: تازہ ترین

تازہ ترین ویڈیو

ایم ڈی کے کارپوزیشن کی جانب سے ڈیلرز میں تحائف تقسیم


Pic with Cap September 16, 2016 | 3:44 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)ایم ڈی کے کارپوزیشن کی جانب سے ڈیلرز میں تحائف تقسیم کی تقریب منعقد ہوئی ،تقریب میں ایم ڈی کے کارپوزیشن کے سی ای او اشد محمود اعوان نے ڈیلرز میں تحائف تقسیم کئے۔

آبادی کے دباؤ پر کنٹرول کے لئے خود رو آبادیوں اور غیر منظم نقل مکانی پر قابو پانا ہو گا۔ میر ممتاز حسین جاکھرانی


unnamed September 10, 2016 | 6:35 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)سند ھ کے وزیر بہبود آبادی میر ممتاز حسین جاکھرانی نے کہا ہے کہ آبادی کے دباؤ پر کنٹرول اور شہروں کے غیر منظم پھیلاؤ کو روکنے کے لئے خود رو آبادیوں کے قیام اور بغیر منصوبہ بندی کے نقل مکانی کو روکنا ہو گا۔ کیونکہ غیر منظم اور غیر مربوط نقل مکانی کے سبب شہر بے ترتیبی سے پھیلتے جا رہے ہیں۔ اور شہر میں بنیادی ضررویات کی فراہمی مشکل تر ہوتی جارہی ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہو ں نے آج مقامی ہوٹل میں یونائٹیڈ نیشن پاپولیشن فنڈ)کی رپورٹ” پاکستان میں اندرونی نقل مکانی ۔سندھ کے کیس کا مطالعہ’کی تقریب  رونمائی سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ صنعتی ترقی کے باعث شہروں کی جانب لوگوں کی نقل مکانی بڑے پیمانے پر ہونے سے شہری مسائل پیدا ہو رہے ہیں ۔ سندھ پاکستان کا معاشی مرکز ہے لہذاسندھ کے شہروںپر آبادی کا بے پناہ دباؤ ہے جس کی وجہ سے یہاںپینے کے صاف پانی کی فراہمی ، نکاسی آب ، ماحولیاتی ، صحت ، تعلیم اور دیگر شعبوں میں بے پناہ مسائل جنم لے رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ شہروں پر آبادی کے دباؤ کو روکنے کے لئے آگاہی کو فروغ دنیاہوگا اور لوگوں کو ان کے گھر کے نزدیک صحت،تعلیم اور روزگار کی فراہمی کرنی ہوگی  جس کے لئے حکومت بھرپور کو شیش کر رہی ہے ۔ انہو ں نے بہبود آبادی کے شعبے میں گراں قدر خدمات پر رکن قومی اسمبلی  ڈاکٹر عذرافضل پیچوہو کی خدمات کو سراہا انٹر نیشنل پروگرام کوآرڈنیٹر برائے سندھ شرتی دھرتر یپاتھی رکن قومی اسمبلی محترمہ شہناز وزیر علی ، سیکریٹری بہبود آبادی سندھ سلیم رضا کھوڑو ، ڈائریکٹر سید اشفاق شاہ اور دیگر مقررین نے بھی خطاب کیا۔

تر ک کمپنیو ں کے لئے پا کستا نی ما رکیٹ میں سر ما یہ کا ر ی کے وسیع موا قع مو جو د ہیں ۔ ایس بی آئی


sbi September 8, 2016 | 8:03 PM

چیئر پر سن ایس بی آئی نا ہید میمن کی تر ک قو نصل جنرل سے ملاقا ت کے دورا ن گفتگو
کرا چی: (نیوزآن لائن) چیئر پر سن سندھ بو ر ڈ آف انویسٹمنٹ نا ہید میمن نے آج تر ک قو نصل خا نے میں تر ک قو نصل جنر ل مرا ت مصطفی او نا ر ٹ سے ملا قا ت کی اور با ہمی دلچسپی کے امو ر با لخصو ص تر کی اور پا کستا ن کے در میا ن تجارتی و کا رو با ر ی روا بط کو بڑ ھا نے کے مو ضو ع پر تفصیلی تبا دلہ خیا ل کیا ،نا ہید میمن نے کہا کہ تر کی کی بڑ ی بز نس کمپنیو ں کے زیا دہ تر دفا تر کرا چی میں ہیں ۔ایس بی آئی ان تر ک کمپنیو ں کو اپنا بز نس بڑ ھا نے اور یہا ں صنعتیں لگا نے میں ہر ممکن تعا ون فرا ہم کر نا چا ہتی ہے ۔انہو ں نے کہا کہ حا ل ہی میں تر ک کمپنی آر ک یک نے یہا ں 215ملین امریکن ڈالر ز کی سر ما یہ کا ر ی کی ہے جس سے تر ک کمپنیو ں کے لئے سر ما یہ کا ر ی کے پر کشش موا قعو ں کا اندا زہ کیا جا سکتا ہے ۔چیئرپر سن ایس بی آئی نا ہید میمن نے کہا کہ پا کستا ن با لخصو ص سندھ میں شہر ی آبا دیو ں میں بہت تیزی سے اضا فہ ہو رہا ہے لہذا یہا ں ویسٹ مینجمنٹ ،ٹرا نسپو ر ٹ سسٹم ،رو ڈ نیٹ ورک ، ہا ئو سنگ ،ما حو لیا ت ،صحت اور دیگر شعبو ں با لخصو ص تیز تر استعما ل کی اشیا ء میں سر ما یہ کا ر ی کے مفید موا قع ہیں جبکہ انویسٹمنٹ بینکنگ اور پرا جیکٹ فنا نسنگ بھی پر کشش شعبے ہیں ۔انہو ں نے کہا کہ سندھ کے سیا حتی مرا کز مو ہنجو دڑو ،گو ر کھ ہل، مکلی ،بھنبھور ،چو کنڈی اور کینجھر جھیل جہا ں پر ہر سال رو س اور سا ئبریا سے لا کھو ں پر ندے ہجر ت کر کے آتے ہیں یہا ں ہو ٹل اور ریزور ٹ کے شعبو ں میں سر ما یہ کا ر ی کے بہت پر کشش موا قع مو جو د ہیں ۔تر ک قو نصل جنر ل نے چیئر پر سن ایس بی آئی سے اتفا ق کر تے ہو ئے کہا کہ وہ تر ک کمپنیو ں کے ساتھ روا بط مستحکم کر نے کے لئے تر کی اور پا کستا نی کمپنیو ں کے ما بین تجا ر تی روا بط اور وفو د کے تبا دلو ں کے لئے ہر ممکن تعا ون کریں گے ۔

حافظ نعیم الرحمن کی نیپرا کے اجلاس میں شرکت،بجلی کی قیمتوں میں اضافے کی مخالفت


Nepra Ijlas Pic September 8, 2016 | 7:57 PM

نیپرا کے الیکٹرک کی ظلم و زیادتی سے کراچی کے عوام کو نجات دلائے،کے الیکٹرک نے قبلہ درست نہ کیا تو دھرنا دیں گے
مقامی ہوٹل میں نیپرا کے سہ ماہی اجلاس میں شرکت کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو
کراچی :( نیوزآن لائن)جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمن نے جمعرات کے روز مقامی ہوٹل میں کراچی کے عوام کی نمائندگی کرتے ہوئے نیپرا کے اجلاس میں شرکت کی۔کے الیکٹرک کے خلاف عوام کا مقدمہ پیش کیا اور بجلی مہنگی کرنے کے مطالبے کو رد کرتے ہوئے حقائق پیش کیے۔ انہوں نے کے الیکٹرک کی جانب سے بجلی کے نرخوں میں اضافے کے حوالے سے عوامی احساسات و جذبات پر مبنی اپنا مؤقف پیش کیا ۔واضح رہے کہ نیپرا نے حافظ نعیم الرحمن کی کراچی کے نمائندے کی حیثیت سے کے الیکٹرک کے خلاف فریق بننے کی درخواست منظور کی تھی۔ اجلاس کے بعد حافظ نعیم الرحمن نے میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ نیپرا کے الیکٹرک کی پشت پناہی کررہی ہے اسی وجہ سے کے الیکٹرک پرلگائے گئے جرمانے کے باوجود اور سپریم کورٹ میں مقدمہ دائر کرنے کے باوجود عوامی مسائل حل نہیں کیے جارہے،انہوںنے کہا کہ 5ارب روپے کی سبسیڈی کے فوائد کو عوام تک نہیں پہنچایا گیا ، عوام پر بجلی کی قیمت میں اضافے کا مطالبہ عوام کے ساتھ سراسر ناانصافی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی کراچی کے عوام کے ساتھ ہے اورکراچی کے عوام کا مقدمہ لڑرہی ہے ۔انہوںنے کہا کہ کے الیکٹرک بجلی زیادہ تر گیس سے بنا رہا ہے۔ وفاق کی طرف سے 650 میگا واٹ سستی بجلی ،پانی سے پیدا کرکے،کے الیکٹرک کو فراہم کی جاتی ہے،کے الیکٹر ک آئی پی پی ایس سے بھی سستی بجلی خرید کر صارفین کو مہنگے ریٹ پر بیچتا ہے۔ تین ماہ سے زائد عرصہ گزر جانے کے بعد بھی کے الیکٹرک کے 52 صارفین جنہوں نے اس کے کے خلاف اوور بلنگ کے حوالے سے نیپرا میں درخواستیں دی تھیںآج تک انکا فیصلہ نہیں سُنایا گیا جبکہ قانون کے مطابق نیپراسماعت کے 15 دن تک فیصلہ سُنانے کا پابند ہے۔ پرانا ملٹی ایئر ٹیرف جس کی معیاد30 جون2016ء کو ختم ہوگئی ہے ۔نئے ملٹی ائیر ٹیرف پر نیپرا ہیرنگ میں کیوں تاخیر کر رہی ہے۔ کے الیکٹرک کراچی کی صارفین سے 15 پیسے فی یونٹ اضافی ملازمین کے نام پر آج تک اربوں روپے وصول کر رہی ہے۔ جبکہ کے۔ الیکٹرک نے اپنے ملازمین کی چھانٹی کر کے تعداد17 سے 10ہزار کر دی ہے ۔انہوں نے کہا کہ کے الیکٹرک کراچی کی عوام سے ڈبل بینک چارجز اور ناجائز میٹر رینٹ کے نام پر اربوں روپے کی وصولی کر رہا ہے۔نیپرا جو فیصلے صارفین کے حق میں کرتا ہے اس پر عمل درآمد نہیں ہوتا اور جو فیصلے کے۔الیکٹرک کے حق میں ہوتے ہیں اس پر فوراً عملدرآمد ہوجاتاہے۔انہوں نے کہا کہ کے الیکٹر ک کی نجکاری کا بنیادی مقصد اس کی کارکردگی کو بہتر بنانا اورعوام کو بلا تعطل بجلی کی فراہمی کو یقینی بنانا تھالیکن کراچی کے عوام بجلی کی لوڈ شیڈنگ ،اوور بلنگ اور بوگس بلنگ سے تنگ آچکے ہیں۔ بجلی کے بریک ڈاؤن سے کراچی کوپانی کی فراہمی بھی معطل ہو جاتی ہے ۔اس طرح کراچی کے شہری شدید گرمی سے دوہرے عذاب کا شکار ہو جاتے ہیں۔ ہم نے سپریم کورٹ میں کے الیکٹرک کے خلاف مقدمہ درج کرایا ہے، لیکن اس کے باوجود عوام کے مسائل حل نہیں کیے جارہے اور عوام کو ریلیف نہیں دی جارہی ۔انہوں نے کہا کہ اگر عوامی مسائل حل نہیں کیے گئے توہم دھرنا دیں گے اور کے الیکٹرک کے عذاب سے عوام کو چھٹکارا دلائیں گے ۔ اس موقع پر جماعت اسلامی کراچی کے ،کے الیکٹرک صارفین حقوق کے انچارج عمران شاہد اور سکریٹری اطلاعات زاہد عسکری اور دیگر بھی موجود تھے ۔

محکمہ کے تحت جاری ترقیاتی منصوبوں میں کسی بھی قسم کی تاخیر اور غفلت برداشت نہیں کی جائے گی۔ ڈاکٹرکھٹومل جیون


dr khatumal September 4, 2016 | 12:58 PM

علاج معالجے ، شادی بیاہ اور دیگر ترقیاتی فندز کی فراہمی ضلعی اقلیتی آبادی کے تناسب سے کی جائے۔
وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی ڈاکٹرکھٹومل جیون
کراچی:(نیوزآن لائن) وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی ڈاکٹرکھٹومل جیون نے کہا ہے کہ محکمہ کے تحت جاری ترقیاتی منصوبوں میں کسی بھی قسم کی تاخیر اور غفلت برداشت نہیں کی جائے گی۔ تمام جاری ترقیاتی اسکیموں کو رواں سال دسمبر تک ہر صورت میں مکمل کیا جائے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے دفتر میں بلائے گئے ایک اجلاس کی صدارت کر تے ہوئے کیا ۔اجلاس میں سیکریٹری اقلیتی امور عبدالحلیم شیخ ، ڈائریکٹر اقلیتی امور صادق راجر اور دیگر افسران بھی موجود تھے۔ ڈاکٹرکھٹومل جیون نے کہا کہ اقلیتی برادری کو علاج معالجے کے لیے دی جانے والی امداد کی فراہمی یقینی بنائی جائے تاکہ مستحق اور ضرورت مند غریب عوام کو یہ سہولت با آسانی میسر آسکے۔انہوں نے کہا کہ اس سال جو پالیسی بنائی گئی ہے اس تحت اقلیتی برادری کو ترقیاتی فندزضلعی اقلیتی آبادی کے تناسب سے جاری کئے جائے گے تاکہ انصاف کے تقاضے پورے ہو سکے اور اقلیتی آبادی والے اضلاع کو اس کی مناسبت سے ترقیاتی فندز مل سکے۔معاون خصوصی نے مزید کہا کہ محکمہ کے تحت غریب اور نادار غیر مسلم خاندان کو شادی کی مدد میں بھی فندز فراہم کئے جاتے ہیں تاکہ غریب لڑکیوں کی شادی بھی با عزت طریقے سے ممکن ہو سکے۔ ڈاکٹرکھٹومل جیون نے کہا کہ موجودہ حکومت کی اولین تر جیح ہے کہ غیر مسلموں کو قانون کے مطابق انکے جائز حقوق کی فراہمی میں کسی بھی قسم کی کوتاہی نہیں کی جائے ۔انہوں نے کہا کہ غیر مسلم بھی پاکستان کی معیشت کی بہتری میں اپنا مثبت اور موثر کردار ادا کر رہے ہیں ضرورت اس امر کہ ہے کہ قانون کے مطابق ان کو فراہم کی جانے والی سہولیات کو یقینی بنایا جائے۔

تجارتی و فود سرمایہ کاری مواقع کے حصول میں مددگار ہوتے ہیں۔ فرزانہ سلیم


fpcci September 2, 2016 | 9:07 PM

پاکستان و چینی تاجر اقتصادیات کومضبوط تر بنانے کیلئے سچے دوستوں کی طرح ایک دوسرے کے ساتھ روابط استوار رکھیں
چینی بزنس کمیونٹی کے وفد سے ایف پی سی سی ائی کی اسٹینڈنگ کمیٹی برائے رئیل اسٹیٹ کنسلٹنٹ کے ارکان کی ملاقات
کراچی: (نیوزآن لا ئن) تجارتی وفود نہ صرف اقتصاری و تجارتی تعلقات بڑھانے کا باعث بنتے ہیں بلکہ سرمایہ کاری کے بہترین مواقع کے حصول میں بھی مدد گار ہوتے ہیں۔ چین پاکستان کا محافظ اور سچا دوست ہے۔ پاک چین اقتصادی راہداری سی پی ای سی) منصوبہ کی تکمیل سے دونوں ملکوں کے مابین تجارتی سرگرمیاں تیز ہوں گی اور دنیا کے دیگر ممالک کے ساتھ پاکستان کے اقتصادی روابط میں اضافہ ہوگا۔ ان خیالات کا اظہار فیڈریشن آف پاکستان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری (ایف پی سی سی ائی) کی اسٹینڈنگ کمیٹی برائے رئیل اسٹیٹ کنسلٹنٹ کی چیئر پرسن فرزانہ سلیم نے گذشتہ روز چین سے آئے ہوئے بزنس کمیونٹی کے وفد کے ارکان سے ملاقات میںگفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر چینی وفد سے دو طرفہ تجارتی تعلقات کراچی اور گوادر کے اہم رئیل اسٹیٹ منصوبوں پر تفصیلی بات چیت کی گئی۔ فرزانہ سلیم نے کہا کہ سی پیک وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کی بہت بڑی کامیابی ہے ۔ اس سے پاکستان کی برآمدات میں اضافہ ہوگا ۔ اقتصادی راہداری منصوبے سے تین ارب لوگ مستفیض ہوں گے۔ منصوبے میں انڈسٹریل اسٹیٹ کے قیام سے ملک میں مختلف قسم کی انڈسٹریز قائم ہوں گی ۔ ان صنعتوں کے قیام سے روزگار کے لاکھوں مواقع میسر آئیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان با صلاحیت انسانی وسائل سے مالا مال ہے۔ غیر ملکی سرمایہ کاروں کا پاکستان پر اعتماد اس دور میں بڑھا ہے۔ فرزانہ سلیم نے کہا کہ پاکستان اور چین یک جان دو قالب ہیں ۔ تاریخ گواہ ہے کہ چین نے ہر مشکل وقت میں پاکستان کی مدد کی اور کبھی تنہا نہیں چھوڑا۔ انہوں نے پاکستانی اور چینی تاجروں پر زور دیتے ہوئے کہا کہ وہ اپنی اقتصادیات کو مضبوط تر بنانے کے لئے ایک دوسرے سے سچے دوستوں کی طرح روابط استوار رکھیں ۔ رئیل اسٹیٹ کنسلٹنٹ کمیٹی نے چینی وفد کو گوادر آنے کی دعوت دیتے ہوئے بتایا کہ عنقریب (ایف پی سی سی ائی) کی اسٹینڈنگ کمیٹی برائے رئیل اسٹیٹ کنسلٹنٹ کا ایک وفد سی پی ای سی اور گوادر کے حوالے سے چین کا دورہ کرے گا۔

جعلی منرل واٹر کمپنیوں پر پابندی عائد کی جائے حاجی شریف الدین


fake mineral water company August 27, 2016 | 4:23 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)بتول ویلفیئر ٹرسٹ کے چیئرمین حاجی شریف الدین نے وزیر اعلیٰ سندھ،وزیر بلدیات اور ایم ڈی کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ جعلی منرل واٹر کمپنیوں پر فوری پابندی عائد کی جائے کراچی کے شہریوں کو پانی کی شدید قلت کاسامنا ہے جبکہ جعلی منرل واٹر بنانے والی کمپنیاں عوام کوچور ی شدہ پانی بوتلوں میں بھر کر فروخت کر رہی ہیںانہوں نے کہا کہ کراچی کے شہریوں کے ساتھ کھلا ظلم ہو رہا ہے گھر وں کی آدھے انچ کی لائن میں پانی نہیں آرہا اور شہری بوند بوند کو ترس رہے ہیں مگر سینکڑوں منرل واٹر کی جعلی کمپنیاں اوردس ہزار سے زائد ٹینکر ز کروڑوں روپے یومیہ کا پانی جو گھروں میں نلوں کے ذریعے آنا چاہئے تھا وہی پانی چوری کر کے عوام کو بھاری قیمت میں فروخت کر رہے ہیں حاجی شریف الدین نے کہا کہ اس مکروہ دھندے میں کراچی واٹر بورڈکے افسران اور عملہ شامل ہے انہوں نے کہا کہ کراچی کو کوفہ نہ بنایا جائے اورجتنے بھی وال مینزہیںانہیں پانی کی مصنوعی قلت پیدا کرنے اور بھاری رشوتیں وصول کرکے عوام کو پانی فراہم کر نے کے جرم میں سخت ترین سزائیں دی جائیںحاجی شریف الدین نے کہا کہ جان بوجھ کر عوام کے لئے مسائل پیدا کئے جا رہے ہیں اور ا نہیں سیاسی بنیادوں پر الجھایا جا رہا ہے انہوں نے کہا کہ کراچی کے شہریوں کے پینے کے پانی کے منصوبوں کو فوری طور پر مکمل کیا جائے اور پانی فراہم کرنے کی تمام تنصیبات کو تحفظ فراہم کیا جائے حاجی شریف الدین نے کہا کہ دفعہ 144کے تحت کراچی بھر میں جعلی منرل واٹرفروخت کرنے والی گاڑیوں اورتمام پانی کے ٹینکرز کی نقل و حمل پر پابندی عائد کی جائے انہوں نے کہا کہ پانی کی تقسیم کے نظام کو رینجرز کے حوالے کردیا جائے تا کہ کراچی کے شہریوں کے لئے مصنوعی قلت آب کا مسئلہ حل ہو سکے

ایس بی سی اے کی ٹیکنیکل کمیٹی برائے خطرناک عمارت کامختلف عمارتوں کے سروے کاسلسلہ جاری


SBCA Logo Site August 21, 2016 | 9:23 PM

کراچی :( نیوزآن لائن( سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی ٹیکنیکل کمیٹی برائے خطرناک عمارت کے حالیہ سروے کے نتیجے میں عبداللہ کمپلیکس واقع پلاٹ نمبر ایف ایل-15سیکٹر5-1 ،نیوکراچی ٹائون کو خطرناک عمارت قرار دیتے ہوئے مکینوں کواسے فوری خالی کرنے کاکہاہے ۔تفصیلات کے مطابق ڈائریکٹرجنرل آف سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی نور محمد لغاری کی ہدایات پرماہرتعمیرات اورانجینئرز پر مشتمل ایس بی سی اے کی ٹیکنیکل کمیٹی برائے خطرناک عمارت کامختلف عمارتوں کے سروے کاسلسلہ جاری ہے۔ اس سلسلے میں گرائونڈ پلس چار منزلہ عمارت عبداللہ کمپلیکس کے معائنہ کے بعد جاری کردہ رپورٹ میںکہاگیاہے کہ عمارت کابنیادی ڈھانچہ تباہی کاشکار ہے اور عمارتی بوجھ سنبھال نہیں سکتا جس کی وجہ سے عمارت کے کسی بھی وقت حادثاتی طورزمین بوس ہونے کااندیشہ ہے جس کے نتیجے میں قیمتی انسانی جانوں اور املاک کونقصانات کاخدشہ ہے اس لئے عمارت کوفوری مکینوں سے خالی کروایاجائے۔اس سلسلے میں ایس بی سی اے کی جانب سے مذکورہ عمارت کے مکینوں وقابضین کو انتباہی نوٹس جاری کرتے ہوئے متعلقہ دیگرمحکموں کو مطلع کردیا گیا ہے ۔

قائد آباد کی قانونی دوکانیں مسمار کی گئیں تو نیشنل ہائی وے بلاک کر دیں گے ۔ محمو د حامد


small traders pic 11-08-2016 August 11, 2016 | 9:05 PM

پیتیس دوکانوں کی انہدامی وزیر اعلیٰ سندھ کی صفائی مہم کے خلاف سازش ہے ۔شوکت ربانی
چودہ اگست کے مو قع پر 250دوکانوں کو مسمار کر کے ہزاروں لوگوں کو بے روز گار اور فاقہ کشی کر نے کی سازش شر مناک ہے ۔ کراچی :( نیوزآن لائن)آل پاکستان آرگنائزیشن آف اسمال ٹریڈر اینڈ کاٹیج انڈسٹریز کراچی کے صدر محمود حامدنے قائد آباد بسم اللہ مارکیٹ میں 35قانونی دکانوں کو مسمار کرنے اور اس کا سامان تباہ کرنے کی پرزور مذمت کی ہے اٍنہوں نے مطالبہ کیا کہ تاجروں کو روزگار سے محروم کرنے کی سازشیں بند نہ ہوئیں تو پورے شہر کے تاجر سراپا احتجاج بن جائیں گے ،انہوں نے کہا کہ صفائی مہم کی آڑ میں قانونی اور الاٹ شدہ دکانوں کو تجاوزات قرار دیکر مسما رکرنا بدعنوان اور راشی عناصر کی سازش ہے ،چند ماہ قبل بھی تجاوزات کے نام پر آپریشن کرکے درجنوں دکانوں کو مسمار کر کے سامان لوٹا جاچکا ہے مگر اب تاجر اس ظلم کو بر داشت نہیں کر یں گے ۔قائد آبا دمیں تاجروںکو بے روز گار کر نے کی سازشیں بند نہ کی گئی تو نیشنل ہائی وے پردھر نہ دے کر بلاک کر دیں گے ۔وہ آج کراچی پریس کلب پر تاجرانِ قائد آباد سے احتجاجی مظاہرے سے خطاب کر رہے تھے ۔مظاہرے سے قائد آباد کے صدر شوکت ربانی ،صاحب زمان ،حیدر خان ،خادم حسین ،خورشید بٹگرامی نے بھی خطاب کیا ۔محمود حامد نے کہا کہ کراچی گندگی اور کچرے کا ڈھیر بن چکا ہے ۔عوام اورتاجر شہر کی صفائی کے مطالبات کر رہے ہیں ۔نئے وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے اپنی نگرانی میں صفائی مہم کا آغا ز کیا تھا جس سے یہ امید ہو ئی تھی کہ شہر کی حالت بہتر ہو جائے گی لیکن سازشی عناصر نے صفائی مہم کا رُخ قانونی مارکیٹوں کی طرف موڑ دیا اور 250 سے زائد دوکانوں کے غیر قانونی قرار دے کر مسمار کر نے کا ناپاک منصوبہ بنا یا گیا ہے جس کے نتیجے میں ہزاروں لوگ فاقہ کشی کا شکار ہو جائے گے ۔یہ وہی سازشی عناصر ہیں جو سالوں سے عوامی و سائل پر عیاشیاں کر رہے ہیں اور عوام کے ٹیکسوں کو عوام پر خرچ ہو نا نہیں دیکھنا چاہتے ۔انہوں نے اس بات پر حیرت کا اظہار کیا کہ 20سے 25سال سے قائم مارکیٹیں اچانک غیر قانونی کیسے ہو گئیں ۔جبکہ ان کے قانونی کاغذات تاجروں کے پاس موجود ہیں اور ڈی ایم سی نے یہ دوکانیں خود تاجروں کو فروخت کی ہیں ۔محمود حامد نے کہا کہ تاجر متحد ہیں اور ہر قسم کی سازشوں کو اپنے اتحاد کے بل پر ناکام بنائیں گے ۔تاجرانِ قائد آباد کے صدر شوکت ربانی کے نے کہا کہ ڈی ایم سی قائد آباد کی سڑ کوں پر لگے ٹھیلوں ،بس اڈوں اور دیگر تجاوزات جو ٹریفک کی روانی میں روکاوٹ ہیں کے خلاف کو ئی کاروائی نہیں کر تی مگر سالوں سے قائم قانونی مارکیٹوں کو مسمار کر رہی ہے ۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ دوکانیں مسمار کر نے کے غیر قانونی احکامات دینے والوں کے خلاف کاروائی کی جائے اور تاجروں کو مکمل تحفظ دیا جائے۔

سول ہسپتال کوئٹہ میں بم دھماکہ قابلِ مذمت ہے ۔ محمود حامد


apostci August 9, 2016 | 8:00 PM

دشمن گوادر پورٹ اور معاشی راہداری کو سبو تاژ کر نا چاہتا ہے/ دہشت گردوں کو اپنے اتحاد کے بل پر شکست دیں گے
ڈان نیوز اور آج نیوز کے کیمرہ مینوں کی شہادت پر بھی اظہار ِ افسوس ۔تمام شہداء کے لیے مغفرت اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا

کراچی:(نیوزآن لائن) آل پاکستان آرگنائزیشن آف اسمال ٹریڈرز اینڈ کاٹیج انڈسٹریز کراچی کے صدر محمود حامد ،نائب صدور عثمان شر یف ،عبدالماجد نے کوئٹہ سول ہسپتال کے باہر بم دھماکے کو قابلِ مذمت اور بزدلانہ کاروائی قرار دیتے ہوئے دہشت گردی کے ذمہ داروں کو کیفر کردار تک پہنچانے کا مطالبہ کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ دہشت گردوںکی کاروائی کے نتیجے میں 73افراد کی ہلاکت افسوسناک ہے ۔تاجر راہنمائوں نے کہا کہ کراچی کے عوام اور تاجروں کی ہمدردیاں کوئٹہ کے متاثرہ عوام اور وکلاء کے ساتھ ہیں ۔غیر ملکی طاقتیں اور ملک دشمن عناصر گوادر پورٹ اور اکنامک کاریڈور کو ناکام بنانے کے لیے بے گناہ شہریوں کے خون سے ہولی کھیل رہے ہیں ۔اسمال ٹریڈرز کے راہنمائوں نے کہا کہ دہشتگردانہ کاروائیوں کے خلاف ہم متحد ہیں اور ہم بزدل دشمن کو اپنے اتحاد کے بل پر شکست دیں گے ۔تاجر راہنمائوں نے ڈان نیوز اور آج نیوز کے کیمرہ مینوں کی شہادت پر بھی اظہار ِ افسوس کیا ۔انہوں نے شہید ہو نے والوں کے لیے مغفرت اور درجات کی بلندی اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا کی ۔

کالا باغ ڈیم ملک کیلئے نا گزیرہے ۔ راشد علی خان


dam August 8, 2016 | 8:58 PM

ملک میں ڈیموں کی کمی کی وجہ سے کروڑوں کیوسک پانی سمندر برد ہو جاتا ہے جسے ذخیرہ کرنے کے لئے کالا باغ ڈیم سمیت دیگر چھوٹے چھوٹے ڈیموں کی اشد ضرورت ہے
کراچی:(نیوزآن لائن)کالا باغ ڈیم ملک کیلئے نا گزیرہے ملک میں ڈیموں کی کمی کی وجہ سے کروڑوں کیوسک پانی سمندر برد ہو جاتا ہے جسے ذخیرہ کرنے کے لئے کالا باغ ڈیم سمیت دیگر چھوٹے چھوٹے ڈیموں کی اشد ضرورت ہے بھارت نواز وزراء اور نام نہاد قوم پرست رہنما پاکستان کے آبی ذخائر میں شدید روکاوٹ بن رہے ہیںیہ بات الراشد فائونڈیشن پاکستان کے چیئرمین راشد علی خان نے ایک بیان میں کہی انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ڈیموں کی تعمیر نہ ہونے کی وجہ سے پاکستان کے زرعی شعبے کو شدید دشواریوں کا سامنا ہے جس کی وجہ سے پاکستان زرعی ملک ہونے کے با جود اجناس غیر ممالک سے درآمد کرنے پر مجبور ہے انہوں نے کہا کہ پاکستانی 70فیصد عوام کوپینے کا صاف پانی بھی میسر نہیںہے راشد علی خان نے کہا کہ نام نہاد قوم پرست رہنما کالا باغ ڈیم کی مخالفت کرنے کے بجائے پہلے اپنی غریب اور پیروں سے ننگی عوام کو پیروں میں چپل اور جسم پر کپڑے پہنائیںاور اپنی نجی جیلوں اور جرگوں کاخاتمہ کریں اور اپنے غیر قانونی ظالمانہ اور جابرانہ نظام کو ختم کریں اور غریب عوام کو ان کے جائز حقوق کے لئے آزادی دیں انہوں نے کہا کہ جولوگ کالا باغ ڈیم اور دیگر آبی ذخائر کی بے جا مخالفت کر رہے ہیں دراصل وہ پاکستان دشمن عناصر کی حمایت کر رہے ہیں راشد علی خان نے کہا کہ کالا باغ ڈیم اور دیگر آبی ذخائر سے نہ صرف توانائی کے سستے منصوبے پائے تکمیل کو پہنچیں گے بلکہ ملک میں ترقی اور خوشحالی بھی ہوگی انہوں نے کہا کہ کسی کی پسند نہ پسند کی وجہ سے ملک کی ترقی اور خوشحالی کو دائوں پر نہیں لگایا جا سکتاہے راشد علی خان نے کہا کہ ہمارا دشمن ملک بھارت اکثر آبی جہاریت کر کے پاکستان میں سیلاب کی صورتحال پیدا کر دیتا ہے جس سے لاکھوں ایکڑ پر کھڑی فصلیں تباہ اور لاکھوں لوگ بے گھرہو جاتے ہیں جس سے پاکستان کو اربوں روپے کا معاشی نقصان بھی اٹھانا پڑتا ہے انہوں نے کہا کہ جنرل راحیل شریف پاکستان میں توانائی کے منصوبوں کے علاوہ پانی کے ذخیرے اور ڈیموں کی تعمیر شروع کر وائیں تا کہ پاکستان میں پانی کی قلت پر قابو پایا جا سکے

کراچی کی تباہی کے ذمہ دار ارباب اقتدار ہیں۔ نئے وزیر اعلی سندھ نے سڑکوں پر نکل کر اچھی روایت ڈالی۔عبدالحفیظ انصاری


karachi August 7, 2016 | 6:17 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) کراچی آفیسرز ویلفیئر ایسوسی ایشن کے نائب صدر عبدالحفیظ انصاری نے وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ کے عوامی دوروں اور سڑک پر نکلنے کی روایت کو اچھی کائوش قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ تاہم سوک اداروں کی تباہی کے ذمہ دار ماضی کے وزیر اور ارباب اقتدار ہیں جو ٤٠ ، ٤٠ لاکھ روپے لیکر ایڈمنسٹریٹر لگاتے رہے تین ماہ کی ریلیز دیکر حصہ طے کرتے رہے جسکی وجہ سے کام نہیں ہوا۔ مراد علی شاہ اپنوں اور غیروں کا احتساب کریں۔ موجودہ ایڈمنسٹریٹرز تباہ شدہ کراچی کو دوبارہ سے کیسے آباد کریں جبکہ کے ایم سی جیسا ادارہ گرانٹ پر چل رہا ہے ، ڈی ایم سیز کے پاس تنخواہوں کے پیسے نہیں۔ منتخب نمائندے ہی اس کا توڑ ہیں اس لئے وزیر اعلی کے ایم سی کو ٢٥٠ ارب اور وفاق ٢٥٠ ارب دے تاکہ افرا اسٹرکچر درست ہو۔ لیاری ایکسپریس وے کو شام ٤ سے ٩ بجے تک دوسرا ٹریک مکمل ہونے تک واپسی کے لئے کھول دیا جائے۔بارش میں ناقص کارکردگی والوں کو انکے انجام سے دوچار کیا جائے۔

بھارتی را کے ایجنٹ کو گرفتار کرنا پاکستانی فورسز کی بڑی کامیابی ہے ایاز میمن موتی والا


karachi_tajir2 April 3, 2016 | 3:10 PM

بھارتی را کے ایجنٹ کو گرفتار کرنا پاکستانی فورسز کی بڑی کامیابی ہے ایاز میمن موتی والا
پاکستان میں ہر قسم کی دہشت گردی میں بھارتی خفیہ ایجنسی را ملوث ہے جس کا ثبوت خود بھارتی ایجنٹ بھو شن یادیونے اپنے اعترافی بیان میںدیا ہے کہ بھارت ہمیشہ پاکستان کو اقتصادی اور معاشی طور پر کمزور کرنا چاہتا ہے
کراچی:(نیوزآن لائن)بھارتی را کے ایجنٹ کو گرفتار کرنا پاکستانی فورسز کی بڑی کامیابی ہے پاکستان میں ہر قسم کی دہشت گردی میں بھارتی خفیہ ایجنسی را ملوث ہے جس کا ثبوت خود بھارتی ایجنٹ بھو شن یادیونے اپنے اعترافی بیان میںدیا ہے کہ بھارت ہمیشہ پاکستان کو اقتصادی اور معاشی طور پر کمزور کرنا چاہتا ہے یہ بات کراچی تاجر الائنس کے چیئرمین ایاز میمن موتی والا نے ایک بیان میں کہی انہوں نے کہا کہ کراچی میں دہشتگردی کے واقعات اورخصوصاََ پاکستان کی اقتصادی راہداری اور گوادر کی بندر گاہ کو نقصان پہنچانے کیلئے را کے ایجنٹ کام کرتے رہے ہیں اور پاکستان دشمن قوتوںسے مل کر فرقہ واریت ،لسانیت اور دہشت گردی کے ذریعے پاکستان کا امن خراب کرنا چاہتے ہیں انہوںنے کہا کہ بھارت پاکستان کی ترقی اور خوشحالی کو روکنا چاہتا ہے مگر پاکستانی عوام اور افواج پاکستان ملک کے دشمنوں کے ناپاک عزائم کو خاک میں ملادے گی اور ملک دشمنوں قوتوںکو منہ توڑ جواب دے گی ایاز میمن موتی والا نے کہا کہ عوام آپس کے اختلافات کو بھول کر ملک کے مفادات کے پیش نظر متحد ہوکر ملک دشمن عناصر کے خلاف ایک ہو جائیں اور ایسے عناصر پر کڑی نظر رکھیں جو کسی بھی طرح ملک کو نقصان پہنچانا چاہتے ہوں انہوں نے کہا کہ عوام اپنے اطراف اور ارد گرد مشکوک چیزوں اور اشخاص پر بھی نظر رکھیںاور اگر کسی قسم کی غیر معمولی سرگرمیاںہو تے دیکھیں تواس کی اطلاع فوراََقانون نافذ کرنے والے اداروں کو دیںایاز میمن موتی والا نے کہا کہ بھارت ہمیشہ سے پاکستان کا دشمن رہا ہے اور وہ ہر طرح سے پاکستان کو نقصان پہنچا نے کی کوششیں کرتا ہے جبکہ پاکستان نے بھارت سے ہمیشہ اچھے تعلقات رکھنے کا عزم کیا ہے مگر ہندو ستان نے کبھی بھی پاکستان کو اس کی امن پسندی اور دوستی کا مثبت جواب نہیں دیا ۔

پاکستان اقتصادی اصلاحات پر عملدرآمد جاری رکھے۔آئی ایم ایف


imf and pakistan March 27, 2016 | 2:12 PM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن)ٍآئی ایم ایف کے ڈپٹی مینیجنگ ڈائریکٹر نے پاکستان پر زور دیا کہ وہ اقتصادی اصلاحات پر عملدرآمد جاری رکھے۔یہ بات آئی ایم ایف کے ڈپٹی مینیجنگ ڈائریکٹر میت شوھیرو فروسواء نے ایگزیکٹیو بورڈ کے اجلاس کے بعد جاری کئے گئے ایک بیان میں کہی۔ اجلاس میں پاکستان کیلئے پچاس کروڑ بیس لاکھ ڈالر کی اگلی قسط کی منظوری دی گئی۔انہوں نے پاکستان پر زور دیا کہ وہ معاشی شعبے میں حاصل کی گئی کامیابیوں کو مستحکم بنانے کیلئے اقتصادی اصلاحات پر عملدرآمد جاری رکھے جبکہ عالمی مالیاتی فنڈ نے کہا ہے کہ پاکستان کی معیشت بتدریج مستحکم ہورہی ہے۔

وکلا کی پیشہ وارانہ مہارت اور قابلیت کو بڑھانے کے لیے سندھ بھر میں تربیتی ورکشاپس کا انعقاد


national judment concil March 23, 2016 | 8:27 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) قانونی ماہرین نے کہا ہے کہ وکلا اور عدلیہ کے درمیان اور پیشہ وارانہ تعلقات کے فروغ سے غیر ضروری مقدمے بازی اور عدالتی وقت کے ضیاع کو روکا جا سکتا ہے، سپریم کورٹ اور ماتحت عدلیہ میں 17 لاکھ سے زائد مقدمات زیر التوا ہیں۔ وکلا کی پیشہ وارانہ مہارت اور قابلیت کو بڑھانے کے لیے سندھ بھر میں تربیتی ورکشاپس کا انعقاد وقت کی انتہائی اہم ضرورت ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے منگل کی شام جسٹس ہیلپ لائن اور میڈیونکس کے تحت نجی ہوٹل میں منعقدہ پہلے نیشنل جوڈیشل ورکشاپ اور کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب کی صدارت ممتاز قانون دان و سابق اٹارنی جنرل پاکستان جسٹس ریٹائرڈ انور منصور خان نے کی۔ دیگر مقررین میں ایڈووکیٹ جنرل سندھ نثار درانی، وائس چانسلر شہید ذوالفقار علی بھٹو لا یونیورسٹی جسٹس ریٹائرڈ قاضی خالد علی، ڈائریکٹر جنرل مانیٹرنگ محکمہ قانون سید محبوب علی شاہ، چیئرمین آباد و بابے صدر ایف پی ایس سی آئی حنیف گوہر، سندھ ریونیو بورڈ اپیلٹ ٹریبونل کے چیئرمین جسٹس ریٹائرڈ ندیم اظہر صدیقی، صدر جسٹس ہیلپ لائن ندیم شیخ ایڈووکیٹ، ایف پی سی سی آئی منارٹی کمیٹی کے چیئرمین ممتازاقلیتی رہنما آتم پرکاش، سیکریٹری حکومت سندھ اور ایم ڈی سپرا عبدالرحیم سومرو، این س ض دی آر کے سی او او ابراہیم سیف الدین، ڈپٹی اٹارنی جنرل پاکستان اور دیگر شامل تھے۔ ورکشاپ میں ایف آئی اے، کراچی پورٹ ٹرسٹ، اینٹی نارکوٹکس فورس، ایمپائر اولڈ ایج بینیفٹ انسٹی ٹیوٹ، نیشنل بینک، یو بی ایل، پاکستان کوسٹ گارڈ اور ایک درجن سے زائد اداروں کے شعبہ قانون کے سربراہان، لا افسران اور پراسیکیوٹرز نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔ اس موقع پر سلیم مائیکل ایڈووکیٹ، تحریک انصاف کے رہنما ایم پی اے سید حفیظ الدین، جماعت اسلامی کے اقلیتی شعبے کے سربراہ یونس سوہان، صدر کے ایم سی سجن یونین سی بی اے سید ذوالفقار شاہ بھی موجود تھے۔ عبدالرحیم سومرو نے اپنے خطاب میں کہا کہ انصاف کا بول بالے کے لیے جسٹس ہیلپ لائن کی کوششیں قابل تعریف ہیں، ناانصافی معاشرے کے لیے سخت نقصان دہ ہے، معاشرے میں انصاف کا۔معیار سب کے لیے یکساں ہونا چاہیے۔ اسی سے معاشرے ترقی کرتے ہیں۔ حنیف گوہر نے کہا کہ اس ملک کی بنیاد بھی ایک وکیل نے رکھی تھی۔ ہر پاکستانی پر لازم ہے وکلا برادری کا احترام کرے۔ آج کل کچھ وکلا پیسوں کے لالچ میں لوگوں کی عزتیں اچھالنے ہیں۔ وہ اس مقدس پیشے کی بھی بدنامی کا باعث ہیں۔ ایسے حالات مں بزنس کرنے والوں کی حوصلہ افزائی کرنی چاہیے۔ سید محبوب شاہ نے وزیراعلی سندھ کے مشیر قانون بیرسٹر مرتضی وہاب کی نمائندگی کرتے ہوئے کہا کہ محکمہ قانون سندھ اپنی پوری کوشش کر رہا ہے کہ عوام کو جلد انصاف اور ریلیف ملے۔ آتم پرکاش نے کہا کہ عدلیہ لوگوں کو ریلیف دے رہی ہے ، سپریم کورٹ نے اقلیتوں کو بھی کافی ریلیف دیاہے۔ ندیم شیخ ایڈووکیٹ کی کوششوں سے 70 سال بعد عدالتی حکم سے مندر واپس دلوایا۔ ناصر درانی نے کہا کہ حکومت قانون کی بالادستی کے لیے کوشاں ہے۔ تعلیم۔کے فروغ سے جرائم میں بھی کمی آجاتی یے۔ جسٹس ریٹائرڈ قاضی خالد علی نے کہا کہ ہر معاشرے میں قانون سب سے اہم ہوتا ہے۔ پاکستان می وکلا اور قانون نے بہت قربانیاں دی ہیں۔ قانون کے تعلیمی اداروں کا معیار اچھا ہو گا تو اچھے طالب علم اور وکلا نکلیں گے جس سے ملک میں قانون کا بول بالا ہو گا۔ جسٹس ریٹائرڈ ندیم اظہر صدیقی نے کہا کہ اس پیشے میں وکلا صرف روزگار ہی نہیں بلکہ لوگوں کو خدمات بھی دیتے ہیں۔ بہت سے ایسے لوگ ہیں جن کے پاس عدالتی کارروائی کے لیے پیسے بھی نہیں ہوتے۔ انہوں نے جسٹس ہیلپ لائن کی کاوشوں کی بھی تعریف کی۔ جسٹس ریٹائرڈ انور منصور نے کہا کہ اگر وہ صرف دو لوگوں کو اپنی بات نہیں سمجھا سکتا تو اس کا مطلب یہ ہے کہ وہ وکالت نہیں تقریر کر رہے ہیں۔ اگر میں بحیثیت وکیل کسی کا مسئلہ حل نہیں کر سکتا تو اس کی فیس مجھ پر حرام ہے۔ اس موقع پر شرکا، مقررین اور کورٹ رپورٹرز میں تعریفی اسناد بھی تقسیم کی گئیں ۔

سالانہ 1500ٹن کھجوروں کی پروسیسنگ کیلئے یونٹ اگلے برس کام شروع کردے گا۔ ناہید میمن ۔چیئر پرسن سندھ بورڈ آف انویسٹمنٹ


dates March 6, 2016 | 3:56 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) چیئر پرسن سندھ انویسٹمنٹ بورڈ(ایس بی آئی)ناہید میمن نے کہا ہے کہ کھجور کی پیداوار کے حوالے سے پاکستان کے زرخیز ترین ضلع خیر پورمیں سالانہ 1500ٹن کھجوروں کی بین الاقوامی معیار کے مطابق پروسیسنگ کی صلاحیت کا حامل یونٹ اگلے سال خیر پوراسپیشل اکنا مک زون میں کام کرنا شروع کردے گا ۔ اس پروسیسنگ یونٹ میں بیک وقت 1800ٹن کولڈ اسٹوریج کی بھی گنجائش رکھی گئی ہے ۔
چیئر پرسن سندھ انویسٹمنٹ بورڈناہید میمن نے بتایا کہ حکومت سندھ نے صوبے میں سرمایہ کاری کے منصوبوں کی حوصلہ افزائی کے لئے سندھ انٹر پرائز ڈیولپمنٹ فنڈ (ایس ای ڈی ایف)کی وساطت سے دیہی اور زرعی شعبے کی معیشت کی بہتری اور ویلوایڈیشن کے لئے مالی معاونت کا پروگرام شروع کیا ہے ۔نجی شعبے میں قائم ہونے والے 1500ٹن کھجور کی پروسیسنگ صلاحیت کے حامل اس پروجیکٹ میںپروسیسنگ یونٹ لگانے والی قابل اعتماد کمپنی کو بینک قرضے پر تین سال تک مارک اپ ادائیگی میں سندھ انٹر پرائز ڈیولپمنٹ فنڈ (ایس ای ڈی ایف)تعاون کرے گا۔ اس عمل سے دیہی اور زرعی شعبوںمیں صنعتی ترقی کا عمل تیز ہوگا ۔انہوں نے بتایا کہ سندھ بورڈ آف انویسٹمنٹ ،سندھ انٹر پرائز ڈیولپمنٹ فنڈ اور خیر پور کی ضلعی انتظامیہ خیر پور اسپیشل اکنامک زون میں نجی شعبے کے سرمایہ کاروں کی حوصلہ افزائی کیلئے تمامتر ضروری تعاون اور انفرااسٹرکچرفراہمی کے لئے کوشاں ہیں۔

یورپی بینک اورکمپنیاں ایران کے ساتھ کاروبار کرنے میں گریز کررہی ہیں۔ ایران


iran March 6, 2016 | 3:12 PM

تہران:(نیوزآن لائن)ایران کا کہنا ہے کہ یورپی بینک اورکمپنیاں ایران کے ساتھ کاروبار کرنے میں گریز کررہی ہیں۔ایرانی خبر رساں ایجنسی ادارے کے مطا بق ایرانی سینٹرل بینک کے گورنر کے مطابق بین الاقوامی پابندیوں کے خاتمے کے باوجود یورپی بینک اور کمپنیاں ایران کے ساتھ کاروبار کرنے میںگریز کررہی ہیں۔انہوں نے اس حوالے سے بین الاقوامی مالیاتی فنڈسے بھی رابطہ کیاگیا ہے کہ وہ یورپی خدشات کے خاتمے کیلئے اقدامات کریں۔یاد رہے کہ امریکہ کی جانب سے ایران پر عائد بیشتر پابندیاں ختم کردی ہیںتاہم بعض پابندیاں بدستور لاگو ہیں۔

جلد ہی پاکستان اسٹیل کی بحالی کا عمل شروع ہو جائے گا، وزیر مملکت برائے نجکاری ،محمد زبیر


APSO with Mr Muhammad Zubair Umar February 28, 2016 | 2:19 PM

آفیسرز کی تنخواہوں میں اضافہ نہ ہونے ، پراویڈینٹ فنڈ کی عدم ادائیگی، ریٹائرڈ ملازمین کے بقایا جات ادا نہ ہونے سے ملازمین میں سخت بے چینی ہے، حکومت پاکستان اسٹیل کی بحالی کا آغاز کرے، فنی مہارت سے مالا مال ملازمین پاکستان اسٹیل کو جلد ہی خود کفیل بنا دیں گے۔ زرداد عباسی (سیکریٹری جنرل، ایسوسی ایشن آف پاکستان اسٹیل آفیسرز)
کراچی:(نیوزآن لائن)ایسوسی ایشن آف پاکستان اسٹیل آفیسرزاے پی ایس او (رجسٹرڈ) کے ایک نمائندہ وفد نے جنرل سیکریٹری محمد زرداد عباسی کی قیادت میں وفاقی وزیر مملکت برائے نجکاری جناب محمد زبیر صاحب سے ان کی کراچی کی رہائش گاہ پر ملاقات کی، ایک گھنٹہ سے زائد جاری رہنے والی ملاقات میںاے پی ایس او کے وفد نے پاکستان اسٹیل کی غیر یقینی صورتحال ، آفیسرز کی تنخواہوں میں اضافہ نہ ہونے اور بجٹ 2015-16 میں نافذ کردہ پے اسکیل پاکستان اسٹیل کے افسران پر عدم نفاذ ، ریٹائرڈ ملازمین کی گریجویٹی اور پراویڈینٹ فنڈ کی عدم ادائیگی ، ماہانہ بنیادوں پر تنخواہ نہ ملنے اور ملازمین کے ذاتی جمع شدہ پراویڈینٹ فنڈ پر قرضہ جات کی بندش کے نتیجے میں ملازمین میں پائی جانے والی بے چینی سے وزیر مملکت کو آگاہ کیا۔ علاوہ ازیں وفد نے پاکستان اسٹیل کی بحالی ، سلیب سے ہاٹ رولڈ اور کولڈ رولڈ شیٹس کی تیاری، گیس کی فراہمی او رپاکستان اسٹیل کو کم از کم وقت میں خود کفالت تک لیجانے کے حوالے سے بھی تجاویز دیں۔
وزیر مملکت برائے نجکاری جناب محمد زبیر نے پوری توجہ سے وفد کی پیش کردہ معروضات کو سُنااور گریجویٹی اور پراویڈینٹ فنڈ کے حوالے سے موقع پر ہی فوری ہدایات جاری کیں۔ وزیر مملکت نے وفد کو یقین دلایا کہ پاکستان اسٹیل میں سرمایہ کاری کے لئے بیرونی سرمایہ کار دلچسپی لے رہے ہیں اور ہم جلد ہی پاکستان اسٹیل کے لئے اسٹریٹیجک پارٹنر شپ کا تعین کر لیں گے۔ اسطرح اگلے چند ماہ میں ہی پاکستان اسٹیل بحالی کی طرف گامزن ہو جائے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ کسی بھی اِدارے کے ملازمین اُس کا قیمتی اثاثہ ہوتے ہیں حکومت کی ترجیح ہے کہ پاکستان اسٹیل میں طویل خدمات انجام دینے والے ملازمین اور نوجوانوں کا مستقبل روشن ہو۔پاکستان اسٹیل جو ملک کی بنیادی صنعت کا درجہ رکھتی ہے وہ نہ صرف اپنے پیداواری اہداف حاصل کرے بلکہ اسے توسیع دے کر روزگار کے نئے مواقع بھی پیدا کئے جا سکیں۔ انہوں نے یقین دلایا کہ پراویڈینٹ فنڈ کے ضیاع کے معاملے پر ذمہ داروں کے خلاف کاروائی کی جائے گی اور اس بات کو یقینی بنایا جائے گا کہ ملازمین کی جمع شدہ رقم انہیں جلد از جلد ملنا شروع ہو جائے۔ وزیر مملکت نے مزید کہا کہ ریٹائرڈ ملازمین کے بقایا جات کا معاملہ انتظامیہ کی طرف سے پیش کردہ اعدادوشمار کی وصولی کے بعد حل کر لیا جائے گا۔اُنھوں نے تنخواوں کی بروقت ادائیگی کو یقینی بنانے ،وفدکو دوبارہ دو ہفتے بعد ملنے ایسوسی ایشن کی مرتب کردہ رپورٹ و تجاویزپر تبادلہ خیال کی یقین دہانی کروائی۔

ایرا نے زلزلے سے متاثرہ علاقوں میں9982 منصوبے کا ہدف مکمل کرلیا


erra February 21, 2016 | 2:08 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)موجودہ حکومت کے دور میںایرا نے زلزلے سے متاثرہ علاقوں میں9982 منصوبے کا ہدف مکمل کرلیا۔دوہزار پانچ کے زلزلے کے بعد ایرا کو زلزلہ سے متاثرہ علاقوں میں تباہ شدہ بنیادی ڈھانچے کے چودہ ہزار پانچ سو بارہ منصوبوں کی تعمیر کا ہدف دیا گیا تھا اس کے علاوہ ادارے نے خیبرپختونخوا اور آزاد کشمیر میں زلزلے سے محفوظ 6 لاکھ گھروں کی تعمیر کی نگرانی کی۔ایرا نے 66 مختلف اداروں اور محکموں میں نقصانات سے بچنے کی تربیت بھی دی۔

پاکستان اور قطر کے درمیان ایل این جی کی درآمد کاتاریخی معاہدہ طے ہو گیا


QATAR lng February 14, 2016 | 3:58 PM

قطر :( نیوزآن لائن)پاکستان اور قطر کے درمیان ایل این جی کی درآمد کاتاریخی معاہدہ طے ہو گیا۔قطر کے ساتھ یہ معاہدہ 4.78 ڈالر ایم ایم بی ٹی یو کی قیمت پر کیا گیا۔معاہدے سے اقتصادی ترقی کی رفتار تیز جبکہ بجلی اور کھاد کی پیداوار میں اضافہ ہوگا ۔ یہی نہیں سالانہ 100 ارب روپے کی بچت اور گیس کی 25 فیصد ضروریات پوری کرنے میں بھی مدد ملے گی۔پاک قطر تجارتی حجم 300 ملین ڈالر سے بڑھ کر ایک ارب ڈالر تک پہنچ جائے گا۔زیر اعظم نوازشریف نے قطری سرمایہ کاروں کو پاکستان میں توانائی بنیادی ڈھانچے کی ترقی اور صارف انڈسٹری سے متعلق منصوبہ جات میں سرمایہ کاری کی دعوت بھی دی ہے۔ روپے کی بچت اور گیس کی 25 فیصد ضروریات پوری کرنے میں بھی مدد ملے گی۔پاک قطر تجارتی حجم 300 ملین ڈالر سے بڑھ کر ایک ارب ڈالر تک پہنچ جائے گا۔ ارکان پارلیمنٹ کا کہنا ہے ایل این جی معاہدہ عوام کیلئے عظیم تحفہ ہے ۔توانائی بحران سے ملکی جی ڈی پی کو سالانہ دو فیصد نقصان پہنچ رہا ہے حکومت موجودہ شرح ترقی کا ہدف پانچ فیصد کو دو ہزار اٹھارہ تک سات فیصد پر لیجانے کا ارادہ رکھتی ہے۔ ایل این جی کی دستیابی اس ہدف کو حاصل کرنے میں معاون ثابت ہو سکتی ہے۔

ایس بی سی اے کی ہدایت پر ڈمالیش اسکواڈ نے کورنگی ٹائون میں واقع 2غیر قانونی شادی ہال کے خلاف کاروائی


SBCA Logo Site February 7, 2016 | 5:49 PM

کراچی: (نیوزآن لائن) سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے ڈائریکٹر جنرل آغا مقصود عباس کی ہدایت پر ڈمالیش اسکواڈ نے کورنگی ٹائون میں واقع 2غیر قانونی شادی ہال کے خلاف کاروائی کرتے ہوئے انہیں منہدم اور سر بمہرم کر دیاہے۔ تفصیلات کے مطابق ڈیمالیشن اسکواڈ نے پلاٹ نمبر ایف-7اور ایف8، سیکٹر 31-ای گرائونڈ فلور کالمز اور دیواروں کو توڑتے ہوئے لکھنو کو آپریٹیو ہائوسنگ سو سائٹی پرواقع گرین ویلی شادی ہال بینکویٹ اور پلاٹ نمبر سی -47سیکٹر 31-ای دارالسلام سی ایچ ایس پر واقع العربیہ شادی لان کی غیر قانونی تعمیرات کو منہدم کرکے احاطے کو سر بمہرم کر دیا گیا ۔ غیر قانونی تعمیرات کے خلاف مذکورہ بالا کاروائی ڈائریکٹر ڈیمالیشن ، جمیل میمن، ڈپٹی ڈائرکٹر سجاد اور کورنگی ٹائون کے اسسٹینٹ ڈاریکٹر احسن ادریس کی زیر نگرانی عمل میں لائی گئی جب کہ اس موقع پر امن و امان کی صورت حال کو قابو میں رکھنے کیلئے ایس بی سی اے پولیس فورس بھی ان کے ہمراہ وہاں موجود تھی ۔


gaspipelinekaracitolahoreLNGrussia_2-7-2016_214245_l February 7, 2016 | 4:00 PM

ماسکو:(نیوزآن لائن )کراچی سے لاہور تک ایل این جی پائپ لائن کا منصوبہ دو تین ماہ میں شروع ہو گی۔ایل این جی پائپ لائن کے متعلق تعمیراتی روسی کارپوریشنروس تیک کے سربراہ سرگئی چیمیزوو نے بتایا۔ روسی خبر رساں ادارے کے مطابق اس وقت پائپ لائن منصوبے میں روس کے ساتھ تعاون کرنے والے ممکنہ شرکائے کار کے ساتھ مذاکرات جاری ہیں۔ انہوں نے کراچی سے لاہور تک ایل این جی پائپ لائن منصوبے کی مالیت بتانے سے گریز کیا ،جنکہ کچھ عرصہ قبل پاکستان کے وزیر پیٹرولیم شاہد خاقان عباسی کے مطا بق ایل این جی پائپ لائن کی تعمیر ماہ جولائی میں شروع ہوگی۔

حکومتی اداروں کی غیر موثر پالیسیوں کے باعث ادویات کی برآمدات کم ہوگئیں۔ حامد رضا


jepg ppma February 1, 2016 | 3:55 PM

فارما ایکسپورٹ کونسل قائم کی جائے اور ڈریپ کو خودمختار ادارہ بنایا جائے۔چیئرمین پی پی ایم اے
چھ سال سے 10ہزار رجسڑیشن کی درخواستیں التواء میں ڈال دی گئیں
اسلام آباد(نیوزآن لائن): ناقص پالیسیوں اور حکومتی اداروں کی عدم دلچسپی کے باعث ادویات کی برآمدات میں مسلسل کمی ہورہی ہے اور 2015میں ادویات کی برآمدات میں 160ملین ڈالر کی کمی ہوئی ہے اور اگر فارما ایکسپورٹ کونسل قائم کردی جائے تو 5سال میں ادویات کی برآمدات 5ارب ڈالر ہوسکتی ہے۔ یہ بات پاکستان فارما سیوٹیکل مینوفیکچررز ایسوسی ایشن کے چیئرمین حامد رضا نے گذشتہ روز نیشنل پریس کلب میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر چیئرمین پی پی ایم اے نے کہا کہ نیشنل ہیلتھ سروسز کی وزارت کی ڈرگ کنڑول اتھارٹی میں بے جا مداخلت اور غیر موثر اقدامات کے باعث ملک کی ادویات کی صنعت کو سنگین خطرات لاحق ہوگئے ہیں اور یہ صنعت وژن 2020کے تحت ادویات کی برآمدات کاہدف 200ملین ڈالر سے بڑھا کر 5ملین ڈالر نہیں کرسکتی۔ حامد رضا نے کہا کہ فارما انڈسڑی 2014میں 18فیصد سالانہ کی شرح سے ترقی کررہی تھی جو 2015میں13فیصد رہ گئی اور ادویات کی ایکسپورٹ جو 2012میں 250ملین ڈالر تھی وہ 2015میں 160ملین ڈالر رہ گئی۔ انہوں نے کہا کہ وزارت نیشنل ہیلتھ سروسز کی بے جا مداخلت کے باعث ڈرگ ریگیولیری اتھارٹی وزارت کے ماتحت ادارہ بن گیا ہے جبکہ اسے ملک کا خود مختار ادارہ ہونا چاہیے اور وفاقی وزارت اٹھارویں ترمیم کی خلاف ورزی کرتے ہوئے صوبوں کو اختیار نہیں دے رہی ہے۔ پی پی ایم اے کے سابق چئیر مینوں ڈاکڑ قیصر وحید اور زاہد سعید نے کہا کہ جب 2012سے ڈریپ کا قیام عمل میں آیا اس ادارے کو باصلاحیت افرادی قوت کی کمی کا سامنا ہے اور سینڑل ریسرچ فنڈ جو وفاقی وزارت کنڑول کرتی ہے اسمیں اربوں روپے استعمال نہیں کئے گئے۔اور اس رقم کو اگر تحقیق وترقی کے نام پر استعمال کیا جاتا تو یقینا فارما انڈسڑی نہ صرف ترقی کرتی بلکہ برآمدات میں بے پناہ اضافہ ہوتا۔پی پی ایم اے نے مطالبہ کیاکہ فارما ایکسپورٹ کونسل کا قیام فوری طور پر عمل میں لایا جائے اور ڈریپ کو خودمختار اور ہر قسم کی مداخلت سے آزاد ادارہ بنایا جائے اور حکومت پاکستان فارما انڈسڑی کیلئے مشینری و آلات کو ڈیوٹی اور ٹیکسوں سے مستشنی قرار دے، حکومت ڈرگ ایکٹ 1976کی مشق نمبر 12کو ختم کر کے عالمی ادارہ صحت کی مجوزہ فہرست کے مطابق 30بجائے 200لازمی ادویات کی فہرست کو شامل کیا جائے۔ چیئرمین پی پی ایم اے نے کہا کہ حکومت کے غیر ضروری اختیارات ہر دوائی کی قیمت پر کنڑول کے باعث 30سے زائد زندگی بچانے والی ادویات کی مارکیٹ میں شدید قلت پیدا ہوگئی ہے۔انہوں نے کہا کہ 6سال سے ڈریپ میں نئی ادویات کی رجسڑیشن میں بے پناہ تاخیر کے باعث 10ہزار سے زائد درخواستیں التواء کا شکار ہیں اور ڈریپ کو ایک ماہ میں نئی رجسڑیشن کو منظور کر نے کا پابند کیا جائے اور زیر التواہ رجسڑیشن کے سرٹیفیکٹ فوری جاری کئے جائیں۔ پی پی ایم اے کے رہنماوں نے مطالبہ کیا کہ وژن 2020کے تحت ادویات کی صنعت میں ترقی کیلئے ٹاسک فورس بنائی جائے اور اس میں ڈیپ اور پی پی ایم اے کے نمائندوں کو بھی شامل کیا جائے۔

شبیہ صدیقی نے کراچی یونین آف جرنلٹس کے سالانہ انتخاب میں گرین پینل کی کامیابی پر دلی مبارک باد پیش


sindh solid waste management board.jpg February 1, 2016 | 3:44 PM

کراچی :( نیوزآن لائن)ایم ڈی سندھ سالڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ روشن علی شیخ ، ایگزیکٹیوڈائریکٹر آپریشن (آئی)کراچی ،  ڈائریکٹر میڈیا محمد شبیہ صدیقی نے کراچی یونین آف جرنلٹس کے سالانہ انتخاب میں گرین پینل کی کامیابی پر دلی مبارک باد پیش کی ہے ۔ مبارکباد کے ایک بیان میں انہوں نے کراچی یونین آف جرنلٹس کے نو منتخب صدر حسن عباس ، نائب صدر اعجاز احمد ، ظہیر خان ، جنرل سیکریٹر ی واجد رضااصفحانی اور دیگر عہدیداران کو کلین سوئپ کرنے پر مبارکباد پیش کرتے ہوئے امید ظاہر کی ہے کہ نومنتخب عہدیداران صحافی برادری کے فلاح و بہبود کے لئے نمایاں کردار اداکرینگے ۔ ریاست کا چوتھا ستون ہونے کے باعث صحافت کی اہمیت و افادیت سے کوئی بھی انکار نہیں کرسکتا اور ناصرف پاکستان بلکہ دنیا بھر میں صحافت کا پیشہ انتہائی اہمیت کا حامل ہے ۔ روشن علی شیخ نے کہا کہ معاشرتی برائیوں کے خاتمے کیلئے میڈیا انتہائی اہم کردار ادا کررہا ہے نومنتخب صدر حسن عباس کی قیادت میں تمام عہدیداران اور صحافیوں کی مشکلات دور کرنے میں ہرممکنہ کاوشوں کو یقینی بنائیں گے ۔

پاکستان میں تیل و گیس کیذخائر کی تلاش جاری میں سست روی کا رحجان


oil and gas January 24, 2016 | 2:45 PM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن) پاکستان میں تیل و گیس کیذخائر کی تلاش جاری میں سست روی کا رحجان کا سلسلہ جاری ہے۔ماہرین کے مطابق 2013 سے اب تک تقریبا 50 تیل و گیس کے بلاکس نیلام ہو چکے ہیں تاہم کسی ایک میں بھی کھدائی شروع نہ ہو نے کی اطلاع ہے۔ذرائع کے مطابق تیل و گیس کی تلاش کے علاوہ اب تک کسی ایک بلاک میں سائسمک سرویبھی مکمل نہیں ہو سکا ہے۔

اوپن مارکیٹ میں ڈالر106.30 پیسے پرپہنچ گیا


dollar January 17, 2016 | 3:47 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)اوپن مارکیٹ میں ڈالر106.30 پیسے پرپہنچ گیا ۔ کاروباری ہفتے کے اختتام پر ڈالر ایک سو چھ روپے تیس پیسے پر جا پہنچا، جبکہ انٹربینک میں ڈالر کی قیمت خرید ایک سو چار روپے بانوے پیسے اور قیمت فروخت ایک سو چار روپے ستانوے پیسے ریکارڈ کی گئی۔

پاکستان اسٹاک ایکسچینج کا 11جنوری کو افتتاح ہوگا،ایس ای سی پی


Pakistan-SECP January 10, 2016 | 4:49 PM

 اسلام آباد:(نیوزآن لائن)سیکیوریٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان کی جانب سے جاری اعلامیئے میں کہا گیا ہے کہ 11 جنوری کو پاکستان اسٹاک ایکسچینج کا افتتاح ہوگا۔ا علامئے کے مطابق لاہور اسٹاک ایکسچینج کے ٹریڈنگ رائٹ انٹائٹل سرٹیفکیٹ ہولڈرز کو پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں شامل کرلیا گیا ہے۔ چیرمین ایس ای سی پی ظفرحجازی کا کہنا ہے کہ 11 جنوری سے پاکستان اسٹاک ایکسچینج کا آغاز کردیا جائیگا۔

پاک چین اقتصادی راہداری پر تحفظات :اختر جان مینگل کے زیر اہتمام آل پارٹیز کانفرنس جاری


all parties confernce January 10, 2016 | 4:08 PM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن)پاک چین اقتصادی راہداری پر تحفظات کے خاتمے کیلئے بلوچستان نیشنل پارٹیسرداراختر جان مینگل کی سربراہی میں آل پارٹیز کانفرنس جاری ہے۔سرداراختر جان مینگل کی سربراہی میں ہونے والی آل پارٹیز کانفرنس میں حکومت کی جانب سے وفاقی وزیرمنصوبہ بندی وترقی احسن اقبال، سینیٹ میں قائد ایوان راجا ظفر الحق اوروزیرریلوے خواجہ سعد رفیق کے علاوہ پیپلزپارٹی کے سینیٹرتاج حیدر، وزیرخزانہ سندھ مراد علی شاہ اورفرحت اللہ بابر،اورمسلم لیگ (ق) کے سینیٹرمشاہد حسین سید ، ایم کیو ایم کے سینیٹربیرسٹرسیف، جے یو آئی (ف) کے عبدالغفورحیدری، سینیٹر طلحہ محمود اورحافظ حسین احمد، عوامی نیشنل پارٹی کے میاں افتخار حسین ، افراسیاب خٹک اور بشری گوہر ، سابق چیف جسٹس آف پاکستان افتخار محمد چوہدری اور پلڈاٹ کے احمد بلال محبوب بھی کانفرنس میں شریک ہیں۔کانفرنس کے دوران بی این پی مینگل کے سینیٹر جہانزیب جمالدینی نے کہا کہ 85 فیصد بلوچ پینے کے صاف پانی سے محروم ہیں، 80 فیصد بلوچ علاقوں میں گیس نہیں جب کہ 60 فیصد بلوچ علاقے بجلی سے محروم ہیں۔  ہم اقتصادی راہداری کے خلاف نہیں لیکن بلوچستان کو اس کا جائز حق ملنا چاہیے، صوبے میں 12ہزار افراد پر مشتمل سیکیورٹی ڈویژن بنایا جارہا ہے لیکن اس میں بلوچستان سے کسی کو بھرتی نہیں کیا جارہا،گوادر کو اقتصادی راہدری میں سے کوئی حصہ نہیں دیا جا رہا ،گوادر کی ملکیت بلوچستان کودی جائے۔ وزیراعلی خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے اے پی سی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی ترقی میں ہماری ترقی ہونی چاہیے، ہمیں سوچنا ہوگا کہ یہ نوبت کیوں آئی۔ اعلان کیاگیا کہ مغربی روٹ پہلے بنے گا ہم نے یقین کر لیا ۔ ہمارا حق تھا کہ منصوبے کی پہلی اینٹ خیبر پختونخوا اور بلوچستان میں رکھی جاتی۔ وہ صوبے کے وزیراعلی ہیں مگر ان سے کسی نے رابط نہیں کیا، وہ ذاتی حیثیت میں چین کے سفیر سے ملے لیکن ان کا جواب بتایا نہیں جاسکتا۔ ۔ بلوچستان میں ایک سڑک کا افتتاح کیا گیا جس کو مغربی روٹ کا نام دیا گیا 46 ارب تقسیم ہو چکے ہیں اور ہم یہاں بیٹھے ہیں۔

ٹیکس کے دائرہ کار میں اضافہ اور قومی معیشت مزید مضبوط ہوگی۔وزیر خزانہ اسحاق ڈار


ishaq dar q January 3, 2016 | 2:48 PM

. اسلام آباد:(نیوزآن لائن )وزیر خزانہ اسحاق ڈارنے کہا ہے کہ وزیر خزانہ نے کہا کہ مختلف سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے تاجروں کی مشاورت سے اس سکیم کو حتمی شکل دی گئی ہے۔ٹیکس کے دائرہ کار میں اضافہ اور قومی معیشت مزید مضبوط ہوگی۔اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگوں کرتے ہو ئے  اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ ٹیکس ادائیگی کی رضا کارانہ سکیم سے ٹیکس کلچر کو فروغ ملے گا۔ ٹیکس کے دائرہ کار میں اضافہ اور قومی معیشت مزید مضبوط ہوگی۔انہوں نے کہا کہ مختلف سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے تاجروں کی مشاورت سے اس سکیم کو حتمی شکل دی گئی ہے اور پارلیمنٹ کی منظوری کے بعد اس پر عمل درآمد ہوگا۔انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کے کئی اراکین نے ٹیکس ادائیگی کی رضا کارانہ سکیم کی حمایت کرتے ہوئے اس پر عملدرآمد کیلئے اسے پارلیمنٹ میں پیش کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

ایل پی جی کی قیمت میںاگلے ماہ10 روپے فی کلو تک کمی کا امکان


lpg sal December 27, 2015 | 4:31 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)ایل پی جی کی قیمت میںاگلے ماہ10 روپے فی کلو تک کمی کا امکان ہے۔چیئرمین ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز ایسو سی ایشن، عبدالہادی خان کا کہناہے کہ عالمی منڈی میں فی ٹن قیمت 100 ڈالر کم ہونے کے سبب قیمتیں کم ہونے کا امکان ہے، عبدالہادی خان کے مطابق ایل پی جی قیمت میں حتمی کمی کا اندازہ 31 دسمبر کو طے ہو گا۔انہوں نے کہا کہ ایل پی جی کی یومیہ کھپت 2700 ٹن ہو گئی ہے۔

حکو مت کا پی آئی اے کی نجکاری کا کوئی منصوبہ نہیں


ishaq dar December 20, 2015 | 3:01 PM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن)وزیر خزانہ اسحق ڈار نے کہا ہے کہ حکو مت کا پی آئی اے کی نجکاری کا کوئی منصوبہ نہیں، کسی ایک ملازم کو نہیں نکالیں گے ۔اسحاق ڈار نے کہا آرڈیننس کا اجرا کاروباری نوعیت کے آزادنہ فیصلے کرنے کے لیے کیا گیا ۔ کاروباری نوعیت کے آزادنہ فیصلے کرنے سے ادارہ کے منافع میں اضافہ ہوگا۔مسلم لیگ ن کے آنے کے بعدپی آئی اے کے حالات بہترہوئے۔ان کا مزیدکہنا تھا کہ حکومتی اقدامات کے باعث پی آئی اے ماضی کی طرح بہترین ائرلائن بن جائیگی، پی آئی اے کے طیاروں کی تعداد 18سے بڑھکر 38 پہنچ چکی ہے رواں ماہ 40ہوجائے گی۔

سوئی سدرن گیس کا کراچی میں سی این جی اسٹیشنز کو گیس کی فراہمی جاری رکھنے کا فیصلہ


CNG stations 03 December 5, 2015 | 6:44 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)کراچی سوئی سدرن گیس کمپنی کی جانب سے کراچی میں سی این جی اسٹیشنز کو گیس کی فراہمی ہفتہ کے روز بھی جاری رہے گی ۔بلدیاتی انتخابات کے باعث سی این جی اسٹیشنز کو گیس کی فراہمی جاری رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

چالیس ہزار روپے والے انعامی بانڈ کی قرعہ اندازی یکم دسمبر کو راولپنڈی میں منعقد ہو گی


prize bond November 29, 2015 | 4:58 PM

راولپنڈی :( نیوزآن لائن)چالیس ہزار روپے والے انعامی بانڈ کی قرعہ اندازی یکم دسمبر2015 کو راولپنڈی میں منعقد ہو گی۔40000 روپے والے قومی انعامی بانڈز کا پہلا انعام 7 کروڑ 50 لاکھ دوسرا انعام 2 کروڑ 50 لاکھ روپے کے تین انعامات جبکہ تیسرا انعام 5 لاکھ روپے 1696 انعامات خوش نصیبوں کو ملے گئے۔

خام تیل کی عالمی قیمتوں میں کمی کا سلسلہ جاری


petrolium November 22, 2015 | 4:32 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)خام تیل کی عالمی قیمتوں میں کمی کا سلسلہ جاری ہے۔بین الاقوامی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتیں 40 ڈالر سے 20 ڈالر فی بیرل تک گرنے کی قیاس آرائیاں ہو رہی ہیں۔لندن کی کنسلٹنسی انرجی ایس پیکٹس نے اپنے تجزیئے میں کہا ہے آئل مارکیٹ کا رجحان اس قت تیزی سے مندی کی طرف مائل ہے اور خام تیل بیس ڈالرفی بیرل گرنے کی خدشات موجود ہیں۔ جبکہ دوسری جانب پاکستانی ماہرین نے امید ظاہر کی ہے کہ خام تیل کی قیمتیں اگر20 ڈالر تک پہنچتی ہیں تو پاکستان میں پیٹرولیم مصنوعات میں واضح کمی ہوسکتی ہے ۔

حکومت کی جانب سے40 ارب کے نئے ٹیکس لگنے کا خدشہ


tax November 15, 2015 | 3:39 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)حکومت کی جانب سے40 ارب کے نئے ٹیکس لگانے کی تیاری شروع کر دی۔ذرائع کے وفاقی حکومت نے آئی ایم ایف سے پچاس کروڑ ڈالرقرض کی قسط حاصل کرنے کیلئے چالیس ارب روپے کے نئے ٹیکس لگانے کی تیاریاں مکمل کرلیں۔ ذرائع کے مطابق وزارت خزانہ نے درآمدی گاڑیوں، ڈیری مصنوعات، سگریٹ اور سیمینٹ پر نئے ٹیکسز لگانے کی تجویز پرغور شروع کر دیا، جبکہ درآمدی گاڑیوں پر اسپیشل ایکسائز ڈیوٹی اورڈیری مصنوعات کی درآمد پرریگولیٹری ڈیوٹی میں بھی اضافے کی تجویزپیش کردی گئی ہے۔منی بجٹ میں وفاقی حکومت کی جانب سے ٹیکس چھوٹ سے متعلق بعض ایس آر اوز بھی واپس لئے جاسکتے ہیں۔

خصوصی افراد کو حق اظہارر ائے کے لیے سہولتیں فراہم کی جائیں۔ جاوید عابدی


speical person November 8, 2015 | 2:40 PM

استنارہ گروپ حقوق معذورین کے لیے ملک بھر میں سر گرم ہے
خصوصی افراد کو حق اظہارر ائے کے لیے سہولتیں فراہم کی جائیں۔ جاوید عابدی
معذورین معاشرے کا ، کارآمد حصہ ہے ۔ سہولتوں کی فراہمی ہما ری صلاحیتوں کو جلا بخش سکتی ہے۔ محمد مبین الدین
پی ڈی پی آئی اور استنارہ گروپ کے تحت کرا چی پریس کلب میں محمد افضل الدین ، بلال احمد ، ندیم ودیگر کا پریس کانفرنس میں اظہار خیال
کرا چی :( نیوزآن لائن) دنیا کے 150سے زائد ممالک میں قائم ڈس ایبلڈ پیپلز انٹر نیشنل کے بین الاقوامی چیئر مین جاوید عابدی نے الیکشن کمیشن آف پاکستان ، وفاقی و صوبائی حکومتوں اور ارباب اختیار سے مطالبہ کیا ہے کہ ملک میں بلدیاتی انتخابات کے موقع پر مستند عالمی اعدادو شمار کے مطابق ملک کے 15 فیصدخصوصی افراد کو حق اظہار رائے کے استعمال کے لیے مناسب سہولتوں کی فراہمی یقینی بنائی جائے۔ وہ گذشتہ روزپی ڈی پی آئی کے صدر اور استنارہ گروپ کے سربراہ محمد مبین الدین، ایسوسی ایشن فار دی ری ہیبلیٹیشن آف ڈس ایبلڈ ای آر سی پی کے جنرل سیکریٹری محمد افضل الدین ، بلال احمد، ندیم و دیگر کے ہمراہ کر اچی پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا کے 15%افراد کسی نہ کسی معذوری سے متاثر ہیںیہ کڑوا سچ خصوصاً بر صغیر کے حکمرانوں کے حلق سے نہیں اترتا کیونکہ وہ انہیں معاشرے کا عضو معطل تصور کرتے ہیں ۔ دنیا کے ترقی یافتہ ممالک نے معذورین کے ووٹ بینک کی اہمیت کو ایک حقیقت کے طور پر تسلیم کیا ہے ۔ انہوں نے تعلیمی اداروں ، عبادت گاہوں ، لائبریریوں ، اسپتالوں اور دیگر حکومتی اداروں کی عمارات میں معذورین کی پہنچ کو یقینی بنانے کی حتی المقدور سعی کی ہے جس کے نتیجے میں حال ہی میں کینیڈا کی جمہوری حکومت میں دو خصوصی افراد کو بطور وزیر شا مل کیا گیا ہے۔ جاوید عابدی نے کہا کہ ہندوستان میں قوانین کے اعتبار سے کسی حد تک معذورین کی اشک شوئی ہوئی ہے لیکن سویلائزڈ ممالک میں شمولیت کے لیے ابھی بڑا کام باقی ہے ۔ ہما ری جدوجہد اس حوالے بدستور جاری ہے ۔ محمد مبین الدین نے کہا کہ خصوصی افراد ہما رے معاشرے کا ، کارآمد حصہ ہیں سہولتوں کی فراہمی کے ذریعے حوصلہ افزائی سے ہم عام لوگوں کی طرح ملکی بقاء ، سلامتی ، ترقی واستحکام کے لیے اپنا کردار ادا کر سکتے ہیں ۔مبین الدین نے بتایا کہپی ڈی پی آئی کا مقصد معذورین کے حوالے سے عوام الناس میں بیداری پیدا کرنا ہے ۔ہم اپنی کمیونٹی کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کے لیے کوشاں ہیںجب یہ رکاوٹیں دور ہو جائیں گی تو خصوصی افراد بھی بطور ووٹر تمام عمومی حقوق حاصل کر سکیں گے۔ اس سلسلے میں استنارہ گروپ بطور تھنک ٹینک ای نیوز لیٹر اور میگزین بھی شائع کرتا ہے۔

بچوں کا خصوصی مشاعرہ بدھ 4نومبر ایکسپو سینٹرکراچی میں منعقد ہوگا


karachi expo November 1, 2015 | 4:44 PM

ڈپٹی اسپیکر سندھ اسمبلی محترمہ شہلا رضا مہمانِ خصوصی ہوںگی۔
کراچی :( نیوزآن لائن): بچوں کے اردو رسالے ماہنامہ ساتھی کے زیرِ اہتمام مورخہء 4 نومبر بروز بدھ ایکسپو سینٹرکراچی میں بچوں کا کل پاکستان مشاعرہ منعقد ہوگا جس میں ڈپٹی اسپیکر سندھ اسمبلی محترمہ شہلا رضا خصوصی شرکت کریں گی۔مُلک میں اپنی نوعیت کے واحد بچوں کی محفلِ سخن میں ملک بھر سے اردو کے نامور شعرا ء کرام ، ادیب و دانشور حضرات شریک ہونگے جنمیں پروفیسر عنایت علی خاں ٹونکی ، مدیراعلیٰ روزنامہ جسارت اطہر ہاشمی، معروف ناول نگار جناب اشتیاق احمد،ڈرامہ نگار جناب ابن آس،سابق مدیر اردو ڈائجسٹ جناب اختر عباس ، معروف شاعرشام درانی و احمد حاطب صدیقی کے علاوہ سابق صدر ابلاغ عامہ جامعہ کراچی پروفیسر طاہر مسعود ،مدیرماہنامہ محترم نونہال مسعود احمد برکاتی ، سابق مدیر ماہنامہ آنکھ مچولی پروفیسر سلیم مغل ونئے شعرا ء شرکت کریں گے۔مذکورہ تقریب میں”ساتھی رائٹرز ایوارڈ برائے 2015″کا انعقاد بھی کیا جائے گا جسمیںنوجوان مصنفین، شعراء و مضامین نگار کو خصوصی ایوارڈز سے نوازا جائے گا۔تقریب میں ادبی ذوق رکھنے والوں کو دعوت عام ہے۔

سونے کی قیمت میں 100روپے کمی فی تولہ 46ہزار 800 کا ہو گیا


gold new October 18, 2015 | 3:55 PM

کراچی: سونے کی عالمی قیمتوں 100روپے کمی کے باعث فی تولہ 46ہزار 800 کا ہو گیا۔صرافہ ایسوسی ایشن کی جانب سے جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق ہفتہ کو پاکستانی مارکیٹس میں سونے کی تولہ قیمت 100 روپے کی کمی سے 46ہزار 800 اور 10 گرام 86 روپے گھٹ کر 40114 روپے ہوگئی جبکہ بین الاقوامی بلین مارکیٹ میں سونے کی قیمت 3 ڈالر کی کمی سے 1178 ڈالر فی اونس رہی اورچاندی کی قیمت معمولی بڑھ کر 16.02 ڈالر فی اونس رہی ۔

اردو دشمنوں نے انجمن ترقی اردو کے دستور کی دھجیاں بکھیر دی ہیں، ڈاکٹر جاوید منظر


PIC (1) October 18, 2015 | 2:27 PM

ہوسِ جاہ و منصب اور ذاتی مفادات کے لئے انجمن کے وقار کو بری طرح مجروح کیا گیا۔ جلد معتمد کی بدعنوانیوں سے پردہ فاش کروں گا
مشیرِ مالیات و نگراں ادبی و انتظامی امور معروف محقق، نقادوشاعر کی ادیبوں و شعراء اور اساتذہ اردو کے ایک نمائندہ وفد سے ملاقات میں گفتگو
کراچی(اسٹاف رپورٹر) انجمن ترقی اردو پاکستان کے مشیر مالیات و نگراں ادبی و انتظامی امور معروف محقق، نقاد و شاعر ڈاکٹر جاوید منظر نے کہا ہے کہ 3 اکتوبر کو کمشنر ہائوس کراچی میں منعقد ہونے والا مجلس نظماء کا اجلاس غیر قانونی تھا جس میں طے شدہ ایجنڈے کے خلاف رائے شماری کی گئی جبکہ مشیر مالیات / خازن اعزازی کے عہدے پر قانونی اور دستوری منظوری کے ساتھ مجلسِ نظماء نے 2017 تک مجھے مقرر کیا ہے۔ وہ گذشتہ روز اپنی رہائش گاہ پر ادیبوں، شعراء اور کالجوں و یونیورسٹیوں میں اردو کی درس و تدریس سے وابستہ پروفیسرز کے ایک نمائندہ وفد سے ملاقات میں اپنے تاثرات کا اظہار کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ نہ تو میرے خلاف کوئی شکایت سامنے لائی گئی ہے اور نہ ہی مجھے برطرف کیا گیا ہے۔ یہ بڑی حیرت اور جرأت کی بات ہے کہ میرے خازنِ اعزازی ہوتے ہوئے دوسرا خازن مقرر کردیا گیا۔ ڈاکٹر جاوید منظر نے کہا کہ اردو دشمنوں نے ہوسِ جاہ و منصب اور ذاتی مفادات کے لئے نہ صرف انجمن کے دستور کی دھجیاں بکھیری ہیں بلکہ انجمن ترقی اردو کے تاریخی پس منظر اور وقار کو بری طرح مجروح کیا ہے اور یہ تاثر دینے کی کوشش کی ہے کہ انجمن میں کوئی موروثی سلطنت قائم ہے۔ انجمن ترقی اردو پاکستان کے مشیر مالیات نے کہا کہ وہ عنقریب ایک عوامی پریس کانفرنس کرکے تمام تر حقائق سے پردہ اٹھائیں گے اور معتمد انجمن کی بدعنوانیوں کے ثبوت پیش کریں گے۔

پی ایس او کا کمپنیوں سے 111 ارب کے بقایا جات وصول کرنے کیلئے وزارت پٹرولیم سے مدد مانگ لی :


pso October 11, 2015 | 4:56 PM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن)پی ایس او کا کمپنیوں سے 111 ارب کے بقایا جات وصول کرنے کیلئے وزارت پٹرولیم سے مدد مانگ لی ۔تفصیلات کے مطا بق پی ایس او نے 111 ارب روپے کے پٹرولیم مصنوعات واپڈا ، پی آئی اے ، کیپکو، حبکو اور کے ای ایس سی کو فروخت کیں تھیں اور ان کے یہ بقایا جات 2011 سے چلے آرہے ہیں ادائیگیاں نہ ہونے کے باعث پی ایس او اور مختلف آئل ریفائنریز کو بھی 81 ارب روپے ادا نہیں کرسکا ہے،جس کے بعد پی ایس او کمپنیوں سے 111 ارب کے بقایا جات وصول کرنے میں ناکام ،وزارت پٹرولیم سے مدد مانگ لی ۔

ٹیکسٹائل صنعت کے لیے فوری ریلیف پیکج کا اعلان کیا جائے۔ عامر فیاض


LAHORE-APTMApunjabchairman-textileindustry_10-4-2015_199560_l October 4, 2015 | 3:57 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ ٹیکسٹائل صنعت کے لیے فوری ریلیف پیکج کا اعلان کیا جائے وچیئرمین اپٹما پنجاب زون عامر فیاض نے لاہور میں پریس کانفرنس کی اور اس دوران کہا کہ ٹیکسٹائل صنعت تباہی کے دہانے پر آچکی ہے۔ بحران کی بڑی وجوہات بجلی گیس کی عدم دستیابی اور بھاری ٹیکس ہیں۔ وہ کہتے ہیں کہ چند روز میں 15 بڑی ملیں بند ہوچکی ہیں اور مستقبل قریب میں مزید یونٹ بند ہونے کا خدشہ ہے۔ انہوں نے حکومت کو 15روز کا الٹی میٹم دیتے ہوئے کہا کہ اب ان کے پاس سڑکوں پر آنے کے سوا کوئی چارہ نہیں رہا۔

حکومت صحت اور تعلیم کی بہتر سہولیات فراہم کر نے کے لئے کوشاں ہے۔ جام مہتاب حسین ڈھر


jam mehtab September 27, 2015 | 3:49 PM

کراچی: (نیوزآن لائن) صوبائی وزیر صحت جام مہتاب حسین ڈھر نے کہا ہے کہ حکو مت سند ھ صوبے کے دیہی علاقوں کو بھی اعلیٰ تعلیم کے مواقع مہیا کر نے کے لیے کوشاں ہے اور سند ھ کے پسماندہ علاقوں میں آئی بی اے کے اعلیٰ تعلیمی معیار کے باعث ہونہار نوجوان ابھر کر سامنے آ رہے ہیں اور ملک اور قوم کا نام روشن کر رہے ہیں۔یہ بات انہوں نے عیدالاضحی کے دوسرے دن پبلک اسکول اباڑوکا دورہ کر تے ہوئے کہی۔ واضح رہے کہ پبلک اسکول اباڑو کے تعلیمی معاملات کو بہتر بنا نے کے لیے آئی بی اے کے ساتھ معاہدہ طے ہے۔ انہوں نے پبلک اسکول اباڑو میں جاری ترقیاتی کام کا بھی جائزہ لیا اور متعلقہ افسران کو ہدایت کی کہ ترقیاتی کاموں کو بر وقت مکمل کیا جائے تا کہ علاقے کے بچوں کو تعلیم کے اعلیٰ مواقع مُیسرآ سکیں۔ صوبائی وزیر صحت نے مزید کہا کہ آئی بی اے کے معیار کو بین الاقوامی سطح پر تسلیم کیا جاتا ہے اور ہماری کو شش ہے کہ تعلیم کے بہترین مواقع نوجوانوں کو مہیا کئے جا سکیں۔صوبائی وزیر صحت جام مہتاب حسین ڈھر نے کہا کہ صحت کے شعبے میں بھی انقلابی تبدیلیاں کی گئی ہیں اور سندھ بھر میں تمام سرکاری ہسپتالوں میں میڈیکل سپرنٹینڈنٹ اور دسٹرکٹ ہیلتھ افسران کو میرٹ پر تعینات کیا گیا ہے۔

محکمہ صحت سندھ اور یو ایس ایڈ کے درمیان جلد ایم یوپر دستخط کئے جائیں گے ۔ جام مہتاب حسین ڈھر


JAM-MEHTAB-DAHAR-e1349684005282-470x238 September 20, 2015 | 2:58 PM

کراچی :( نیوزآن لائن) صوبائی وزیر صحت جام مہتاب حسین ڈھر نے کہا ہے کہ محکمہ صحت سندھ یو ایس ایڈ کے تعاون سے یو ایس ایڈ کے پانچ سالہ ایم سی ایچ منصوبے کے تحت سندھ کے پندرہ اضلاع میں صحت کی سہولیات کو بہتر بنارہا ہے اور اکتوبر میں نظر ثانی مفاہمتی یاداشت ( ایم یو ) پر دستخط کئے جائیں گے ۔ یہ بات انہوں نے اپنے دفتر میں یو ایس ایڈ کے ایک وفد سے ملاقات کے دوران کہی۔ وفد میں آفس ڈائریکٹر یو ایس ایڈ جیکولین پروگرام ٹیم لیڈرمونیکااور ذوالفقار اے گورربھی موجود تھے۔ اس موقع پر صوبائی وزیر صحت کو بتایا گیا کہ یو ایس ایڈ ایم سی ایچ پروگرام کے تحت سندھ کے 15اضلاع ٹھٹھہ ، ٹنڈوالہیار ، دادئو، تھر پارکر ، خیرپور ، عمر کوٹ ، نوشہروفیروز ، سکھر ، شکارپور ، میرپور خاص ، مٹیاری ، گھوٹکی اور لاڑکانہ کی یونین کونسلز میںصحت کی بہتر سہولیات کی فراہمی کیلئے سرگرم عمل ہے ۔ صوبائی وزیر صحت نے وفد کو بتایا کہ سندھ میں نرسنگ نظام کو بہتر بنانے کیلئے نرسوں کی تعداد کو ہرسال 2000، بڑھانے کی ضرورت ہے اور اس سلسلے میں یو ایس ایڈ کا تعاون درکار ہے ،اس کے علاوہ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ شمالی سندھ میں دل کے مریضوں کو طبی سہولیات مہیا کرنے کیلئے ہسپتال کی بھی ضرورت ہے تاکہ نا صرف اس سے شمالی سندھ کے دل کے مریضوں کو فائدہ ہو گابلکہ کراچی پر بھی مریضوں کا بوجھ کم ہوگا اور یہ کام یوایس ایڈ کے تعاون سے پائیہ تکمیل ہوسکتا ہے۔ اس موقع پر وفد کے اراکین نے صوبائی وزیر صحت کو سندھ میں جاری اپنے منصوبوں کے بارے میں آگاہ کیا ۔

ڈینگی وائرس کے خلاف 5 اضلاع میں آگہی مہم


JAM-MEHTAB-DAHAR-e1349684005282-470x238 September 13, 2015 | 4:07 PM

کراچی: (نیوزآن لائن) صوبائی وزیر صحت جام مہتاب حسین ڈھر کی ہدایت پر ڈینگی وائرس کے خلاف آگہی مہم کے سلسلے میں ایک اہم اجلاس 14 ستمبر کو ڈائریکٹر جنرل صحت حیدرآباد کے دفتر میں ڈینگی کنٹرول پروگرام مینجر ڈاکٹر مسعود احمد سولنگی کی زیر صدارت ہوگا۔صوبائی وزیر صحت نے ڈینگی کنٹرول پروگرام مینجر کو ہدایت کی ہے کہ حیدرآباد، ٹھٹھہ، ٹنڈوالہ یار،سجاول اور میرپور خاص اضلاع میں ڈینگی وائرس کے خلاف آگہی مہم کو کامیاب بنانے کے لئے تمام اقدامات کئے جائیں۔ جام مہتاب حسین ڈھر نے مزید ہدایت کی ہے کہ ان اضلاع میں آگہی مہم کو کامیاب بنانے کے لئے ملیریا کنٹرول پروگرام اور متعلقہ میونسپل کارپوریشن کے ساتھ مربوط رابط رکھا جائے۔

کراچی میں غیر قانونی منڈیاںکانگو وائرس پھیلانے کا سبب بن سکتی ہیں ، گزشتہ برس کانگو وائرس سے گیارہ ہلاکتیں ہوئیں


x240-qkR August 30, 2015 | 4:31 PM

غیر قانونی مویشی منڈی کا رجحان فٹ پاتھوں اور عوامی گزر گاہوں تک پہنچنا، نا مناسب اوربلدیاتی اداروں کی نااہلی کا عملی ثبوت ہے
اب تک100 کے لگ بھگ غیر قانونی مویشی منڈیاں قائم ہو چکی ہیں : سروئیر آف کراچی
کراچی:(نیوزآن لائن)کراچی میں ہر سال معمول بنتا جا رہا ہے کہ قانونی مویشی منڈیوں کے بیوپاری اپنے کاروبار کو دوام بخشنے کے لئے قانونی طرز عمل اختیا ر کرنے کے ساتھ شہر بھر میں غیر قانونی مویشی منڈیوں میں اپنے جانور اور بالخصوص وہ جانور جو مکمل صحت مند نہ ہوں یا بیمارہوں چھوڑ دیتے ہیں تاکہ زیادہ سے زیادہ منافع سمیٹا جا سکے یہ جانور کھلے عام کراچی کی سڑکوں ، گلیوں ،محلوں میں بغیرہیلتھ سرٹیفیکٹ کے گھومتے یا قیام کرتے نظر آتے ہیں جو کہ کانگو جیسی موذی بیماری کا سبب بن سکتے ہیں، سروئیر آف کراچی کی سروئے ٹیم جو کہ احمد خان ، علی جعفری ، اور صلاح الدین احمد پر مشتمل تھی نے کراچی کے علاقوں اورنگی ٹاون ، نیو کراچی، لیاقت آباد ، لانڈھی، کورنگی ،ملیر کے سروے کے ساتھ ایشیا کی سب سے بڑی مویشی منڈی جو کہ سپر ہائی وے پر موجود ہے کا سروے کیا اور اس دوران بیوپاریوں سے جو معلومات حاصل ہوئیںوہ سنسنی خیز ہونے کے ساتھ کراچی کی عوام کی صحت کے اعتبار سے لمحہ فکریہ تھیں، بیوپاریوں کے مطابق تمام قانونی مویشی منڈیوں میںجانور کا بڑا کاروبارکرنیوالوں کے جانورچاہے وہ کتنا ہی بیمار کیوں نہ ہو کسی نہ کسی طریقے سے بیچ کر جاتے ہیںاس کے لئے وہ اپنے بیمار جانور وں کو کراچی کے مختلف مقامات با لخصوص لاندھی اور ملیر کی غیر قانونی منڈیوں میں فروخت کرنے کے لئے بھیج دیتے ہیں ، ان بیمار جانوروں کو زندہ رکھنے کے لئے مخصوص ویکسی نیشن کی جاتی ہے جس سے وہ ایک ہفتے سے 15 دن تک صحت مند نظر آتے ہیں، فوری طور پر موت کی جانب گامزن جانوروں کومناسب داموں میں قصابوں کے حوالے کر دیاجاتا ہے ، سروئیر آف کراچی کی ٹیم کے مطابق اس وقت کراچی میں غیر قانونی مویشی منڈیوں کی تعداد سو سے زائد ہے جو کہ مزید بڑھے گی اس طرح کانگو وائرس کے پھیلنے کے بہت امکانات موجود ہیں کیونکہ یہ جان لیوا وائرس جانوروں کو ہاتھ لگانے کے علاوہ ان کے فضلے سے بھی پھیل سکتا ہے اس لئے میویشی منڈیوں کا رخ کرنے والے احتیاطی تدابیر لازمی اختیار کریں ، مویشی منڈی سے واپسی پر اینٹی بیکٹیریل صابن سے لازمی نہائیں ،جبکہ غیر قانونی مویشی منڈیاں لگوانے میں ضلعی انتظامیہ کے ساتھ بلدیاتی انتظامیہ برابر کی ذمہ دار ہے ابھی وقت ہے لہذا متعلقہ محکمہ جات فوری طور پر اسکا سدباب کریں ورنہ خدا نخوستہ کانگو سمیت بیمار جانوروں سے منتقل ہونے والے وائرسز سے عوام کو کسی قسم کی مشکل کا سامنا نہ کرنا پڑے

بہترین ماحولیاتی سرگرمیوں پر 56کمپنیوں کو انوائرنمنٹ ایکسی لینس ایوارڈز دیئے جائیں گے


unnamed August 23, 2015 | 5:49 PM

نیشنل فورم کے تحت 12ویں سالانہ ایوارڈز کی تقریب 27اگست کو مقامی ہوٹل میں ہوگی
کراچی:(نیوزآن لائن)بہترین ماحولیاتی سرگرمیوں ، انتظامات ، ماحولیاتی معیار کو کنٹرول کرنے، شجر کاری اور آلودگی کے خاتمے کی معیاری کوششوں پر پورے ملک سے56منتخب صنعتی و تجارتی اداروں کو نیشنل فورم فار انوائرنمنٹ اینڈ ہیلتھ (این ایف ای ایچ) کی جانب سے بارہویں انوائرنمنٹ ایکسی لینس ایوارڈز دیئے جائیں گے۔ ایوارڈ کی تقریب اور ماحولیات کے حوالے سے سیمینار 27اگست 2015کوکراچی کے مقامی ہوٹل میں ہوگا ۔ یہ بات فورم کے صدر محمد نعیم قریشی نے مقامی ہوٹل میں ایوارڈ کی جیوری کے حتمی اجلاس کے بعد بتائی۔تین رکنی جیوری کے فیصلے کے مطابق آدم جی انشورنس کمپنی، افروزٹیکسٹائل، ایشین فوڈ انڈسٹریز، بی ۔آر۔آر مداربا،بیسٹ وے سیمنٹ(فاروقیہ)، بیسٹ وے سیمنٹ (چکوال)، بیسٹ وے سیمنٹ(ہتار)، ڈالڈا فوڈز، ڈائولینس گروپ آف کمپنیز، ڈریم ورلڈ ریزوٹ، ڈان بریڈ، ڈیسکن انجنیئرنگ ، ڈاکڑ عیسی لیب،فوجی سیمنٹ کمپنی،فوجی فرٹیلائزر بن قاسم، فوجی فرٹیلائزر کمپنی،فوجی آئل ٹرمینل اینڈ ڈسٹری بیوشن کمپنی، فائونڈیشن ہسپتال، غنی انجنیئرنگ ، گولڈن پولی ٹیک، ہائر اینڈ روبا پاکستان، انٹرنیشنل انڈسٹریز لمیٹڈ، کراچی میریٹ ہوٹل ، کے ۔الیکٹرک، کیپکو کوٹ اددو پاور کمپنی، کے ایس بی پمپس کمپنی، لوٹے کیمیکل پاکستان، لکی سیمنٹ، میسک، میما نٹس، مغل آئرن اینڈ اسٹیل، نیشنل ریفائنرلمیٹڈ، نووارٹس فارما پاکستان، نست، آئل اینڈ گیس ڈیولپمنٹ کمپنی، پاک عرب ریفائنری، پروکٹل اینڈ گیمبل پاکستان، پاک سیم لمیٹڈ، پاکستان کیبلز لمیٹڈ، پاکستان انٹرنیشنل بلک ٹرمینل لمیٹڈ، پاکستان آئل فیلڈ لمیٹڈ، پاکستان آئل فیلڈز، پٹیل ہسپتال، پیپبل لمیٹڈ، قرشی انڈسٹریز لمیٹڈ، رفحان میز پروڈکٹس کمپنی، روٹس اسکول سسٹم، صدیق لیدر ورکس، سوئی نادرن گیس پائپ لائنز، سوئی سدرن گیس کمپنی،یونائٹیڈ میرین ایجنسی، یونائٹیڈ کنگ، واٹر ریجائم کو سال 2014-15کیلئے ایوارڈز کیلئے منتخب کر لیا گیا ہے۔یہ تقریب گزشتہ11 سال سے منعقد کی جا رہی ہے ۔ اس سال186 اداروں نے اپنی نامزدگیاں ایوارڈ کیلئے ارسال کی تھیں۔ آئل اینڈ گیس ڈیولپمنٹ کمپنی، پاک عرب ریفائنری ، بیسٹ وے سیمنٹ، آدم جی انشورنس نے اسے اسپانسر کیا ہے۔تقسیم ایوارڈز کی پروقار تقریب 27اگست 2015کوکراچی کے مقامی ہوٹل میں منعقد ہوگی۔تقریب میں ماہرین ماحولیات سماجی و سیاسی شخصیات ، وزراء اور اداروں کے سربراہان شریک ہوں گے۔

حکومت سے کہ ذوالفقار آباد آئیل ٹرمینل میں فوری طور پر سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے، اقبال خان جہا نگیری


oil August 23, 2015 | 5:46 PM

ضلعی و صو بائی انتظامیہ کو چاہیے کہ وہ آئیل کی بڑی کمپنیوں کے نمائندوں اور اس سے متعلق تمام اداروں کے سر براہان کا ایک مشتر کہ اجلاس طلب کرے
ٹرمینل میںبنیادی سہولیات کی فراہمی سیکورٹی کے فول پرف نظام ،ہوٹلز ،پارکنگ ،شاپس اور دیگر سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے اقدامات ضروری ہیں،ہنگامی اجلاس سے خطاب
کراچی :( نیوزآن لائن) آل پاکستان مشتر کہ آئیل ٹینکرز اونرز ایسوسی ایشن کے مرکزی چیئر مین اقبال خان جہا نگیری نے کہا کہ سپریم کورٹ آف پاکستان کا ہر حکم سر انکھوں پرلیکن گذشتہ دنوں شیرین جناح کالونی سے فی الفور آئیل ٹینکرز ہٹا نے کے حکم سے مسائل میں اضا فہ ہو گا اس حوالے سے ضلعی و صو بائی انتظامیہ کو چاہیے کہ وہ آئیل کی بڑی کمپنیوں کے نمائندوں اور اس سے متعلق تمام اداروں کے سر براہان کا ایک مشتر کہ اجلاس طلب کرے اور بڑی آئیل کمپنیوں پی ایس او ،کالٹکس ،شیل ،بائیکو ،ہسکول و دیگر نمائندوں کی مشاورت سے پہلے وہاں پر ذوالفقار آئیل ٹرمینل میںبنیادی سہولیات کی فراہمی سیکورٹی کے فول پرف نظام ،ہوٹلز ،پارکنگ ،شاپس اور دیگر سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے اقدامات ضروری ہیں اس لئے کمشنر کراچی سے گذارش ہے کہ وہ اس مسئلہ کو سنجیدگی سے حل کریں کیو نکہ اس وقت بھی ذوالفقار آباد ٹرمینل سے ہی 75%گاڑیاں لوڈ اُٹھاتی ہیں جبکہ25%گاڑیاں جو کہ کیماڑی سے لوڈ اُٹھاتی ہیں اُس میں پٹرول ،کیمیکل اور نیٹو سپلائی ،GP8اورGP4کے علاوہ کھا نے کا آئیل وہی گاڑیاں شہر میں داخل ہو تی ہیں اگر فی الفور متبادل جگہ دئیے بغیر آئیل ٹینکرز کو روکا گیا تو نہ صرف اندرون سندھ ،پنجا ب بلکہ پورے پاکستان میں پٹرولیم مصنوعات کی ترسیل روک جائیگی ۔اجلاس میںآل پاکستان مشتر کہ آئیل ٹینکرز اونرز ایسوسی ایشن کے وائس چیئر مین رحیم خان یوسفزئی ،سینئر نائب صدر نثار خان ،صدر جمیل خان ،نوران شاہ ،اشرف تنولی ،راجہ بصیر سیکرٹری فنانس ،غلام بنی جو کھیو ،عبدالجبار سو مو ،تاج محمد جو کھیو ۔و دیگر ممبران کی بڑی تعداد موجود تھی آل پاکستان مشتر کہ آئیل ٹینکرز اونرز ایسوسی ایشن کے مرکزی چیئر مین اقبال خان جہا نگیری نے کہا کہ فی الفور انتظامیہ آئیل ٹینکرز کو شیرین جناح کالونی سے ہٹا نے کے بجائے پہلے ذوالفقار آباد میں سہولیات کی فراہمی پر تو جہ دے اور ایک اجلاس طلب کر کہ اس میں مسائل پر تبادلہ خیال کے بعد قدم اُٹھایا جائے تو کسی بھی قسم کا کوئی مشکلات درپیش نہیں ہو نگی کیو نکہ اس وقت ذوالفقار آباد میں کسی قسم کی کوئی بھی بنیاد سہولت موجود نہیں ہے جس سے آئیل ٹینکرز شفٹ ہو ں حکومت تعاون کرے اور اس پر تھوڑا وقت دیکر اقدمات کرنے پرتو جہ دے انھوں نے کہا کہ ہم اپیل کرتے ہیں حکومت سے کہ ذوالفقار آباد آئیل ٹرمینل میں فوری طور پر سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے تا کہ ٹینکرزاونرز کو مشکلات پیش نہ آئیں ۔

چین پاکستان اقتصادی راہداری کے تحت پاکستان میں توانائی کے حالیہ بحران پر قابو پانے میں مدد ملے گی


1439712504_1439710481_g August 16, 2015 | 4:36 PM

اسلام آباد(نیوزآن لائن)چین پاکستان اقتصادی راہداری معاشی ترقی کی ایک پٹی ہے یہ اقتصادی راہداری دونوں ملکوں کے درمیان اہم شعبوں میںپا کستان میں توانائی کے حالیہ بحران پر قابو پانے میں مدد ملے گی۔سرکاری ذرائع کے مطابق اقتصادی راہداری سے نہ صرف دونوں ملکوں بلکہ خطے کے دوسرے ملکوں کو بھی فائدہ پہنچے گا۔یہ اقتصادی راہداری دونوں ملکوں کے درمیان اہم شعبوں میں تعاون پر مبنی اقدامات اور منصوبوں کا جامع پیکج ہے۔ جس میں اطلاعات نیٹ ورک، بنیادی ڈھانچے، توانائی، صنعتیں، زراعت، سیاحت اور متعدد دوسرے شعبے شامل ہیں۔

سینئر ڈاکٹرز سرکاری اسپتالوں میں اپنے فرائض ایمانداری سے انجام دیں۔ جام مہتاب حسین ڈھر


JAM-MEHTAB-DAHAR-e1349684005282-470x238 August 16, 2015 | 4:21 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)صوبائی وزیر صحت جام مہتاب حسین ڈھر نے کہا ہے کہ سرکاری اسپتالوں میں ڈاکٹرز خاص کر سینئر ڈاکٹرز بشمول اسپیشلسٹ ڈاکٹرز کی حاضری کو یقینی بنایا جائے تاکہ سرکاری اسپتال آنے والے مریضوں کو دشواری کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ یہ ہدایات انہوں نے اپنے دفتر میں ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے اسپیشل سیکریٹری صحت ریاض میمن کو دی۔ انہوں نے کہا کہ یہ شکایات عام ہیں کہ سینئر داکٹرز سرکاری اسپتالوں میں مناسب وقت نہیں دیتے بلکہ نجی اسپتالوں یا اپنے پرائیویٹ کلینکس پر زیادہ وقت دیتے ہیں۔ صوبائی وزیر صحت نے کہا کہ حکومت ان ڈاکٹرز کو بہت مناسب تنخواہیں دیتی ہے لہذا ان کی ذمہ داری ہے کہ وہ اپنی ذمہ داریوں کو احسن طریقہ سے پورا کریں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت سندھ اربوں روپے صحت کے شعبہ میں خرچ کر رہی ہے اور اس کے ثمرات عام آدمی تک آنا چاہئے۔ اس موقع پر صوبائی وزیر صحت جام مہتاب حسین ڈھر نے کہا کہ لیڈی ہیلتھ وزیٹرز کی تنخواہیں آن لائن کردی گئی ہیں اور ان کی تقرریوں میں حائل رکاوٹوں کو بھی دور کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ لیڈی ہیلتھ وزیٹرز کی خدمات اور اہمیت سے انکار ممکن نہیں اور ہمیں ان کے مسائل کا اندازہ ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ صحت کا شعبہ وسیع ہے اور اس کی اصلاح کے لئے ہر ممکن کوشش کی جارہی ہے۔ جس کے اثرات بتدریج سامنے آرہے ہیں۔

ملک بھر کے نام نہاد بچت بازاروں میں ایشائے خوردونوش کی قیمتوں میںاضافہ


commodities90 August 9, 2015 | 3:39 PM

کراچی:(نیوزآن لائن) بچت بازاروں میں ایشائے خوردونوش کی قیمتوں اضافہ کے باعث شہریوں کو خریداری میں پریشانی کا سامنا کرنا پر رہا ہے۔عوام کو ریلیف فراہم کرنے کے لیے حکومت کی طرف سے لگائے گئے بچت بازاروں میں ایشائے خوردونوش کی فروخت انتہائی مہنگے داموں میں کی جارہی ہے۔ عوام کا کہنا ہے کہ ضرورت صرف کی چیزیں خریدنے سے قاصر ہیں، حکومت کے عوام کو ریلیف فراہم کرنے کے دعوی بے بنیاد ہیں۔