: تازہ ترین

تازہ ترین ویڈیو

گیس کے کم پریشر سے ایکسپورٹ مصنوعات کی تیاری بری طرح متاثر ہو ر ہی ہے ،یوسف یعقوب پر نس


gas pressure slow in pakistan December 30, 2018 | 6:56 PM

گیس پریشر میں کمی جاری رہی تو کئی ایکسپورٹرز خسارے کی وجہ سے انڈسٹریز بند کرنے پر مجبور ہو جائیں گے
گیس کے کم پریشر کی وجہ سے کراچی کی ٹیکسٹائل انڈسٹریز ایک بحرانی کیفیت کا سامنا کر رہی ہے
پاکستان وونگ ملز ایسوسی ایشن کے موجودہ سینئر صدر اورسائٹ ایسوسی ایشن آف انڈسٹری کے سابق وائس چیئرمین کا اظہار خیال
کراچی: (نیوزآن لائن)پاکستان وونگ ملز ایسوسی ایشن کے موجودہ سینئر صدر اورسائٹ ایسوسی ایشن آف انڈسٹری کے سابق وائس چیئرمین یوسف یعقوب پر نس نے روزانہ گیس کے کم پریشر کی وجہ سے ایکسپورٹ مصنوعات کی تیاری بری طرح متاثر ہو ر ہی ہے ،اگر اس سنگین بحرانی صورتحال پر قابو نہ پایا گیا اور گیس پریشر میں کمی جاری رہی تو کئی ایکسپورٹرز بڑے خسارے کی وجہ سے اپنی انڈسٹریز کو بند کرنے پر مجبور ہو جائیں گے۔گزشتہ روز اپنے ایک جاری کردہ بیان میں یوسف یعقوب پر نس نے کہا کہ دسمبر میں گیس کی بندش کے علاوہ روزانہ گیس کے کم پریشر کی وجہ سے ایکسپورٹ مصنوعات کی تیاری بری طرح متاثر ہوئی ہے، گیس کے کم پریشر کی وجہ سے کراچی کی ٹیکسٹائل انڈسٹریز ایک بحرانی کیفیت کا سامنا کر رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ خطے میں مسابقتی ممالک کی نسبت پاکستان میں منیوفیکچرنگ کی لاگت میں ہوشربا اضافے کی وجہ سے پاکستانی ایکسپورٹرز پہلے ہی انتہائی کم منافع پر کام کررہے ہیں۔ گیس کے کم پریشر کی وجہ سے بجلی پیدا کرنے والی جنریٹرز بار بار بند ہو جاتے ہیں جس کی وجہ سے مشینری اور دیگر الیکٹریکل و الیکٹرونک آلات میں خرابی پیدا ہو جاتی ہے اور کئی آلات کو شدید نقصان پہنچتا ہے اور اکثر ناقابل استعمال ہو جاتے ہیں جس سے ایکسپورٹرز کی سرمایہ کاری پر شدید ضرب پڑتی ہے اورنقصانات کئی گنا بڑھ جاتے ہیں۔ مشینری اور آلات میں خرابی کے باعث لیبر بیکار بیٹھتی ہے اور اس طرح ایک شفٹ اور کئی مرتبہ دو شفٹیں متاثر ہو رہی ہیں۔