: تازہ ترین

تازہ ترین ویڈیو

کے الیکٹر ک کا کراچی کے صارفین پر مزید بوجھ ڈالنا ناقابل قبول ہے، وزیراعظم نوٹس لیں ۔ عمر غوری


Picture Urdu Caption March 16, 2015 | 3:00 PM

کراچی:(نیوزآن لائن)عالمی یومِ صارفین2015 کے دن کے موقع پر زینب مارکیٹ سے کراچی پریس کلب تک واک کے اختتام پر میڈیا کے نمائندوںسے گفتگوکرتے ہوئے چیئر مین کنزیو مرس آئی پاکستان عمر غوری نے وزیراعظم پاکستان او ر وزیر اعلیٰ سندھ سے کے الیکٹر ک کی جانب سے صارفین پر فیول ایڈجیسٹمنٹ مد میں اضافی بوجھ سے نجات کے لیے نیپرا پر دبائو ڈالنے کا مطالبہ کیا ہے واک کا اہتمام کنزیو مرس آئی پاکستان،کنزیومر وائس پاکستان اور نیشنل سٹیزن فورم کی جانب سے مشترکہ طور پرکیا تھا۔ انھوں نے کہا کہ کے الیکٹر ک نے مبینہ طور پرصارفین کے بلوںمیں اضافہ کے لیے نیپرا کو سمری بھیجی ہے ۔جس پر 19مارچ کو فیصلہ متوقع ہے جو صارفین پر ظلم کے مترادف ہوگا صارفین پہلے ہی بلوں میں اضافہ کی مدمیںبھاری رقم ادا کر رہے ہیں۔ عمر غوری نے اس بات پر اپنی شدید تشویش کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا براہ راست فائدہ صارفین کو نہیں پہونچ رہا۔انہوںنے خبردارکیا کہ قیمتوں میں اضافہ کسی صورت قبول نہیں کیا جائے گااور کنزیو مرس آئی پاکستان،کنزیومر وائس پاکستان اور نیشنل سٹیزن فورم کی جانب سے اس پر بھرپور احتجاج کیا جائے گاچیئر مین کنزیو مرس آئی پاکستان عمر غوری نے وزیر اعلیٰ پنجاب شہبازشریف کی جانب سے گھی کی قیمتوں میں کمی کرانے کے لیے ان کے اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا کہ فی کلو15روپے کمی کو صارفین کے لیے اچھی خبر قرار دیا جس سے عام لوگو ں کو ریلیف ملے گا ۔ واک سے قبل شہرکے مختلف علاقوں میں عوامی شعور آگہی کے لیے صبح سے ہی مظاہرے منعقد کیے گئے جن میںصدر، ایمپریس مارکیٹ ، مزار قائد،اسلامہ کالج چورنگی،ایکسپوسینٹر، سیوک سینٹر ، ناظم آباد،فیڈرل بی ایر یا ، عائشہ منزل، نیوکراچی اور گلشن اقبال اتوار بازار شامل ہیں جہاںعالمی یومِ صارفین کے حوالے سے تشہیر ی مواد تقسیم کیا گیا جس میں عوام الناس نے اپنی بھر پور دلچسپی کا اظہار کیا۔ عمر غوری نے واک کے اغراض و مقاصد کے بارے میں بتایا کہ واک میںشامل تمام این جی اوس متحد ہو کر پاکستانی صارفین کے ساتھ ہونے والی ہر نا انصافی کے خلاف مشترکہ طور پر جدوجہد کریں گی اور پاکستانی بازاروں میں فروخت ہونے والی ملاوٹ شدہ۔ غیر رجسٹرڈ اور جعلی اشیاء کی تیاری اور درآمد بند کرائینگے۔کیونکہ یہ پاکستان کے عام لوگوں کی صحت و زندگی کا سوال ہے۔ عمر غوری نے صحافیوں کی سپورٹ اور ان کی صارفین کیلئے خدمات کو سراہتے ہوئے بھر پور خراجِ تحسین پیش کیا۔ انہوں نے کہا کہ عالمی صارفین کا دن ہر سال 15 مارچ کو تمام دنیا میں منایا جاتا ہے ۔ اس دن کو منانے کامقصد صارفین کو ان کے حقوق کے بارے میں خصوصی طور پر آگاہی دینا اور ان میں اپنے حقوق کے بارے میں شعور و آگہی پیدا کرناتھا ۔ چیئر مین ٹی سی ای پی عمر غوری نے اعلان کیا کہ سند ھ پروٹیکشن بِل کی منظوری کے تناظر میں” کنزیومر آئی پاکستان ،کنزیومر پرڈکٹس اینڈ سروسز کوالٹی کانفرنس “2015 کا انعقاد ورلڈکنزیومر رائٹس ڈے 2015 کے حوالے سے کررہی ہے جس میں پُورے پاکستان سے صارفین کے حوالے سے دلچسپی رکھنے والے زعمائ۔ کارپوریٹ سیکٹر کی شخصیات ، میڈیا کے نمائندے اور کنزیومر کے حوالے سے کام کرنے والی سرکاری آرگنائزیشنز شرکت کریں گی یہ کانفرنس نہ صرف مُلکی سطح پر شعورو آگہی کا ایک بڑا پلیٹ فارم ثابت ہوگی بلکہ بین الاقوامی سطح پر بھی پاکستان کا تشخص اُجاگر کرنے میں ممدومعاون ثابت ہوگی۔اِس موقع پر واک سے خطاب کرتے ہوئے کنزیومر وائس پاکستان کے صدر راسم خان نے سندھ کنزیومر پروٹیکشن بِل کی منظوری کو سندھ کی تاریخ میں ایک سنگ میل قرار دیا۔انھوں نے کہا کہ اِ س بِل کی منظوری سے سندھ میں صارفین کی شکایات کے ازالہ کیلئے صوبے بھر میں کنزیومر کورٹ قائم کی جائیں گی اور اِس قانون کے تحت اشیاء و مصنوعات کی فروخت کے سلسلے میں کسی بھی تا جر یا کسی بھی دوسرے شخص کی جانب سے جھوٹی یا گمراہ کُن تشہیرپر قانون کے تحت تادیبی کاروائی ممکن ہوسکے گی خواہ تشہیر کیلئے وال چاکنگ ، سائن بورڈ، نیون سائن، پمفلیٹ کی تقسیم و اشاعت یا الیکٹرونک میڈیا کا سہارا لیا گیا ہوبِل کے بارے میں مزید معلومات دیتے ہوئے راسم خان نے کہا اِ س قانون کے تحت ایسی غیر معیاری اشیاء اور مصنوعات کی فروخت پر بھی کاروائی کے جائے گی جن پر انعامات یا دوسری مفت اشیاء کا لالچ دیا گیا ہو مزیداِ س قانون کے تحت اگر اشیا ء یا مصنوعات میں ملاوٹ یا ردوبدل پایا گیا تو سخت قانونی کاروائی ممکن ہو سکے گی ۔راسم خان نے صارفین سے درخواست کی کہ وہ اِس قانون سے بھر پور استفادہ کریں اور کسی بھی مشکل کی صورت میں کنزیومرس آئی پاکستان یا کنزیومروائس پاکستان ہیلپ لائن سروس سے ُرجوع کریں۔ واک سے خطاب کرنے والوں میںچیئر مین نیشنل سٹیزن فور م پاکستان کے سّید اقبال شہاب بھی شامل تھے ۔واک میں کثیر تعداد میں والنٹیرز نے شرکت کی ۔