: تازہ ترین

تازہ ترین ویڈیو

ریلوے حکام نے ٹنڈومحمد خان روڈ پر محکمے کی کروڑوں روپے کی اراضی لینڈ مافیا سے خالی کرانے کیلئے قانون نافذ کرنے والے اداروں سے رابطے


HYDERABAD SINDH November 15, 2015 | 5:20 PM

حیدرآباد(نیوزآن لائن)ریلوے حکام نے ٹنڈومحمد خان روڈ پر محکمے کی کروڑوں روپے کی اراضی لینڈ مافیا سے خالی کرانے کے لئے پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں سے رابطے شروع کردئیے،پولیس نے ریلوے حکام کو بلدیاتی انتخابات کے فوری بعد کاروائی کی یقین دہانی کرادی،لینڈ مافیا نے ریونیو کی جعلی لیز بنواکر ریلوے کی 25ایکٹر سے زائد اراضی پر قبضہ کررکھا ہے،مختیار کارتعلقہ لطیف آباد کی جانب سے کھاتہ منسوخ کئے جانے کے باوجود لینڈ مافیا ریلوے اراضی پر چائنا کٹنگ کرکے پلاٹ فروخت کررہا ہے،دیگر اضلاع سے قبضہ ختم کرانے اور پختہ تعمیرات توڑنے کے لئے مشنری مانگ لی گئی،تفصیلات کے مطابق کراچی میں ریلوے کی اراضی پر مون گارڈن اسکیم کے انکشاف کے بعد ریلوے نے سندھ بھر میں لینڈ مافیا سے اپنی زمینیں خالی کرانے کے لئے پولیس اور قانون فافذ کرنے والے اداروں سے رابطے شروع کردئیے،حیدرآباد میں ٹنڈومحمد خان روڈ پر تعلقہ لطیف آباد دیہہ مل میں ریلوے کی 25ایکٹر سے زائد اراضی پر لینڈ مافیا نے قبضہ کررکھا ہے ،جیسے خالی کرانے کے لئے ریلوے حکام نے ضلعی پولیس اور قانون نافذ کرنیو الے دیگر اداروں سے مدد طلب کرلی ہے ،لینڈ مافیا نے ریلوے کی مذکورہ اراضی پر ریونیوڈپارٹمنٹ کی جعلی لیز بناکر مختیار کار لطیف آباد کے دفتر میں زمین کا داخلہ کرایا تھا اور ڈائریکٹرپلاننگ وڈویلپمنٹ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی سے ملی بھگت کرکے علی اصغرآباد نامی کمرشل اور رہائشی اسکیم شروع کررکھی ہے،مختیار کارلطیف آباد نے ریونیو کی جعلی لیز اور ریلوے کی اراضی کاانکشاف ہونے کے بعد مذکورہ داخلے کو منسوخ اور بوگس قرار دے دیا تھا مگر لینڈ مافیا نے اثر رسوخ اور بھاری رشوت کے عیوض تاحال ریلوے کی اراضی پر اپنا قبضہ جمایا ہوا ہے اورچائناکٹنگ کے ذریعے پلاٹوں فروخت جاری ہے،جبکہ ریلوے کی مذکورہ اراضی پر کمرشل اور رہائشی تعمیرات بھی تیزی سے شروع کررکھی ہے تاکہ مون گارڈن کراچی کے مکینوں جیسا موقف اختیار کیا جاسکے،معلوم ہوا کہ ریلوے کی اراضی پر ایک پیٹرول پمپ بھی قائم کردیا گیا ہے اور دوسرے علاقوں سے خانہ بدوش خاندانوں کو منتقل کیا جارہا ہے،ذرائع کے مطابق ٹنڈومحمدخان روڈ پر بلدیاتی انتخابات کے بعد ریلوے انتظامیہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کی ذریعے اپنی کروڑوں روپے مالیت کی اراضی خالی کرانے کے لئے بڑا کریک ڈائون کرے گی جس کے لئے دوسرے شہروں سے بھاری مشنری منگوانے کے لئے رابطہ کئے جارہے ہیں ۔