونا سے نمٹنے کے لیے اقدامات پر بریفنگ دی گئی۔ان کا مزید کہنا تھا کہ کورونا کے خلاف جنگ جیتنے کے لیے ہر شہری کو کردار ادا کرنا ہوگا، مجھے یقین ہے قوم متحد ہوکر اس آزمائش کا مقابلہ کرے گی، محدود وسائل کے باوجود ہر سرکاری ادارہ بہترین کام کررہا ہے، جو بھی حکمت عملی بنا رہے ہیں اس میں دیہاڑی دار مزدور پہلی ترجیح ہے، ہنگامی حالات میں تمام وسائل قوم پر لگائیں گے۔ وزیراعظم نے شاہراہوں پر گڈز ٹرانسپورٹ بحال رکھنے سے متعلق وفاقی وزیر مراد سعید کو ٹاسک سونپتے ہوئے کہا فوڈ چین میں کسی صورت رکاوٹ نہیں آنی چاہیے۔

ضرورت پڑنے پر پبلک اسکول ٹنڈو محمد خان کو آئسولیشن وارڈ میں تبدیل کیا جاسکتا ہے۔ سید قاسم نوید قمر


syed qasim naveed qamar ppp March 29, 2020 | 8:34 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی برائے محکمہ بحالی خصوصی افراد سندھ سید قاسم نوید قمر نے کہا ہے کہ ضرورت پڑنے پر پبلک اسکول ٹنڈو محمد خان کو کورونا وائرس کے مریضوں کے لئے آئسولیشن وارڈ میں تبدیل کیا جاسکتا ہے۔ یہ بات انہوں نے آج پبلک اسکول ٹنڈو محمد خان کا دورہ کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر ڈپٹی کمشنر یاسر بھٹی ، رکن سندھ اسمبلی سید ایاز حسین شاہ بخاری ، ضلعی جنرل سکریٹری خرم کریم سومرو اور ضلع کے صحت کے افسران بھی موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ ہم کورونا وائرس کے خطرے کی وجہ سے کسی بھی ہنگامی صورتحال کو سنبھالنے کے لئے ہر ممکن اقدامات اٹھا رہے ہیں کیونکہ کورونا وائرس کے مریضوں کے لئے تنہائی ہی بہترین علاج ہے۔ اپنے دورے کے دوران انہوں نے مقامی اور صحت انتظامیہ کے ساتھ پبلک اسکول کو آئسولیشن وارڈ میں تبدیل کرنے کے امکان پر تبادلہ خیال کیا۔
سید قاسم نوید قمر نے افسران سے کہا کہ وہ کسی بھی چیلنج کا مقابلہ کرنے کے لئے تیار رہیں ، انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں عوام کی توقعات پر پورا اترنا ہوگا۔ وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی برائے محکمہ بحالی خصوصی افراد سندھ سید قاسم نوید قمر نے کہا کہ سندھ حکومت صوبے کے عوام کو کورونا وائرس سے محفوظ رکھنے کے لئے تمام تر کوششیں کر رہی ہے اور ان کوششوں میں کامیابی کے لئے عوام کا تعاون بہت ضروری ہے۔

کورونا وائرس کا مقابلہ کرنے پر پاک فوج کو سلام، مرزا عالم بیگ


IMG_9448 copy March 29, 2020 | 8:26 PM

وزیراعلی سندھ کے بروقت اقدامات نے موذی وبا کو پھیلنے روکا
کراچی :( نیوزآن لائن) بحیثیت قوم ہم اس وقت ایک ایسے بحران کا شکار ہیں جس نے نہ صرف پاکستان بلکہ تمام دنیا کو اپنی لپیٹ میں لیا ہوا ہے۔ اللہ پاک پاکستان سمیت تمام تر دنیا کو کو اس کورونا جیسی وبا سے جلد سے جلد نجات دے ان خیالات کا اظہار سماجی رہنما مرزاعالم بیگ نے اپنے ایک بیان میں کیا انہوں نے کہا کہ اس وقت قوم کو تمام تر احتیاطی تدابیر اختیار کرنا انتہائی ضروری ہے جس کی وجہ سے ہم اس وبا کا مقابلہ کرسکتے ہیں۔ انہوں نے کورونا وبا کے خلاف پہلی صفوں میں کام کرنے والے ڈاکٹروں نرسوں اور دیگر طبی عملے کے علاوہ پاک فوج، رینجرز، پولیس سیکیورٹی اہلکار، میڈیا ورکرز امدادی ادارے اور دیگر کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ ان تمام اداروں و افراد کی کوششیں کسی طور بھی فرشتوں سے کم نہیں ۔ انہوں نے سندھ میں وبا کے خلاف بروقت عملی اقدامات کرنے پر وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ اور ان کی ٹیم کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے خراج تحسین پیش کیا اور مبارکباد دی۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعلی سندھ کے بروقت اقدامات نے جنہیں مخالفین نے تنقید کا نشانہ بنایا وقت نے ثابت کیا کہ ان ہی اقدامات نے اس موذی وبا کو پھیلنے روکا۔انہوں نے کہا کہ موجودہ صورتحال میں جہاں ہر صاحب حیثیت انفرادی و اجتماعی طور پر قوم کو اس مسئلے سے نکالنے میں مصروف عمل ہیں وہیں کچھ غیرقانونی نام نہاد این جی اوز اپنے اپنے اداروں کی خود نمائی کے لئے غیرقانونی اور غیراخلاقی طریقہ کار اختیار کرتے ہوئے صاحب حیثیت لوگوں کو دھمکی آمیز فون کر کے جبرا ان سے امداد کے نام پر بڑی بڑی رقومات وصول کررہے ہیں۔ ان سے درخواست ہے کہ وہ ایسے ہتھکنڈوں سے باز آجائیں ۔ اور جو ادارے جیسے الخدمت، سیلانی، عالمگیر، جے ڈی سی ، ایدھی، چھیپا خدا کی رضا کے لئے دکھی انسانیت کی خدمت میں مصروف عمل ہیں اللہ انہیں مزید توفیق عطا فرمائے۔ہم ایک بار پھر پاک فوج پیرا ملٹری کے جوانوں اور افسروں کو سلام پیش کرتے ہیں کہ وہ سرحدوں کے ساتھ ساتھ کرونا وائرس جیسی موزی مرض سے قوم کو بچانے کے لئے میدان میں اترے ہوئے ہیں ۔

سندھ میں کرونا وائرس کے نام پر فنڈز کی تحقیقات کی جائے: ڈاکٹر سلیم حیدر


dr saleem haider MIT March 29, 2020 | 8:19 PM

پندرہ سال سے پیپلزپارٹی کی حکومت صوبے کے وسائل کو لوٹ رہی ہے
جو حکومت ایڈز اور ہیپاٹائٹس کے مریضوں کا علاج نہیں کراسکی اس سے کوئی امید نہیں کی جاسکتی
کراچی:(نیوزآن لائن)مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کے نام پر سندھ میں خرچ کئے جانے والے فنڈز کو مانیٹر کرنے کیلئے ہائیکورٹ کے اعلیٰ سطح ججز پر مشتمل کمیٹی بنائی جائے جو اس بات کا تعین کرے کہ اربوں روپے کے یہ فنڈز وفاقی اور صوبائی حکومتیں کس طرح خرچ کررہی ہیں کیونکہ سندھ میں پیپلزپارٹی کی کرپٹ حکومت 15 سال سے سندھ کے وسائل کو لوٹ رہی ہے اور اب یہ قدرتی آفات پر ملنے والے فنڈز بھی لوٹنے کیلئے سرگرم ہوگئی ہے۔ انہوں نے کہاکہ سندھ کے شہری علاقوں میں 10 روز سے کاروبار بند اور نظام زندگی مفلوج ہے ۔ غریب مزدور جوکہ پہلے ہی معاشی بدحالی کا شکار تھے اب فاقہ کشی میں مبتلا ہورہے ہیں لیکن یہ حکومت اب تک نہ تو کسی ایک شخص کو راشن دے پائی ہے اور نہ ہی ان کی ضرورت کا سامان، جس کے بعد یہ اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ کرونا وائرس کے نام پر اربوں روپے کے یہ فنڈز کس کی جیب میں جائیں گے ۔ پیپلزپارٹی جو زکوٰة و خیرات کی رقم بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کے نام پر اعلیٰ افسران اور جیالوں میں تقسیم کرتی ہے اس سے یہ توقع نہیں کی جاسکتی کہ وہ سندھ کے شہری علاقوں کی کچی آبادیوں اور غریب افراد میں راشن تقسیم کرے گی اس کا اندازہ اس بات سے بھی لگایا جاسکتا ہے کہ حیدرآباد میں شرجیل انعام میمن جیسے مستند نیب زدہ اور کرپٹ شخص کو فوکل پرسن بناکر انتظامیہ کو ان کے ماتحت کردیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ پیپلزپارٹی کی حکومت جو لاڑکانہ اور سندھ کے دیگر اضلاع میں ایڈز میں مبتلا ہوجانے والے سینکڑوں افراد کو علاج کے لئے دوا دینے کو تیا رنہیں جو ہیپاٹائٹس کنٹرول پروگرام کے نام پر اربوں روپے کی کرپشن کررہی ہو ، ملیریا ، ٹی بی کنٹرول پروگرام کے نام پر وڈیرے او رمن پسند افسران عیاشیاں کررہے ہوں ان سے کرونا جیسی آفت سے نمٹنے کے نام پر غریب عوام کی مدد کی کس طرح توقع کی جاسکتی ہے۔

سندھ حکومت نے عوام کے مفاد اور حفاظت کی خاطر صوبے میں22 مارچ رات 12 بجے سے لاک ڈاؤن کرنے کا اعلان کیا ہے۔سید ناصر حسین شاہ


syed nasir hussain shah March 22, 2020 | 9:30 PM

کراچی : (نیوزآن لائن ) سندھ کے وزیر اطلاعات ، بلدیات، جنگلات و جنگلی حیات سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ سندھ حکومت نے عوام کے مفاد اور حفاظت کی خاطر صوبے میں22 مارچ رات 12 بجے سے لاک ڈاؤن کرنے کا اعلان کیا ہے۔صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ اس لاک ڈاؤن کو کرفیو نہ سمجھا جائے یا کہا جائے ، اس کے بجائے اسے کیئر فور یو کہا جائے۔ انہوں نے کہا کہ یہ فیصلہ اتوار کے روز وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیر صدارت ہونے والے ایک اہم اجلاس کے دوراں لیا گیا۔اجلاس میں سندھ کابینہ کے تمام اراکین کے علاوہ چیف سیکریٹری سندھ، ڈائریکٹر جنرل رینجرز سندھ ، انسپیکٹر جنرل پولیس سندھ ، کور ہیڈ کوارٹر کے برگیڈیئر وسیم کے علاوہ تمام متعلقہ افسران شریک ہوئے۔سید ناصر حسین شاہ نے اپنے بیان میں اجلاس میں کئے گئے مزید فیصلوں کے بارے میں آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ اس لاک ڈاؤن کے بعد بلاوجہ گھر سے باہر نکلنے والوں کے خلاف ایکشن لیا جائے گا۔ صوبائی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ عوام کو حکومت سندھ کی صحت کے مطابق جاری کی گئی ہدایات پر سختی سے عمل کرنا چاہیے ۔انہوں نے کہا کہ صرف زیادہ سے زیادہ احتیاطی تدابیر اختیار کرکے ہی لوگ خود کو اور اپنے آس پاس کے لوگوں کو کرونا وائرس سے محفوظ رکھ سکتے ہیں۔سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اس لاک ڈاؤن کو کرفیو کے بجائے کیئر فار یو کہیں۔صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ وزیر اعلیٰ سندھ کا یہ خیال تھا کہ ہر وہ فیصلہ اور قدم اٹھایا جائے جو عوام کی صحت اور زندگی کے مفاد میں ہو۔ انہوں نے کہا کہ تمام سخت فیصلے عوام کو کورونا وائرس سے متاثر ہونے سے بچانے کے لئے کئے گئے ہیں۔سید ناصر حسین شاہ نے واضح کیا کہ اس بات کو بھی یقینی بنایا جائے گا کہ اس لاک ڈاؤن کے دوران عوام کو تمام ضروری سہولیات جن میں پانی، بجلی، گیس اور دیگر سہولیات جن میں پانی ، بجلی، گیس اور دیگر سہولیات بلا تعطل ملتی رہیں۔سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ لاک ڈاؤن کے بعد غیر ضروری طور پر کسی کو بھی گھر سے باہر نہیں دیا جائے گا ۔وزیر اطلاعات سندھ نے کہا کہ اگر کسی کو ضروری طور کہیں جانا ہوا تو وہ سیکیورٹی اہلکاروں کو بتا کر جاسکے گا۔ایک گاڑی میں دو افراد سے زیادہ لوگ نہیں بیٹھ سکیں گے۔سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اس لاک ڈاؤن کے دوران مہنگائی اور ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے گا۔صوبائی وزیر اطلاعات اجلاس میں کئے گئے مزید فیصلوں کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ جس کسی کا بھی بجلی کا بل 4 ہزار روپے تک ہوگا وہ معاف کردیا جائے گا اس طرح کسی کا گیس کا بل اگر دو ہزار روپے ہوگا تو وہ بھی معاف کردیا جائے گا۔صوبائی وزیر اطلاعات نے مزید بتایا کے اس دوران ہر قسم کے اجتماع پر پابندی ہوگی اور عبادت گاہیں بھی بند ہوں گی۔اور عبادت گاہیں بھی بند ہوں گی۔انہوں نے کہا کہ اگر کوئی شخص بیمار ہوا تو اسے اسپتال لے جانے کی اجازت ہوگی۔سید ناصر حسین شاہ نے عوام سے درخواست کی کے وہ سندھ حکومت کی جانب سے لئے گئے سخت فیصلوں پر مکمل عملدرآمد کریں کیونکہ یہ ان کے مفاد میں کئے گئے ہیں۔

عوام کے تعاون سے کوروناوائرس کو شکست دے سکتے ہیں۔صدر ڈاکٹر عارف علوی


arif alvi March 22, 2020 | 3:53 PM

اسلا م آباد:(نیوزآن لائن) صدر ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ ہم عوام کے تعاون سے کوروناوائرس کو شکست دے سکتے ہیں۔صدر ڈاکٹر عارف علوی نے اپنے ٹویٹ پیغام میں کہا ہے کہ ہر پاکستانی کو یہ جنگ لڑنی چاہیے اور ہر دوست، رشتہ دار اور ہمسائے کو بطور سپاہی ساتھ ملانا چاہیے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ صرف سماجی فاصلہ رکھنے، ہاتھ دھونے اور چہرے کو نہ چھونے کی احتیاطی تدابیر کو اختیار کریں۔

دنیا بھر میں کوروناوائرس سے جاں بحق ہو نے والوں کی تعداد تیرہ ہزاز تک پہنچ گئی


crona varis infected in international level March 22, 2020 | 3:40 PM

وینس: (نیوزآن لائن) دنیا بھر میں کوروناوائرس سے جاں بحق ہو نے والوں کی تعداد تیرہ ہزاز تک پہنچ گئی ہے۔تفصیلات کے مطا بق اٹلی میں 4ہزار 825 افراد، چین میں 3ہزار 255 اور سپین میں 1ہزار378 افرادجاں بحق ہو ئے ہیںجبکہ ا یران میں ہلاکتوں کی تعداد 1ہزار 566تک پہنچ گئی ہے۔جرمنی میں ایک روز میں 2ہزار 705نئے مریضوں میں وائرس کی تصدیق کے بعد متاثرہ مریضوں کی مجموعی تعداد 16ہزار 662ہوگئی ہے۔

٢٣ مارچ یوم پاکستان کا دن ہر سال اہل پاکستان کو اس جذبے کی یاد دلاتا ہے ،مسلم اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کراچی ڈویژن


Muslim Student Organization Karachi March 22, 2020 | 3:21 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)٢٣ مارچ یوم پاکستان کا دن ہر سال اہل پاکستان کو اس جذبے کی یاد دلاتا ہے جو قیام پاکستان کا باعث بنا، پاکستان کا قیام ان اکابرین کی لازوال قربانیوں کا نتیجہ ہے جنہوں نے قائد اعظم کی قیادت میں قیام پاکستان کی انتھک جدوجہد کی اور بر صغیر کے مسلمانوں کو آزادی دلوا کر آزاد ملک کا تحفہ دیا۔ یوم پاکستان کے اس موقع پر ہم تحریک پاکستان کے اکابرین کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں اور اس عزم کا اظہار کرتے ہیں کہ مملکت خداداد پاکستان کے دفاع اور تحفظ کے لیے کوئی کسر نہیں چھوڑیں گے۔ ان خیالات کا اظہار مسلم اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کراچی ڈویژن کے ناظم عادل انصاری، ناظم عمومی دانش کمال، ناظم اطلاعات انعام الحق رحمانی، معاون ناظم شیر جہان و دیگر نے 23 مارچ یوم پاکستان کے موقع پر کراچی میں مسلم میڈیا سیل سے جاری بیان میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے قیام کے لیے لاکھوں افراد نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کر کے اس ملک کا معرض وجود میں آنا ممکن بنایا، جنہیں مسلم اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن سلام پیش کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی نظریاتی اور جغرافیائی سر حدوں کی حفاظت کے لیے ایم ایس او کے نوجوان ہمہ وقت تیار ہیں۔

کورونا وائرس نمٹنے کے لیے قوم کو متحد ہونا ہوگا۔ وزیر اعظم عمران خان


imran khan pm pakistan March 20, 2020 | 7:18 PM

اسلا م آباد:(نیوزآن لائن)وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ کورونا وائرس نمٹنے کے لیے قوم کو متحد ہونا ہوگا۔تفصیلات کے ،طا بق وزیر اعظم عمران خان نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ دنیا کے تجربے سے ثابت ہوا کہ کورونا وائرس کے پھیلاو کو روکنے کے لیے سماجی سطح پر فاصلہ رکھنے کی حکمت عملی موثر ثابت ہوئی ہے عوام پر ہجموم مقامات پر جانے سے گریز کریں۔ان کا مزید کہناتھا کہ کورونا وائرس کے ایک دم بڑھنے سے مشکلات کا سامنا کرنا پڑسکتاہے۔ ماہرین کی رائے ہے کہ درجہ حرارت بڑھنے سے وائرس کے اثرات کم ہوجائیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ طبی عملے کے لیے حفاظتی سامان کی کٹس منگوائی جارہی ہیں اور ان کا تحفظ ہماری اولین ترجیح ہے۔ وزیراعظم نے کہا گھبراہٹ میں لوگ خریداری شروع کردیں گے تو حکومت بھی نہیں سنبھال سکے گی۔ کورنا وائرس سے جنگ قوم جیتے گی تنہاحکومت نہیں جیت سکتی۔ پھیلاو میں اضافہ ہوا تو مکمل لاک ڈاون پر بھی غور کیا جائے گا۔

کرو نا وا ئر س سے بچا کا واحد حل احتیا ط ہے ۔وزیر اطلا عا ت سید نا صر حسین شا ہ


nasir shah March 20, 2020 | 6:24 PM

عا لمی وبا سے مل جل کر مقا بلہ کر نا ہو گا عوام سنجیدگی کا مظا ہرہ کر یں ۔
مختلف علا قو ں کے دور ے کے دورا ن گفتگو
کرا چی (نیوزآن لائن)سندھ کے وزیر اطلا عا ت ،بلدیا ت ،ہا سنگ و ٹا ن پلا ننگ ،مذہبی امو ر اور جنگلات و جنگلی حیا ت سید نا صر حسین شاہ نے آج کرونا وائرس کے حوالے سے آگاہی کے لئے شہر کے مختلف علاقوں کا دورہ کیا اور صفا ئی ستھرا ئی کے حوالے سے مختلف مقا ما ت پر قا ئم کیمپ کا معا ئنہ کیا جن میں،بلاول چورنگی ودیگر مقامات شامل ہیں۔ انہو ں نے بتا یا کہ سا لڈ ویسٹ مینجمنٹ کی جا نب سے شہر بھر کے 88مقا ما ت پر اس طرح کے سینیٹا ئزرز اور صفا ئی کیمپ قا ئم کئے جا ئینگے آج 25مقا ما ت پر کیمپ قا ئم کر دیئے گئے ہیں جبکہ مزید کیمپ کل تک فنکشنل کر دیئے جا ئینگے ۔اس مو قع پر صوبائی وزیر نے وہاں موجود افراد سے بات کرتے ہوئے انہیں سندھ حکومت کی جانب سے کرونا وائرس کے حوالے سے کئے جانے والے اقدامات اورمحکمہ صحت سندھ اورعا لمی ادار ہ صحت کی جانب سے جاری ہدایات کے حوالے سے آگاہ کیا۔ صوبائی وزیر نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ اس حوالے سے آگاہی کے لئے حکومت کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات میں سندھ حکومت کا ساتھ دیں او رکرونا وائرس سے آگاہی اور اس سلسلے میں سندھ حکومت کی جانب سے جاری ہدایات پر عمل پیرا ہوں صوبائی وزیر نے کہا کہ اس وقت پوری دنیا میں کرونا وائرس کی وبا کے باعث شدید اضطراب ہے اس وقت صوبہ سندھ جس طرح اس وباکے حوالے سے عملی طو ر پر نبر د آزما ہو نا او ر جس طرح کے انتظامات کئے گئے ہیں وہ قابل ستائش ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ ایک عالمی وباہے اور ہم سب کو مل جل کر اس میں اپنا کردار ادا کرنا ہوگا اور اس وباسے جان چھڑانی ہوگی انہوں نے کہا کہ اس وباسے بچا کا واحد حل احتیاط اور ڈاکٹرز اور حکومت کی جانب سے دی جانے والی ہدایات پر عمل کرنا ہے ہماری بھرپور کوشش ہے کہ صوبہ سندھ اور پورا ملک اس وباسے محفوظ رہے اور اس حوالے سے سندھ حکومت نے تمام وہ اقدامات کئے ہیں جس کے ذریعے اس وباسے بچا جا سکے انہوں نے بتایا کہ ہماری پاک فوج سمیت قانون نافذ کرنے والے تمام ادارے ہمارے شانہ بشانہ کام کر رہے ہیں ایکسپو سینٹر میں پاک فوج کے تعاون سے آئسولیشن سینٹر قائم کیا جا رہا ہے جو کہ آخری مراحل میں ہے ۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ میری عوام سے اپیل ہے کہ وہ خود کو اور اپنے اہل خانہ کو بچانے کے لیے صرف اور صرف احتیاط کریں سینیٹائزر کا استعمال کرتے رہیں سید ناصر حسین شاہ نے بتایا کہ سندھ حکومت نے عوام کی رہنمائی کے لئے ہیلپ لائن بھی قائم کردی ہے تاکہ عوام بروقت آگاہی حاصل کرسکیں انہوں نے کہا کہ اس وباسے پیدا صورتحال کے باعث عوام کو درپیش مسا ئل سے آگا ہ ہیں اس سلسلے میں ہم نے یو میہ اجر ت پر کا م کر نے والے افرا د کے لئے را شن بیگز تقسیم کر نے کا بھی اہتما م کیا ہے جبکہ پیپلز پا ر ٹی کے چیئر مین بلا ول بھٹو زر دا ر ی اور وزیر اعلی سندھ کی خصو صی ہدایت پر صوبائی وزرا اور ارا کین اسمبلی اپنے مختلف علاقوں میں عوا م کے در میا ن مو جو د ہیں اور کسی بھی صو ر تحا ل سے نپٹنے کیلئے اعلی حکا م سے را بطے میں ۔انہو ں نے کہا کہ شہر بھر میں جرا ثیم کش ادوا یا ت کے اسپرے کر نے کا بھی اہتمام کیا جا رہا ہے ۔ اس مو قع پر صو با ئی وزیر نے وہا ں مو جو د عوام کے سامنے اپنے ہا تھ دھو کر عملی مظا ہر ہ کیا اور کہا کہ صفا ئی ستھرا ئی کا سبق ہما ر ے دین اسلا م نے بھی دیا ہے اور اس پر عمل پیرا ہو کر ہم اس وبا ئی مر ض پر قا بو پا سکتے ہیں ۔بعد ازا ں صو با ئی وزیر نے کینٹ اسٹیشن پر محکمہ بلد یا ت کی جا نب سے جا ر ی اسپرے مہم کا بھی جا ئزہ لیا اور اس مو قع پر میڈیا سے با ت چیت کر تے ہو ئے صو با ئی وزیر سید نا صر حسین شا ہ نے کہا کہ اسپرے مہم شہر بھر میں جاری ہے میری عوام سے اپیل ہے کہ جن علا قو ں میں اسپرے نہیں کیا گیا متعلقہ حکا م سے اور محکمہ بلدیا ت کی ہیلپ لا ئن پر رابطہ کریں ۔

وفاق شہریوں سے دو ماہ کے بجلی اور گیس کے بل نہ لے,سندھ سرکار کا مطالبہ


ismail raho March 20, 2020 | 5:53 PM

وفاقی حکومت عوام سے 2 ماہ تک تین سو یونٹ بجلی اورایک ہزارروپے تک کے گیس بل وصول نہ کرے,اسماعیل راہو
شہری گھروں تک محدود ہیں اور تمام کاروبار بند ہے اسی لیے عوام کو رلیف ملنا چاہئے،صوبائی وزیر
کراچی:(نیوزآن لائن) ملک میں کورونا وائرس کا معاملہ، سندھ سرکارنے وفاق سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ وفاقی حکومت شہریوں سے دو ماہ کے بجلی اور گیس کے بل نہ لینے پر سنجیدگی سے غورکرے. صوبائی وزیرزراعت اسماعیل راہو نے مزید کہا کہ وفاقی حکومت عوام سے 2 ماہ تک تین سو یونٹ بجلی اورایک ہزارروپے تک کے گیس بل وصول نہ کرے, شہری گھروں تک محدود ہیں اور تمام کاروبار بند ہے اسی لیے عوام کو رلیف ملنا چاہئے، چھوٹے کاروباری، ملازمین اور دہاڑی مزدورکا گذر مشکل وقت سے ہورہا ہے، اس مشکل صورتحا ل سے صوبائی حکومت اپنے محدود وسائل سے نبرد آزما ہو رہی ہے. صوبائی وزیر نے کہا کہ خان صاحب بھلے سندھ کو کوئی فنڈ نہ دیں مگر عوام کو تو رلیف دیں, وفاقی حکومت پنجاب، بلوچستان اور کے پی کے تک محدود نہ رہے، سندھ بھی ملک کا حصہ ہے.

کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے اقدامات کی خودنگرانی کر رہے ہیں۔وزیراعظم عمران خان


imran-khan prime minster of pakistan March 15, 2020 | 7:45 PM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ وہ کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے اقدامات کی خودنگرانی کر رہے ہیں اور جلد قوم سے خطاب کریں گے۔ ٹویٹ میں وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ عوام کو ہدایت کی کہ وہ حکومت کی طرف سے جاری حفاظتی ہدایات پر عمل کریں۔انہوں نے کہا کہ اس وقت گھبرانے کی نہیں بلکہ محتاط رہنے کی ضرورت ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ ہم خطرات سے چوکس ہیں اور ہم نے اپنے عوام کے تحفظ اور صحت کیلئے جامع قواعدوضوابط وضع کئے ہیں۔

سید ناصر حسین شاہ اور صوبائی وزیر تعلیم و محنت سعید غنی کا اتوار کے روز مختلف مکاتب فکر کے علماء کرام سے ملاقات


nasir shah and saeed gani March 15, 2020 | 7:30 PM

کراچی: (نیوزآن لائن) سندھ کے وزیر برائے اطلاعات ، بلدیات، جنگلات و جنگلی حیات سید ناصر حسین شاہ اور صوبائی وزیر تعلیم و محنت سعید غنی نے اتوار کے روز مختلف مکاتب فکر کے علماء کرام سے ملاقات کی۔اور ان کو سندھ حکومت کی جانب سے کرونا وائرس کے حوالے سے اٹھائے جانے والے اقدامات اور کئے گئے فیصلوں سے تفصیلاََ آگاہ کیا۔جن علماء کرام سے سید ناصر حسین اور سعید غنی نے ملاقات کی ان میں معروف عالم دین مفتی منیب الرحمان، مولانا بشیر فاروقی اور دعوت اسلامی کراچی کی رابطہ مجلس کے اراکین شامل تھے۔مفتی منیب الرحمان سے دارالعلوم نعیمیہ میں ہونے والی ملاقات کے دوران سندھ کے وزیر اطلاعات سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ سندھ حکومت صوبے میں کرونا وائرس سے بچاؤ کے لئے تمام اقدامات بروئے کار لا رہی ہے۔انہوں نے اس سلسلے میں وزیراعلیٰ سندھ کی جانب سے لئے جانے والے فیصلوں سے مفتی منیب الرحمان کو تفصیلاََ آگاہ کیا۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے سندھ کے وزیر تعلیم نے کہا کہ وزیر اعلیٰ کی قائم کردہ ٹاسک فورس سے فیصلوں کے نتیجے میں صوبے کے تمام تعلیمی ادارے بند کردیئے گئے ہیں۔سعید غنی نے کہا کہ مدارس کیلئے بھی یہی احکامات ہیں۔ مفتی منیب الرحمان نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے نہ صرف سندھ حکومت کے فیصلوں کی تائید کی بلکہ صوبائی وزراء کو اپنے مکمل تعاون کی یقین دہانی بھی کروائی ۔انہوں نے بتایا کہ سندھ حکومت کے فیصلے کے مطابق تمام مدارس میں درس و تدریس معطل کردی گئی ہے۔مفتی منیب الرحمان نے دعا کی کہ سندھ حکومت کی کوشش کامیاب ہوں اور نہ صرف صوبہ سندھ بلکہ پورا ملک اس وبا سے محفوظ رہے۔دعوت اسلامی کے مجلس رابطہ کے اراکین سے گفتگو کرتے ہوئے سید ناصر حسین شاہ اور سعید غنی نے کہا کہ وہ چاہتے ہیں کہ مولانا الیاس قادری صاحب ایک ویڈیو بیان جاری کریں جس میں عوام کو حکومت سندھ کی جانب سے جاری کردہ ہیلتھ ایڈوائزری سے متعلق آگاہی دیں۔مجلس رابطہ دعوت اسلامی کے اراکین نے اس سلسلے میں اپنے تعاون کا یقین دلاتے ہوئے کہا کہ جلد ہی اس سلسلے میں مولانا الیا س قادری کا بیان جاری کردیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ وہ سندھ حکومت کے تمام اقدامات کی مکمل حمایت کرتے ہیں۔صوبائی وزراء نے سیلانی ویلفیئر کے سربراہ مولانا بشیر فاروقی نے بھی ان کے مرکزی دفتر میں ملاقات کی اور انہیں کرونا وائرس پر قابو پانے کے حوالے سے لئے جانے والے حکومتی اقدامات سے آگاہ کیا۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ سندھ حکومت چاہتی ہے کہ زندگی کے تمام شعبوں سے تعلق رکھنے والے لوگ مشکل کی اس گھڑی میں حکومت کا ساتھ دیں تاکہ اس وبا سے نجات حاصل کی جا سکے۔مولانا بشیر فاروقی نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جس طرح پہلے دن سے سندھ حکومت نے کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے اقدامات کئے ہیں وہ قابل ستائش ہیں۔انہوں نے بتایا کہ سیلانی ویلفیئر نے بھی سندھ حکومت کے اقدامات کے تحت اپنے تمام مراکز پر حکومت کی جاری کردہ صحت کی اصلاحات جاری کردی ہیں۔مولانا بشیر نے کہا کہ وہ حکومت سندھ کا ہر ممکن ساتھ دیں گے تاکہ اس وباء سے جلد نجات کو ممکن بنایا جا سکے ۔ صوبائی وزراء نے ان کے کردار کو سراہتے ہوئے ان کے تعاون پر ان کا شکریہ ادا کیا۔

تحریک انصاف کے رہنماؤں کی پریس کانفرنس عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کے سوا کچھ نہیں ہے۔ وقار مہدی


ppp March 15, 2020 | 7:24 PM

کراچی(نیوزآن لائن):پاکستان پیپلز پارٹی سندھ کے جنرل سیکریٹری وقار مہدی نے تحریک انصاف کے رہنما خرم شیر زمان کی پریس کانفرنس پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے تحریک انصاف کے رہنماؤں کی پریس کانفرنس عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کے سوا کچھ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی صوبائی حکومت نے پچھلے 12سال میں صوبہ سندھ سمیت کراچی شہر میں جتنے ترقیاتی کام کئے ہیں اور جتنی اس شہر کی اور عوام کی خدمت کی ہے اس کی مثال ماضی میں نہیں ملتی ہے۔ 2008 میں جب پیپلز پارٹی کی حکومت آئی تو اس وقت شہر میں سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ بھی قائم تھی جس کا ناظم ایم کیو ایم سے تعلق رکھتا تھا۔ ایم کیو ایم کے دعوے کے مطابق انہوں نے اپنے پانچ سالہ دور میں 3سو ارب روپے شہر کراچی میں خرچ کئے مگر وہ تین سو ارب روپے نہ عوام کو نہ ہ میں کہی نظر آتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے عوام کی خدمت جاری رکھی اور شہر میں واٹر سپلائی، سیوریج، سڑکوں کی تعمیر، فلائی اوور، برجز سمیت دیگر مسائل کو مدنظر رکھتے ہوئے اس پر حکمت عملی بنائی اور کام کو شروع کیا۔ انہوں نے کہا کہ آج کراچی شہر میں بلا تفریق چیلنج کے ساتھ یہ بات واضح کرنا چاہتا ہوں کہ ہم نے دیگر پارٹیوں کی طرح صرف اپنے ووٹ بینک والے علاقوں میں کام نہیں کیا بلکہ کراچی کے چھ اضلاع میں میگا پروجیکٹس کے ساتھ ساتھ وہاں کے علاقائی مسائل بھی حل کئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے شاہراہ فیصل کو دوبارہ کارپیٹ کیا، ڈرگ روڈ پر انڈر پاس تعمیر کیا، حسن اسکوائر سے صفورا چوک تک یونیورسٹی روڈ کی تعمیرکی، شہید ملت روڈ پر ایک فلائی اوور تعمیر کیا، دو انڈر پاس تعمیر کئے، کورنگی کراسنگ، کورنگی ڈھائی نمبر اور کورنگی پانچ نمبر پر فلائی اوورز بنائے گئے، کورنگی انڈسٹریل ایریا کی مین شاہراہیں آنے اور جانے والے راستوں کی تعمیر جاری ہے، شاہراہ فیصل پر کینٹ اسٹیشن سے صدر جانے والے راستے پر انڈر پاس تعمیر کیا۔ صوبائی حکومت نے تین ہٹی کا فلائی اوور بنایا، ناظم آباد انڈر پاس کی تعمیر کی گئی،حبیب بینک سائٹ ایریافلائی اوور تعمیر، لیاقت آباد ڈاک خانہ فلائی اوور بنایاگیا، عائشہ منزل فلائی اوور تعمیر کیا گیا، فیڈرل بی ایریا واٹر پمپ کا فلائی اوور تعمیر کیا گیا، ملیر ہالٹ پر فلائی اوور بنایا گیا، کراچی ایئر پورٹ پر اسٹار گیٹ کے سامنے فلائی اوور بنایا گیا، ملیر 15، منزل پمپ پر فلائی اوور بنائے گئے، قائد آباد سے گھگھر پھاٹک تک نیشنل ہائی وے پر آنے اور جانے والی سڑک بنائی گئی۔ انہوں نے کہا (کے 4 )کا منصوبہ جو 2004 سے فیڈرل حکومت کے پاس تھا اس کو سندھ حکومت نے اس پر کام شروع کیا اور اس پر پیش رفت جاری ہے جس سے کراچی کو 260 ایم جی ڈی پانی میسر ہوگا۔ وقار مہدی نے کہا کہ افسوس کی بات یہ ہے کہ پی ٹی آئی کی حکومت پچھلے 18مہینے سے ملک پر قابض ہے اور وہ بہت دعوے کرتے تھے کہ کراچی شہر کو 162ارب روپے کا پیکیج دینگے مگر افسوس کے شہر کو 62 روپے بھی پی ٹی آئی کی حکومت کی طرف سے نصیب نہیں ہوسکے۔ انہوں نے کہا کہ آج پی ٹی آئی کے خود ساختہ لیڈروں نے میڈیا پر آکر جھوٹے دعوے کئے کہ وہ کراچی کیلئے بہت کچھ کررہے ہیں لیکن عوام کو موجودہ حکومت کی طرف سے اگر کچھ ملا تو صرف اور صرف مہنگائی، بیروزگاری، قرضہ، بھوک، فاقہ، غربت اور 22لاکھ سے زائد افراد اس حکومت کی ناقص پالیسیوں کے سبب بیروزگاری ہے۔ پی ٹی آئی کی حکومت نے ایک کروڑ نوکریاں اور 50لاکھ گھروں کا بھی وعدہ کیا لیکن وہ وعدہ ہی کیا جو پی ٹی آئی کا وفا ہوجائے۔ پاکستان پیپلز پارٹی بلا امتیاز بلا رنگ ونسل ملک اور عوام کی خدمت پریقین رکھتی ہے اور اس لئے پاکستان پیپلز پارٹی کے جتنے بھی منصوبے شروع یا پایہ تکمیل ہوئے وہ بنا کسی تفریق اور لسانیت کے عوام کی سہولیات کیلئے پورے کئے گئے۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے ویژن کے مطابق کراچی شہر کی روشنی، تعمیر وترقی کیلئے بھرپور جدوجہد جاری ہے اور عوام کو بہتر سے بہتر سہولیات کی فراہمی کا سہرا بھی ان کے سر جاتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پی ٹی آئی کے اراکین اسمبلی کی پریس کانفرنس عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کے سوا کچھ نہیں ہے۔ پی ٹی آئی جن منصوبوں کے فیتے کاٹ رہی ہے وہ سابقہ حکومتوں کے منصوبے ہیں۔ پی ٹی آئی ایم کیو ایم کی بی ٹیم کا کردار ادا کررہی ہے اور سوچ رہی ہے کہ کراچی کے شہریوں کو استعمال کر کے لاوارث چھوڑ دیا جائے گا تو ہم انہیں بتانا چاہتے ہیں کہ شہر کراچی ہمارا ہے اور پیپلز پارٹی ہمیشہ کی طرح عوام کی خدمت کو عبادت سمجھ کر کرتی رہے گی۔

خواتین کا عالمی دن مساوی حقوق اور مواقع فراہم کرنے کے عزم کے اعادہ کا دن ہے، وزیراعظم عمران خان


prime minister imran khan March 8, 2020 | 7:22 PM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن): وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ خواتین کا عالمی دن مساوی حقوق اور مواقع فراہم کرنے کے عزم کے اعادہ کا دن ہے، ہمارا مذہب خواتین کو مساوی حقوق فراہم کرنے کا درس دیتا ہے،وز یراعظم عمران خان نے خواتین کے عالمی دن کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ ہماری خواتین ہرشعبہ زندگی میں اپنی صلاحیتوں کومنوارہی ہیں، ہماری خواتین نے عالمی سطح پر بھی اپنی صلاحیت کو منوایا ہے ،خواتین کو مساوی حقوق دینے کے لیے ہر ممکن کوشش کریں گے، وہ تمام اقدامات کریں گے جس سے خواتین محفوظ اور خوشحال زندگی گزار سکیں۔

خواتین کے حقوق کے تحفظ کے لیے یکم سے 20مارچ تک ملک بھر میں خصوصی مہم چلائی جائے گی


siraj ul haq lahore women protest campaign March 1, 2020 | 8:41 PM

سینیٹر سراج الحق : لاہور میں خواتین کانفرنس اور پریس کانفرنس سے خطاب
لاہور:(نیوزآن لائن) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سرا ج الحق نے کہاہے کہ خواتین کے حقوق کے تحفظ کے لیے یکم سے 20مارچ تک ملک بھر میں خصوصی مہم چلائی جائے گی۔ پاکستانی عورت ملک میں مغربی کلچر نہیں ، اسلام کی پاکیزہ تہذیب چاہتی ہے تاکہ ملک کو اس کی اساس اور نظریے کے مطابق اسلام کا گہوارہ بنایا جاسکے ۔ نا م نہاد مہذب مغربی دنیا میں عورت کو آمدن کا ذریعہ بنالیا گیاہے ۔ ملک میں خواتین کا استحصال ہورہاہے ۔ بوڑھے ماں باپ کو اولڈ ہومز میں چھوڑآتے ہیں جبکہ اسلام ماں کو اتنا اعلیٰ و ارفع مقام بخشاہے کہ اسے قدموں میں جنت رکھ دی ہے ۔ جماعت اسلامی عورت کے بارے میں جاہلانہ رسوم و رواج کے خاتمہ اور انہیں وراثت میں حق دلانے کی جدوجہد کر رہی ہے ۔ ہم چاہتے ہیں کہ ہر ضلع میں بچیوں کے لیے یونیورسٹی بنے اور ان کے لیے کھیلوں کا باپردہ انتظام ہوتاکہ وہ بھی ڈاکٹراور انجینئرز بنیں ۔ ان خیالات کااظہار انہوںنے مقامی ہوٹل میں 8 مارچ ، عالمی یوم خواتین کے حوالے سے منعقدہ خواتین کانفرنس اور پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ کانفرنس سے سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی حلقہ خواتین ڈاکٹر دردانہ صدیقی ، سابق ممبر قومی اسمبلی و سابق رکن اسلامی نظریاتی کونسل ڈاکٹر سمیحہ راحیل قاضی،ب کی ناظمہ ربیعہ طارق ، ناظمہ لاہور زبیدہ جبیں، سمیت مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والی معروف خواتین رہنمائوں نے بھی خطاب کیا ۔کانفرنس میں سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف ، امیر جماعت اسلامی لاہور ذکر اللہ مجاہد ، وسیم قریشی، بیگم سراج الحق ،آشفتہ ریاض فتیانہ ،سسٹر گلوریا ، ڈاکٹر لبنیٰ ظہیر ، سسٹر شمیم ، میرین شرف جوزف بھی شریک تھیں ۔
سینیٹر سراج الحق نے پریس کانفرنس میں چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا کہ تمام صوبوں میں خواتین کے لیے علیحدہ یونیورسٹیاں قائم کی جائیں ۔ دیہاتی علاقوں میں ہیلتھ سنٹرز اور ڈسپنسریاں قائم کی جائیں ۔ خواتین کو شہری دفاع اور فسٹ ایڈ کی ٹریننگ دی جائے ۔ عورت کی خرید و فروخت پر مکمل پابندی عائد کی جائے ۔ جیلوں میں بے گناہ قید خواتین کی رہائی کے لیے ان کے مقدمات کو ترجیحی بنیادوں پر نمٹایا جائے ۔ ذرائع ابلاغ میں خواتین کے استحصال کو روکا جائے اور میڈیا پر فحاشی و عریانی کے پروگرامات کو روکا جائے تاکہ معصوم بچوں اور بچیوں کے ساتھ درندگی کے واقعات کا سدباب ہوسکے۔ ذرائع ابلاغ میں خواتین کو اپنے موقف کے اظہار کے مواقع فراہم کیے جائیں اور اس سلسلہ میں ان کے لیے بہترین ماحول اور سہولیات کا اہتمام کیا جائے ۔انہوںنے کہاکہ ہماری مائیں بہنیں بیٹیاں ملک میں اسلامی تہذیب و تمدن کا غلبہ چاہتی ہیں ، بدقسمتی سے ملک میں ایسے عناصر بھی موجود ہیں جو میرا جسم میری مرضی اور مغرب کے فحش عریاں اور حواس با ختہ کلچر کو پروموٹ کر کے ملک کی اسلامی شناخت پر دھبہ لگانا چاہتے ہیں ۔ایسے عناصر کی سرکاری سطح پر حوصلہ شکنی ہونی چاہیے ۔ سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ جماعت اسلامی جلد ہی سینیٹ میں خواتین کے حقوق کے تحفظ کا بل پیش کرے گی ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ اسلام نے عورت کو ماں ، بہن ، بیٹی اور بیوی کی حیثیت سے جو احترام دیاہے ، وہ دنیا کا کوئی دوسرا مذہب نہیں دے سکتا ۔ عورت کو بازار کی زینت بنانے والے معاشروں نے عورت پر جو ظلم کیاہے ، آج اس کا نتیجہ ہے کہ وہاں خاندانی نظام ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے جبکہ اسلام عورت کو گھر کی ملکہ کا عظیم مرتبہ دیتاہے ۔ اسلام نے عورت کو گھر میں قید نہیں کیا بلکہ زندگی کے ہر شعبہ میں اسے اپنا کردار ادا کرنے کی اجازت دی اور حوصلہ افزائی کی ہے حتیٰ کہ جنگ کے میدانوں میں بھی خواتین شامل رہی ہیں ۔ سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ جماعت اسلامی 8 مارچ عالمی یوم خواتین کے موقع پر وفاقی دارالحکومت اسلام آباد اور چاروں صوبائی دارالحکومتوں لاہور ، کراچی ، پشاور اور کوئٹہ سمیت ملک بھر کے چھوٹے بڑے شہروں میں خواتین مارچ اور خواتین کانفرنسز کا انعقاد کرے گی ۔ ہم نے الیکشن کمیشن سے تحریری مطالبہ کیاہے کہ جو امیدوار اپنی بہن بیٹی کو وراثت میں حق نہیں دیتا ، اسے الیکشن لڑنے کی اجازت نہ دی جائے ۔ انہوںنے کہاکہ جماعت اسلامی قرآن سے شادی جیسی جاہلانہ رسم ، وٹہ سٹہ، جہیز اور کاروکاری جیسے مظالم کا خاتمہ کرے گی اور عوت کو وہ مقام دلایا جائے گا جس کا اللہ اور رسول ۖ نے اسے مستحق ٹھہرایا ہے ۔ انہوںنے کہاکہ مسلم خواتین اور بیٹیوں کے لیے حضرت عائشہ صدیقہ ، حضرت فاطمة الزہرہ ، حضرت خدیجة الکبریٰ اور حضرت مریم بہترین نمونہ ہیں ۔

جماعت اسلامی نے ملکی تعمیر وترقی میں اہم کردار ادا کیا ہے حافظ نعیم الرحمن


Ijtama Arkan pic (1) March 1, 2020 | 8:39 PM

کارکنان بلدیاتی انتخابات کی تیاری شروع کر دیں ہم ووٹ کے ذریعے پاکستان میںظلم کے نظام بدلناچاہتے ہیں اجتماع ارکان سے خطاب
کامیابی اور ناکامی کا معیار دوسری جماعتوں اور گروہوں سے مختلف ہے ہمیں اقامت دین کی جدوجہد جاری رکھنی ہے
کراچی : (نیوزآن لائن) امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ جماعت اسلامی نے ملکی تعمیر وترقی میں اہم کردار ادا کیا ہے، ہم ووٹ کی طاقت کے ذریعے پاکستان میںجاری ظلم کے نظام کو تبدیل کرنا چاہتے ہیں، پاکستان میں حقیقی تبدیلی جماعت اسلامی ہی لاسکتی ہے، جماعت اسلامی معاشرتی اور حکومتی سطح پر حقیقی تبدیلی کیلئے آئینی، قانونی اور سیاسی و جمہوری جدوجہد پر یقین رکھتی ہے، ان ہی مقاصد اور اصولوں کے تحت مولانا مودودی نے جماعت اسلامی کی بنیاد رکھی تھی، ہمارے پیش نظر رضائے الٰہی کا حصول ہے، کامیابی اور ناکامی کا معیار دوسری جماعتوں اور گروہوں سے مختلف ہے، ہمیں اقامت دین کی جدوجہدبھرپور طریقے سے جاری رکھنی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامع مسجد الفلاح بلاک A نارتھ ناظم آباد میں جماعت اسلامی ضلع وسطی کے اجتماع ارکان سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اجتماع سے امیر جماعت اسلامی ضلع وسطی منعم ظفر خان نے بھی خطاب کیا۔حافظ نعیم الرحمن نے خطاب کرتے ہوئے مزید کہاکہ جماعت اسلامی نے عوا م کے دیرینہ مسائل اور اہم ایشوز پر آواز اٹھائی ہے ، ہماری تحریک جاری ہے اور اس میں عوام کی پذیرائی شامل ہے اور عوام کی جانب سے خیر مقدم کیا جارہا ہے ، عوامی جدوجہد اور دباؤ کے باعث کے الیکٹرک اور نادرا کے حوالے سے عوام کو کچھ ریلیف ملا ہے لیکن مکمل مسائل کے حل تک ہماری جدوجہد جاری رہے گی۔ شہر کے اندر جماعت اسلامی کی قوت اور وزن محسوس کیا گیا ہے۔ جماعت اسلامی نے ماضی میں بھی عوام کی خدمت اور مسائل کے حل کی جدوجہد کی ہے اور آئندہ بھی کرتی رہے گی۔ہمیں اپنے اخلاق و کردار سے دعوت کے میدان میں لوگوں کے دل جیتنے ہیں، اپنے رویے سے لوگوں کو متاثر کرنا ہے، اپنے ساتھ ملانا ہے اور اس جدوجہد اور تحریک کا حصہ بنانا ہے، ہمیں جماعت کے کام کو بہتر بنانے اور دعوت کے کام کو بڑھانے کیلئے زیادہ سے زیادہ وقت دینا چاہیے۔
جماعت اسلامی واحد جمہوری سیاسی جماعت ہے جوکہ اپنے دستور پر اس کی پوری روح کے مطابق عملدرآمد کرتی ہے اس لیے اس کی تنظیم میں نیچے سے لے کر اوپر تک ہر سطح پر انتخابات ہوتے ہیں اور اس کے ارکان دستوری تقاضوں کے عین مطابق اپنی ذمہ داریاں ادا کرتے ہیں ۔انہوں نے ارکان جماعت کو ہدایت کی ہے کہ وہ توسیع دعوت کے لیے زیادہ سے زیادہ انفاق فی سبیل اللہ کریں ۔ حافظ نعیم الرحمن نے ارکان جماعت کو آنے والے بلدیاتی انتخابات میں حصہ لینے کے لیے بھرپور تیاری کی ہدایت کی اور کہاکہ بلدیاتی انتخابات میں کامیابی آنے والے قومی و صوبائی انتخابات میں کامیابی کے لیے نہایت ضروری ہے اس لیے کارکنان ابھی سے بلدیاتی انتخابات کی تیاری شروع کر دیں۔منعم ظفر خان نے کہا کہ ہم جماعت اسلامی کی رکنیت اختیار کرتے ہوئے اصلاً اللہ تعالیٰ سے وفاداری کا عہد کرتے ہیں کہ میری زندگی کا مقصد رضائے الٰہی کا حصول ہوگا اور میری نماز ، میری تمام مراسم عبودیت صرف اللہ رب العالمین کے لیے ہیں اور یہ عہد زندگی بھر کے لیے ہوتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اقامت دین کی جدوجہد میں کردار سازی کی بہت اہمیت ہے اور کردار سازی رب سے تعلق کو مضبوط کر کے ہی کی جا سکتی ہے۔ تعلق باللہ کے لیے قرآن سے تعلق اور مطالعہ لٹریچر کی بہت اہمیت ہے۔ جماعت اسلامی کے ارکان کو نصاب رکنیت کا ازسر نو مطالعہ کرنا چاہیے۔

ریلوے رشید کے سبب ٹرین میں سفر کرنے والوں کے سر پر موت منڈلاتی رہے گی’ عاجز دھامراہ


PPPsaysitlost23activiststorecentviolence_567-349x238 March 1, 2020 | 8:33 PM

سلیکٹڈ وزیراعظم عمران نیازی کو عوام سے زیادہ اپنے رٹے رٹائے طوطے عزیز ہے’ وقاص شوکت ‘ جانی میمن ‘مشترکہ بیان
کراچی:(نیوزآن لائن) پاکستان پیپلز پارٹی سندھ کے سیکریٹری اطلاعات عاجز دھامراہ، ضلع شرقی کے سیکریٹری اطلاعات وقاص شوکت اور ضلع کورنگی کے سیکریٹری اطلاعات جانی میمن نے اپنے مشترکہ بیان میں دن بہ دن بڑھتے ریلوے حادثات پر انتہائی دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اسے وزارت ریلوے کی نااہلی اور نالائقی قرار دیتے ہوئے کہا کہ شیخ رشید صرف باتیں کرنے والے طوطے کے سوا کچھ نہیں ہے جسے رٹا رٹایا سبق ملنے کے بعد صرف باتوں کے تیر سے اپنی وزارت اور اپنے آپ کو چلا رہے ہیں۔معزز عدالت کے سامنے اپنی کارکردگی کا جھوٹ بول کر انسانی جانوں سے کھیلنے کا سلسلہ نہیں روک سکا ہے گزشتہ روز سکھر میں اورآج جامشورو ڈسٹرکٹ سیہون کے قریب ٹرین اور چنگچی میں حادثات پر شیخ رشید کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ انہوں نے کہا کہ سلیکٹڈ وزیراعظم عمران نیازی کو عوام سے زیادہ اپنے طوطے عزیز ہے کیونکہ جب تک وزارت ریلوے کے ساتھ شیخ رشید کا نام جوڑا ہے ٹرین میں سفر کرنے والوں کے سر پر موت منڈلاتی رہے گی۔ پی پی پی رہنمائوں نے کہا کہ نالائق حکومت کے آنے کے بعد ملک کو آئی ایم ایف کے پاس گروی رکھ دیا گیا ہے معاشی پالیسی ورلڈ بینک چلا رہا ہے زرعی پالیسی سلیکٹڈ وزیراعظم کے اے ٹی ایم کنٹرول کررہے ہیں اور اب انسانی زندگیوں پر ریلوے رشید مسلط کر کے غریب مٹائوں پروگرام پر عملدرآمد کیاجارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی نااہل حکومت کے دن گنے جا چکے ہیں اور بہت جلد عوام ان نااہل اور نالائقوں کو ایوانوں سے اٹھا کر گھر کا راستہ دکھائے گی۔

ملک میں پیٹرو ل مصنوعات کی قیمت میں معمولی کمی وفاقی حکومت کا ڈرامہ ہے,محمد اسماعیل راہو


ismail rahu March 1, 2020 | 8:24 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)سندھ حکومت نے پیٹرول مصنوعات کی قیمت میں 5 روپے معمولی کمی کو ڈرامہ قرار اور 15 روپے کمی کا مطالبہ کردیا.وزیرزراعت محمد اسماعیل راہو نے جاری کردہ بیان میں کہاہے کہ سندھ حکومت وفاق سے پیٹرول مصنوعات میں 15 روپے کمی کا مطالبہ کرتی ہے,ملک میں پیٹرو ل مصنوعات کی قیمت میں معمولی کمی وفاقی حکومت کا ڈرامہ ہے,کوروناوائرس کے باعث عالمی منڈی میں پیٹرول مصنو عات کی قیمتوں میں بہت زیادہ کمی ہوئی ہے.صوبائی وزیر نے کہا کہ عالمی منڈی میں تیل کے نرخ گرنے کے حساب سے بیس روپے کمی کرنی چاہئے تھی,مگر وزیراعظم نے پیٹرول مصنوعات میں محض 5 روپیکمی کرکے قوم پربڑا احسان کیاہے,وفاقی حکومت مدینہ ریاست کا نام استعمال کرکے عوام کو بیوقوف بنارہی ہے.انہوں نے کہا کہ حکو مت پہلے ہی پیٹرول مصنوعات پے بے پناہ ٹیکس کی صورت میں کھربوں روپے عوام سے لوٹ رہی ہے,اب کم از کم قیمتوں میں کمی کا فائدہ تو عوام کو دے,عوام کو فقط 5 روپے کا لولی پوپ دیکراصل فائدہ لاڈ لی کابینہ نے بٹور لیا.اسماعیل راہو نے کہا کہ وفاق 5 روپے کی جگہ پیٹرول مصنوعات کی قیمتوں میں 15روپے کمی کرے, موجودہ حکومت کی یہ لْوٹ کھسْوٹ اسے جلد لے ڈْوبے گی, قوم کیٹیکس کے پیسوں سیتیل خرید کرقوم کو ہی مہنگا دے کر کیا خدمت ہورہی ہے؟ عمران خان ملک چلانے میں ناکام ثابت ہوئے ہیں