: تازہ ترین

تازہ ترین ویڈیو

تحریک انصاف کے رہنماؤں کی پریس کانفرنس عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کے سوا کچھ نہیں ہے۔ وقار مہدی


ppp March 15, 2020 | 7:24 PM

کراچی(نیوزآن لائن):پاکستان پیپلز پارٹی سندھ کے جنرل سیکریٹری وقار مہدی نے تحریک انصاف کے رہنما خرم شیر زمان کی پریس کانفرنس پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے تحریک انصاف کے رہنماؤں کی پریس کانفرنس عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کے سوا کچھ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی صوبائی حکومت نے پچھلے 12سال میں صوبہ سندھ سمیت کراچی شہر میں جتنے ترقیاتی کام کئے ہیں اور جتنی اس شہر کی اور عوام کی خدمت کی ہے اس کی مثال ماضی میں نہیں ملتی ہے۔ 2008 میں جب پیپلز پارٹی کی حکومت آئی تو اس وقت شہر میں سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ بھی قائم تھی جس کا ناظم ایم کیو ایم سے تعلق رکھتا تھا۔ ایم کیو ایم کے دعوے کے مطابق انہوں نے اپنے پانچ سالہ دور میں 3سو ارب روپے شہر کراچی میں خرچ کئے مگر وہ تین سو ارب روپے نہ عوام کو نہ ہ میں کہی نظر آتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے عوام کی خدمت جاری رکھی اور شہر میں واٹر سپلائی، سیوریج، سڑکوں کی تعمیر، فلائی اوور، برجز سمیت دیگر مسائل کو مدنظر رکھتے ہوئے اس پر حکمت عملی بنائی اور کام کو شروع کیا۔ انہوں نے کہا کہ آج کراچی شہر میں بلا تفریق چیلنج کے ساتھ یہ بات واضح کرنا چاہتا ہوں کہ ہم نے دیگر پارٹیوں کی طرح صرف اپنے ووٹ بینک والے علاقوں میں کام نہیں کیا بلکہ کراچی کے چھ اضلاع میں میگا پروجیکٹس کے ساتھ ساتھ وہاں کے علاقائی مسائل بھی حل کئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے شاہراہ فیصل کو دوبارہ کارپیٹ کیا، ڈرگ روڈ پر انڈر پاس تعمیر کیا، حسن اسکوائر سے صفورا چوک تک یونیورسٹی روڈ کی تعمیرکی، شہید ملت روڈ پر ایک فلائی اوور تعمیر کیا، دو انڈر پاس تعمیر کئے، کورنگی کراسنگ، کورنگی ڈھائی نمبر اور کورنگی پانچ نمبر پر فلائی اوورز بنائے گئے، کورنگی انڈسٹریل ایریا کی مین شاہراہیں آنے اور جانے والے راستوں کی تعمیر جاری ہے، شاہراہ فیصل پر کینٹ اسٹیشن سے صدر جانے والے راستے پر انڈر پاس تعمیر کیا۔ صوبائی حکومت نے تین ہٹی کا فلائی اوور بنایا، ناظم آباد انڈر پاس کی تعمیر کی گئی،حبیب بینک سائٹ ایریافلائی اوور تعمیر، لیاقت آباد ڈاک خانہ فلائی اوور بنایاگیا، عائشہ منزل فلائی اوور تعمیر کیا گیا، فیڈرل بی ایریا واٹر پمپ کا فلائی اوور تعمیر کیا گیا، ملیر ہالٹ پر فلائی اوور بنایا گیا، کراچی ایئر پورٹ پر اسٹار گیٹ کے سامنے فلائی اوور بنایا گیا، ملیر 15، منزل پمپ پر فلائی اوور بنائے گئے، قائد آباد سے گھگھر پھاٹک تک نیشنل ہائی وے پر آنے اور جانے والی سڑک بنائی گئی۔ انہوں نے کہا (کے 4 )کا منصوبہ جو 2004 سے فیڈرل حکومت کے پاس تھا اس کو سندھ حکومت نے اس پر کام شروع کیا اور اس پر پیش رفت جاری ہے جس سے کراچی کو 260 ایم جی ڈی پانی میسر ہوگا۔ وقار مہدی نے کہا کہ افسوس کی بات یہ ہے کہ پی ٹی آئی کی حکومت پچھلے 18مہینے سے ملک پر قابض ہے اور وہ بہت دعوے کرتے تھے کہ کراچی شہر کو 162ارب روپے کا پیکیج دینگے مگر افسوس کے شہر کو 62 روپے بھی پی ٹی آئی کی حکومت کی طرف سے نصیب نہیں ہوسکے۔ انہوں نے کہا کہ آج پی ٹی آئی کے خود ساختہ لیڈروں نے میڈیا پر آکر جھوٹے دعوے کئے کہ وہ کراچی کیلئے بہت کچھ کررہے ہیں لیکن عوام کو موجودہ حکومت کی طرف سے اگر کچھ ملا تو صرف اور صرف مہنگائی، بیروزگاری، قرضہ، بھوک، فاقہ، غربت اور 22لاکھ سے زائد افراد اس حکومت کی ناقص پالیسیوں کے سبب بیروزگاری ہے۔ پی ٹی آئی کی حکومت نے ایک کروڑ نوکریاں اور 50لاکھ گھروں کا بھی وعدہ کیا لیکن وہ وعدہ ہی کیا جو پی ٹی آئی کا وفا ہوجائے۔ پاکستان پیپلز پارٹی بلا امتیاز بلا رنگ ونسل ملک اور عوام کی خدمت پریقین رکھتی ہے اور اس لئے پاکستان پیپلز پارٹی کے جتنے بھی منصوبے شروع یا پایہ تکمیل ہوئے وہ بنا کسی تفریق اور لسانیت کے عوام کی سہولیات کیلئے پورے کئے گئے۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے ویژن کے مطابق کراچی شہر کی روشنی، تعمیر وترقی کیلئے بھرپور جدوجہد جاری ہے اور عوام کو بہتر سے بہتر سہولیات کی فراہمی کا سہرا بھی ان کے سر جاتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پی ٹی آئی کے اراکین اسمبلی کی پریس کانفرنس عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کے سوا کچھ نہیں ہے۔ پی ٹی آئی جن منصوبوں کے فیتے کاٹ رہی ہے وہ سابقہ حکومتوں کے منصوبے ہیں۔ پی ٹی آئی ایم کیو ایم کی بی ٹیم کا کردار ادا کررہی ہے اور سوچ رہی ہے کہ کراچی کے شہریوں کو استعمال کر کے لاوارث چھوڑ دیا جائے گا تو ہم انہیں بتانا چاہتے ہیں کہ شہر کراچی ہمارا ہے اور پیپلز پارٹی ہمیشہ کی طرح عوام کی خدمت کو عبادت سمجھ کر کرتی رہے گی۔