: تازہ ترین

تازہ ترین ویڈیو

محکمہ ایکسائز سندھ نے گزشتہ سات ماہ میں 43017 ملین روپے سے زائد ٹیکس وصول کرلیا۔ مکیش کمار چاولہ۔


excise-taxation_lpic-0408 February 10, 2019 | 8:44 PM

کراچی :( نیوزآن لائن) صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسدادِ منشیات اور پارلیمانی امور مکیش کمار چاولہ نے کہا ہے کہ محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسدادِ منشیات نے رواں مالی سال کے دوران جولائی 2018 سے جنوری 2019 تک مختلف ٹیکسز کی مد میں مجموعی طور پر 43017.962 ملین روپے ٹیکس وصول کیا ہے جبکہ گزشتہ مالی سال کے دوران اسی مدت میں 36764.592 ملین روپے ٹیکس وصول کیا گیا تھا۔ یہ بات انہوں نے اپنے دفتر میں منعقد ہونے والے ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس میں سیکریٹری ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسدادِ منشیات عبد الرحیم شیخ ڈائریکٹر جنرلز شبیر احمد شیخ ، شعیب احمد صدیقی اور دیگر ڈائریکٹرز نے بھی شرکت کی۔ اجلاس کو بریفننگ دیتے ہوئے ڈائریکٹر جنرل ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن شبیر احمد شیخ نے بتایا کہ موٹر وہیکل ٹیکس کی مد میں مجموعی طور 4483.533 ملین روپے وصول کئے گئے جبکہ انفراسٹرکچر سیس کی مد میں 33557.127 ملین روپے وصول کئے گئے۔ انہوں نے مذید بتایا کہ پروفیشنل ٹیکس کی مد میں 270.363 ملین روپے ، کاٹن فیس کی مد میں 154.771 ملین روپے ، جائیداد ٹیکس کی مد میں 1455.407 ملین روپے اور انٹرٹینمنٹ ڈیوٹی کی مد میں 37.146 ملین روپے وصول کئے گئے جبکہ دیگر رقم دیگر ٹیکسز کی مد میں وصول کی گئی۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسدادِ منشیات اور پارلیمانی امور مکیش کمار چاولہ نے جائیداد ٹیکس کی وصولی کی صورتحال کو بہتر بنانے کی ہدایت کی اور کہا کہ اس شعبے پر خصوصی توجہ کی ضرورت ہے۔ اس موقع پر ڈائریکٹر جنرل ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن شبیر احمد شیخ نے صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسدادِ منشیات اور پارلیمانی امور مکیش کمار چاولہ کو بتایا کہ جائیداد ٹیکس کی وصولی کے لئے حکمت عملی طے کر لی گئی اور اس سلسلے میں ٹیمیں بھی تشکیل دیدیں گئیں اور جلد اس کے مثبت نتائج سامنے آئیں گے۔ صوبائی وزیر مکیش کمار چاولہ نے مذید کہا کہ ان افسران کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے جو ٹیکس اہداف کی وصولی میں ناکام ہورہے ہیں۔