: تازہ ترین

تازہ ترین ویڈیو

صدر پی ٹی آئی سندھ امیر بخش بھٹو کی صدارت میں اتوار کی شام انصاف ہائوس کراچی میں سندھ کی نو منتخب عہدیداروں کا اہم اجلاس


PTI SINDH IJLAS PICS (1) November 25, 2018 | 7:21 PM

جلد سندھ کے تفصیلی دورے کے شیڈول کا اعلان کروں گا، تمام عہدیداران بلدیاتی نشستوں پر ضمنی انتخابات کی تیاری میں فعال کردار ادا کریں، امیر بخش بھٹو
سندھ اس وقت تحریک انصاف کے حق میں ہے ، انشااللہ جلد ہی سندھ میں پیپلز پارٹی اور زرداری مافیا سے عوام کو نجات ملنے والی ہے
کراچی :( نیوزآن لائن) پاکستان تحریک انصاف سندھ کے صدر امیر بخش بھٹو کی صدارت میں اتوار کی شام انصاف ہائوس کراچی میں سندھ کی نو منتخب عہدیداروں کا اہم اجلاس ہوا۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے امیر بخش بھٹو نے کہا کہ ان عہدوں پر فائز ہونا ہم سب کے لئے باعث فخر اور اعزاز ہے لیکن ان عہدوں کے ساتھ بہت بڑی ذمہ داری بھی ہمارے کندھوں پر آتی ہے اور ہمارا فرض بنتا ہے کہ پارٹی کے ساتھ سچائی، وفاداری اور ایمانداری کی مثال قائم کرتے ہوئے اپنی قابلیت اور صلاحیت بروے کار لاتے ہوئے ملک عوام اور پارٹی کے مفادات کی خدمت کریں ۔ انہوں نے کہا کہ میں تمام عہدیداروں سے جلد ہی بہتر کارکردگی دکھانے کی توقع رکھتا ہوں کہ پارٹی کو تمام عہدیدار اپنی اپنی ذمہ داری نبھاتے ہوئے پارٹی کو منظم اور فعال کرنے میں اہم کردار ادا کریں گے۔میں تمام سندھ کے عہدیداروں کو نہ ہی آرام سے بیٹھنے دوں گا اور نہ ہی خود بیٹھوں گا اور تمام عہدیداروں کی کارکردگی پر گہری نظر رکھتے ہوئے آپکے ساتھ شانہ بشانہ پارٹی کو فعال اور منظم بنانے کے لئے آپ کے ساتھ محنت کروں گا۔تنظیمی معاملات میں کمزوری اور کوتاہی ہوئی تو فورا عہدیدار کو فارغ کرنے سے گریز نہیں کروں گا۔ انہوں نے اجلاس میں موجود تمام عہدیداروں سے گذارش کی کہ وہ بلدیاتی نشستوں پر ضمنی انتخابات کی تیاری میں فعال کردار ادا کریں۔ انہوں نے کہا کہ میں جلد سندھ کے تمام اضلاع کے تفصیلی دورے کے شیڈول کا اعلان کروں گا۔ مجھے پارٹی میں نئے آنے واے لوگوں سے ملوایا جائے اور معزز شخصیت کو پی ٹی آئی میں شمولیت کے لئے قائم کیا جائے۔ انہوں نے صوبائی اور ڈویژنل عہدیداروں کو ہدایت کی ہے کہ ضلع تنظیم اور پارٹی کی مختلف ونگز کے حوالے سے جلد از جلد مجھے رپورٹ پیش کریں۔ سندھ اس وقت تحریک انصاف کے حق میں ہے اور میدان خالی ہے جس کے لئے ہمیں پارٹی کو مضبوط کرنے کے لئے ہمارے لئے کوئی رکاوٹ نہیں۔ انشااللہ جلد ہی سندھ میں پیپلز پارٹی اور زرداری مافیا سے عوام کو نجات ملنے والی ہے کیونکہ انہوں نے سندھ کوبے دردی سے لوٹا اور عوام سے دھوکہ کیا وہ عنقریب یا تو ملک چھوڑ کر فرار ہوجائیں گے یا پھرجیلوں کی سلاخوں کے پیچھے ہونگے۔ جس طرح پنجاب میں ن لیگ اور کراچی میں ایم کیو ایم کے زوال سے پی ٹی آئی نے فائدہ اٹھایا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہماری پنجاب اور کراچی میں تنظیم منظم اور فعال تھی۔اسی طرح پیپلز پارٹی کے زوال کے بعد پی ٹی آئی سندھ میں فائدہ اٹھا سکے گی۔ کوئی بھی سیاسی جماعت منظم اور فعال ہوئے بغیر کامیاب نہیں ہوسکتی ہے۔اجلاس میں سندھ حکومت کی نااہلی اور کرپشن پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ چینی سفارت خانے پر حملہ بھی سندھ حکومت کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔اس واقعہ میں شہید ہونے والے پولیس اہلکاروں اور شہری کے لئے دعائے مغفرت کی گئی۔ اجلاس میں بات کی گئی کہ سندھ میں گنے کے صیح ریٹ کاشتکاروں کو نہیں دئیے جارہے جسے کاشتکار معاشی بحران کا شکار ہورہے ہیں۔اجلاس میں صداقت جتوئی،ایم این اے شکور شاد،ایم پی اے اسلم ابڑو، ایم پی اے عمران علی شاہ،ایوب شر، مظفر شجرہ،گل محمد رند، راجہ خان جھکرانی،ممتاز علی شاہ ، سید حسن محمود امروٹی،ایم این اے نصرت واحد،مہر النسائ، افروزشو،آغا مولا بخش،طاہر ملک،انور گجر، شہزادہ بھٹو، مظفر سہتو، صمد بجارانی اور دیگر بھی شریک تھے۔