: تازہ ترین

تازہ ترین ویڈیو

سینیٹر سراج الحق : دیر بالا میں اجتماع ارکان سے خطاب


Pic Ameer Jamaat April 21, 2019 | 8:22 PM

لاہور:(نیوزآن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ پی ٹی آئی ٹیم میچ ہار گئی ہے ۔ ملک میں ترقی کا پہیہ الٹا گھوم رہاہے ۔ پی ٹی آئی حکومت کا قبلہ اب بھی معلوم نہیں ۔ لوگ پوچھتے ہیںکہ موجودہ حکومت کو پی ٹی آئی حکومت کہا جائے یا پیپلز پارٹی کی ۔ ان خیالات کااظہار انہوںنے دیر بالا میں اجتماع ارکان سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر ضلعی ناظم صاحبزادہ فصیح اللہ ، ضلعی امیر حنیف اللہ بھی موجود تھے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ حکومت مصنوعی آکسیجن پر چل رہی ہے ۔ مانگے تانگے وزیروں اور مشیروں سے کوئی تبدیلی نہیں آئے گی ۔ پی ٹی آئی کا ٹائی ٹینک اپنے سونامی میں ہی ڈوب رہاہے ۔ عوام کو تبدیلی کے خواب دکھانے ، بڑے بڑے دعوے کرنے اورنعرے لگانے والے آٹھ ماہ کے اندر ہی ناکام ہو گئے ہیں ۔ پی ٹی آئی کو حکومت میں لانے والے خود پریشان ہیں کہ اب کیا کیا جائے ۔ ایک طرف وزیراعظم اب بھی بڑے بڑے دعوے کر رہے ہیں اور دوسری طرف ملک کو لوٹنے اور ناجائز دولت کے انبار لگانے والے حکومت کی بے بسی پر قہقہے لگا رہے ہیں ۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ جب تک عوام کو حقیقی نمائندگی کا حق نہیں دیا جائے گا اور مصنوعی طریقے سے قیادتیں مسلط کی جائیں گی ، تبدیلی نہیں آئے گی ۔ انہوںنے کہاکہ 73 ء کا آئین ترقی کے راستے میں رکاوٹ نہیں مگر اس پر اس کی حقیقی روح کے مطابق عمل نہیں ہورہا ۔ نااہل اور ناکام لوگو ں کو بٹھا کر حالات سدھرنے کی امید لگانا خود فریبی کے سوا کچھ نہیں ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ رمضان المبارک کی آمد سے قبل ہی طرف مہنگائی کا عذاب آ چکاہے ۔ حکومت نے مہنگائی اور ذخیر اندوزی پر قابو پانے کی کوشش نہ کی تو رمضان میں آنے والا مہنگائی کا سیلاب سب کچھ بہا لے جائے گا ۔ انہوںنے حکومت سے مطالبہ کیا کہ رمضان سے قبل تیل، گیس اور بجلی کی قیمتوں میں کیا گیا اضافہ واپس لیا جائے تاکہ روز مرہ استعمال کی چیزوں کی قیمتوں میں کچھ کمی آسکے ۔ حکومت کی طرف سے 6 سو ارب روپے کے لگائے گئے نئے ٹیکس عوام کا کچومر نکال دیں گے ۔ حکومت بڑے ٹیکس خوروں کو پکڑنے کی بجائے براہ راست عوام پر ٹیکس لگا رہی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ ایک طرف عام آدمی مہنگائی کی چکی میں پس رہاہے اور دوسری طرف حکومت آئے روزٹیکس بڑھا کر لوگوں کی جیب پر ڈاکہ ڈال رہی ہے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ حالیہ شدید بارشوں سے لاکھوں ایکڑ رقبے پر کھڑی فصلیں تباہ ہو گئی ہیں جس سے کسانوں کی کمر ٹوٹ گئی ہے اور کسانوں کے پاس آئندہ فصل کی کاشت کے لیے بھی کچھ نہیں بچا لیکن ابھی تک حکومت کی طرف سے کسانوں کے لیے کسی ریلیف اور امدادی پیکیج کا اعلان نہیں کیا گیا ۔