: تازہ ترین

تازہ ترین ویڈیو

سندھ حکومت نے قیدیوں کی اصلاح کو باقائدہ قانون میں شامل کردیا ہے، اعجاز حسین جاکھرانی


hijaz hussain November 3, 2019 | 10:16 PM

کراچی :( نیوزآن لائن)وزیر اعلیٰ سندھ کے مشیر برائے جیل خانہ جات و بین الصوبائی رابطہ سندھ اعجاز حسین جاکھرانی نے کہا ہے کہ سندھ حکومت نے قیدیوں کی اصلاح کو باقائدہ قانون میں شامل کردیا ہے، اس ضمن میں سندھ بھر کے تمام جیلوں میں خصوصی تربیتی مراکز بھی قائم کیے جا رہے ہیں تا کہ قیدی سزا مکمل کرنے کے بعد معاشرے کے لیے کارآمد شہری بن سکیں، انہوں نے آج ڈسٹرک جیل ملیر کا دورہ کیا اور جیل انتظامات کا جائزہ بھی لیا۔ اس موقع پر آئی جی جیل خانہ جات قاضی نظیر احمد، جیل سپرنٹنڈنٹ اورنگزیب کنگو و دیگر افسران بھی موجود تھے، دو رے کے دوران صوبائی مشیر اعجاز جاکھرانی نے ہدایت کی کہ انسانی حقوق اور جیل مینوئل کے مطابق تمام قیدیوں کو ہر ممکن سہولیات فراہم کی جائیں جبکہ قیدیوں کی ملاقات کے عمل کو آسان بناتے ہوئے ضروری اقدامات بھی اٹھائے جائیں۔ صوبائی مشیر اعجاز جاکھرانی نے جیل حکام سے تمام قیدیوں کی میڈیکل رپورٹ کا ڈیٹا ترتیب دینے کی بھی ہدایت کی اور کہا کہ میڈیکل ڈیٹا مرتب ہونے کے بعد امراض قلب، شوگر، ہیپاٹائیٹس اور دیگر امراض کے مریضوں کوعلاج کی سہولیات فراہم کرنے میں مدد ملے گی، اس موقع پر صوبائی مشیر نے جیل ہسپتال کا دؤرہ کر کے مریضوں سے ملاقات کی اور ان سے اعلاج کے انتظامات سے متعلق راء جانیں اس پر قیدیوں کی جانب سے دی جانے والی سہولیات پر صوبائی مشیر کے سامنے اطمینان کا اظہار بھی کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت قیدیوں کو ٹیکنیکل ایجوکیشن دے گی اور جیلوں میں فیکٹریاں قائم کرے گی تا کہ قیدی آزادی کے بعد کارآمد شہری بن سکیں۔ اس موقع پر صوبائی مشیر نے قیدیوں سے ملاقات کر کے مسائل معلوم کئے اور حکام کو ان کے فوری حل کرنے ہدایت کی۔ بعد ازاں صوبائی مشیر نے جیل کے توسیح منصوبے کے کام کا جائزہ بھی لیا اور اسے جلد از جلد مکمل کرنے کی بھی ہدایت کی۔