: تازہ ترین

تازہ ترین ویڈیو

عمران فاروق قتل کیس: متحدہ کے سربراہ الطاف حسین کے خلاف مقدمہ درج


doctor imran farooq December 5, 2015 | 6:24 PM

اسلام آباد:(نیوزآن لائن)عمران فاروق قتل کیس میں ایم کیو ایم کے سربراہ الطاف حسین کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیاجبکہ ایف آئی آر میں افتخار حسین کوبھی مقدمے میں نامزدکیا گیا ہے۔ ایف آئی اے کے انسداد ددہشت گردی ونگ نے وفاق کی مدعیت میں ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کر لیا۔ ایف آئی آر میں ایم کیو ایم کے سینئر رہنما محمد انور، افتخار حسین، معظم علی خان، خالد شمیم، کاشف خان ، کامران اور سید محسن علی کو بھی نامزد کیا گیا ہے۔ ملزمان پر قتل کی سازش، معاونت، اعانت جرم اور قتل سمیت انسداد دہشت گردی کی دفعات درج کی گئی ہیں۔ ان دفعات میں تین سو دو، دفعہ چونتیس، ایک سو نو اور ایک سو بیس بی کے ساتھ ساتھ سیون اے ٹی اے شامل ہیں۔یہ مقدمہ گرفتار ملزمان سے تفتیش کرنے والی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی رپورٹ کی روشنی میں وزارت داخلہ کی ہدایت پر ایف آئی اے کے انسداد دہشت گردی ونگ میں درج کیا گیا ہے۔ اس ونگ کو تئیس ستمبر کے ایک نوٹیفکیشن کے ذریعے پولیس اسٹیشن کا درجہ دیا گیا تھا جسے دہشت گردی، دہشت گردی میں معاونت، منی لانڈرنگ اور سائبر کرام سمیت دیگر خصوصی اختیارات حاصل ہیں۔دوسری جانب پاکستان نے الطاف حسین ، محمد انور، افتخار حسین تک رسائی مانگ لی جس کے لئے برطانوی حکومت کو باقاعدہ درخواست دی گئی۔ درخواست میں مطالبہ کیا گیا عمران فاروق قتل کیس میں الطاف حسین سمیت نامزد ملزموں سے تفتیش کی اجازت دی جائے۔درخواست میں برطانیہ سے تفتیشی مواد کی فراہمی اور عمران فاروق کی بیوہ سے پوچھ گچھ کی اجازت کا بھی مطالبہ کیا۔ ذرائع کے مطابق برطانیہ نے پاکستان کو مکمل تعاون کی یقین دہانی کرا دی اور آئندہ ہفتے پاکستانی تفتیشی ٹیم سکاٹ لینڈ یارڈ کا دورہ کر سکتی ہے،یاد رہے کہ ڈاکٹر عمران فاروق کو لندن میں سولہ ستمبر دو ہزار دس میں قتل کردیا گیا تھا۔